PIB Headquarters

کووڈ-19 سے متعلق پی آئی بی کا یومیہ بلیٹن یا خبرنامہ

Posted On: 08 JUL 2020 6:33PM by PIB Delhi

http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image002NZFB.pnghttp://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image001L7XC.jpg

کووڈ-19 پر مشتمل پریس ریلیز ، جو 24 گھنٹوں میں جاری کی گئی ہیں، فیلڈ افسران سے حاصل کردہ معلومات اور پی آئی بی کے ذریعہ کئے گئے صحیح تجزیات پر مشتمل ہیں

قومی کووڈ 19 بازیافت کی شرح 61.53فیصد کو بہتر بناتی ہے۔
فعال واقعات کی نسبت قریب 2 لاکھ مزید کوویڈ کیس برآمد ہوئے۔
گذشتہ 24 گھنٹوں میں 2.6 لاکھ سے زیادہ نمونوں کی جانچ کی گئی۔
ایمس دہلی نے کووڈ کلینیکل مینجمنٹ سے متعلق ریاستی ڈاکٹروں کے لئے ٹیلی مشاورت کی رہنمائی کا آغاز کیا۔
فی الحال 264944 فعال معاملات ہیں اور یہ سب طبی نگرانی میں ہیں۔
کابینہ نے کئی اہم فیصلے لئے۔ نیا پان انڈیا ایگریکلچر انفراسٹرکچر فنڈ۔ پی پی ایف کے شراکت میں 3 ماہ کی توسیع۔ شہری تارکین وطن / غریبوں کے لئے سستی کرایے پر مکانات کمپلیکس تیار کرنا؛ پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا کی توسیع - مزید پانچ ماہ کے لئے اضافی غذائی اجناس کی تقسیم ، پانچ ماہ کے لئے مفت پورے چنا کی تقسیم؛ مفت ایل پی جی سلنڈر حاصل کرنے کے لئے ا جولاکے مستفید افراد کے لئے وقت کی حد میں تین ماہ کی توسیع۔

http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image005XLRX.jpg

http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image006LVSE.jpg

 

وزارت صحت اور خاندانی بہبود سے کوڈ 19 پر اپ ڈیٹس: قومی کووڈ19 بازیافت کی شرح میں تیزی سے بہتری آرہی ہے ۔ 61.53فیصد تک پہنچ گئی۔

کووڈ 19 کا پتہ لگانے کے لئے ٹیسٹ کیے جانے والے نمونوں کی تعداد میں روزانہ کافی حد تک اضافہ ہورہا ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 262679 نمونوں کی جانچ کی گئی ہے جن میں نجی لیبز میں 53000 سے زیادہ نمونوں کی جانچ کی جاچکی ہے۔ آزمائشی نمونوں کی مجموعی تعداد ، اب تک 10473771 ہے۔ سرکاری شعبے میں 795 لیبز اور 324 نجی لیبز کے ساتھ ، ملک میں 1119 لیبز ہیں۔ کوویڈ 19 کے مزید مریضوں کی بحالی کے ساتھ ، بازیاب ہونے والے کیسوں اور فعال معاملات کی تعداد کے مابین خلاءمیں آج تک 191886 کا اضافہ ہوا ہے۔ پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران ، مجموعی طور پر 16883 کوویڈ 19 مریض ٹھیک ہوگئے ہیں ، اور اب تک بازیافت کیسوں کی مجموعی تعداد 456830 ہوگئی ہے۔ دنوں میںکووڈ۔19 مریضوں میں بازیابی کی شرح میں اضافہ جاری ہے۔ اس نے آج 61.53فیصد کو چھو لیا ہے۔ اس وقت ، 264944 فعال کیسز ہیں اور یہ سب طبی نگرانی میں ہیں۔

کووڈ اموات کو کم کرنے کے لئے مرکزی حکومت کی کوششوں کو مستحکم کرنے کے لئے ایمس دہلی نے کووڈ کلینیکل انتظامیہ سے متعلق ریاستی ڈاکٹروں کے لئے ٹیلی مشاورت کی رہنمائی کا آغاز کیا

مرکزی وزیر صحت و خاندانی بہبود نے اب ایمس ، نئی دہلی کے ماہر ڈاکٹروں کو شامل کیا ہے تاکہ وہ ریاستی اسپتالوں میں آئی سی یو کی خدمات انجام دینے والے ڈاکٹروں کو ماہر رہنمائی اور علم کی مدد فراہم کرسکیں۔ ٹیلی مشاورت کووڈ19 کے لئے طبی مداخلت پروٹوکول کا ایک اہم جزو ہے۔ ایمس ، نئی دہلی کے ڈاکٹروں کی ایک ماہر ٹیم ٹیلی / ویڈیو مشاورت کے ذریعے مختلف ریاستی اسپتالوں کے آئی سی یوز میں کووڈ19 مریضوں کے موثر کلینیکل انتظام کے بارے میں رہنمائی فراہم کرے گی۔ وہ کیسیوٹ اموات کی شرح کو کم کرنے کے لئے کوویڈ 19 مریضوں کے کلینیکل مینجمنٹ میں ریاستوں کو سنبھال لیں گے۔ ریاستوں میں ڈاکٹروں کو بروقت اور ماہر رہنمائی فراہم کرنے کے لئے یہ ٹیلیفون مشورتی اجلاس سیشن ہفتہ میں دو بار منگل اور جمعہ کو منعقد کیے جائیں گے۔ اس مشق کا پہلا اجلاس شروع ہوچکا ہے۔ دس اسپتالوں کا انتخاب کیا گیا ہے ، جن میں ممبئی (مہاراشٹرا) شامل ہیں۔ ) اور ایک گوا سے ہے۔

ایکٹو کیسز کے مقابلہ میں فی لاکھ آبادی کی بازیابی میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے

ہندوستان میں کووڈ19 کے اعلی کیس والے بوجھ رکھنے والی ریاستیں /مرکزکے زیرانتظام خطے جلد کی شناخت اور مثبت معاملات کی مو ¿ثر کلینیکل انتظامیہ پر توجہ مرکوز کر رہی ہیں تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ وصولی / ملین فعال مقدمات / ملین سے زیادہ ہے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ مجموعی طور پر مثبت معاملات کی تعداد زیادہ ہوسکتی ہے لیکن بازیافت تیزی سے پکڑے جارہے ہیں ، اس طرح سے فعال کیس کم رہتے ہیں۔ اس سے یہ بھی یقینی بنایا گیا ہے کہ صحت کی سہولیات دباو ¿ میں نہیں ہیں اور نہ بڑھائی گئیں ہیں۔ بھارت میں فی ملین 315.8 مقدمات کی وصولی ہوئی ہے جبکہ ملک میں فی ملین فعال معاملات 186.3 کی کم سطح پر ہیں۔ ریاستوں نے مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کی ہدایت پر عمل کیا ہے تاکہ آر ٹی پی سی آر ٹیسٹوں کی تعیناتی کے ساتھ جانچ میں کافی حد تک اضافہ کیا جاسکے۔ ، ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ جس نے مقدمات کی جلد شناخت میں مدد کی ہے۔ ریاستوں نے اعلی رسک آبادی پر نظر رکھنے کے ل ےکئی موبائل ایپس تیار کیں جن میں بزرگ اور بزرگ آبادی ، باہم مرض کے حامل افراد ، حاملہ خواتین اور چھوٹے بچے شامل ہیں۔ مقامی حکومت میں برادری ، ASHAs اور ANMs کی شمولیت کے نتیجے میں ان علاقوں میں موثر نگرانی کی جا رہی ہے۔


Screenshot (2).png

کابینہ نے زرعی انفراسٹرکچر فنڈ کے تحت مالی اعانت کی مرکزی سیکٹر اسکیم کی منظوری دے دی

وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی زیرصدارت مرکزی کابینہ نے آج ایک نئی پان انڈیا سینٹرل سیکٹر اسکیم ‘زراعت انفراسٹرکچر فنڈ کو منظوری دے دی ہے۔ یہ اسکیم فصلوں کے بعد کے انتظامات کے لئے قابل عمل منصوبوں میں سرمایہ کاری کے لئے درمیانی طویل مدتی قرض کی مالی سہولت مہیا کرے گی اور سود پروری اور مالی معاونت کے ذریعہ کمیونٹی کاشتکاری کے اثاثے۔ رواں سال میں 10000000 کروڑ روپے اگلے تین مالیاتی سالوں میں ہر ایک کو 30000 کروڑ روپئے دیئے جائیں گے۔

کابینہ نے پی ایم جی کے وائی / آتم نربھر بھارت کے تحت جون سے لیکر اگست 2020 تک کی تین مہینے کی مدت کیلئے ای پی ایف تعاون کو بڑھا کر 24فیصد (12فیصد آجر کمپنیوں کا حصہ اور 12فیصد ملازمین کا حصہ)کرنے کی تجویز کو منظوری دی

وزیراعظم جناب نریندر مودی کی صدارت میں مرکزی کابینہ نے کووڈ-19 وبا کے تناظر میں پردھان منتری غریب کلیان یوجنا (پی ایم جی کے وائی اور آتم نربھر بھارت)کے تحت حکومت کے ذریعے اعلان کردہ پیکیج کے ایک حصے کے طور پر جون سے لیکر اگست 2020 تک کی 3 مہینے کی مدت کیلئے بڑھا کر امپلائیز پروویڈنٹ فنڈکے تحت ملازمین کے 12فیصد اور آجر کمپنیوں کے 12فیصد، ک ±ل 24فیصدکرنے کی تجویز کو منظوری دی۔یہ منظوری 15 اپریل 2020 کو منظور شدہ مارچ سے مئی تک کے تنخواہ مہینوں کی موجودہ اسکیم کے مستزاد ہے۔ ک ±ل مجوزہ اخراجات 4860 کروڑ روپئے ہے۔ اس سے 3.67 لاکھ اسٹیبلشمنٹ کے 72 لاکھ سے زائد ملازمین کو فائدہ حاصل ہوگا۔

کابینہ نے شہری تارکین وطن / غریبوں کے لئے سستی کرایے پر مکانات کمپلیکس تیار کرنے کی منظوری دی

مرکزی کابینہ نے پردھان منتری آواسیوجانا - اربن (PMAY - U) کے تحت سب سکیم کے طور پر شہری تارکین وطن / غریبوں کے لئے سستی رینٹل ہاو ¿سنگ کمپلیکس (اے ایچ آر سی) تیار کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ موجودہ خالی سرکاری مالی امداد والے ہاو ¿سنگ کمپلیکس کو 25 سال تک مراعات کے معاہدوں کے ذریعے اے آر ایچ سی میں تبدیل کیا جائے گا۔ مراعات یافتہ کمرے کمروں کی مرمت / بحالی اور دیکھ بھال اور انفراسٹرکچر خلائ جیسے پانی ، نالیوں ، صفائی ستھرائی ، سڑک وغیرہ کو پ ±ر کرتے ہوئے کمپلیکسوں کو رہائش پذیر بنائیں گے۔ پہلے کی طرح اگلے سائیکل کو دوبارہ شروع کرنے یا خود چلانے کے لئے کمپلیکس 25 سال کے بعد یو ایل بی میں واپس آجائے گی۔ خصوصی مراعات جیسے استعمال کی اجازت ، 50 فیصد اضافی ایف اے آر / ایف ایس آئی ، ترجیحی شعبے کے قرضے کی شرح پر مراعاتی قرضہ ، سستی رہائش کے برابر ٹیکس میں چھوٹ وغیرہ۔ نجی / سرکاری اداروں کو 25 سال تک اپنی دستیاب خالی اراضی پر اے آر ایچ سی تیار کرنے کے لئے پیش کیا جائے گا۔

کابینہ نے ا جولا مستفیدین کیلئے “پردھان منتری غریب کلیان یوجنا” کے فوائد حاصل کرنے کے لئے وقت کی حدیکم جولائی 2020 سے تین مہینے کیلئے بڑھانے کو منظوری دی

مرکزی کابینہ نے پیٹرولیم اور قدرتی گیس کی وزارت کی تجویز کو میعاد میں تین ماہ کی توسیع کی منظوری دے دی ہے۔ 01.07.2020 "اجولا والا سے فائدہ اٹھانے والوں کے لئے" پردھان منتری گریب کلیان یوجنا "کے فوائد حاصل کرنے کے ل.۔ پی ایم جی کے وائی - ا ±جاوالا کے تحت ، پی ایم یو وائی صارفین کے لئے 3 مہینے کی مدت کے لئے بلا معاوضہ ریفلیں فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ 01.04.2020۔ روپے 9709.86 کروڑ اپریل -202020 کے دوران سیدھے اوجوالا کے مستحقین کے بینک کھاتوں میں منتقل کردیئے گئے اور 11،97 کروڑ سلنڈروں کو PMUY کے مستحقین تک پہنچایا گیا۔ یہ مشاہدہ کیا گیا ہے کہ PMUY سے مستفید ہونے والوں کا ایک حصہ ابھی اسکیم کی مدت میں سلنڈر ری فل کو خریدنے کے لئے اپنے اکاو ¿نٹ میں جمع شدہ پیشگی استعمال کرنا ہے۔ کابینہ نے پیشگی فائدہ اٹھانے کے لئے وقت کی حد میں تین ماہ کی توسیع کی تجویز کو منظوری دے دی ہے۔ اس طرح ، مستفید افراد جن کے اکاو ¿نٹ میں ایڈوانس ایڈوانس ٹرانسفر ہوچکا ہے وہ اب 30 ستمبر تک فری ریفل ڈیلیوری لے سکتے ہیں۔

کابینہ نے پردھان منتری غریب کلیان پیکج - پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا کی توسیع کی منظوری دے دی
نئی دہلی 08جونلائی 2020۔مرکزی کابینہ نے جولائی سے نومبر 2020 تک مزید پانچ ماہ کے لئے کووڈ19 کو اقتصادی جواب کے تحت پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا (PMGKAY) میں مزید توسیع کی منظوری دے دی ہے۔ اس اسکیم کے تحت 9.7 لاکھ ایم ٹن صاف ستھرا تقسیم کرنے کی تجویز ہے ریاستوں / ریاستوں کی ریاستوں کو اگلے پانچ مہینوں کے لئے ہر مہینہ 1 کلوگرام فی مہینہ مفت گھر تقسیم کرنے کے لئے۔ جولائی تا نومبر 2020 تک کل تخمینہ لاگت میں 6849.24 کروڑ روپئے ہیں۔ اس اسکیم کے تحت 19.4 کروڑ گھرانوں کا احاطہ کیا جائے گا۔ توسیعی PMGKAY پر تمام اخراجات مرکزی حکومت برداشت کرے گی۔ یوجنا کی توسیع حکومت ہند کے ان وعدوں کے مطابق ہے جو اگلے پانچ ماہ کے دوران رکاوٹ کی وجہ سے کسی بھی جسم بالخصوص کسی غریب گھرانے کو اناج کی عدم دستیابی کی وجہ سے تکلیف میں مبتلا ہونے کی اجازت نہیں دیتی ہے۔

کابینہ نے پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا کی توسیع کی منظوری دے دی - جولائی سے نومبر 2020 تک مزید پانچ ماہ کے لئے اضافی غذائی اجناس کی تقسیم

مرکزی کابینہ نے جولائی سے نومبر 2020 تک مزید پانچ ماہ کے لئے مرکزی پول سے غذائی اجناس کی اضافی مختص کرنے کے لئے کووڈ19 کو اقتصادی جواب کے تحت پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا (پی ایم جی کے) کو مزید توسیع کی منظوری دے دی ہے۔ مارچ 2020 میں ، حکومت ہند نے ملک میں کوڈ 19 کے ذریعہ پیدا ہونے والی معاشی رکاوٹوں کی وجہ سے غریبوں کو درپیش مشکلات کو دور کرنے کے لئے پردھان منتری غریب کلیان پیکیج کا اعلان کیا۔ اس پیکیج میں ، پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا (وزیر اعظم-جی کےے) پر عمل درآمد ہے ، جس کے ذریعے ہر ماہ 5 کلوگرام فی شخص اضافی بلا معاوضہ غذا فراہم کی جارہی ہے۔ تقریبا 81 81 کروڑ مستحقین کو ، تاکہ غریب اور کمزور خاندانوں / مستحقین کو کسی مالی پریشانی کا سامنا کیے بغیر آسانی سے غلہ دانوں تک رسائی حاصل ہوسکے۔ اس پروگرام کے تحت ابتدائی طور پر ، تین ماہ یعنی اپریل ، مئی اور جون کے لئے مفت اناج فراہم کیا گیا تھا۔

کووڈ-19 سے جنگ کے لئے ای سی ایچ ایس کے تحت فی کنبہ ایک پلس آکسیمیٹر کی خرید پر آئے خرچ کی ادائیگی
نئی دہلی 08جونلائی 2020۔چونکہ آکسیجن سنترپتی سطح کی پیمائش کووڈ19 مریضوں کی صحت کی نگرانی کے لئے ایک اہم ترین پیرامیٹرز ہے ، وزارت دفاع ، محکمہ سابق فوجیوں کے بہبود نے سابق فوجیوں کی شراکت سے متعلق صحت کے ذریعہ خریدی گئی نبض آکسیمٹر کی قیمت کی ادائیگی کا فیصلہ کیا ہے۔ اسکیم (ECHS) مستفید۔ ECHS مستفید افراد جن کا کووڈ19 انفیکشن کے لئے مثبت تجربہ کیا گیا ہے انہیں فی خاندان ایک پلس آکسیمٹر خریدنے کی اجازت ہے۔ نبض آکسیمٹر کی اصل قیمت کے مطابق اس ادائیگی کا دعوی کیا جائے گا ، جس کی 1200 روپے ہے۔

سی ایس آئی آر لکسائی سائنسز کے اشتراک سے اینٹی وائرل اور ہوسٹ ڈائریکٹیڈ تھراپی کے مرکبات کا استعمال کرکےکووڈ-19 کے مریضوں کی کلینکل آزمائش کو انجام دینے کیلئے انضباطی منظوری حاصل کریگا

کونسل آف سائنٹفک انڈسٹریل ریسرچ (سی ایس آئی آر) نے لکسائی لائف سائنسز پرائیویٹ لمیٹیڈ حیدرآباد کےاشتراک سے چار بازو والے بے ترتیب کنٹرول والے مرحلہ سوم کی کلینکل آزمائش کیلئے باقاعدہ انضباطی منظوری طلب کی ہے۔ اس مطالعے کے ڈیزائن کااصول اینٹی وائرل (وائرل انٹری اور رپلی کیشن اِن ہیبیٹس )اور ہوسٹ ڈائریکٹیڈ تھراپیز (ایچ ڈی ٹی) کی معقولیت پر مبنی آزمائش کرنا اور دوبارہ بامقصد بنانا ہے نیز مرض کے پھیلاو ¿ اور پیتھالوجی کو ساتھ ساتھ حل کرنا اور تینوں مرکب دواو ¿ں (فیوی پیراویر کولچی سین، یونیفینوویر کولچی سین اور نیفوموسٹیٹ5- اے ایل اے) کے تحفظ اور افادیت کا تعین کرناہے۔علاوہ ازیں کووڈ-19 مریضوں کی معیاری دیکھ بھال کے ساتھ ایک کنٹرول کا شعبہ قائم کرنا ہے۔ میوکوون نامی کلینکل آزمائش کو میدانتا میڈیسٹی کے اشتراک سے انجام دیا جائیگا۔ اس میں 17 سے 21 دن تک چلائے جانے والے ٹرائلس میں 75 مریضوں کے چار مختلف گروپوں میں ک ±ل 300 مریض شامل ہوں گے۔ اس میں جانچ اور علاج شامل ہیں۔

ایچ آر ڈی کے مرکز وزیر نے تعلیمی سیشن 2020-21 کے لئے کلاس نو سے بارہ کے سی بی ایس ای نصاب میں نظر ثانی کا اعلان کیا

مرکزی وزیر برائے ایچ آر ڈی شری رمیش پوکریال ‘نشانک’ نے کہا ہے کہ ملک اور دنیا میں رونما ہونے والے غیر معمولی صورتحال کو دیکھتے ہوئے سی بی ایس ای کو نصاب میں نظر ثانی کرنے اور نویں سے بارہویں جماعت کے طلباءکے لئے کورس کا بوجھ کم کرنے کا مشورہ دیا گیا تھا۔ اس کے مطابق ، سی بی ایس ای نے تعلیمی سیشن 2020-21 کے لئے نویں - بارہویں جماعت کے نصاب میں نظر ثانی کی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ کچھ ہفتوں قبل ، انہوں نے سلیبس فور اسٹڈینٹس2020 کا استعمال کرکے سوشل میڈیا پر نصاب تعلیم میں کمی کے بارے میں تمام ماہرین تعلیم سے مشورے طلب کیے تھے۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ نصاب کمیٹی اور بورڈ کی گورننگ باڈی کی منظوری سے نصاب کمیٹی میں منظوری کے ساتھ ہی نصاب میں کی جانے والی تبدیلیوں کو حتمی شکل دی گئی ہے۔ سیکھنے کی سطح کے حصول کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے ، نصاب کو بنیادی تصورات کو برقرار رکھتے ہوئے 30فیصد تک ممکن حد تک عقلی شکل دی گئی ہے۔

حکومت فلم پروڈکشن دوبارہ شروع کرنے کے لئے ایس او پی کا اعلان کرے گی

اطلاعات و نشریات کے مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے آج کہا کہ حکومت انلاک مرحلے میں فلم پروڈکشن کو دوبارہ شروع کرنے میں تیزی لانے کے لئے جلد ہی معیاری آپریٹنگ طریقہ کار جاری کرے گی۔ فکی فریمس کے اکیسویں ایڈیشن سے خطاب کرتے ہوئے شری جاویڈیکر نے کہا کہ ” کووڈ کی وجہ سے بند ہو چکے فلم سازی کو دوبارہ شروع کرنے کے لئے ہم ٹی وی سیریلوں ، فلم سازی ، شریک پروڈکشن ، انیمیشن ، گیمنگ سمیت تمام شعبوں میں پروڈکشن کو مراعات دینے جا رہے ہیں۔ "ہم جلد ہی ان اقدامات کا اعلان کریں گے“۔کووڈ 19 وبائی بیماری کے پیش نظر میڈیا اینڈ انٹرٹینمنٹ انڈسٹری کے اس سالانہ پروگرام کا 2020 ایڈیشن روچوئل موڈ میں منعقد کیا جا رہا ہے۔ یہ پروگرام میں عام طور پرممبئی میں پوائی جھیل کے قریب ہوتا رہا ہے۔

پی آئی بی فیلڈ دفاتر سے ماخوذ

پنجاب: اپنے کوویڈ مینجمنٹ اور نگہداشت کی حکمت عملی کو مزید فروغ دینے کے لئے ، حکومت پنجاب نے مشیر ، صحت اور میڈیکل ایجوکیشن اینڈ ریسرچ ڈاکٹر کے کے تلوار کی مجموعی رہنمائی میں دو ‘ماہر مشاورتی کمیٹیاں’ تشکیل دی ہیں۔ پٹیالہ اور امرتسر کے سرکاری میڈیکل کالجوں میں کووڈ دیکھ بھال سے متعلق مختلف امور کے بہتر انتظام اور ہینڈلنگ کو یقینی بنانے کے لئے کمیٹیاں تشکیل دی گئیں ہیں۔

ہریانہ: ہریانہ کے وزیر اعلی نے ہریانہ میں مائکرو چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں کے تحت اپنے یونٹوں کے قیام کے لئے نوجوان کاروباری افراد کو ہر طرح کے تعاون اور تعاون کی پیش کش کی ہے اور کہا ہے کہ ریاستی حکومت نے تمام زمرے میں قائم کرنے کے لئے مختلف زمرے کے 56 گروپوں کی نشاندہی کی ہے۔ ریاست کے 22 اضلاع جو ریاست میں 70000 ایم ایس ایم ای کو فائدہ اٹھائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت یہ بھی یقینی بنائے گی کہ ریاستہائے متحدہ میں موجود ایم ایس ایم ایز کے کام کوویڈ 19 کے باعث متاثر نہ ہوں۔
ہماچل پردیش: سیاحت کے شعبے کو مستحکم کرنے اورکووڈ19 وبائی امراض کے پیش نظر ریاست میں اس شعبے کو ریلیف دینے کے لئے ، ریاستی حکومت نے مہمان نوازی کے شعبے کے لئے ورکنگ کیپیٹل لون پر انٹرسٹ سبوشن کے لئے ایک اسکیم متعارف کرائی ہے۔

مہاراشٹرا: مہاراشٹر میں کووڈ19 مریضوں کی تعداد گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 5134 نئے مریضوں کی اطلاع دہندگی کے ساتھ 217121 ہوگئی ہے۔ آخری بلیٹن کے مطابق 806 معاملات ممبئی سے آئے ہوئے کوویڈ مثبت کیسوں کی تعداد میں کمی دیکھنے میں آئی ہے۔ ابھی تک ، ریاست میں مجموعی طور پر 118558 مریض کووڈ19 سے صحت یاب ہوچکے ہیں ، جن کی تعداد 89294 ہے۔ ممبئی کے ہوٹلوں نے مہاراشٹرا حکومت کے جاری کردہ نئے رہنما خطوط کے مطابق اپنے کام دوبارہ شروع کردیئے ہیں ، جو ایک تہائی کی اجازت دیتے ہیں۔ قبضہ دکانوں اور کاروباری اداروں کو صبح 7 بجے تک کھلا رہنے کی اجازت ہے۔ نان کنٹینٹمنٹ زون میں۔ اس سے قبل ، انہیں صبح 9 بجے سے 5 بجے تک کام کرنے کی اجازت تھی۔

گجرات: گجرات میںکووڈ19 کے 778 مثبت اموات اور 17 اموات کی اطلاع ملی ہے۔ ریاستی تعداد 37636 ہوچکی ہے جس میں 26744 ٹھیک / خارج ہوئے اور 1979 اموات ہیں۔ ریاست میں کوڈ کی وصولی کی شرح 71.41 فیصد ہوگئی ہے۔ احمدآباد میونسپل کارپوریشن نے آج سے سپر پھیلاو ¿ کے ماس اینٹیجن ٹیسٹوں کا دوسرا دور شروع کیا ہے۔ سبزیوں ، پھلوں ، دودھ ، گروسری اور میڈیکل اسٹور مالکان کے دکاندار بڑے پیمانے پر اینٹیجن ٹیسٹ کے تحت آئیں گے۔ اس مہم میں ہیئر کٹنگ سیلون ، پان شاپس ، ہاکرز اور اسٹریٹ فوڈ فروش بھی شامل ہیں۔

راجستھان: آج صبح 173 نئے کیسوں کی اطلاع دہندگی کے ساتھ ریاست کی کوویڈ 19 کی گنتی 21577 ہوگئی ہے۔ آج سب سے زیادہ کیس الور ضلع سے ہیں جن میں 81 کیس ریکارڈ ہوئے ، اس کے بعد جے پور میں 34 اور کوٹا میں 12 کیسز ہیں۔ ریاست کی بازیابی کی شرح 77.43 ہے ، جو تمام بڑی ریاستوں میں سب سے زیادہ ہے۔
مدھیہ پردیش: 343 نئے معاملات رپورٹ ہوئے ہیں جن میں ریاست COVID19 کی تعداد 15627 ہے۔ اس وقت ریاست میں 3237 فعال کیسز موجود ہیں ، جبکہ آج تک 11768 مریض ٹھیک ہوگئے ہیں۔ ریاست نے آج تک 622 کوویڈ 19 موت کو بھی دیکھا ہے۔

چھتیس گڑھ: چھتیس گڑھ میں منگل کے روز 99 نئے واقعات کی اطلاع ملی ہے ، جو کووڈ19 کے مریضوں کی کل گنتی 3415 ہیں۔ ریاست میں اس وقت 673 فعال مریض ہیں۔

کیرالہ: ایک 53 سالہ کاسرگودنیٹو جو گذشتہ روز کرناٹکا کے علاقے ہوبلی سے آیا تھا ، کی موت کے بعد ریاست نے آج 29 ویں کوویڈ موت کا اندراج کیا۔ دریں اثنا ، دارالحکومت ترواننت پورم کے مضافات میں پونتھورا کا ماہی گیری کا وباو ¿ وبائی بیماری کا مرکز بنتا جا رہا ہے ، جبکہ گذشتہ پانچ دنوں میں ٹیسٹ کیے گئے 600 نمونوں میں سے 119 نمونے مثبت ہوگئے ہیں۔ اس علاقے میں کمانڈوز کی تعیناتی کے ساتھ پابندیاں سخت کردی گئیں ہیں اور کیرالہ اور تامل ناڈو کے ماہی گیروں کو ماہی گیری کے لئے سرحدوں کو عبور کرنے سے روکنے کے لئے سمندری نفاذ کو مضبوط بنایا گیا ہے۔ وزیر انچارج ایرناکولم V.S. سنیل کمار کا کہنا ہے کہ صورتحال سنگین ہونے کی وجہ سے پیشگی اطلاع کے بغیر کوچی میں لاک ڈاو ¿ن کو روک دیا جاسکتا ہے۔ عمان میں کویڈ کی وجہ سے ایک اور کیرالائی فوت ہوگئے ، جس کی وجہ سے خلیج میں اس کی تعداد 307 ہوگئی۔ کیرالہ میں منگل کو ریکارڈ 272 کوویڈ 19 واقع ہوا۔ اس انفیکشن کا 2411 مریض زیر علاج ہیں اور ریاست بھر میں مجموعی طور پر 186576 افراد کو قرنطین سے دوچار ہیں۔

تمل ناڈو: راج نواس پڈوچیری میں 2 دن کے لئے بند ، چپراسی کے مثبت ہونے کے بعد ، ایل جی کا ٹیسٹ لیا جائے۔ پڈوچیری نے دیہی علاقوں میں سب سے بڑی تیزی کے بعد جھاڑو جمع کیا۔ 112 معاملات کی اطلاع دی گئی ہے کہ یو ٹی میں کیسوں کی مجموعی تعداد 1151 ہوگئی۔ ریاستی وزیر بجلی پی تھانگامانی نے بدھ کے روز کوویڈ۔19 کے لئے مثبت جانچ کی۔ وزیر اعلی تعلیم کے پی آنبازگن کے بعد وہ دوسرا وزیر ہے جس نے اس وائرس کا خاتمہ کیا۔ اب تک 10 ایم ایل اے بھی انفیکشن میں تھے۔ وزیر اسکول ٹی این کا کہنا ہے کہ سرکاری اسکول کے طلبا کے لئے آن لائن کلاسز 13 جولائی سے شروع ہوں گی۔ کل 3616 نئے کیسز ، 4545 بازیافت اور 61 اموات کل رپورٹ ہوئے۔ کل معاملات: 118594 فعال مقدمات: 45839 اموات: 1571 ڈسچارج: 71،116 چنئی میں فعال کیس: 22374.
کرناٹک: ایل کے جی سے کلاس 5 کے طلبا کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے آن لائن کلاسوں پر پابندی کرناٹک ہائی کورٹ نے روک دی۔ چونکہ کرناٹک نے کوویڈ 19 میں 25000 کے نشان کی خلاف ورزی کی ہے ، ریاست کے مہلک وبائی امراض سے نمٹنے کے لئے حکمت عملی کے بارے میں مختلف حلقوں سے خدشات پیدا ہوگئے ہیں۔ سنٹرل ٹیم ریاستی حکومت سے کہتی ہے کہ وہ جانچ میں تاخیر کم کرے ، جانچ میں اضافہ کرے اور گروپوں پر توجہ دی جائے۔ گذشتہ روز 1498 نئے کیسز ، 571 ڈسچارج اور 15 اموات کی اطلاع ملی۔ مثبت مثبت معاملات: 26815 ایکٹو کیسز: 15297 اموات: 416 ڈسچارج: 11098۔

آندھرا پردیش: گنٹور سے ایک سرکاری ڈاکٹر نے کوویڈ۔19 میں دم توڑ دیا جبکہ میونسپل کمشنر رینک کے افسر نے ضلع میں وائرس کے لئے مثبت جانچ کی۔ موجودہ 20 موبائل ٹیسٹنگ گاڑیوں کے علاوہ ریاست مزید 50 موبائل ٹیسٹنگ گاڑیاں ریاست کے مختلف حصوں میں دستیاب کرنے کا منصوبہ بنا رہی ہے۔ چونکہ کوویڈ فرنٹ لائن کارکنوں کے ساتھ امتیازی سلوک جاری ہے ، 10 سیلیٹیکچ ورکرز جنہوں نے ایک متاثرہ شخص کی آخری رسومات انجام دی تھیں ، انہیں سریاکلام ضلعے کے ٹیککلی گاو ¿ں میں رہائشی علاقے میں داخلے کی اجازت نہیں تھی۔ 27643 نمونوں کی جانچ کے بعد گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 1062 نئے معاملات ، 1332 خارج ہوئے اور 12 اموات کی اطلاع ملی۔ کل معاملات: 22259 ، ایکٹو کیسز: 10894 خارج ہوئے: 11101 ، اموات: 264۔

تلنگانہ: ریاست اینٹیجن کے تیز ٹیسٹ کروانے کے لئے جلد ہی ریاستوں کی فہرست میں شامل ہوجائے گی۔ تلنگانہ حکومت ایک لاکھ سے زائد اینٹیجن ٹیسٹ کٹس خریدنے کے لئے تیار ہے۔ تاہم ، یہ ابھی تک واضح نہیں ہے کہ اینٹیجن ٹیسٹ کب شروع ہوگا۔ کل تک رپورٹ ہونے والے کل معاملات: 27612 فعال مقدمات: 11012؛ اموات: 313 ڈسچارج: 16287۔

اروناچل پردیش: اروناچل پردیش کے وزیر اعلی ، شری پیما کھنڈو نے COVID19 کی صورتحال پر تبادلہ خیال کے لئے عہدیداروں سے ایک میٹنگ کی۔ صحت کی نگہداشت کی صلاحیت اور جانچ کو بڑے پیمانے پر بڑھایا جائے۔ اروناچل پردیش کے وزیراعلیٰ نے NHM کے تحت نرسوں کے اضافی 250 عہدوں کے قیام کی منظوری دی۔
منی پور: منی پور کے سی ایم ، مسٹر این بیرن سنگھ نے جیری بام میں 5 پی ایچ ای ڈی منصوبوں ، 1 سی اے ایف اور پی ڈی پروجیکٹ اور 1 ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹنگ سنٹر کا افتتاح کیا۔ میڈیکل ڈیپارٹمنٹ کے جوائنٹ ڈائریکٹر کی سربراہی میں ڈاکٹروں کی 5 رکنی ٹیم منی پور کے جیریبام میں ہے ، تاکہ ضلع میں COVID19 سے متعلق حفاظتی اقدامات کا جائزہ لے اور ایک کووڈ کیئر سنٹر قائم کرے۔

میگھالیہ: میگھالیہ میں جنوبی مغربی گارو پہاڑیوں سے دو افراد آج COVID19 سے بازیاب ہوئے ہیں۔ اب ریاست میں سرگرم کیس 52 ہیں اور اب تک 45 صحت یاب ہوچکے ہیں۔

میزورم: میزورم میں آج کوویڈ 19 کے مزید 3 کیسوں کی تصدیق ہوگئی۔ ریاست میں اب مجموعی طور پر 201 اور فعال کیس 58 ہیں۔

ناگالینڈ: ناگالینڈ کے وزیر صحت اور خاندانی بہبود نے پیرن ضلع کی صورتحال کا جائزہ لینے اور وبائی املا کو معاشرتی سطح پر رکھنے پر قابو پانے کے لئے ایک موثر حکمت عملی تیار کرنے کے لئے ایک جائزہ اجلاس طلب کیا۔ ناگالینڈ میں COVID19 کے 12 نئے مثبت واقعات کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ریاست میں مثبت معاملات کی مجموعی حیثیت 656 ہے جن میں 353 فعال مقدمات اور 303 بازیافت کیس ہیں۔

http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image007PLWZ.jpg

U-NO.3813

(م ن۔ک ا)

 



(Release ID: 1637699) Visitor Counter : 11