وزارات ثقافت

وزارت ثقافت میں سنٹرل سیکٹر اسکیم ‘کلا سنسکرتی ترقی اسکیم’ (کے ایس وی وائی) کے تحت مختلف نوعیت کے ورچوول/آن لائن موڈ میں ثقافتی تقریبات/سرگرمیوں کے انعقاد کے لئے رہنما اصول جاری کئے

رہنما خطوط آرٹسٹوں کو ورچوئل موڈ میں ان اسکیموں کے تحت فوائد حاصل کرنے کے قابل بنائیں گے اور موجودہ بحران پر قابو پانے کے لئے جاری مالی امداد کو یقینی بنائیں گے

Posted On: 16 OCT 2020 11:25AM by PIB Delhi

کووڈ-19 پھیلنے سے پرفارمنگ آرٹس اینڈ کلچرل سیکٹر پر نمایاں اثر پڑا ہے جس میں ذاتی طور پر نمائشوں ، پروگراموں اور پرفارمنس کو منسوخ کردیا گیا تھا یا ملتوی کردیا گیا تھا۔ تاہم ، فنکاروں اور وزارت ثقافت کے اداروں کی طرف سے واقعات کی مناسب دستاویزات کے ساتھ ڈیجیٹل پلیٹ فارم کے ذریعے متبادل یا اضافی خدمات کی فراہمی کے لئے شدید کوششیں کی گئیں۔ وزارت ثقافت نے (پرفارمنگ آرٹس بیورو) اپنی کلا سنسکرتی ترقیاتی اسکیم  (کے ایس وی وائی) کے تحت بہت ساری اسکیمیں نافذ کی ہیں،  جس کے تحت  پروگراموں/سرگرمیوں کے انعقاد کے لئے گرانٹ کی منظوری/ اجازت دی جاتی ہے، جس میں سامعین بڑی تعدادمیں شامل ہوتے ہیں۔

حالانکہ حال ہی میں محدود سامعین کے ساتھ پروگرام کرنے کی اجازت دی گئی ہے ، موجودہ حالات کے پیش نظر ، وزارت ثقافت نے فنکاروں / تنظیموں کی مدد کے لئے مندرجہ ذیل رہنما خطوط وضع اور تیار کیے ہیں جن کو 'کلا سنسکرتی وکاس یوجنا' کی مختلف اسکیموں کےتحت پہلے ہی گرانٹ کی منظوری دی گئی ہے۔ وہ ورچوول طریقے سے اس طرح کےپروگرام کر سکتے ہیں۔ اس سے انہیں ان اسکیموں کے تحت فوائد حاصل کرنے میں مدد ملے گی خواہ وہ  پہلے کی طرح جسمانی شکل میں پروگرام منعقد کرنے کے  اہل نہ ہوں۔ اس سے موجودہ بحران پر قابو پانے کے لئے جاری مالی امداد کو یقینی بنایا جا سکے گا۔

فنکاروں / تنظیموں کو جنہیں پہلے ہی کے ایس وی وائی  اسکیموں کے تحت گرانٹ کی منظوری دی گئی ہے ، ان اسکیموں کے مختلف اجزاء جیسے آرٹ اینڈ کرافٹ پر ورچوول ورکشاپ، لیکچر اور نمائش، ویبینار، آن لائن پروگراموں / تہواروں وغیرہ کو سماجی طورپر ورچوول موڈ کے ذریعہ کرنے کی ترغیب دی جاتی ہے۔ میڈیا ہینڈل جیسے فیس بک ، یوٹیوب وغیرہ (اسکیم سے متعلق تفصیلات ضمیمہ میں رکھی گئی ہیں)۔

اسکیم / اسکیم کے اجزاء کے تحت پیش کی جانے والی سرگرمیوں سے متعلق دستاویزات کی ہارڈ کاپیاں جمع کروانی ہوں گی اور گرانٹ کے حصول کے لئے اس کی سافٹ کاپیاں بھی قابل قبول ہوں گی۔

ورچوول موڈ پر پروگرام  انجام دینے والی تنظیموں کو پروگرام کا ثبوت پیش کرنے سے مستثنیٰ قرار دیا جاسکتا ہے جیسے نیوز پیپر کٹنگ، لیکن واقعہ کی تفصیلات کے ساتھ ورچوول واقعات / سرگرمیوں کا لنک / ریکارڈنگ پیش کرنا ہوگا۔ ڈیجیٹل سامعین کی تعداد کے لحاظ سے پروگرام کی رسائی کی بھی نشاندہی کی جانی چاہئے۔

افادیت سرٹیفکیٹ (یو سی) میں ظاہر ہونے والی سرگرمیوں پر ہونے والے اخراجات کو مجازی پلیٹ فارم کے ذریعہ کئے جانے والے پروگرام کے حوالے سے جائز قرار دیا گیا ہے۔

جی ایف آر کے التزامات کے مطابق:

یو سی کو جی ایف آر 12 میں پیش کرنا ضروری ہے۔

کارکردگی / اہداف مقررہ اور ماحصل ، اس سال کا اندراج، جس میں فنڈ کا استعمال کیا گیا، جی ایف آر 12-اے کے پروفارما کے ضمیمہ I میں درج ہوگا۔

فنڈ کے استعمال کے نتیجے میں جی آئی اے کے ذریعہ گرانٹی آرگنائزیشن / ایجنسی کے ذریعہ انجام دی گئی مختلف اسکیموں کے نتائج اور تفصیلات اسی وزارت یا جی ایف آر-12-اے،  پروفارما کے ضمیمہ II میں جو دیگر وزارتوں سے موصول ہوئی ہیں، ان کا اندراج ہوگا۔

ضمیمہ

(1) ریپریٹری گرانٹ: ریپریٹری گرانٹ کے تحت ، اپنے استادوں کے ذریعہ فنکاروں کی تربیت اور ثقافتی سرگرمیوں کی کارکردگی آن لائن کی جاسکتی ہے۔ ریفریٹری گرانٹ سے متعلق مختلف سرگرمیاں انجام دینے کے لئے مصنفین کو ہال ، لباس ، روشنی ، ڈیزائن ، معاوضے کے استعمال کے سرٹیفکیٹ (یو سی) مقصد کرایہ کی رسیدیں قبول کی جائیں گی۔

(2)قومی موجودگی: قومی سطح پر ثقافتی پروگرام / تہوار / سیمینار وغیرہ کے تحت فن اور ثقافت کے فروغ کے لئے قومی سطح پر آن لائن انعقاد کیا جاسکتا ہے۔ استعمال سرٹیفکیٹ (یو سی) کے مقصد کے لئے ہالوں ، تھیٹروں ، کرایہ داروں کو معاوضہ ، سازو سامان کی ادائیگی وغیرہ کے لئے کرایہ کی رسیدیں ، اسکیموں کے اجزاء کے انعقاد سے متعلق مختلف دیگر سرگرمیاں انجام دینے کے لئے کئے گئے اخراجات کو اسکیم کے رہنما خطوط کے تحت قبول کیا جائے گا۔

(3) سی ایف پی جی ایس: کلچرل فنکشن اینڈ پروڈکشن گرانٹ (سی ایف پی جی) کے تحت ، سیمینارز ، کانفرنس ، ریسرچ ، ورکشاپس ، میلے ، نمائشیں ، سمپوزیا ، ڈانس کی تیاری ، ڈرامہ تھیٹر ، موسیقی وغیرہ اور ہندوستان کے مختلف پہلوؤں پر چھوٹے چھوٹے تحقیقی منصوبے۔ ثقافت آن لائن منعقد کی جا سکتی ہے۔ یوٹیلیائزیشن سرٹیفکیٹ (یو سی) کے لئےہال یا جگہ کو کرائے پر لینے کی رسید ، تھیٹر ، آرٹسٹوں کو معاوضے ، سازو سامان کی ادائیگی وغیرہ کے لئے کرایہ کی رسیدیں ، اسکیموں کے اجزاء کے انعقاد سے متعلق مختلف دیگر سرگرمیاں انجام دینے کے لئے کئے جانے والے اخراجات کو اسکیم کے رہنما خطوط کے تحت قبول کیا جائے گا۔

(4) ہمالیائی ثقافتی ورثہ: ہمالیہ کے ثقافتی ورثہ کے تحفظ اور ترقی کے لئے مالی اعانت کے تحت ، مطالعہ اور تحقیق ، تحفظ اور دستاویزات ، آڈیو بصری پروگرام کے ذریعہ، روایتی اور فولڈ آرٹ کی تربیت آن لائن ہوسکتی ہے۔ استعمال سرٹیفکیٹ (UC) کے لئے ہمالیہ اسکیم کے ان اجزاء سے متعلقہ سرگرمیاں گرانٹ کے اجراء کے لئے قبول کی جائیں گی۔

(5)بدھسٹ / تبتی: بدھ مت / تبتی آرٹس کی ترقی کے لئے مالی اعانت کے تحت ، تحقیقی پروجیکٹ ، کتابوں کی خریداری ، دستاویزات اور زمرہ بندی ، راہب کو وظیفے کا ایوارڈ ، خصوصی کورس اور ثقافت کا انعقاد ، آڈیو ویوژل ریکارڈنگ / دستاویز

(6) اسکالرشپ / فیلوشپ: فن اور ثقافت کے فروغ کے لئے اسکالرشپ اور فیلوشپ کی اسکیم کے تحت ، ہندوستانی کلاسیکی موسیقی ، انڈین کلاسیکل ڈانس ، تھیٹر ، مائم ، بصری آرٹ ، لوک ، روایتی اور دیسی فنون کے شعبے میں اعلی تربیت اور لائٹ کلاسیکی موسیقی اور تحقیق آن لائن پیش کی جاسکتی ہے اوراس کی رپورٹ سافٹ  ورژن میں بھی پیش کی جاسکتی ہے۔

*************

( م ن ۔  ج ق  ۔  ک ا(

U. No. 6454

 



(Release ID: 1665130) Visitor Counter : 8