امور صارفین، خوراک اور عوامی تقسیم کی وزارت

پارلیمنٹ نے ضروری اشیا سے متعلق ترمیمی بل 2020 کو منظوری دی

یہ بل نہ صرف کسانوں بلکہ صارفین اور سرمایہ کاروں کے لئے بھی مثبت ماحول قائم کرے گا:

دانوے راؤ صاحب داداراؤ

Posted On: 22 SEP 2020 1:22PM by PIB Delhi

نئی دہلی،  22 ؍ستمبر 2020: ضروری اشیا (ترمیمی ) بل 2020 کو آج راجیہ سبھا نے منظوری دےدی ہے، جس میں موٹے اناج ،دالوں ،تلہن ،خوردنی تیل، پیاز اور آلو کو ضروری اشیا کی فہرست سے ہٹانے کی گنجائش ہے۔اس سے پہلے صارفین کے امور ،خوراک اور تقسیم عامہ کے مرکزی وزری مملکت جناب دانوے راؤ صاحب دادادراؤ نے 14ستمبر 2020  کو یہ بل لوک سبھا میں  پیش کیا تھا جس کا مقصد5 جون 2020 کو جاری کئے گئے آرڈی ننس  کی جگہ بل کو منظوری دیناتھا ۔اس بل کو 15ستمبر 2020 کو لوک سبھا نے منظوری دے دی تھی۔

ضروری اشیا (ترمیمی ) بل 2020 کا مقصد پرائیویٹ سرمایہ کاروں میں ان کے کاروباری لین دین میں زیادہ ریگولیٹری مداخلت کے خوف کو  ختم کرنا ہے۔ان اشیا کی پیداوار ،ذخیرہ اندوزی ،نقل وحمل ،تقسیم کاری اور سپلائی کی آزادی سے بڑی معیشتوں کو راغب کرنے اورزراعت کے سیکٹر میں پرائیویٹ سیکٹر / براہ راست بیرونی سرمایہ کاری کو راغب کرنے میں مدد  ملے گی۔اس سے کولڈ اسٹوریج اور خوراک کی سپلائی چین کو جدید بنانے   میں سرمایہ کاری میں مدد ملے گی۔

حکومت نے ریگولیٹری ماحول میں نرمی کرتے ہوئے اس بات کو بھی یقینی بنایا ہے کہ صارفین کے مفادات کا تحفظ کیا جاسکے ۔ ترمیم میں  اس بات کی گنجائش رکھی گئی ہے کہ جنگ ،قحط ،قیمتوںمیں غیر معمولی اضافے اور قدرتی آفات جیسے صورتحال میں  ان زرعی اشیا کو منضبط کیا جاسکتا ہے۔البتہ ایک ویلیو چین کے شراکتدار اور برآمد کار کی برآمداتی مانگ  اس طرح کی اسٹاک لمٹ سے مستثنی رہیں گے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ زراعت میں سرمایہ کاری کی حوصلہ شکنی نہ ہو۔

صارفین کے امور خوراک اور تقسیم عامہ کے وزیر مملکت  جناب دانوے راؤ صاحب دادا راؤ نے آج راجیہ سبھا میں  بل کی منظوری سے پہلے اس پر بحث کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ ترمیم اسٹوریج سہولیات کی کمی کی وجہ سے زرعی پیداوار  کے زیاں  کو روکنے کے لئے  ضروری ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ ترمیم نہ صرف کسانوں کے لئے بلکہ صارفین  اور سرمایہ کاروں کے لئے بھی  ایک مثبت ماحول پیداکرے گی اور اس سے یقیناََ ہمارا ملک خودکفیل بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ترمیم زراعت کے سیکٹر میں  مجموعی سپلائی چین کے نظام کو مستحکم کریں گے۔یہ ترمیم زراعت کے سیکٹر میں سرمایہ کاری کو فروغ دے کر اور کاروبار میں آسانی کو فروغ دے کر کسانوں کی آمدنی کو دوگنا کرنے کے حکومت کے وعدے کو حاصل  کرنے میں  مدد کرے گی۔

 

 

*************

  م ن۔ وا۔رم

(22-09-2020)

U- 5722



(Release ID: 1657701) Visitor Counter : 15