وزیراعظم کا دفتر

وزیر اعظم نے مدھیہ پردیش کے جھبوا میں تقریبا 7300 کروڑ روپے کے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا اور قوم کے نام وقف کیا


بے حد پسماندہ قبائل کی خواتین مستفیدین کو آہار انودان کی ماہانہ قسط ادا کی گئی

سوامیتوا اسکیم کےمستفیدین کو 1.75لاکھ ادھیکار ابھیلیکھ تقسیم کیے گئے

پردھان منتری آدرش گرام یوجنا کے تحت 559 گاؤوں کے لیے 55.9 کروڑ روپئے کی منتقلی کی گئی

پردھان منتری آدرش گرام یوجنا کے تحت رتلام اور میگھنگر ریلوے اسٹیشن کی تعمیر نو کے لیے سنگ بنیاد رکھا گیا

سڑک، ریل، بجلی اور پانی کے شعبوں سے متعلق متعدد پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا گیا

Posted On: 11 FEB 2024 7:07PM by PIB Delhi

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج مدھیہ پردیش کے جھبوا میں تقریبا 7300 کروڑ روپئے کی لاگت کے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا۔ آج کے ان ترقیاتی پروجیکٹوں سے علاقے کی اہم آدیواسی آبادی کو فائدہ ہوگا، پانی کی فراہمی اور پینے کے پانی کی فراہمی کو استحاکم ملے گا، جبکہ مدھیہ پردیش میں سڑک، ریل، بجلی اور تعلیم کے شعبوں کو بھی فروغ ملے گا۔ وزیر اعظم نے بے حد پسماندہ قبائل سے تعلق رکھنے والی تقریبا 2 لاکھ خواتین مستفیدین کو آہار انودن کی ماہانہ قسط تقسیم کی، سوامتوا اسکیم کے فائدہ اٹھانے والوں میں 1.75 لاکھ ادھیکار ابھیلیکھ تقسیم کیے اور پردھان منتری آدرش گرام یوجنا کے تحت 559 گاؤوں کے لیے 55.9 کروڑ روپے منتقل کیے۔

انتیودیا کا وژن وزیر اعظم کے ذریعہ کیے گئے اقدامات کے لیے رہنما رہا ہے۔ اس بات کو یقینی بنانا کہ ترقی کے فوائد قبائلی برادری تک پہنچیں، جن میں سے ایک بڑا طبقہ آزادی کے کئی دہائیوں بعد بھی ان فوائد کو حاصل نہیں کرسکا تھا۔ وزیر اعظم نے متعدد اقدامات کا سنگ بنیاد رکھا جن سے خطے کی قابل ذکر قبائلی آبادی کو فائدہ پہنچے گا۔

وزیر اعظم نے آہار انودان یوجنا کے تحت آہار انودان کی ماہانہ قسط تقریبا دو لاکھ خواتین مستفیدین کو تقسیم کی۔ اس اسکیم کے تحت مدھیہ پردیش کے مختلف خاص طور پر پسماندہ قبائل کی خواتین کو غذائیت سے بھرپور غذا کے لیے 1500 روپے ماہانہ فراہم کیے جاتے ہیں۔

وزیر اعظم نے سوامتوا اسکیم سے مستفید ہونے والوں میں 1.75 لاکھ ادھیکار ابھیلیکھ تقسیم کیے۔ یہ لوگوں کو ان کی زمین کے حق کے لیے دستاویزی ثبوت فراہم کرے گا۔

انھوں نے پردھان منتری آدرش گرام یوجنا کے تحت 559 گاؤوں کے لیے 55.9 کروڑ روپے بھی منتقل کیے۔ اس رقم کا استعمال آنگن واڑی بھون، فیئر پرائس شاپس، صحت مراکز، اسکولوں میں اضافی کمرے اور اندرونی سڑکوں سمیت مختلف قسم کی تعمیراتی سرگرمیوں کے لیے کیا جائے گا۔

وزیر اعظم نے جھبوا میں 'سی ایم رائز اسکول' کا سنگ بنیاد رکھا۔یہ  اسکول طلبہ کو اسمارٹ کلاسز ، ای لائبریری وغیرہ جیسی جدید سہولیات فراہم کرنے کے لیے ٹکنالوجی کو مربوط کرے گا۔ انھوں نے تانتیہ ماما بھیل یونیورسٹی کا سنگ بنیاد بھی رکھا جو ریاست کے آدیواسی اکثریتی اضلاع کے نوجوانوں کی ضروریات کو پورا کرے گی۔

وزیر اعظم نے مدھیہ پردیش میں پانی کی فراہمی اور پینے کے پانی کی فراہمی کو مستحکم بنانے والے متعدد پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا اور قوم کے نام وقف کیا ۔ جن پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا ان میں 'تلاواڑہ پروجیکٹ' شامل ہے جو دھار اور رتلام کے ایک ہزار سے زیادہ گاؤوں کے لیے پینے کے پانی کی فراہمی کی اسکیم ہے۔ اٹل مشن برائے احیاء و شہری تبدیلی (امروت) 2.0 کے تحت 14 شہری پانی کی فراہمی کی اسکیمیں، جس سے مدھیہ پردیش کے متعدد اضلاع میں 50 ہزار سے زیادہ شہری کنبوں کو فائدہ پہنچا ہے۔ انھوں نے جھبوا کی 50 گرام پنچایتوں کے لیے 'نل جل یوجنا' کو بھی قوم کے نام وقف کیا جس سے تقریبا 11 ہزار کنبوں کو نل کا پانی فراہم کیا جائے گا۔

وزیر اعظم نے اس پروگرام کے دوران متعدد ریل پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا اور قوم کے نام وقف کیا ۔ ان میں رتلام ریلوے اسٹیشن اور میگھناگر ریلوے اسٹیشن کی تعمیر نو کے لیے سنگ بنیاد رکھنا شامل ہے۔ امرت بھارت اسٹیشن اسکیم کے تحت ان اسٹیشنوں کو دوبارہ تعمیر کی جائے گی۔ قوم کے نام وقف کیے گئے ریل پروجیکٹوں میں اندور- دیواس- اجین سی کیبن ریلوے لائن کو دوہرا کرنے کے منصوبے شامل ہیں۔ اٹارسی - شمالی - جنوبی گریڈ جداکار جس میں یارڈ ری ماڈلنگ شامل ہے۔ اور تیسری لائن برکھیرا- بڈنی-اٹارسی کو جوڑتی ہے۔ ان منصوبوں سے ریل کے بنیادی ڈھانچے کو مضبوط بنانے اور مسافر اور مال بردار ٹرینوں دونوں کے لیے سفر کے وقت کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔

وزیر اعظم نے مدھیہ پردیش میں 3275 کروڑ روپے سے زیادہ مالیت کے متعدد سڑک ترقیاتی پروجیکٹوں کو قوم کے نام وقف کیا جس میں این ایچ 47 کے ہردا-بیتول (پیکیج-1) کو کلومیٹر 0.00 سے کلومیٹر 30.00 (ہردا-ٹیماگاؤں) تک چار لین بنانا بھی شامل ہے۔ این ایچ 752 ڈی کا اجین دیواس سیکشن۔ این ایچ 47 کے اندور-گجرات ایم پی بارڈر سیکشن کو چار لین (16 کلومیٹر) اور این ایچ -47 کے چیچولی-بیتول (پیکیج -3) ہردا-بیتول کو چار لین کا بنانا، اور این ایچ 552 جی کے اجین جھالاوار سیکشن کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ ان منصوبوں سے سڑک رابطے میں بہتری آئے گی اور خطے میں اقتصادی ترقی میں بھی مدد ملے گی۔

اس کے علاوہ انھوں نے دیگر ترقیاتی پہل جیسے ویسٹ ڈمپ سائٹ ریمیڈیایشن اور الیکٹرک سب اسٹیشن کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔

وزیراعظم کے ساتھ مدھیہ پردیش کے گورنر منگو بھائی سی پٹیل، مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی ٰ جناب موہن یادو اور قبائلی امور کے مرکزی وزیر جناب ارجن منڈا اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

***

(ش ح – ع ا – ع ر)

U. No. 4820

 



(Release ID: 2005070) Visitor Counter : 54