کامرس اور صنعت کی وزارتہ

بھارت اور سویڈن کو زیادہ لکچدار اور مضبوط شراکت داری کے قیام کے لیے مل کر کام کرنا چاہیے: جناب پیوش گوئل


سی ای او فورم اور سویڈن- بھارت اسٹرٹیجک کاروباری شراکت دارے سے اس دوستی توسیع دینے میں مدد ملے گی

آتم نربھر بھارت کے تحت سویڈن اور بھارت ایک دوسرے  کے ساتھ چلتے ہیں

Posted On: 11 DEC 2020 4:31PM by PIB Delhi

نئی دہلی،11؍ دسمبر ،      کامرس اور صنعت کے مرکزی وزیر جناب پیوش گوئل نے آج کہا ہے کہ بھار ت اور سویڈن کو ایک زیادہ لکچدار اور مضبوط شراکت داری کے لیے ایک ساتھ مل کر کام کرنا چاہیے۔ بھارت-سویڈن اسٹرٹیجک کاروباری شراکت داری کے سی ای او فورم سے خطاب کرتے ہوئے ا نھوں نے کہا کہ سال 2020 ایک چیلنج بھر اسال رہا ہے لیکن ہمیں اس بحران کو ایک موقعے میں تبدیل کرنا چاہیے۔

جناب گوئل نے کہا ’’ہم چاہتے ہیں کہ  بھارت کی معیشت کو توسیع دینے کی ہماری کوششوں، خوشحالی اور ڈیزائن کی اعلیٰ سطح پر پہنچنے اور جدید 21ویں صدی کی دنیا میں عالمی سرگرمی کے لیے موزوں بننے میں ہماری کوششوں میں سویڈن ہمارا ساتھ دے۔ مجھے یقین ہےکہ  سی ای او فورم اور سویڈن- بھارت اسٹرٹیجک کاروباری شراکت داری اس دوستی کو ہر سطح پر توسیع دینے میں مددگار ثابت ہوں گے اور سویڈن کو بھارت کی اپنی آگے بڑھتی ہوئی معیشت میں ایک اہم ساتھی بنائیں گی‘‘۔

وزیر موصوف نے کہا کہ بھارت اپنی 1.35 ارب آبادی کے ساتھ دنیا کے سب سے بڑے کاروباری مواقع فراہم کرتا ہے۔ ا نھوں نے کہا ’’ہمارے پاس بہت بڑا اور ترقی کرتا ہوا متوسط طبقہ ہے جو زندگی کے ایک بہتر معیار کا خواہشمند ہے۔ مجھے یقین ہے کہ سویڈن کی کمپنیاں بھارت میں کام کرنے کو اور بہتر مواقع تلاش کرنے کو پسند کریں گی۔ ہمیں یقین ہے کہ ٹیکنالوجی پر نئے سرے سے ہماری توجہ بھارت کی ترجیحات کو دوبارہ مرتب کرنے میں مددگار ہوں گی اور سویڈن کو ایک اہم رول ادا کرنا ہوگا کیونکہ وہ اختراع اور ترقی میں ہمارا ایک فطری ساتھی ہے‘‘۔

آتم نربھر بھارت کی بات کرتے ہوئے جناب گوئل نے کہا کہ اس کے تحت ہم اعلیٰ درجے کی تکنیکی مصنوعات کی درآمد کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں اور لوگوں کا اس بات کے لیے  حوصلہ بڑھا رہے ہیں کہ وہ بھارت میں ٹیکنالوجی، ہنرمندی، اچھے معیار کی صحت کی دیکھ بھال اور تعلیم کی سہولت پیدا کریں۔ مال کی تیاری کرنے کے شعبے میں اندرون ملک اور بین الاقوامی کمپنیوں کی موجودگی میں اضافہ کرنے کی کوششوں سے بھارت کے لوگوں کی آمدنی کی سطح بڑھانے میں مدد ملے گی، معیشت کو وسعت حاصل ہوگی، سرمایہ کاری کی رکاوٹوں کو دور کرنے میں مدد ملے گی اور ہماری معیشت کو آگے بڑھانے میں حوصلہ ملے گا۔ انھوں نے کہا کہ  سویڈن دوسری جمہوریتوں اور  ایسے ہم خیال ملکوں کی طرح ،جو صاف ستھری  تجارت اور اپنے ملکوں میں بھارتی کاروباریوں کو اسی طرح کی سہولت فراہم کرنے میں یقین رکھتے ہیں، ایک ساتھی کی حیثیت رکھتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’’بھارت میں  سویڈن کی کمپنیوں کو ایک بڑا رول ادا کرنا ہے اور  باقی دنیا کے ساتھ  ہمارے تعلقات کے قیام کی کوششوں میں یہ ہماری امید کی حیثیت رکھتاہے۔ آتم نربھر بھارت کے تحت  سویڈ اور بھارت ایک دوسرے کے ساتھ چل سکتے ہیں۔ سویڈن دنیا کا اختراع کار ہے اور وہ بہت سے شعبوں میں اہم ٹیکنالوجیوں کو فروغ دینے میں ایک اہم حیثیت رکھتا ہے۔ بھارت اس شراکت داری سے زبردست فائدہ اٹھاسکتا ہے‘‘۔

جناب گوئل نے کہا کہ ہم اس بات کے منتظر ہیں کہ سویڈن اور یوروپی یونین اپنے دروازوں کو اور زیادہ کھولیں گے، بعض غیر محصولی رکاوٹوں اور معیارات کو ختم کریں گے تاکہ سویڈن کے ساتھ جوابی پیمانے پر ہماری تجارت ہوسکے اور سویڈن نیز یوروپ کے ساتھ کاروبار میں توسیع ہوسکے۔

 وزیر موصوف نے کہا کہ عزت مآب وزیر اعظم نے زیادہ سے زیادہ لچک پیدا کرنے پر بڑی توجہ دی ہے اور بھارت نے زیادہ ایف ڈی آئی کو متعارف کرانے اور سامان کی تیاری کو راغب کرنے میں اپنی حکومت کو کھول دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’’ہم بھارت میں سویڈن کی کمپنیوں کے رول میں توسیع کے لیے ایک حیرت انگیز موقع فراہم کرتے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ بھارتی کمپنیوں کی بھی حوصلہ افزائی کرتے ہیں کہ وہ سویڈن کے عوام کے لیے ایک بہتر مستقبل کے سلسلے میں  سویڈن کی ترقی اور پیشرفت میں اپنا رول ادا کریں۔ ہم اپنی معیشت کو توسیع دینے میں سویڈن  کی حمایت کے منتظر ہیں۔ ہماری ان کوششوں کا مقصد لاکھوں لڑکوں اور لڑکیوں کو جو خصوصی صلاحیتوں کے ساتھ اداروں سے باہر آرہے ہیں، ملازمت اور کام  فراہم کرنا ہے، جس سے سویڈن کی کمپنیوں کو اپنے کاروبار کو وسعت دینے میں مدد ملے‘‘۔

***************

م ن۔ اج ۔ ر ا   

U:8020      

 



(Release ID: 1680153) Visitor Counter : 153