مواصلات اور اطلاعاتی ٹیکنالوجی کی وزارت

انڈیا پوسٹ پیمنٹس بینک نے ‘فنکلیویشن’ کا آغاز کیا

Posted On: 21 APR 2022 1:23PM by PIB Delhi

 

بھارت کی آزادی کی 75ویں سالگرہ اور جاری آزادی کا امرت مہوتسو کے موقع پر محکمہ ڈاک (ڈی او پی) کے تحت ایک 100 فیصدی حکومت کی ملکیت والے ادارے انڈیا پوسٹ پیمنٹس بینک (آئی پی پی بی) نےفنکلیویشن کے آغاز کا اعلان کیا۔فنکلیویشن مالیاتی شمولیت کے لیے مشترکہ حل تیار کرنے اور اختراع کرنے کے لیے فنٹیک اسٹارٹ اپ کمیونٹی کے ساتھ اشتراک کرنے کے لئے ایک مشترکہ اقدام ہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image001OSJ4.jpg

آغاز کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے ریلوے، مواصلات اور الیکٹرانکس اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے مرکزی وزیر جناب اشونی ویشنو نے کہا کہ ملک نے آدھار، یو پی آئی جیسی عالمی ٹیک دنیا کی معروف اختراعات میں فنٹیک کی جگہ میں تیزی سے ترقی کی ہے۔‘‘فنکلیویشن اس سمت میں ایک قدم ہے، ایک صنعت کی پہلی پہل جس کا مقصد مالیاتی شمولیت کے مقصد سے بامعنی مالیاتی مصنوعات کی تعمیر کے لیے اسٹارٹ اپ کمیونٹی کو متحرک کرنے کے لیے ایک طاقتور پلیٹ فارم بنانا ہے۔ آئی پی پی بی کے بینکنگ اسٹیک، ڈی او پی کا بھروسہ مند ڈورسٹیپ سروس نیٹ ورک اور اسٹارٹ اپس کی ٹیکنو فنکشنل مہارت کا امتزاج ملک کے شہریوں کو بے مثال قدر فراہم کر سکتا ہے۔’’

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002EUXV.jpg

مواصلات کے وزیر مملکت جناب دیو سنگھ چوہان نے کہا کہ‘‘فنکلیویشن آئی پی پی بی کا ایک مستقل پلیٹ فارم ہوگا جس میں حصہ لینے والے اسٹارٹ اپس کے ساتھ مل کر جامع مالیاتی حل تیار کیے جائیں گے۔ آئی پی پی بی اور ڈی او پی نے مل کر 430 ملین صارفین کو پڑوس کے پوسٹ آفس کے ذریعے اور ان کی دہلیز پر 400,000 سے زیادہ بھروسہ مند اور قابل پوسٹ آفس ملازمین اور گرامین ڈاک سیوکوں کے ذریعے خدمات فراہم کیں - جو اسے دنیا کے سب سے بڑے اور بھروسہ مند پوسٹل نیٹ ورکس میں سے ایک بناتا ہے۔’’ فنکلیویشن اسٹارٹ اپس کو شرکت کرنے، آئیڈیٹ کرنے، تیار کرنے اور مارکیٹنگ کرنے کے لیے بدیہی اور موزوں مصنوعات اور خدمات کی دعوت دیتا ہے جو صارفین تک لے جایا جا سکتا ہے۔ اسٹارٹ اپس کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے کہ وہ درج ذیل ٹریکس میں سے کسی کے ساتھ منسلک حل تیار کریں۔

  • کریڈٹائزیشن - ٹارگٹ صارفین کے استعمال کے معاملات کے ساتھ منسلک جدید اور جامع کریڈٹ پروڈکٹس تیار کریں اور انہیں پوسٹل نیٹ ورک کے ذریعے ان کی دہلیز تک لے جائیں۔
  • ڈیجیٹائزیشن - ڈیجیٹل ادائیگی کی ٹیکنالوجیز کے ساتھ روایتی خدمات کے ہم آہنگی کے ذریعے سہولت لائیں جیسے کہ روایتی منی آرڈر سروس کو انٹرآپریبل بینکنگ سروس بنانا۔
  • کوئی بھی مارکیٹ کے زیرقیادت حل جو ہدف صارفین کی خدمت میں آئی پی پی بی اور/یا ڈی او پی سے متعلقہ کسی دوسرے مسئلے کو حل کرنے میں مدد کر سکتا ہے۔

روایتی ڈسٹری بیوشن نیٹ ورکس کے ساتھ مالیاتی خدمات کے ساتھ ٹیکنالوجی کا ملاپ کاروباری مواقع کے نئے سیٹ کھول رہا ہے۔ بینکوں کی طرف سے ٹیکنالوجی کی خریداری کی قیادت میں مصنوعات کی تخلیق کے روایتی ماڈل میں اکثر صارف کے تجربے کی قدر کی کمی ہوتی ہے جس سے صارفین کی توقعات اور خدمات کی فراہمی کے درمیان بہت بڑا فرق پڑتا ہے۔ روایتی ٹیکنالوجی فرمیں مصنوعات کی تخلیق میں ملکیت کے خسارے کے ساتھ ان توقعات کو پورا کرنے میں ناکام رہتی ہیں۔ سکریٹری، محکمہ ڈاک اور چیئرپرسن،  پوسٹل سروسز بورڈ، جناب ونیت پانڈے نے کہا کہ ‘‘ہمارے شہریوں کی مختلف اور پیچیدہ ضروریات ہیں جن کے لیے محتاط سوچ، ہمدرد مصنوعات کے ڈیزائن، اور صارفین کے درمیان تیز رفتار پروٹو ٹائپنگ کی ضرورت ہے۔ فنکلیویشن کے ساتھ ہم بھارت کے لیے ٹیکنالوجی کی قیادت میں مالیاتی حل تیار کرنے کے لیے بہترین ذہنوں کو جمع کرنا چاہتے ہیں۔’’

فنکلیویشن اسٹارٹ اپس کو آئی پی پی بی اور ڈی او پی ماہرین کے ساتھ کام کرنے کی اجازت دے گا تاکہ وہ پوسٹل نیٹ ورک اور آئی پی پی بی کے ٹیکنالوجی اسٹیک کا استعمال کرتے ہوئے حل تیار کر سکیں اور پائلٹس کو چلائیں۔ کامیاب پائلٹ اس کے بعد طویل مدتی شراکت میں پختہ ہو سکتے ہیں۔‘‘فنکلیویشن کے ذریعے، ہم ایک ایسا پلیٹ فارم بنانا چاہتے تھے جو سٹارٹ اپس کو ہمارے ساتھ مل کر کام کرنے کا موقع فراہم کر سکے تاکہ کم خدمت صارفین کی ضروریات کو سمجھا جا سکے تاکہ مثبت اثر کے ساتھ اور زیادہ اہم بات یہ ہے کہ لاگت سے موثر انداز میں مصنوعات فراہم کی جا سکیں’’، کہا۔ شری جے وینکٹرامو، ایم ڈی اور سی ای او، آئی پی پی بی۔

فنکلیویشن مینٹرز سٹارٹ اپس کے ساتھ مل کر کام کریں گے تاکہ مصنوعات کو کسٹمر کی ضروریات کے مطابق بنایا جا سکے اور آئی پی پی بی اور ڈی او پی کے آپریٹنگ ماڈلز کے ساتھ مارکیٹ میں جانے والی حکمت عملیوں کو ہم آہنگ کیا جا سکے۔

اسٹارٹ –اپس فنکلیویشن صفحہ https://www.ippbonline.com/web/ippb/fincluvation پر درخواست دے سکتے ہیں۔

فنکلیویشن لانچ ایونٹ:

 

 

انڈیا پوسٹ پیمنٹس بینک کے بارے میں

انڈیا پوسٹ پیمنٹس بینک (آئی پی پی بی) محکمہ ڈاک، وزارت مواصلات کے تحت 100 فیصد ایکویٹی کے ساتھ حکومت ہند کی ملکیت میں قائم کیا گیا ہے۔ آئی پی پی بی کا آغاز وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے یکم ستمبر 2018 کو کیا تھا۔ بینک کو ہندوستان میں عام آدمی کے لیے سب سے زیادہ قابل رسائی، سستی اور قابل اعتماد بینک بنانے کے وژن کے ساتھ قائم کیا گیا ہے۔ آئی پی پی بی کا بنیادی مینڈیٹ بینک سے محروم اور کم بینک والے لوگوں کے لیے رکاوٹوں کو دور کرنا اور 160,000 ڈاک خانوں (145,000 دیہی علاقوں میں) اور 400,000 ڈاک ملازمین پر مشتمل نیٹ ورک کا فائدہ اٹھاتے ہوئے آخری میل تک پہنچنا ہے۔ آئی پی پی بی کی رسائی اور اس کا آپریٹنگ ماڈل انڈیا اسٹیک کے کلیدی ستونوں پر بنایا گیا ہے۔ سی بی ایس سے منسلک اسمارٹ فون اور بائیو میٹرک ڈیوائس کے ذریعے صارفین کی دہلیز پر سادہ اور محفوظ طریقے سے کاغذ سے مبرا، غیر نقدی اور پریزنس لیس بینکنگ کو قابل بنانا ہے۔ سستی اختراع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اور عوام کے لیے بینکنگ کی آسانی پر زیادہ توجہ کے ساتھ، آئی پی پی بی 13 زبانوں میں دستیاب بدیہی انٹرفیس کے ذریعے آسان اور سستی بینکنگ حل فراہم کرتا ہے۔ آئی پی پی بی کم نقدی کی معیشت کو فروغ دینے اور ڈیجیٹل انڈیا کے وژن میں تعاون کرنے کے لیے پرعزم ہے۔ ہندوستان تب ترقی کرے گا جب ہر شہری کو مالی طور پر محفوظ اور بااختیار بننے کا مساوی موقع ملے گا۔ ہمارا نصب العین سچ ہے - ہر گاہک اہم ہے؛ ہر لین دین اہم ہے، اور ہر جمع قیمتی ہے۔

آئی پی پی پی کے بارے میں مزید معلومات کے لیے www.ippbonline.com  ملاحظہ کریں۔

 

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

ش ح۔م ع۔ع ن

                                                                                                                                      (U: 4517)



(Release ID: 1818826) Visitor Counter : 478