جل شکتی وزارت

راشٹریہ پرسکار پورٹل (www.awards.gov.in) پر چوتھے قومی واٹر ایوارڈز کا آغاز کیا گیا


درخواست جمع کرانے کی آخری تاریخ 15 ستمبر 2022 ہے

​​​​​​​نیشنل واٹر ایوارڈز 'جل  سمردھ بھارت' کو پورا کرنے میں ملک بھر میں مثالی کام اور کوششوں کو تسلیم کرتے ہیں اور ان کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں

Posted On: 05 AUG 2022 2:03PM by PIB Delhi

آبی وسائل، دریا کی ترقی اور گنگا کی بحالی کے محکمے، جل شکتی کی وزارت نے راشٹریہ پرسکار پورٹل پر چوتھے قومی آبی ایوارڈز کا آغاز کیا ہے۔ تمام درخواستیں صرف آن لائن راشٹریہ پرسکار پورٹل ( www.awards.gov.in ) کے ذریعے موصول کی جائیں گی۔ عام لوگ مزید تفصیلات کے لیے اس پورٹل یا اس محکمہ کی ویب سائٹ (www.jalshakti-dowr.gov.in) سے رجوع کر سکتے ہیں۔

درخواست جمع کرانے کی آخری تاریخ 15 ستمبر 2022 ہے ۔

ایوارڈز کے لیے اہلیت:

کوئی بھی ریاست، ضلع، گاؤں پنچایت، شہری مقامی ادارہ، میڈیا، اسکول، ادارہ، صنعت، غیر سرکاری تنظیم، یا واٹر یوزر ایسوسی ایشن جس نے پانی کے تحفظ اور انتظام کے میدان میں مثالی کام کیا ہے وہ درخواست دینے کے اہل ہیں۔

ٹرافی اور توصیف :

زمرہ جات کے لیے - 'بہترین ریاست' اور 'بہترین ضلع'، فاتحین کو ٹرافی اور توصیف سے نوازا جائے گا۔ بقیہ زمروں میں - 'بہترین گاؤں پنچایت'، 'بہترین شہری مقامی ادارہ، 'بہترین میڈیا'، 'بہترین اسکول'، 'کیمپس کے استعمال کے لیے بہترین ادارہ'، 'بہترین صنعت'، 'بہترین این جی او'، 'بہترین پانی استعمال کنندہ' ایسوسی ایشن' اور 'سی ایس آر سرگرمیوں کے لیے بہترین صنعت'، جیتنے والوں کو ٹرافی اور توصیف کے ساتھ نقد انعام سے نوازا جائے گا۔ پہلے، دوسرے اور تیسرے نمبر پر آنے والوں کے لیے نقد انعامات بالترتیب 2 لاکھ روپے، 1.5 لاکھ روپے اور 1 لاکھ روپے ہیں۔

 انتخاب کا عمل:

چوتھے قومی آبی ایوارڈز کے لیے موصول ہونے والی تمام درخواستیں جیوری کمیٹی کے سامنے رکھی جاتی ہیں جو محکمہ آبی وسائل، دریا کی ترقی اور گنگا کی بحالی کے ذریعے تشکیل دی گئی ہے۔ جیوری کمیٹی کی سفارش کے علاوہ کوئی ایوارڈ نہیں دیا جاتا۔ کمیٹی کی سفارش مرکزی وزیر (جل شکتی) کو منظوری کے لیے پیش کی جاتی ہے۔ اس کے بعد ایک مناسب تاریخ پر فاتحین کے ناموں کا اعلان کیا جاتا ہے۔

ایوارڈز کی تفصیلات:

 

نمبر شمار

زمرہ کا نام

اہل ادارہ

ایوارڈ

ایوارڈ کی تعداد

1.

بہترین ریاست

ریاستی حکومت/مرکز کے زیر انتظام علاقے

حوالہ کے ساتھ ٹرافی

3 ایوارڈز

2.

بہترین ضلع

ضلعی انتظامیہ / ڈی ایم / ڈی سی

حوالہ کے ساتھ ٹرافی

3 ایوارڈز

3.

بہترین گاؤں پنچایت

گاؤں پنچاییت

کیش ایوارڈز

اور حوالہ کے ساتھ ٹرافی

3 ایوارڈز:

پہلا ایوارڈ:

2 لاکھ روپے

دوسرا ایوارڈ: 1.5 لاکھ روپے

تیسرا انعام: 1 لاکھ روپے

4.

بہترین شہری مقامی ادارہ

شہری مقامی ادارہ

ً

ً

5.

بہترین میڈیا(پرنٹ اور الیکٹرانک)

اخبار/میگزین/ٹی وی شوز

ً

ً

6.

بہترین اسکول

اسکول

ً

ً

7.

کیمپس کے استعمال کے لیے بہترین ادارہ

ادارہ/ آر اے ڈبلیو/ مذہبی/ اعلیٰ تعلیمی تنظیم

ً

ً

8.

بہترین صنعت

چھوٹے/درمیانے/بڑے پیمانے کی صنعت

ً

ً

9.

بہترین این جی او

رجسٹرڈ این

ً

ً

10.

بہترین واٹر یوزر ایسوسی ایشن

واٹر یوزر ایسوسی ایشن

ً

ً

11.

سی ایس آر  سرگرمیوں کے لیے بہترین صنعت

بڑی/درمیانی/چھوٹی صنعت

ً

ً

 

نیشنل واٹر ایوارڈز  (ان ڈبلیو اے) حکومت کے وژن 'جل سمردھ بھارت' کو پورا کرنے کے لیے ملک بھر میں ریاستوں، اضلاع، افراد، تنظیموں وغیرہ کے مثالی کام اور کوششوں کو تسلیم کرنے اور ان کی حوصلہ افزائی کے لیے متعارف کرائے گئے تھے۔ اس کا مقصد عوام کو پانی کی اہمیت کے بارے میں آگاہ کرنا اور انہیں پانی کے استعمال کے بہترین طریقوں کو اپنانے کی ترغیب دیناہے۔ مختلف زمروں میں ایوارڈ جیتنے والوں کو توصیفی سند، ٹرافی اور نقد انعام سے نوازا جائے گا۔ قومی آبی ایوارڈز کا مقصد اسٹیک ہولڈرز کی حوصلہ افزائی کرنا ہے کہ وہ ملک میں آبی وسائل کے انتظام کے حوالے سے ایک جامع نقطہ نظر اپنائیں کیونکہ سطحی پانی اور زیر زمین پانی آبی چکر(واٹر سائیکل)میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ ان مقاصد کو حاصل کرنے کے لیے، محکمہ کی جانب سے سال 2018 میں نیشنل واٹر ایوارڈز کا پہلا ایڈیشن متعارف کرایا گیا تھا۔ تقسیم کی تقریب 25 فروری 2019 کو نئی دہلی میں کامیابی کے ساتھ منعقد کی گئی، اور 14 زمروں سے  82 فاتحین کو ایوارڈز سے نوازا گیا۔ اس کے بعد، دوسرے نیشنل واٹر ایوارڈز 2019 کا کامیابی کے ساتھ انعقاد کیا گیا، اور سولہ زمروں سے 98 فاتحین کو گیارہ-بارہ نومبر 2020 کو نائب صدر جمہوریہ ہند کی طرف سے انعامات سے نوازا گیا۔ انتیس مارچ 2022 کو تیسرے قومی واٹر ایوارڈز کا انعقاد کامیابی سے کیا گیا اور 11 زمرہ جات سے 57 فاتحین کو صدر جمہوریہ ہند کے ذریعہ اعزازات سے نوازا گیا۔

 

ش ح۔   ش ت۔ج

Uno-8733



(Release ID: 1848984) Visitor Counter : 135