PIB Headquarters

کووڈ-19 سے متعلق پی آئی بی کا یومیہ بلیٹن یا خبرنامہ

Posted On: 07 AUG 2020 6:29PM by PIB Delhi


Coat of arms of India PNG images free downloadhttp://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002SL1L.jpg

بازیافت کی شرح تقریبا 68فیصد کی نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 49769 مریض بازیاب ہوئے۔

روزانہ اوسطا برآمد ہونے والے معاملات پچھلے 2 ہفتوں میں تقریبا 26000 مقدمات سے بڑھ کر 44000 کیسز تک پہنچ گئے۔

کیس اموات کی شرح میں کمی جاری ہے ، جو آج 2.05فیصد پر ہے۔

ہندوستان دنیا کا واحد ملک بن گیا ہے جس نے اس وبائی مرض میں سمندری مسافروں کے لئے اپنے گھر کے آرام سے آن لائن امتحان شروع کیا ہے۔

دہلی ایئر پورٹ پورٹل تیار کرتا ہے جہاں ہندوستان جانے والے بین الاقوامی آنے والے اڑنے والے لازمی خود اعلان فارم کو بھر سکتے ہیں اور لازمی ادارے کے سنگرودھ عمل سے استثنیٰ کے لئے آن لائن درخواست دے سکتے ہیں۔

کووڈ-19 پر مشتمل پریس ریلیز ، جو 24 گھنٹوں میں جاری کی گئی ہیں، فیلڈ افسران سے حاصل کردہ معلومات اور پی آئی بی کے ذریعہ کئے گئے صحیح تجزیات پر مشتمل ہیں

http://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0053V87.jpg

http://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0063ESJ.jpg

 

کووڈ بیماری سے صحتیابی کی شرح تقریباً 68فیصد کی نئی اونچائی پر پہنچی،اموات کی شرح (سی ایف آر) میں گراوٹ جاری، اموات کی شرح آج گھٹ کر 2.05 فیصد ہوگئی

ہندوستان دو اہم حصولیابیوں، کووڈ-19 مریضوں کے بیچ صحتیاب ہونے کی شرح میں لگاتار اضافہ اور کم شرح اموات جو عالمی اوسط سے بھی کم بنا ہوا ہے، کے ساتھ کووڈ-19 کے علاج کی راہ پر آگے بڑھ رہاہے۔ کووڈ مریضوں کے ٹھیک ہونے کی شرح 68فیصد کی ریکارڈ اونچائی پر ہے جبکہ شرح اموات بھی 2.05فیصد کی نچلی سطح پر پہنچ گئی ہے۔ اس طرح کووڈ -19 مریضوں کے بیچ کم شرح اموات بنی ہوئی ہے۔ ان دونوں کی وجہ سے ہندوستان میں اس بیماری سے صحتیاب ہونے والے افراد کی تعداد اور اس کے فعال معاملوں کی تعداد کے درمیان فرق (7.7 لاکھ سے زائد) مسلسل بڑھتا جارہا ہے۔پچھلے 24 گھنٹوں میں 49769 مریضوں کے ٹھیک ہونے کے ساتھ ہی اس بیماری سے صحتیاب ہونے والے مریضوں کی ک ±ل تعداد 1378105 ہوگئی ہے۔ اسپتالوں کے بنیادی ڈھانچے میں سدھار اور مرکز کے ذریعے جاری یومیہ علاج پروٹوکول میں شامل دیکھ بھال معیارات کے ذریعے اسپتال میں بھرتی مریضوں کے صحیح علاج پر زور دینے سے اس بیماری سے ٹھیک ہونے کی شرح میں سدھار یقینی بناہوا ہے۔ پچھلے دو ہفتوں میں بیماری سے ٹھیک ہونے کے یومیہ اوسط معاملے (سات دن پر اوسط) لگ بھگ 26 ہزار سے بڑھ کر 44000 معاملے ہوگئے ہیں۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1644012



بھارت میں پچھلے 24 گھنٹے کے دوران ریکارڈ 6,64,949 ٹیسٹ کر کے نیا ریکارڈ قائم کیا گیا،لگاتار تیسرے دن 6 لاکھ ٹیسٹ کیے گیے،فی 10 لاکھ ٹیسٹ (ٹی پی ایم) 16000 سے تجاوز کر گئے

جانچ ، مریضوں کی تلاش اور ان کا علاج’ حکمت عملی پر توجہ دیتے ہوئے بھارت میں لگاتار تیسرے دن بھی کووڈ – 19 نمونوں کے 6 لاکھ سے زیادہ ٹیسٹ کیے گیے۔ جانچ کی روزانہ تعداد میں تیزی سے اضافہ کرنے کے بھارت کے عزم کی وجہ سے روزانہ 10 لاکھ ٹیسٹ کی صلاحیت حاصل کرنے میں کامیابی ملی ہے۔ پچھلے 24 گھنٹے میں 664949 ٹیسٹ کیے گیے۔اجتماعی طور پر ابھی تک 22149351 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔ فی 10 لاکھ ٹیسٹ میں بھی زبردست اضافہ ہوا ہے اور یہ 16050 ہو گئے ہیں۔ یہ صرف تیزی سے کی جانے والی جانچ کا نتیجہ ہے جو متاثرہ مریضوں کی شناخت کی جا سکتی ہے ان لوگوں کو تلاش کیا جا سکتا ہے اور الگ تھلگ کیا جا سکتا ہے۔ نیز ان کے جلد علاج کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔ اس وقت لیب نیٹ ورک 1370 لیب پر مشتمل ہے، جس میں سے 921 لیباریٹریز سرکاری شعبے کی ہیں اور 449 پرائیویٹ لیباریٹریز ہیں۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1643871

وزیر اعظم نے ہائر ایجوکیشن کانکلیو میں افتتاحی خطاب کیا

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے ہائر ایجوکیشن کنکلیو میں افتتاحی خطاب کیا۔ پی ایم نے ذکر کیا کہ قومی تعلیم کی پالیسی کو 3-4 سالوں پر وسیع تر غور و فکر اور لاکھوں تجاویز پر دماغ سوچ کے بعد منظور کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ ملک بھر میں قومی تعلیم کی پالیسی پر صحت مند بحث و مباحثہ ہو رہا ہے۔ قومی تعلیمی پالیسی کا مقصد قومی اقدار اور قومی مقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے نوجوانوں کو مستقبل کے لئے تیار بنانا ہے۔ مسٹر نریندر مودی نے کہا کہ اس پالیسی میں نیو انڈیا ، اکیسویں صدی کے ہندوستان کی بنیاد رکھی گئی ہے ، نوجوانوں کو ہندوستان کو مضبوط بنانے کے لئے درکار تعلیم اور مہارتوں کو ترقی کی نئی بلندیوں تک لے جانے کے لئے اور ہندوستان کے شہریوں کو مزید تقویت بخش بنانے کی ضرورت ہے۔ وہ زیادہ سے زیادہ مواقع کے لئے موزوں ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ قومی تعلیمی پالیسی تعلیم کے بارے میں گرو رابندر ناتھ کے نظریات کی بھی عکاسی کرتی ہے ، جس کا مقصد ہماری زندگی کو تمام وجود کے ساتھ ہم آہنگ بنانا ہے۔ انہوں نے کہا ، ایک ہولیسک اپروچ کی ضرورت تھی ، جو قومی تعلیمی پالیسی کامیابی کے ساتھ حاصل کرلی ہے۔

: https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1644051

 

 

 

 

اعلیٰ تعلیم کنکلیوسے وزیراعظم کے خطاب کا متن

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1644025

پردھان منتری غریب کلیان اَنّ یوجنا مرحلہ – ایک،فوڈ کارپوریشن آف انڈیا نے مارچ 2020سے جو ن 2020 کے دوران 139 ایل ایم ٹی خوردنی اناجوں کی نقل وحمل کی

24 مارچ سے 20 جون 2020 کی مدت کے دوران خوراک و عوامی نظام تقسیم کے ماتحت ادارے فوڈ کارپوریشن آف انڈیا نے ملک بھر میں تقریباََ 5 ہزار ریکو ں کو بروئے کار لاتے ہوئے 139 ایل ایم ٹی اور 91874 ٹرکوں کے توسط سے تقریباََ 14.7 ایل ایم ٹی خوردگی اناجوں کی نقل وحمل کی جزائر انڈمان ونکوبار اور جزائر لکشدیپ کے لئے اناجوں کی مختص مقدار سپلائی جہازوں کے ذریعہ یقینی بنائی گئی۔ ریلویز ، جہازرانی جیسی دیگر وزارتو ں اور انڈین ائیر پورٹس نے ان آپریشنز کو سہل اور کامیاب بنانے میں اہم رول ادا کیا۔ مستفدین کے درمیان خوردنی اناجوںکی تقسیم کے لئے سستی شرح کی 5.4 لاکھ دوکانوں کا ملک بھر میں استعمال کیا گیا ہے ، جہاں کووڈ-19 کے پھیلاو ¿ کو روکنے کے لئے تیار کئے گئے سبھی احتیاطی اقدامات پر عمل کیا گیا۔ ان اقدامات میں سماجی فاصلہ قائم رکھنے ، فیس ماسک ، ہینڈ سینی ٹائزر ، ہاتھوں کی صفائی ستھرائی کو یقینی بنانے کے لئے صابن اور پانی کی دستیابی ، اناجو ں کی تقسیم کےلئے الگ الگ اوقات کا تعین وغیر ہ شامل ہیں۔ان اقدامات پر سبھی ریاستوں میں عمل کیا گیا ہے۔ ان کے علاوہ ہروقت سماجی فاصلے کو یقینی بنانے کے لئے جدت طرازی پر مبنی متعدد طور طریقوں کو بروئے کار لایا گیا۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1643869


نائب صدر نے طلبا پر بوجھ کم کرنے کے لئے نئی تعلیمی پالیسی کی تعریف کی

ہندوستان کے نائب صدر ، شری ایم وینکیا نائیڈو نے نصاب میں کمی لاتے ہوئے طلبہ کا بوجھ کم کرنے کے لئے نئی تعلیمی پالیسی کی تعریف کی۔ گذشتہ روز راجالاکشمی پارتھرسارتھی میموریل لیکچر کے دوران ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے نائب صدر نے زور دیا کہ طلبا کو مساوی زور دینے کے لئے حوصلہ افزائی کی جانی چاہئے۔ جسمانی سرگرمی اور کھیلوں پر۔ انہوں نے یوگا کو ابتدائی عمر سے ہی اسکول کے نصاب کا لازمی جزو بنانے پر بھی زور دیا اور کہا کہ طلباءکو کھیل کے میدانوں اور کلاس روموں میں برابر وقت گزارنا چاہئے۔ حال ہی میں شروع کی گئی نئی تعلیمی پالیسی کو بصیرت کی دستاویز کی حیثیت سے ، نائب صدر نے کہا کہ اس نے جامع پر زور دیا طلباءکی ترقی عام تعلیمی نظام الاوقات میں کویوڈ وبائی امراض کی وجہ سے پیدا ہونے والی خلل پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ، نائب صدر نے کہا کہ ورچوئل کلاسز عارضی انتظامات ہیں اور وہ کسی استاد کی جگہ نہیں لے سکتے ہیں۔ کوئی بھی ورچوئل میکانزم ریئل ٹائم کلاس روم سیکھنے کا ذائقہ نہیں دے سکتا۔ یہ دیکھتے ہوئے کہ ہندوستان اس پیش قدمی پر ہے ، نائب صدر نے کہا کہ کووڈ19 وبائی امراض کی وجہ سے جو دھچکا لگا ہے وہ عارضی ہے اور اس پر اعتماد کا اظہار کیا گیا کہ اس کی رفتار واپس آجائے گی۔ وزیر اعظم کے تین لفظ منتر- ‘اصلاح-پرفارم-ٹرانسفارم’ کا حوالہ دیتے ہوئے ، انہوں نے سب کو اپیل کی کہ قوم کو بدلنے کے لئے اپنا ایک فرض ادا کریں۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1643873


جناب نریندر سنگھ تومر اور جناب پیوش گوئل نے دیگر شخصیتوں کے ساتھ پہلی“ کسان ریل” جو ایک خصوصی پارسل ٹرین ہے مہاراشٹر کے دیولالی سے بہار کے دانا پور کے لیے جھنڈی دکھا کر روانہ کیا

ہندوستانی ریلوے نے آج دیوالی سے دانا پور تک سب سے پہلے "کسان ریل" متعارف کرایا۔ مرکزی وزیر زراعت اور کسان بہبود ، دیہی ترقی اور پنچایت راج ، شری نریندر سنگھ تومر اور ریلوے اور تجارت اور صنعت کے وزیر ، جناب پیوش گوئل نے اس ٹرین کو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے روانہ کیا۔ اس موقع پر شری نریندر سنگھ تومر نے کہا ، "کسانوں کے لئے یہ ایک بہت بڑا دن ہے۔ کسان ریل کا بجٹ میں اعلان کیا گیا تھا۔ زراعت کی پیداوار کو بہترین تقسیم اور واپسی کی ضرورت ہے۔ ہندوستانی کسانوں نے ثابت کیا ہے کہ وہ کبھی بھی کسی آفت یا چیلنج سے باز نہیں آئیں گے۔ کسان ریل اس بات کو یقینی بنائے گی کہ زرعی مصنوعات ملک کے ایک کونے سے دوسرے کونے تک پہنچ جائیں۔ اس ٹرین سے کسانوں اور صارفین کو بھی فائدہ ہو گا۔ "شری پیوش گوئل نے کہا ،" ہندوستانی ریلوے نے کسانوں کی خدمت میں ٹرینیں رکھی ہیں۔ یہ وزیر اعظم ، جناب نریندر مودیجی کی رہنمائی اور پریرتا تھا کہ ہندوستانی ریلوے نے کسان ریل کا آغاز کیا ہے۔ یہ ٹرین کسانوں کی آمدنی کو دوگنا کرنے میں سنگ میل کا کام کرے گی۔ کویوڈ چیلنجوں کے خلاف جنگ میں ہندوستانی ریلوے اور کسانوں کا صف اول تھا۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1644077

 

دہلی ہوائی اڈے نے ملک بھر میں آنے والے تمام بین الاقوامی مسافروں کیلئے پورٹل تیار کیا
دہلی انٹرنیشنل ایئرپورٹ لمیٹڈ نے آج اعلان کیا ہے کہ اس نے اپنی نوعیت کا پہلا پورٹل تیار کیا ہے جہاں ہندوستان جانے والے بین الاقوامی آنے والے اڑان لازمی خود اعلان فارم کو پ ±ر کرسکتے ہیں اور لازمی ادارے کے سنگروی عمل سے استثنیٰ کے لئے آن لائن درخواست بھی دے سکتے ہیں۔ یہ سہولت 8 اگست 2020 سے تمام بین الاقوامی آنے والے مسافروں کے لئے دستیاب ہوگی۔ اس سے مسافروں کے سفر کو زیادہ رابطہ اور بغیر رابطے کے آرام دہ اور پرسکون بنانے میں مدد ملے گی کیونکہ انہیں آمد کے وقت فارموں کی جسمانی کاپیاں بھرنا نہیں پڑے گی۔ یہ نیا آن لائن خود اعلانیہ اور سنگروی سے مستثنیٰ پورٹل سرکاری عہدیداروں کے لئے چھوٹ دینے کے بارے میں تیز اور باخبر فیصلہ لینے میں فائدہ مند ثابت ہوگا یا بین الاقوامی آنے والے مسافر کی صحت کی تازہ ترین حالت جاننے کے بارے میں۔ مسافروں کو صرف اس صورت میں چھوٹ کے لئے سمجھا جائے گا اگر وہ پانچ مستثنیٰ اقسام میں سے کسی ایک کی زد میں آئیں حاملہ خواتین ، کنبے میں موت کا سامنا کرنا پڑتا ہے ، شدید بیماری سے دوچار ہے (فراہم کی جائے گی) ، والدین کے ہمراہ 10 سال سے کم عمر کے بچوں اور کوویڈ۔ حالیہ آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ میں 19 منفی۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1644076


مسٹر منوسوک مانڈویہ نے ملاحوں کے لئے آن لائن ایکزٹ امتحانات کا نظام شروع کیا

مرکزی وزیر مملکت برائے بحری جہاز (آزادانہ چارج) شری منسوک ماندویہ نے آج یہاں ورچوئل تقریب کے ذریعہ سمندری مسافروں کے لئے آن لائن ایکزٹ امتحان کا آغاز کیا۔ سمندری فرد ، جو ڈائریکٹوریٹ جنرل آف شپنگ کے تحت میری ٹائم ٹریننگ کے مختلف اداروں میں تربیت حاصل کر رہے ہیں ، اب کووڈ19 وبائی امراض کے اس بے مثال وقت میں اپنے گھروں کے آرام سے امتحان میں شریک ہوسکتے ہیں۔ شری مانڈویہ نے کہا کہ ہندوستان دنیا کا واحد ملک ہے جس نے سمندری مسافروں کے لئے اس وبائی حالت میں اپنے گھر کے آرام سے آن لائن امتحان شروع کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آن لائن امتحان کی وجہ سے امتحان کی درستگی اور امیدواروں کی تشخیص میں یکسانیت کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ آن لائن امتحان کے ساتھ ، سمندری مسافروں کو اپنے گھروں کے آرام سے ایکزٹ امتحان میں کوالیفائی کرنے کا موقع ملے گا۔

https://pib.gov.in/PressReleseDetail.aspx?PRID=1644120

 

پی آئی بی فیلڈ دفاتر سے ماخوذ


چندی گڑھ: ایڈمنسٹریٹر ، یو ٹی چندی گڑھ ، نے ہدایت کی کہ تین بڑے طبی اداروں میں موجودہ سہولیات کا مطالعہ کرنے کے لئے طبی ماہرین کی ایک کمیٹی تشکیل دی جائے اور کیسوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کو مدنظر رکھتے ہوئے ،کووڈ علاج کے بستروں کو بڑھانے کے طریقوں کی بھی تجاویز دیں۔ انہوں نے مزید ہدایت کی کہ جمنازیم اور یوگا اداروں کے لئے جن ہدایت نامہ کو مطلع کیا گیا ہے ان جگہوں کو کھولتے وقت سختی سے عمل کیا جائے۔ کسی بھی خلاف ورزی سے یونٹ بند ہونے کی دعوت ہوگی۔

پنجاب: محکمہ سیاحت پنجاب کوویڈ 19 کے بعد سیاحت اور مہمان نوازی کے شعبوں میں اپنے کیریئر کو آگے بڑھانے کے خواہشمند نوجوانوں کو مفت تربیت اور مہارت کی ترقی مہیا کرے گی۔ وزیر سیاحت و ثقافتی امور مسٹر چرنجیت سنگھ چھنی نے کہا کہ ہنر سی روزگار ٹیک کی چھتری اسکیم کے تحت 2000 سے زائد طلباءکو تربیت دی جائے گی اور انھیں جگہ سازی میں بھی مدد فراہم کی جائے گی۔ انٹرپرینیورشپ پروگرام کے تحت تقریبا 1000 طلبا کو ہنرمندی کی جانچ اور سرٹیفیکیشن کی تربیت فراہم کی جائے گی۔

ہریانہ: ہریانہ کے وزیر اعلی نے کووڈ19 انفیکشن سے صحت یاب ہونے والے مریضوں پر زور دیا کہ وہ آگے آئیں اور اس انفیکشن میں مبتلا لوگوں کو اس وبائی امراض کے خلاف سخت جدوجہد کرنے کی تحریک کریں۔ انہوں نے کووڈ19 انفیکشن سے بازیاب ہونے والے لوگوں سے بھی اپنا پلازما عطیہ کرنے کی اپیل کی۔ وزیراعلیٰ نے افسران کو ہدایت کی کہ مریضوں کو مفت اٹھاو اور ڈراپ ایمبولینس کی سہولت فراہم کی جانی چاہئے جن کے کوویڈ 19 میں صحت یاب ہونے کے بعد ٹیسٹ کروانے کی ضرورت ہے۔

اروناچل پردیش: اروناچل پردیش میں ، کوویڈ 19 ٹیسٹ کے لئے اب تک 98000 سے زیادہ نمونے جمع ہوئے۔ نمسائی ضلعی انتظامیہ نے پورٹرز بھرتی ریلی کے تمام شرکا کو ریلی سے متعلق 55 مثبت معاملات کی نشاندہی کے بعد کم سے کم 14 دن تک سخت گھریلو سنگرودھ میں رہنے کا نوٹس جاری کیا ہے۔

منی پور: منی پور حکومت نے سرکاری اور نجی اسپتالوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ غیر کوواڈ کے تمام مریضوں کی حاضری کریں اور علاج میں تاخیر کے بغیر صحت کی خدمات جاری رکھیں۔ مانی پور حکومت تمام اسپتالوں کو ڈائریکٹوریٹ آف ہیلتھ سروسز کے ذریعہ ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ کٹس فراہم کرے گی۔

میزورم: میزورم میں آج صبح 9 بجے تک ، 320 افراد کا ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ اور 18 ٹرک ڈرائیوروں اور ایک مقامی تجربہ کار کوویڈ 19 مثبت کے ساتھ تجربہ کیا گیا۔

سکیم: سکیم میں ، آج 25 نئے کوویڈ 19 مثبت کیس ملے۔ ریاست میں اب تک 399 مریض ٹھیک اور خارج ہوئے اور 446 سرگرم کیسز ہیں۔

کیرالہ: ریاست میں کاسرگوڈ سے ایک اور کوویڈ 19 کی موت کی اطلاع ملی ہے۔ ریاست میں کوویڈ 19 کے مجموعی طور پر کل تعداد 30000 کو عبور کرگئی جس میں تازہ ترین کیسوں میں 1298 واقعات دیکھنے میں آئے۔ ابھی تک 11983 مریض زیر علاج ہیں اور ریاست بھر میں 148039 افراد زیر نگرانی ہیں۔

تمل ناڈو: پڈوچیری میں 244 تازہ کوویڈ 19 واقعات رپورٹ ہوئے ، پانچ اموات؛ اس کی تعداد بڑھ کر 4862 ہوگئی ، فعال معاملات 1873 اور یوتھ میں 75 اموات ہوئیں۔ ٹی این سی ایم کے تیرونیلویلی ایونٹ ٹیسٹ کے لئے دعوت نامہ شریک وائرس کے لئے کوڈ مثبت؛ ڈاکٹروں سمیت 10 سے زائد عملے نے بھی اس مرض کے لئے مثبت ٹیسٹ کیا ہے۔ وزیر اعلی پلانیسوامی کا کہنا ہے کہ ای پاس سسٹم کو آسان بنانے کے لئے اٹھائے گئے اقدامات ، وائرس کا شکار ہونے والے فرنٹ لائن کارکنوں کے لواحقین کو مالی امداد تقسیم کرنے کے لئے۔ گذشتہ روز 5684 نئے کیس ، 6272 بازیافت اور 110 اموات کی اطلاع ملی۔ کل معاملات: 279144؛ فعال مقدمات: 53486؛ اموات: 4571؛ چنئی میں فعال معاملات: 11720۔

کرناٹک: ریاست کے ساتھ ہی بنگلور شہر میں بھی ایک ہفتہ کے دوران بازیابی کی شرح میں معمولی سی بہتری آئی ، وزیر تعلیم کے وزیر نے کہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ 30 جولائی کو ریاست میں وصولی کی شرح 39.36 فیصد اور بنگلور شہر میں 29.51 فیصد تھی ، ایک ہفتہ کے اندر یہ شرح 50.72 فیصد اور 50.34 فیصد ہوگئی۔ گذشتہ روز 6805 نئے کیسز ، 5602 ڈسچارج اور 93 اموات کی اطلاع؛ بنگلور شہر میں 2544 مقدمات۔ کل معاملات: 158254؛ فعال مقدمات: 75068؛ اموات: 2897اور 80281 ڈسچارج۔

آندھرا پردیش: راج ہیمنڈری سنٹرل جیل میں تقریبا 26 265 قیدیوں نے کورونیوائرس کا مثبت تجربہ کیا۔ سنٹرل جیل میں کل 1675 قیدی ہیں۔ جیل کے قریبا 24 24 عملہ جو جیل کے قیدیوں کے ساتھ رابطے میں آئے تھے ، ان کا علاج گھر سے الگ تھلگ کیا جارہا ہے۔ پرکاسم ضلع میں 150 کے قریب کورونا مثبت مریض لاپتہ ہوگئے ہیں۔ بی جے پی کے راجیہ سبھا ممبر سی ایم رمیش نے کورون وائرس کے لئے مثبت تجربہ کیا۔ وسکھاپنم کے ضلعی حکام نے آج سے بڑھتے ہوئے کورونا کیسوں میں مشرقی گھاٹ کے مشہور پہاڑی مقام وادی اراکو میں مکمل لاک ڈاو ¿ن نافذ کردیا ہے۔ کل 10328 نئے کیسز ، 8516 ڈسچارج اور 72 اموات کی اطلاع ملی۔ کل معاملات: 196789؛ فعال مقدمات: 82166؛ اموات: 1753۔

تلنگانہ: ریاست میں کوویڈ 19 میں تیزی سے اضافہ صحت کی دیکھ بھال کے انفراسٹرکچر پر بوجھ بڑھا رہا ہے۔ ایف آئی سی سی آئی (تلنگانہ) اور فیڈریشن آف تلنگانہ چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف ٹی سی سی آئی) کے ساتھ ہی ایڈمنسٹریٹیو اسٹاف کالج آف انڈیا (اے ایس سی آئی) نے حکومت کو ریاست میں کورون وائرس کے مریضوں کے لئے اسپتال میں داخلے کے نظام کو منظم اور مرکز بنانے کی سفارش کی ہے۔ پچھلے 24 گھنٹوں میں 2207 نئے واقعات ، 1136 بازیافت اور 12 اموات کی اطلاع؛ 2207 میں سے 532 مقدمات جی ایچ ایم سی سے رپورٹ ہوئے۔ کل معاملات: 75257؛ فعال مقدمات: 21417؛ اموات: 601؛ ڈسچارجز: 53239۔

مہاراشٹر: ممبئی اور پونے اضلاع کے بعد ، تھانہ جمعرات کے روز ایک لاکھ نمبر کی خلاف ورزی کرنے والا تیسرا بن گیا جو 100875 واقعات میں پہنچا۔ ریاست میں اب کل مقدمات 4.79 لاکھ ہیں جن میں سے 1.46 لاکھ سرگرم ہیں۔ ممبئی میں جمعرات کے روز 910 مقدمات شامل ہوئے اور ان کی تعداد 120150 ہوگئی۔ ریاست کے روزمرہ کے معاملات میں ، ممبئی کا حصہ جمعرات کو کم ہوکر 8 فیصد رہ گیا ، جب مہاراشٹرا میں 11514 معاملات کا اضافہ ہوا ، جو ایک نیا دن ہی اعلی ہے۔

گجرات: احمد آباد ، سورت اور راجکوٹ میں شہری انتظامیہ نے احمد آباد میں اسی طرح کی صحت کی سہولت پر حادثے کے بعد متعلقہ شہروں میں نامزد کوویڈ 19 اسپتالوں کا فائر سیفٹی آڈٹ شروع کیا جس میں جمعرات کے روز آٹھ مریض ہلاک ہوگئے۔ احمد آباد میونسپل کارپوریشن کے فائر سیفٹی آفیسر کے مطابق ، شری ہسپتال ، نارنگ پورہ کے علاقے میں کوویڈ نامزد ہسپتال ، جہاں جمعرات کو یہ واقعہ پیش آیا ، اس میں فائر سیفٹی این او سی نہیں تھی۔ دریں اثنا ، گجرات میں 1034 نئے کورونا وائرس کے کیس رپورٹ ہوئے جو ریاست میں اس کی تعداد 67818 ہیں۔ ان میں سے 14905 سرگرم مقدمات ہیں۔

مدھیہ پردیش: مدھیہ پردیش حکومت نے رات کے کرفیو میں دو گھنٹے کی نرمی کر دی ہے اور ریاست کے کورونا وائرس سے متاثرہ اضلاع میں ہفتے کے آخر میں لاک ڈاو ¿ن کو جزوی طور پر ختم کردیا ہے۔ مدھیہ پردیش میں جمعرات کے روز 830 نئے کیسز اور 838 بازیافت کی اطلاع ملی ہے جبکہ یہ تعداد 8716 رہ گئی ہے۔

چھتیس گڑھ: رائے پور اور چھتیس گڑھ کے دیگر شہری علاقوں میں دکانوں اور تجارتی اداروں نے جمعہ کو اپنا کام دوبارہ شروع کیا ، کیونکہ جمعرات کو اوور دو ہفتے طویل لاک ڈاو ¿ن کے خاتمے کے بعد انہیں کچھ پابندیوں کے ساتھ کام کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔ ریاستی دارالحکومت رائے پور میں سڑکوں پر ٹریفک کی نقل و حرکت میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے کیونکہ 22 جولائی سے لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند ہونے والے تمام ریاستی حکومت اور نجی دفاتر جمعہ سے دوبارہ کام کرنا شروع کرچکے ہیں۔

گوا: گوا کوویڈ 19 مریضوں کو ریمڈیسویر اینٹی وائرل منشیات دلانا شروع کرنے کے لئے تیار ہے۔ گوا کے محکمہ صحت نے آج فارما میجر سیپلا سے 1008 ریمیڈیشیر کے شیشے وصول کیے۔ گوا فی الحال کوویڈ 19 کے کیسوں کی تعداد میں مسلسل اضافے کا خدشہ پا رہا ہے۔ ریاست میں مجموعی طور پر 7614 کورونا وائرس کیسز ریکارڈ کیے گئے ہیں ، جن میں سے 2095 سرگرم ہیں۔

 

    • Image Image

 

 



(Release ID: 1645002) Visitor Counter : 14