PIB Headquarters

کووڈ-19 سے متعلق پی آئی بی کا یومیہ بلیٹن یا خبرنامہ

Posted On: 09 JUN 2020 6:36PM by PIB Delhi

کووڈ-19 پر مشتمل پریس ریلیز ، جو 24 گھنٹوں میں جاری کی گئی ہیں، فیلڈ افسران سے حاصل کردہ معلومات اور پی آئی بی کے ذریعہ کئے گئے صحیح تجزیات پر مشتمل ہیں

http://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0010FBL.pnghttp://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0026028.jpg

   
  • پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران 4785 مزید کووڈ-19 مریضوں کی بازیابی ہوئی ، جس کی کل تعداد 129214 اور بحالی کی شرح 48.47 فیصد ہوگئی۔
  • وزراء کے گروپ نے کووڈ -19 کےکنٹین منٹ ماپسرس کا جائزہ لیا۔
  • مرکزی ٹیمیں بڑے کووڈ-19 کیسوں کے ساتھ 50 سے زیادہ میونسپل باڈیوں میں تعینات ہیں۔
  • وزیر خزانہ کا کہنا ہے کہ کوویڈ ایمرجنسی کریڈٹ سہولت تمام کمپنیوں پر محیط ہے ، اور صرف ایم ایس ایم ای نہیں ہے۔
  • حالیہ مالی سال میں ایم جی این آر جی ایس کے لئے اب تک سب سے زیادہ 101500 کروڑ روپئے مختص کیے گئے ہیں ، جن میں سے 21493 کروڑ روپئے پہلے ہی جاری کیے گئے ہیں۔ 6.69 کروڑ افراد کو کام کی پیش کش کی گئی ہے۔

http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image0049RPC.jpg

Image

وزارت صحت اور خاندانی بہبود سے کوڈ 19 پر اپڈیٹس۔ جی او ایم نے COVID19 کے کنٹین منٹ اقدامات کا جائزہ لیا

کووڈ19 سے متعلق اعلیٰ سطح کے گروپ آف منسٹرز (جی او ایم) کا 16 واں اجلاس آج مرکزی وزیر صحت و خاندانی بہبود کے وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن کی زیر صدارت ہوا۔ جی او ایم کو ملک میں کووڈ19کی تازہ ترین صورتحال ، جواب اور انتظام کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔ حکومت کو ملک میں بڑھتے ہوئے طبی بنیادی ڈھانچے کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا تھا۔ 9 جون 2020 تک ، 167883 تنہائی بستروں ، 21614 آئی سی یو بیڈز اور 73469 آکسیجن سے چلنے والے بیڈز کے ساتھ 958 کووڈہسپتالوں کی دستیابی سے کووڈ سے متعلقہ صحت کے انفراسٹرکچر کو تقویت ملی ہے۔ 13037 الگ تھلگ بستروں کے ساتھ 2313 کووڈ صحت مراکز۔ 10748 آئی سی یو بیڈ اور 46635 آکسیجن سپورٹ بیڈ بھی آپریشنل ہوچکے ہیں۔ مزید یہ کہ ملک میں کووڈ19کا مقابلہ کرنے کے لئے 710642 بستروں پر مشتمل 7525 کووڈ کیئر سینٹرز دستیاب ہیں۔ کووڈ بستروں کے لئے دستیاب وینٹی لیٹر 21494 ہیں۔ سینٹر نے مزید 60848 وینٹی لیٹروں کا آرڈر دیا ہے۔ آئی سی ایم آر کی جانچ کی گنجائش 553 سرکاری اور 231 نجی لیبارٹریوں (کل 784 لیب)کے ذریعہ بڑھ گئی ہے۔ اب تک ملک میں 49 لاکھ سے زیادہ کے مجموعی ٹیسٹ کئے جاچکے ہیں۔ نیز ، گذشتہ 24 گھنٹوں میں 141682 نمونوں کا تجربہ کیا گیا ہے۔ اب تک  مجموعی طور پر 129214 افراد ٹھیک ہوچکے ہیں۔ پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران 4785 مریض ٹھیک ہوگئے۔ اس سے بازیافت کی کل شرح 48.47فیصد ہوجاتی ہے۔ فعال مقدمات کی کل تعداد اب 129917 ہے۔

مرکزی ٹیموں کو ان 50 سے زیادہ میونسپل اداروں میں تعینات کیا گیا جہاں کووڈ-19 سے بہت زیادہ معاملات ہیں

صحت و کنبہ بہبود کی وزارت نے کووڈ-19 سے کنٹرول اور اس کے بندوبست کے لئے تکنیکی مدد فراہم کرکے ریاستی حکومتوں کی مدد کے لئے ان 15 ریاستوں مرکز کے زیر انتظام علاقوں کے 50 سے زیادہ اضلاع میونسپل باڈیز میں اعلیٰ سطحی کثیر موضوعاتی ٹیموں کو تعینات کیا ہے، جہاں انفیکشن کے بہت زیادہ معاملات ہیں اور جہاں یہ بیماری بڑھی ہے۔ یہ ریاستیں مرکز کے زیر انتظام علاقے ہیں:مہاراشٹر (7 اضلاع میونسپل باڈیز)، تلنگانہ (4)، تمل ناڈو (7)، راجستھان (5)، آسام (6)، ہریانہ (4)، گجرات (3)، کرناٹک (4)، اتراکھنڈ (3)، مدھیہ پردیش (5)، مغربی بنگال (3)، دہلی (3)، بہار (4)، اترپردیش (4)اور اڈیشہ (5)۔یہ ٹیمیں اضلاع شہروں کے اندر متاثرہ لوگوں کا تیزی سے علاج کرنے معاملات کے کلینکل بندوبست کے نفاذ میں ریاست کے محکمہ صحت کو تعاون دینے کے لئے علاقے میں جاکر اور صحت دیکھ بھال سے متعلق مراکز میں کام کررہے ہیں۔

کووڈ کی ہنگامی قرضے کی سہولت تمام کمپنیوں کا احاطہ کرتی ہے اور صرف ایم ایس ایم ایز کا نہیں: وزیر خزانہ

مرکزی وزیر برائے خزانہ اور کارپوریٹ امور محترمہ نرملا سیتارمن نے کہا کہکووڈ ایمرجنسی کریڈٹ سہولت تمام کمپنیوں کا احاطہ کرتی ہے ، نہ کہ ایم ایس ایم ایز کو۔ ایف آئی سی سی آئی کی قومی ایگزیکٹیو کمیٹی کے ممبروں سے خطاب کرتے ہوئے ، محترمہ سیتارمن نے ہندوستانی کاروبار کی حمایت اور معیشت کی بحالی کے ارادے سے حکومت کی ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی ، اور کہا ،‘‘اگر آپ کے ممبروں میں سے کسی کو کوئی مسئلہ درپیش ہے تو ہم ان کی حمایت مداخلت کے لئے پرعزم ہیں’’۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہر سرکاری محکمے کو واجبات کو ختم کرنے کو کہا گیا ہے اور اگر کسی بھی محکمے کے ساتھ کوئی مسئلہ ہے تو حکومت اس پر غور کرے گی۔ وزیر خزانہ نے یہ بھی کہا کہ حکومت 15فیصد کو حاصل کرنے کے لئے ڈیڈ لائن میں توسیع پر غور کرے گی۔

مالی سال 2020-21 کے دوران مہاتما گاندھی نریگا کے تحت اب تک کی سب سے زیادہ 101500 کروڑ روپئے کی رقم مختص کی گئی؛31492 کروڑ روپئے پہلے ہی جاری کیے جاچکے ہیں

موجودہ مالی سال 2020-21 کے دوران مہاتما گاندھی نیشنل رورل امپلائمنٹ گارنٹی اسکیم (ایم جی این آر ای جی ایس)کے تحت 101500 کروڑ روپئے مختص کرنے کی گنجائش پیدا کی گئی ہے۔ اس پروگرام کے تحت مخصوص کی گئی رقموں میں یہ اب تک کہ سب سے زیادہ رقم ہے۔سال 2020-21 میں 31493 کروڑ روپئے کی رقم پہلے ہی جاری کی جاچکی ہے جو موجودہ مالی کے بجٹ تخمینے کے 50 فیصد سے زیادہ ہے۔اب تک کل ملاکر 60.80 کروڑ کام کے دن مہیا کیے جاچکے ہیں اور 6.69 کروڑ لوگوں کو کام فراہم کیا گیا ہے۔مئی 2020 کے دوران جن لوگوں کو کام فراہم کیا گیا ان کی اوسط تعداد یومیہ 2.51 کروڑ بنتی ہے۔ یہ تعداد پچھلے سال مئی کی متعلقہ تعداد سے 73 فیصد زیادہ ہے، جو 1.45 کروڑ افراد یومیہ تھی۔موجودہ مالی 2020-21 کے دوران کل ملاکر 10 لاکھ کام مکمل ہوچکے ہیں۔ پانی کے تحفظ اور آبپاشی ، پودے لگانے، باغبانی اور روزی روٹی کو آگے بڑھانے کے لیے انفرادی طو رپر فائدہ پہنچانے کے کاموں پر مسلسل زیادہ توجہ دی جارہی ہے۔

انڈین ریلویز مطالبے کے مطابق ریاستوں کو شرمک اسپیشل ٹرینیں فراہم کراتا رہے گا

انڈین ڑیلویز نے اب تک 4347 شرمک اسپیشل ٹرینیں چلائی ہیں، جن کے ذریعہ تقریباً 60 لاکھ افراد کو ان کی ریاستوں میں پہنچایا گیا ہے۔ یہ شرمک ٹرینیں یکم مئی 2020 سے چلائی جارہی ہیں۔انڈین ریلویز نے ریاستی حکومتوں کو مطلع کیا ہے کہ وہ ریاستوں سے مطالبہ حاصل ہونے کے بعد 24 گھنٹے کے اندر شرمک اسپیشل ٹرین فراہم کرانا جاری رکھے گا۔ ریلوے کی وزارت نے ریاستوں حکومتوں سے درخواست کی ہے کہ وہ شرمک اسپیشل ٹرینوں کے بارے میں اپنے مطالبے سے آگاہ کریں اور دیکھیں کہ ان کے مطالبے کے مطابق بقیہ افراد کو ریل کے ذریعہ پہنچانے کے ان کے مطالبے پر اچھی طرح عمل ہوتا ہے۔

موٹر گاڑیوں کے کاغذات کے قانونی طور پر درست ہونے کی تاریخ کو توسیع دے کر 30 ستمبر 2020 تک کردیا گیا

سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں نیز ایم ایس ایم ایز کے مرکزی وزیر جناب نتن گڈکری نے موٹرگاڑیوں کے کاغذات کے قانونی طور پر درست ہونے کی تاریخ کو مزید بڑھا کر اسے اس سال ستمبر تک کردیا گیا ہے۔ اس کے مطابق سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کی وزارت نے تمام ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کو اس سلسلے میں ایڈوائزری جاری کردی ہے۔ ریاستوں مرکز کے زیر انتظام علاقوں سے مزید درخواست کی گئی ہے کہ وہ موٹر گاڑیوں کے قانون 1988 کے تحت فراہم کردہ ضابطوں یا دیگر قوانین کے تحت اسی طرح کے ضابطوں پر غور کریں اور پرمٹ یا فیس یا کاغذات کی تجدید کے لیے ٹیکس وغیرہ پنالٹی میں ڈھیل دینے پر غور کریں تاکہ کووڈ-19 کی وجہ سے پیدا شدہ غیر معمولی حالات میں لوگوں کو رلیف فراہم کیا جاسکے۔

حکومت نے ایس ایم ایس کے ذریعے صفر جی ایس ٹی ریٹرن فائل کرنے کی سہولت کی شروعات کی

ٹیکس ادا کرنے والوں کو آسانی فراہم کرنے کی جانب ایک اہم قدم کے طورپر حکومت نے آج صفر جی ایس ٹی ماہانہ ریٹرن فارم- جی ایس ٹی آر-3 بی میں ایس ایم ایس کے ذریعے ریٹرن فائل کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ اس سے رجسٹر شدہ 22 لاکھ سے زیادہ ٹیکس ادا کرنے والوں کو جی ایس ٹی کی پابندی میں خاطر خواہ آسانی پیدا ہوجائے گی۔ بصورت دیگر انھیں ہر ماہ اپنے ریٹرن فائل کرنے کے لیے مشترکہ پورٹل پر اپنے اکاو ¿نٹ میں لاگ کرنا ہوتا تھا۔ اب ان ٹیکس ادا کرنے والوں کو جنھیں صفر ٹیکس ادا کرنا ہے جی ایس ٹی پورٹل پر لاگ آن کرنے کی ضرورت نہیں ہے بلکہ وہ اپنے صفر ریٹرنس ایس ایم ایس کے ذریعے فائل کرسکتے ہیں۔

جناب رام ولاس پاسوان نے چینی کے شعبے سے متعلق مسائل کا جائزہ لیا

مرکزی وزیر برائے خوراک و عوامی تقسیم اور صارف امور ، شری رام ولاس پاسوان نے محکمہ فوڈ اینڈ پبلک ڈسٹری بیوشن کے سینئر عہدیداروں کے ساتھ جائزہ میٹنگ کی۔ جائزہ اجلاس میں ، چینی کی پیداوار ، گنے کے کاشتکاروں کے بقایا ادائیگیوں ، ایتھنول کی پیداوار اور دیگر متعلقہ امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ شری پاسوان نے عہدیداروں کو گنے کے کاشتکاروں کے بقایاجات کی بروقت ادائیگی کے لئے ضروری رہنما اصول جاری کرنے کی ہدایت کی۔ وزیر موصوف کو بتایا گیا کہ اس سال چینی کی پیداوار 270 ایل ٹی تک پہنچ جائے گی۔ حکومت کی جانب سے شوگر سیزن میں شوگر انڈسٹری کو مدد فراہم کرنے کے لئے مختلف اقدامات کیے گئے ہیں۔

قبائلیوں کے لئے آمدنی کی تخلیق سے متعلق سرگرمیوں میں تیزی، ریاستوں کے ذریعے ترمیم شدہ ایم ایف پی پر ایم ایس پی خریداری جاری

ریاستوں کی طرف سے حوصلہ افزا مثبت ردعمل سامنے آیا ہے کیونکہ حکومت کووڈ-19 کے وبائی امراض کے بعد غریب اور پسماندہ لوگوں کو اپنے پاؤں تلاش کرنے میں مدد کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔ 50 کروڑ ریاستوں نے اسکیم کے تحت خریداری کی ہے۔ مزید یہ کہ ان کوششوں کی وجہ سے ، 7 ریاستوں میں نجی ایجنسیوں نے ایم ایس پی سے اوپر کی قیمتوں پر 400 روپے سے زائد کی قیمتوں پر ایم ایف پی حاصل کی ہے۔ وزارت قبائلی امور کی وزارت کے ذریعہ ایم ایس پی اقدامات اور ایم ایس پیز میں نظر ثانی کا بروقت اعلان اور ان کا مقابلہ ٹرائفڈ کی کوششوں کا نتیجہ یہ نکلا ہے کہ قبائلیوں کو مارکیٹ میں زیادہ قیمت کا حصول ملا ہے ، ان شرحوں پر جو ایم ایس پی سے بھی زیادہ ہیں۔

بین الاقوامی یوم یوگ 2020 کا کرٹین ریزر یعنی تعارفی پروگرام 10 جون کو ڈی ڈی نیوز پر نشر کیا جائے گا

آیوش کی وزارت بین الاقوامی یوم یوگ 2020 کے کرٹین ریزر یعنی تعارفی پروگرام کی شکل میں ایک ٹیلی ویڑن پروگرام کی میزبانی مرارجی دیسائی نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف یوگا کے تعاون سے کرے گا، جسے 10 جون 2020 کو شام 7 بجے سے شام 8 بجے تک ڈی ڈی نیوز پر نشر کیا جائے گا۔ اسے آیوش کی وزارت سے فیس بک پیج پر بھی لائیو اسٹریم کیا جائے گا۔یہ تعارفی پروگرام بین الاقوامی یوم یوگ 2020 کے لئے 10 روزہ باقاعدہ الٹی گنتی کو ظاہر کرے گا۔

پی آئی بی فیلڈ دفاترسے ماخوذ

  • چندی گڑھ: ایڈمنسٹریٹر نے باشندوں سے اپیل کی کہ وہ باپو دھم کالونی کے رہائشیوں کو بدنام نہ کریں اور انہیں معاشرے میں ضم کرنے کے لئے مکمل مواقع فراہم کریں۔ انہوں نے محکمہ لیبر کو ہدایت کی کہ وہ یہ معاملہ نجی آجروں کے پاس اٹھائیں ، تاکہ ان کی زیر التوا اجرت ادا کی جاسکے اور ملازمت کے مواقع بڑھ جائیں۔
  • پنجاب: کوآئی ویڈ 19 کے مابین مزدوری کی کمی کے مسئلے سے نمٹنے کے لئے ، پنجاب کے کاشتکار رواں سال دھان کی روایتی پیوند کاری کے بجائے جوش و خروش سے ڈائریکٹ سیڈنگ آف رائس(ڈی ایس آر)میں تبدیل ہو رہے ہیں اور دھان کے نیچے کل رقبے کا تقریباً25فیصد توقع کی جا رہی ہے کہ اس جدید ٹکنالوجی کے تحت بوائی آسکتی ہے جو محنت اور پانی دونوں کے لحاظ سے کاشت کی لاگت کو کم کرنے میں معاون ہوگی۔ ڈی ایس آر کی ٹیکنالوجی کو فروغ دینے اور کسانوں کو بڑے پیمانے پر اپنانے کی ترغیب دینے کے لئے ، ریاست کے محکمہ زراعت اور کسان بہبود نے کسانوں کو 40 سے 50 تک سبسڈی پر 4000 ڈی ایس آر مشینیں اور 800 دھان ٹرانسپلانٹنگ مشینیں منظور کی ہیں۔
  • ہریانہ: ہریانہ کے کھیل اور نوجوانوں کے امور کے وزیر نے کہا ہے کہ اَن لاک-1 کے دوران ، ریاستی حکومت نے کچھ شرائط کے ساتھ کھیلوں کے اسٹیڈیموں کو دوبارہ کھولنے کی اجازت دی ہے ، اس دوران ذاتی فٹنس پر توجہ دی جائے گی اور معاشرتی دوری کے اصولوں پر عمل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست ہریانہ میں کھلاڑیوں اور کوچوں نے ایک بار پھر اپنے کھیلوں میں اپنے آپ کو پوری طرح غرق کردیا ہے اور ماضی میں ہونے والے نقصان کو پورا کرنے کے لئے تمام تر کوششیں کی جائیں گی۔
  • مہاراشٹر: پیر کو 2533 نئے کووڈ-19 واقعات رپورٹ ہوئے ہیں ، جس سے ریاست میں ریاست کی کورونا وائرس کے مثبت تعداد 88528 ہوچکا ہے ، ان میں سے 44374 ایکٹیو ہیں۔ ہاٹ سپاٹ ممبئی میں 1314 نئے انفیکشن کی اطلاع ملی، جس نے ممبئی میٹروپولیٹن ریجن میں کل کیس 49863 پر پہنچے۔ ریاست میں 3510 فعال کنٹین منٹ زون ہیں، جہاں 17895 اسکواڈوں نے 66.84 لاکھ افراد کی نگرانی مکمل کی ہے۔
  • گجرات: 19 اضلاع سے 477 نئے کووڈ-19کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں ، جس سے ریاست میں مثبت معاملات کی تعداد 20574 ہوچکی ہے ، ان میں سے 5309 فعال واقعات ہیں۔ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران 31 مریض اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ، جن میں اموات کی مجموعی تعداد 1280 ہوگئی ہے۔
  • راجستھان: آج ریاست میں کورونا وائرس کے مثبت تعداد 10876 ہوچکے ہیں ، جن میں سے 8117 مریض ٹھیک ہوگئے ہیں اور 246 دم توڑ چکے ہیں۔ محکمہ صحت نے روزانہ 25 ہزار کووڈ-19 ٹیسٹ کروانے کا ہدف حاصل کرلیا ہے۔ ریاست میں اب تک مجموعی طور پر 518000 نمونوں کی جانچ کی جاچکی ہے۔ فی الحال ریاست کے 15 اضلاع میں 25 مقامات پر کووڈ نمونے آزمائے جارہے ہیں۔ ریاستی وزیر صحت ڈاکٹر رگھو شرما نے بتایا کہ جلد ہی اس سہولت کو مزید 10 اضلاع تک بڑھایا جائے گا۔ ریاست میںکووڈ19 کی بازیابی کی شرح بھی بڑھ کر 74.6 فیصد ہوگئی ہے۔
  • مدھیہ پردیش: 237 نئےکووڈ19 واقعات رپورٹ ہوئے ہیں ، جس سے ریاست میں کورونا وائرس کے مثبت تعداد 9638 ہوچکا ہے ، جن میں سے 2688 سرگرم کیس ہیں اور اب تک 414 مریضوں کی موت ہوچکی ہے۔ مدھیہ پردیش کے کل 52 اضلاع میں سے ، اب تک 51 اضلاع میں کورونیو وائرس کے کیسز پائے جاچکے ہیں، لیکن 27 اضلاع میں کوئی نیا کووڈ-19 نہیں پایا گیا۔
  • چھتیس گڑھ: پیر کو تمام میں 104 نئے کووڈ-19 کے واقعات کی اطلاع ملی ہے ، جس سے ریاست میں کورونا وائرس کے مثبت تعداد 1197 ہوچکے ہیں ، جبکہ فعال کیسوں کی تعداد 885 ہے۔ پیر تک ریاست میں مجموعی طور پر 92598 ٹیسٹ کئے جاچکے ہیں۔
  • گوا: ریاستہ گوا میں 30 نئے کووڈ-19 واقعات رپورٹ ہوئے ہیں جن کی تعداد 330 ہوگئی ہے ، جن میں سے 263 فعال کیس ہیں اور ریاست میں اب تک 67 مریض بازیاب ہو چکے ہیں۔
  • کیرالہ: آج صبح ڈھائی مہینے سے زیادہ تالے بند رہنے کے بعد کیرل میں مالز ، ریستوراں اور عبادت گاہیں کھل گئیں۔ گرووور میں واقع بھگوان کرشن مندر سمیت متعدد مندر ، چند گرجا گھر اور مساجد عقیدت مندوں کے لئے کھول دی گئیں۔ ریاست میں مندروں کو دوبارہ کھولنے کے فیصلے پر وزارت داخلہ کے امور خارجہ وی. مرالدارن وزیر اعلی ٰپنارائی وجیان پر سختی سے اتر آئے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت دیوسووم بورڈ کے تحت مندروں کو دوبارہ کھولنے کے فیصلے کو واپس لے۔ تاہم ، دیوسووم کے وزیر کدکامپیلی سریندرن نے کہا کہ مذہبی رہنماو ¿ں سے بات چیت کے بعد مندر کھولے گئے تھے اور مرکزی حکومت کی ہدایتوں پر عمل کرنے کے علاوہ ، عبادت گاہوں میں تمام حفاظتی اقدامات کی سختی سے پیروی کی جاتی ہے۔ خلیج میں کووڈ-19کی وجہ سے مزید 200 کیرالیوں کی موت ہوچکی ہے۔ 200 افراد کی تعداد 200 ہوچکی ہے۔ ریاست میں گذشتہ روز 91 نئے معاملات اور ایک موت کی اطلاع ملی ہے، جس کی تعداد 16 ہوگئی ہے اور اس کی تعداد 1174 ہے۔
  • تمل ناڈو: مدورائی گورنمنٹ راجاجی اسپتال میں کنوسلیسینٹ پلازما ٹرائل شروع ہوگیا۔ ریاست نے کوڈ کی صورتحال کے تناظر میں تامل ناڈو میں کلاس 10 کے امتحانات منسوخ کردیئے ، حزب اختلاف نے اس اقدام کا خیرمقدم کیا۔ وزیر صحت نے ریاست میں بستر کی کمی پر افواہوں کا خاتمہ کیا۔ وزیر نے کہا کہ بحالی کی شرح 56 فیصد ہے اور اس وقت ریاست میں صرف 6 مریض وینٹی لیٹروں پر موجود ہیں۔ گزشتہ روز 1562 نئے کیس ، 528 بازیافت اور 17 اموات کی اطلاع ملی۔ چنئی سے 1149 مقدمات۔ کل معاملات: 33229 ، فعال مقدمات: 15413 ، اموات: 286 ، چھٹی ہوئی: 17527۔ چنئی میں ایکٹیوکیس 11817 ہیں۔
  • کرناٹک: محکمہ صحت اور خاندانی بہبود نے بین الملکی مسافروں کے لئے کرناٹک آنے والے مرحلہ وار دوبارہ کھولنے کے دوران پروٹوکول جاری کیا۔ کرناٹک میں داخلے سے قبل تمام مسافروں کے لئے سیواسندھو پورٹل پر خود اندراج اور داخلے کے مقامات پر آنے والے تمام افراد کی صحت کی اسکریننگ لازمی کردی گئی ہے۔ دریں اثنا ، اس نے کووڈ کے دوران رہائشی بہبود ایسوسی ایشن کے لئے رہنما اصول بھی جاری کیے ہیں۔ گذشتہ روز 308 نئے کیسز ، 387 خارج ہونے والے تین اموات کی اطلاع ملی۔ کل تک مثبت مثبت معاملات: 5760 ، فعال مقدمات: 3175 ، اموات: 64 ، بازیافت: 2519۔
  • آندھرا پردیش: وزیراعلیٰ نے لوگوں کو وقت کے ساتھ سرکاری اسکیموں کی فراہمی کا یقین دلایا۔ وزیراعلیٰ نے اسپندانہ پروگرام کا جائزہ لیا ، عہدیداروں کو ریت کے رسوں کو کھولنے کی ہدایت ٹالی ووڈ کا وفد فلموں کی شوٹنگ پر بات چیت کرنے کے لئے جلد ہی وزیر اعلیٰ وائی ایس جگن سے ملنے کے لئے وجئے واڑہ پہنچے گا۔ کل 125 نئے کیسز اور 34 ڈسچارج کی اطلاع ملی۔ کل تک کل مقدمات: 3843. فعال: 1381 ، بازیافت: 2387 ، اموات: 75۔
  • تلنگانہ: ریاستی حکومت نے تلنگانہ ہائی کورٹ کے مردہ لوگوں پر کورونا وائرس کے ٹیسٹ لینے کے حکم کے خلاف سپریم کورٹ میں منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کچھ دن پہلے ، ہائی کورٹ نے ریاستی حکومت کو تمام مرنے والوں کے ٹیسٹ لینے کی ہدایت کی تھی۔ 8 جون تک کووڈ-19 کے کل تصدیق شدہ واقعات 3742 ہیں۔ اب تک 448 تارکین وطن اور غیر ملکی واپس آنے والوں نے مثبت جانچ کی۔

 

http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/image006DBJ1.jpg

http://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image013L87U.jpg

******

م ن۔ ن ع

 (U: 3281)



(Release ID: 1631643) Visitor Counter : 11