وزارت آیوش

حکومت نے ہندوستانی نظام طب کے تحت علاج کے خواہاں غیر ملکی شہریوں کے لیے آیوش ویزا کا ایک نیا زمرہ متعارف کرایا


آیوش ویزا کا زمرہ ہندوستانی روایتی ادویات کو عالمی رجحان بنانے کے وزیر اعظم کے وژن کو تقویت دے گا: آیوش کے مرکزی وزیر

Posted On: 02 AUG 2023 4:50PM by PIB Delhi

وزارت داخلہ، حکومت ہند نے آیوش سسٹم/ ہندوستانی نظام طب کے تحت علاج کے لیے غیر ملکی شہریوں کے لیے آیوش (اے وائی) ویزا کی ایک نئی قسم  تشکیل دیے جانے کے بارے میں  مطلع کیا ہے۔ آیوش ویزا کا تعارف آیوش سسٹمز/ہندوستانی نظام طب جیسے علاج کی دیکھ بھال، تندرستی اور یوگا کے تحت علاج کے لیے ہندوستان آنے والے غیر ملکیوں کے لیے خصوصی ویزا اسکیم متعارف کرانے کی تجویز کو پورا کرتا ہے۔

ایک نیا باب یعنی باب اے 11 – آیوش ویزا کو باب 11 کے بعد شامل کیا گیا ہے – ویزا مینوئل کے میڈیکل ویزا، جو ہندوستانی نظام طب کے تحت علاج سے متعلق ہے اور اسی کے مطابق ویزا مینول، 2019 کے مختلف ابواب میں ضروری ترامیم کی گئی ہیں۔

آیوش اور بندرگاہوں، جہاز رانی اور آبی گزرگاہوں کے مرکزی وزیر جناب سربانند سونووال نے کہا، ‘‘آیوش سسٹم/ ہندوستانی نظام طب کے تحت علاج کے خواہاں غیر ملکی شہریوں کے لیے آیوش (اے وائی) ویزا کے نئے زمرے کی تشکیل ایک اہم قدم ہے۔ یہ ہندوستان میں طبی قدر کے سفر کو فروغ دے گا۔ یہ اقدام ہندوستانی روایتی ادویات کو ایک عالمی رجحان بنانے کے لیے ہمارے وزیر اعظم جناب نریندر مودی کے وژن کو پورا کرنے کے لیے ہماری کوشش کو تقویت دے گا۔ میں جناب امت شاہ، مرکزی وزیر داخلہ، حکومت ہند کی خصوصی آیوش ویزا کیٹیگری بنانے میں ان کی کوششوں کی بھی تعریف کرنا چاہتا ہوں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے اپریل 2022 میں گجرات کے گاندھی نگر میں گلوبل آیوش انویسٹمنٹ اینڈ انوویشن سمٹ (جی اے آئی آئی ایس) میں آیوش تھراپی کے حصول کے لیے ہندوستان جانے والے غیر ملکی شہریوں کو سہولت فراہم کرنے کے لیے ایک خصوصی آیوش ویزا زمرہ بنانے کا اعلان کیا تھا۔

آیوش ویزا کے اس زمرہ کا تعارف حکومت کی ہیل ان انڈیا پہل کے لیے ہندوستان کے روڈ میپ کا حصہ ہے، جس کا مقصد ہندوستان کو طبی قدر کے سفر کی منزل کے طور پر فروغ دینا ہے۔ آیوش کی وزارت اور صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت بھارت کو دنیا کے طبی سیاحتی مقام کے طور پر فروغ دینے کے لیے ون اسٹاپ ہیل ان انڈیا پورٹل کو تیار کرنے کے لیے مل کر کام کر رہی ہے۔

حالیہ برسوں میں ہندوستان میں طبی قدر کے سفر میں نمایاں اضافہ دیکھا گیا ہے۔ گلوبل ویلنیس انسٹی ٹیوٹ (جی ڈبلیو آئی) کی رپورٹ ‘دی گلوبل ویلنیس اکانومی: کووِڈ سے آگے کی تلاش’ کے مطابق، عالمی فلاح و بہبود کی معیشت 9.9 فیصد سالانہ کی شرح سے ترقی کرے گی۔ آیوش پر مبنی صحت کی دیکھ بھال اور فلاح و بہبود کی معیشت میں  2025 تک 70 بلین ڈالر تک اضافہ ہونے کا امکان ہے۔

آیوش کی وزارت قومی اور عالمی سطح پر آیوش نظام علاج کو فروغ دینے کے لیے کئی محاذوں پر کام کر رہی ہے۔ حال ہی میں، انڈیا ٹورازم ڈیولپمنٹ کارپوریشن (آئی ٹی ڈی سی)، وزارت سیاحت، حکومت ہندکے ساتھ ایک مفاہمت  نامے پر دستخط کیے گئے ہیں تاکہ آیوروید اور دیگر روایتی نظام طب میں طبی قدر کے سفر کے فروغ کے لیے مل کر کام کیا جا سکے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔ق ت۔ع ن

(U: 7878)



(Release ID: 1945108) Visitor Counter : 116