امور صارفین، خوراک اور عوامی تقسیم کی وزارت

مرکز نے مشہور شخصیات، با اثر لوگوں اورورچوئل بااثرلوگوں کی صحت اور تندرستی کےلئے  اضافی رہنما خطوط جاری کئے


تصدیق شدہ میڈیکل پریکٹشنرز اور صحت اور فٹنس کے ماہرین اس بات کا انکشاف کریں کہ  وہ توثیق کرتے ہوئے  سرٹیفائڈ صحت / فٹنس ماہرین  اور میڈیکل پریکٹشنر ہیں

مشہور شخصیات، بااثر لوگوں اور ورچوئل بااثر لوگ خود کو صحت ماہرین یامیڈیکل پریکٹشنر کے طور پر پیش کررہے ہیں اور ان کے لئے واضح دست برداری فراہم  کرنا ضروری ہے

Posted On: 10 AUG 2023 2:03PM by PIB Delhi

صارفین کے امور، خوراک اور عوامی  نظام تقسیم کی وزارت کے تحت صارفین کے امور کے محکمے نے صحت اور تندرستی کے شعبے میں مشہور شخصیات، اثر و رسوخ رکھنے وا لوں اور ورچوئل طور پر اثر انداز کرنے والی شخصیتوں والوں کے لیے اضافی رہنما خطوط جاری کیے ہیں۔ یہ رہنما خطوط 9 جون 2022 کو جاری کیے گئے گمراہ کن اشتہارات اور گمراہ کن اشتہارات کی توثیق کے لیے رہنما خطوط، 2022 کی روک تھام کے لیے ایک اہم توسیع ہیں، اور ‘‘توثیق جاننے کے طریقے!’’ کے بدلے میں رہنمائی کرنے والا کتابچہ 20 جنوری 2023 کو جاری کیا گیا۔

مشہور شخصیات، با اثر لوگوں اورورچوئل بااثرلوگوں کی صحت اور تندرستی کےلئے  اضافی رہنما خطوط اس وقت تیار کئے گئے جب صحت کی وزارت ، آیوش کی وزارت ، خوراک کے تحفظ اور معیارات کی اتھارٹی (ایف ایس ایس اے آئی ) اوربھارت کی  ایڈورٹائزنگ اسٹینڈرڈز کونسل(اے ایس سی آئی )سمیت سبھی شراکت داروں کےسا تھ  تفصیلی بات چیت کی گئی۔

اضافی ہدایات کا مقصد گمراہ کن اشتہارات، غیر مصدقہ دعووں سے نمٹنا اور صحت اور تندرستی کی توثیق میں شفافیت کو یقینی بنانا ہے۔ رہنما خطوط کے تحت، تصدیق شدہ طبی پریکٹیشنرز اور صحت اور تندرستی کے ماہرین جن کی تسلیم شدہ اداروں سے توثیق کی گئی ہے۔ معلومات کا اشتراک کرتے وقت، مصنوعات یا خدمات کی تشہیر کرتے وقت یا صحت سے متعلق کوئی دعوی کرتے ہیں، یہ ظاہر کرنا ضروری ہے کہ وہ تصدیق شدہ صحت/فٹنس ماہرین اور طبی پریکٹیشنرز ہیں۔

مشہور شخصیات، اثر و رسوخ رکھنے والے اور ورچوئل متاثر کن افراد کوجو خود کو صحت کے ماہرین یا طبی پریکٹیشنرز کے طور پر پیش کرتے ہیں، معلومات کا اشتراک کرتے وقت، مصنوعات یا خدمات کی تشہیر کرتے ہوئے یا صحت سے متعلق کوئی دعوے کرتے وقت، دستبرداری کا واضح اعلان فراہم کرنا چاہیے، اس بات کو یقینی بناتے ہوئے کہ سامعین یہ سمجھتے ہیں کہ پیشہ ورانہ طبی مشورہ، تشخیص یا علاج کے لیے ان کی توثیق کو متبادل کے طور پر نہیں دیکھا جانا چاہیے۔

یہ انکشاف یا دستبرداری اس وقت ضروری ہے جب کھانے کی اشیاء اور غذائی اجزا سے حاصل ہونے والے فوائد، بیماریوں سے بچاؤ، علاج ، طبی حالات، صحت یابی کے طریقہ کار یا قوت مدافعت بڑھانے وغیرہ جیسے موضوعات پر بات کرتے یا دعوے کرتے ہیں۔اس انکشاف یا دستبرداری کو صحت سے متعلق دعوے کرنے کے کسی بھی موقع پر ظاہرکرنے یاپروموشن، توثیق کے دوران نمایاں کرنے چاہئیں۔

عام تندرستی اور صحت کے مشورے جیسے ‘پانی پئیں اور ہائیڈریٹڈ رہیں’، ‘باقاعدگی سے ورزش کریں اور جسمانی طور پر فٹ رہیں’، ‘بیٹھنے اور اسکرین کا وقت کم کریں’، ‘کافی اچھی نیند لیں’، ‘تیزی سے صحت یابی کے لیے ہلدی والا دودھ پیئے’، نقصان دہ یو وی شعاؤں سے بچنے کے لئے روزانہ‘سن اسکرین کا استعمال کریں'،بالوں کی بہتر نشوو نماکےلئے تیل لگائیں وغیرہ جیسی عام تندرستی اور صحت کے مشورے کومخصوص مصنوعات یا خدمات سے وابستہ نہیں ہیں یا صحت کے مخصوص حالات یا نتائج سے نشانہ نہیں بناتے ہیں، ان ضوابط سے مستثنیٰ ہیں۔

تاہم، ان مشہور شخصیات، اثر و رسوخ اور ورچوئل پر اثر انداز کرنے والوں کے لیے یہ ضروری ہے کہ وہ اپنے آپ کو صحت کے ماہرین یا طبی پریکٹیشنرز کے طور پر پیش کریں، اپنے ذاتی خیالات اور پیشہ ورانہ مشورے کے درمیان واضح طور پر فرق کریں اور ٹھوس حقائق کے بغیر صحت کے مخصوص دعوے کرنے سے گریز کریں۔ پیشہ ورانہ طبی مشورہ اور مصنوعات یا خدمات کے بارے میں مکمل معلومات حاصل کرنے کے لیے سامعین کو صحت کی دیکھ بھال کرنے والے پیشہ ور افراد سے مشورہ کرنے کی ہمیشہ حوصلہ افزائی کی جاتی ہے۔

ڈی او سی اے ان ہدایات کو فعال طور پر مانیٹر اور نافذ کرے گا۔ خلاف ورزیاں کنزیومر پروٹیکشن ایکٹ 2019 اور قانون کی دیگر متعلقہ دفعات کے تحت جرمانے کا باعث بن سکتی ہیں۔

محکمہ صارفین کے مفادات کے تحفظ اور ایک منصفانہ اور شفاف  مارکیٹ کو فروغ دینے کے لیے پرعزم ہے، خاص طور پر تیزی سے بااثر ڈیجیٹل اسپیس میں۔ یہ گائیڈ لائن صنعت کو مزید مضبوط کرے گی اور صارفین کے مفادات کا تحفظ کرے گی۔

نئی ہدایات پر مزید معلومات کے لیے، ملاحظہ کریں:

https://consumeraffairs.nic.in/sites/default/files/fileuploads/latestnews/Additional%20Influencer%20Guidelines%20for%20Health%20and%20Wellness%20Celebrities%2C%20Influencers%20and%20irftualence.

 

***

 

ش ح۔  ح ا ۔ ف ر

U. No. 8183



(Release ID: 1947414) Visitor Counter : 98