امور داخلہ کی وزارت

امور داخلہ اور امداد باہمی کے مرکزی وزیر جناب امت شاہ نے آج اتراکھنڈ کے دہرادون میں انڈو تبتی بارڈر پولیس (آئی ٹی بی پی) کے 62 ویں یوم تاسیس کی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کیا


جناب امت شاہ نے ناقابل رسائی علاقوں میں واقع بی او پیز پر سبزیوں، ادویات اور دیگر ضروری اشیاء کی سپلائی کے لیے فوجیوں اور ڈرون کے لیے سیلف سسٹین ایبل انرجی بلڈنگ (ایس ایس ای بی) کا افتتاح کیا، وزیر داخلہ نے آئی ٹی بی پی کے 147 شہیدوں پر فلپ بک بھی لانچ کی

ہندوستان کے 130 کروڑ عوام دل سے بہادر سپاہیوں کی قربانی، ایثار، ہمت اور بہادری کا احترام کرتے ہیں

آئی ٹی بی پی کے ہِم ویروں نے ’شوریہ‘، ’درڑھتا‘ اور ’کرم نشٹھا‘ کے نصب العین کے ساتھ ہندوستان کی ناقابل رسائی سرحدوں کی حفاظت کے لیے کام کیا ہے

جب تک ہمارے فوجی سرحد پر تعینات ہیں، کوئی ہندوستان کی ایک انچ زمین پر بھی قبضہ نہیں کرسکتا

فوج کی طرز پر مودی حکومت نے بھی سی اے پی ایف کے لیے ہوائی اور ریل سفر میں کوٹہ کی سہولت شروع کی

مودی حکومت نے سرحد پر سڑکیں اور بی او پی بنانے، فوجیوں کو سہولیات فراہم کرنے اور گاؤں کو آرام دہ بنانے کے لیے اخراجات میں تین گنا اضافہ کیا ہے

مودی حکومت سرحدی دیہاتوں کو پہلے نمبر کا گاؤں بنا کر انہیں زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہے

دیوالی کے موقع پر جب ہم وطن اپنے گھروں میں دِیا جلاتے ہیں تو وہ سرحد پر تعینات ہمارے بہادر فوجیوں کے لیے بھی دِیا جلاتے ہیں

Posted On: 10 NOV 2023 5:47PM by PIB Delhi

امور داخلہ اور امداد باہمی کے مرکزی وزیر جناب امت شاہ نے آج اتراکھنڈ کے دہرادون میں انڈو تبتی بارڈر پولیس (آئی ٹی بی پی) کے 62 ویں یوم تاسیس کی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کیا۔ جناب امت شاہ نے ناقابل رسائی علاقوں میں واقع بی او پیز (بارڈر آبزرویشن پوسٹس) پر سبزیوں، ادویات اور دیگر ضروری اشیاء کی سپلائی کے لیے سپاہیوں اور ڈرونز کے لیے سیلف سسٹین ایبل انرجی بلڈنگز (ایس ایس ای بی) کا ای-افتتاح کیا۔ وزیر داخلہ نے آئی ٹی بی پی کے 147 شہیدوں پر تیار کی گئی فلپ بک کا بھی اجرا کیا۔ اس موقع پر اتراکھنڈ کے وزیر اعلیٰ پشکر سنگھ دھامی اور آئی ٹی بی پی کے ڈائریکٹر جنرل سمیت کئی معززین موجود تھے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0014XP8.jpg

جناب امت شاہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ دیوالی کے موقع پر جب ہم وطن اپنے گھروں میں دِیے جلاتے ہیں تو وہ سرحد پر تعینات ہمارے بہادر سپاہیوں کے لیے بھی دِیے جلاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے 130 کروڑ عوام دل سے بہادر سپاہیوں کی قربانی، ایثار، جرأت اور بہادری کا احترام کرتے ہیں۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ ملک کے لوگ سکون کی نیند سوتے ہیں، کیونکہ ہمارے بہادر سپاہی اپنی زندگی کے سنہرے سال سرحدوں پر ملک کی حفاظت کے لیے وقف کرتے ہیں۔ جناب شاہ نے کہا کہ ہِم ویروں کی قربانی، خدمت اور ایثار انمول ہے اور پورا ملک اسے سلام کرتا ہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002LW8M.jpg

مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ آج آئی ٹی بی پی کا یوم تاسیس ہے اور ہمارے ہِم ویروں نے شوریہ، درڑھتا اور کرم نشٹھا یعنی بہادری، عزم اور لگن کےنصب العین کے ساتھ ہندوستان کی ناقابل رسائی سرحدوں کی حفاظت کے لیے گزشتہ 62 سالوں سے کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ آئی ٹی بی پی کی روایت رہی ہے کہ وہ چوکس رہے اور منفی 45 ڈگری درجہ حرارت میں ملک کی اگلی سرحدوں کی حفاظت کرے اور ضرورت پڑنے پر حتمی قربانی دینے سے باز نہ آئے۔ جناب شاہ نے کہا کہ آئی ٹی بی پی، جس کا آغاز 62 سال پہلے 7 ڈویژنوں کے ساتھ ہوا تھا، آج ایک لاکھ ہِم ویروں، 60 ڈویژنوں، 17 تربیتی مراکز، 16 سیکٹرز، 5 فرنٹیئرز اور 2 کمانڈ ہیڈ کوارٹرز کے ساتھ ایک مضبوط قوت کے طور پر ابھرا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی قیادت میں، ہِم ویروں کے مطالبے کو ذہن میں رکھتے ہوئے، مرکزی حکومت نے فوج کی طرز پر ہی ملک کی سنٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایف) کے لیے ایئر اور ریل کوٹہ مقرر کیا ہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image003F8MX.jpg

جناب امت شاہ نے کہا کہ آج یہاں کئے گئے بہت سے نئے اقدامات میں سیلف سسٹین ایبل انرجی بلڈنگ (ایس ایس ای بی) بہت خاص ہے، کیونکہ 17,000 فٹ کی بلندی پر بنی یہ عمارت سرد صحرا میں خود کفیل ہندوستان کی علامت بن جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ عمارت ملک کے وزیر اعظم جناب نریندر مودی اور حکومت ہند کی وزارت داخلہ کی طرف سے دیوالی کا ایک منفرد تحفہ ہے۔ جناب شاہ نے کہا کہ جب باہر کا درجہ حرارت صفر سے نیچے 40-45 ڈگری تک گر جاتا ہے اور پٹرول یا ڈیزل کا استعمال نہیں کیا جا سکتا، تو یہ عمارت 18-19 ڈگری کے درجہ حرارت میں فوجیوں کو محفوظ رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ عمارت صرف 2 ماہ میں مکمل ہوئی ہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image004U7DK.jpg

امور داخلہ اور امداد باہمی کے مرکزی وزیر  نے کہا کہ اونچائی اور دشوار گزار علاقوں میں واقع بی او پی (سرحدی معائنہ چوکی) پر سبزیوں، ادویات اور دیگر ضروری رسد کی اشیاء کی فراہمی کے لیے ڈرون کے استعمال کا خیال وزیر اعظم مودی نے ہم سب کے سامنے رکھا تھا ۔  انہوں نے کہا کہ اس وژن کو عملی جامہ پہناتے ہوئے پہلا ڈرون آج 15 کلو ادویات اور سبزیاں لے کر دور دراز کے علاقے میں پہنچا ہے، یہ ایک بڑا قدم ہے ۔  انہوں نے کہا کہ آج شروع ہونے والی ڈرون سروس نہ صرف ہمارے ہم ویروں بلکہ سرحد پر واقع دیہات کے لوگوں کے لیے بھی فائدہ مند ثابت ہوگی ۔  جناب شاہ نے کہا کہ دور دراز علاقوں میں سیکورٹی کو برقرار رکھنے کے لیے خلا کو پُر کرنا بہت ضروری ہے اور ان خالی جگہوں کی وجہ سے کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔  انہوں نے کہا کہ حال ہی میں وزارت داخلہ کی پہل پر وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے بھارت تبت سرحدی پولیس (بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی ) کی 7 بٹالین کو منظوری دی ہے اور بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )کے قیام کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ ایک ساتھ 7 بٹالین کو منظوری دی گئی ہے اور 7 بٹالینوں میں سے 4  بٹالین کو جلد ہی تعینات کیا جائے گا۔ جناب شاہ نے کہا کہ یہ 7 بٹالین اور 1 سیکٹر ہیڈ کوارٹر زتقریباً 3000 کروڑ روپے کی لاگت سے بنائے جائیں گے ۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image005WHWS.jpg

جناب امت شاہ نے کہا کہ بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )شوریہ، دریدھاتا اور کرم نیشٹھا کے لیے جانا جاتا ہے ۔  انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے پاس 7516 کلومیٹر طویل ساحلی پٹی اور 15000 کلومیٹر سے زیادہ زمینی سرحد ہے ۔  انہوں نے کہا کہ ہندوستان کی زمینی سرحدیں 7 ممالک کے ساتھ ملتی ہیں اور ہمالیہ کے علاقے میں سرحدوں کی حفاظت کی ذمہ داری بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )کو دی گئی ہے ۔  انہوں نے کہا کہ ہمارے بہادر ہم ویروں نے مشکل ترین علاقوں میں سرحدوں کی بہترین طریقے سے حفاظت کی ہے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )نے اپنی 6 دہائیوں کی مسلسل خدمات میں 7 پدم شری، 2 کیرتی چکر، 6 شوریہ چکر، 19 صدر کے پولیس میڈل، 14 تینزنگ نورگے ایڈونچر میڈل اور دیگر بہت سے تمغے حاصل کیے ہیں، جو ان کی بہادری اور قربانی کی علامت ہیں ۔   انہوں نے کہا کہ جب تک ہمارے بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )اور فوج کے جوان سرحد پر تعینات ہیں، کوئی بھی ہندوستان کی ایک انچ زمین پر بھی قبضہ نہیں کر سکتا ۔  انہوں نے کہا کہ اب  ویرانگنائیں بھی ملک کی سرحدوں کی حفاظت میں کندھے سے کندھا ملا کر کام کر رہی ہیں ۔  مرکزی وزیر داخلہ نے ایسے دور افتادہ علاقے میں ملک کی سرحدوں کی حفاظت میں تعینات ہیم ویرانگناؤں کو خصوصی طور پر مبارکباد دی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image006HK8U.jpg

امور داخلہ کے مرکزی وزیر نے کہا کہ کھیلوں کے میدان میں بھی بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )کی شراکت میں کافی اضافہ ہوا ہے جو کہ قابل تعریف ہے ۔  اس کے علاوہ، ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنی کوششوں میں، بھارت تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی )نے دور دراز علاقوں میں 36 لاکھ سے زیادہ پودے لگائے ہیں ۔  انہوں نے تمام فوجیوں سے کہا کہ وہ اپنے آپ کو درختوں سے جوڑیں جس سے نہ صرف ان کے ذہنوں میں بہت بڑی تبدیلی اور حساسیت آئے گی بلکہ درختوں کی پرورش کے ساتھ یہ وابستگی فوجیوں کے ذہنوں میں بھی بڑی تبدیلی لائے گی ۔  جناب شاہ نے کہا کہ یہ 36 لاکھ پودے 5 سالوں میں بڑے درخت بن جائیں گے اور ملک کے ساتھ ساتھ پوری دنیا کے ماحول کو بھی صاف کریں گے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ حال ہی میں وزیر اعظم مودی نے درخشاں گاؤں  پروگرام کے ذریعے ملک کے سامنے ایک نیا تصور پیش کیا ہے ۔  پہلے سرحد پر واقع گاؤں کو ملک کا آخری گاؤں کہا جاتا تھا، لیکن وزیر اعظم مودی نے وہاں جا کر کہا کہ یہ آخری گاؤں نہیں، بلکہ ملک کا پہلا گاؤں ہے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم مودی جی نے نہ صرف سرحد پر واقع دیہات کی آبادی کو برقرار رکھنے بلکہ اسے بڑھانے اور ملک کے دیگر حصوں کی طرح سہولیات فراہم کرنے کے نقطہ نظر کے ساتھ درخشاں گاؤں پروگرام شروع کیا ہے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ اس پروگرام کے پہلے مرحلے میں مودی حکومت نے 4800 کروڑ روپے کے بجٹ کے ساتھ 19 اضلاع کے 46 بلاکوں کے 662 دیہاتوں کے لیے بجلی، سڑکیں، روزگار، ہنرمندی کی ترقی، تعلیم اور صحت کو ہموار کرنے کا کام کیا ہے ۔

جناب امت شاہ نے کہا کہ ملک کی سرحدوں کی حفاظت ہیم ویروں کی ذمہ داری ہے، لیکن اگر یہ سرحدی گاؤں خالی ہو جاتے ہیں تو اس کام میں بہت سی پریشانیاں ہوں گی ۔  انہوں نے کہا کہ جہاں بھی ہمارے سی اے پی ایف تعینات ہیں، ہمیں انہیں ترقیاتی کاموں کے لیے نوڈل ایجنسی کے طور پر قبول کرنا چاہیے اور تمام سہولیات دیہات تک پہنچنے کو یقینی بنانے کے لیے کام کیا جانا چاہیے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ آنے والے سال میں 168 غیر منسلک دیہاتوں کو سڑکوں، بجلی، ٹیلی مواصلات اور صحت کی خدمات سے جوڑ دیا جائے گا ۔  مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ سرحدوں پر سہولیات کی ترقی کے بغیر ملک محفوظ نہیں رہ سکتا ۔  انہوں نے کہا کہ 2014 سے پہلے بھارت -چین سرحدی سہولیات کی ترقی پر اوسطاً 4,000 کروڑ روپے سالانہ خرچ ہوتا تھا، لیکن وزیر اعظم مودی کی قیادت میں پچھلے 9 سال میں اسے بڑھا کر 12,340 کروڑ روپے سالانہ کر دیا گیا ہے ۔  انہوں نے کہا کہ حکومت ہند نے سرحد پر سڑکیں بنانے، بی او پی بنانے، جوانوں کے لیے سہولیات کو یقینی بنانے اور دیہاتوں کو سہولیات فراہم کرنے کے لیے اخراجات میں تین گنا اضافہ کیا ہے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ مودی حکومت نے اس دشوار گزار علاقے میں 350 سے زیادہ پل اور کلورٹ تعمیر کئے ہیں ۔  انہوں نے کہا کہ حکومت نے پچھلے 9 سال میں فوجیوں کی فلاح و بہبود کے لیے کئی اسکیمیں شروع کی ہیں ۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image00736QP.jpg

جناب امت شاہ نے کہا کہ  وزیراعظم مودی کی قیادت میں پچھلے 9 سال میں ملک کی داخلی سلامتی کی صورتحال میں کافی تبدیلی آئی ہے ۔  کشمیر سے  دفعہ 370  کی منسوخی کے بعد ہم دہشت گردی پر مکمل کنٹرول حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں ۔  اموات میں 72 فیصد کمی آئی ہے ۔  بائیں بازو کی انتہا پسندی میں 80 فیصد کی  کمی آئی ہے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ جناب مودی کی قیادت میں ملک کی اندرونی سلامتی کا منظر نامہ بہت مضبوط ہو رہا ہے اور ہمارے ہیم ویر سرحدوں کی حفاظت کا خیال رکھ رہے ہیں ۔  انہوں نے کہا کہ آزادی کا امرت ورش ابھی ختم ہوا ہے اور آزادی کے امرت کال کے دوران ہم سب کو 2047 تک ہندوستان کو دنیا کے ہر میدان میں پہلا بنانے کا عزم کرنا ہے ۔  جناب شاہ نے کہا کہ ہمیں 2047 تک ہندوستان کو ایک  ایسا ملک بنانا ہے،  جو ہر میدان میں دنیا کی قیادت کرے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔ م م ۔ م ع۔ م ر۔ ت ح

Urdu No. 908



(Release ID: 1976233) Visitor Counter : 104