وزارت آیوش

آیوش کی وزارت کووڈ -19 کے بندوبست کے لئے واسا ( اَڈا ٹوڈا واسیکا ) اور گڈوچی کے امکانات کا مطالعہ کرے گی

Posted On: 25 SEP 2020 1:16PM by PIB Delhi

 

نئی دلّی ،25 ستمبر / کووڈ – 19 کے  حل میں   تیزی لانے کی  ضرورت کے پیشِ نظر  آیوش کی وزارت نے مختلف چینلوں کے ذریعے   مختلف امکانی حل   پر   منظم طریقے سے  مطالعات شروع کئے ہیں ۔   اس کوشش کے ایک حصے کے طور پر  کووڈ – 19 سے متاثرہ مریضوں  میں علامات کے   علاج  میں  واسا  گھانا ، گڈوچی گھانا اور واسا گڈوچی  گھانا  کے فوائد   کا  جائزہ لینے کے لئے ایک   طبی مطالعے کی تجویز  کو منظوری دی گئی ہے ۔  یہ ایک  کسی امتیاز کے بغیر اور  کھلا اور سہ رخی مطالعہ ہو گا اور نئی دلّی میں آل انڈیا  انسٹی ٹیوٹ آف آیورویدا  ( اے  آئی آئی اے  ) میں سی ایس آئی آر کے آئی جی آئی بی یونٹ کے  اشتراک سے کیا جائے گا ۔

          مطالعے کے لئے نتائج  کے اقدامات ،  طبی اور  لیبا ریٹری کے پیمانے     اور تحقیقات کے لئے لاجسٹکس سمیت    طریقۂ کار    کی تفصیلی تجویز   تیار کر لی گئی ہے ۔  اس مطالعے میں   آیوش  کے تحقیقی طریقے   کے لئے  مناسب    منفرد کیس رپورٹ فورم  ( سی آر ایف ) کو استعمال کیا جائے گا  ۔ سی آر ایف  اور مطالعے کے پروٹوکول  کا  مختلف شعبے  کے ماہرین کے ذریعے   جائزہ لیا  گیا ہے اور  اس میں جدید ادویات  سے متعلق  ، اُن کے مشوروں کو بھی شامل کیا گیا ہے   ۔ یہ مطالعہ   ادارہ جاتی   ایتھک کمیٹی   ( آئی ای سی ) کی منظوری  کے بعد کیا  جائے گا ۔

          اس پروجیکٹ میں  مندرجہ ذیل  پہلوؤں پر غور کیا جائے گا  :

  1. واسا اور گڈوچی  کے  عرق   سے تیار کردہ  جڑی بوٹیوں والی دوا کی  تاثیر / ایکشن اور   واسا – گڈوچی  کے اجزاء سے بنائی گئی  دوا  کا  سارس – کو وی 2 سے متاثرہ  بغیر علامات والے  اور  / یا   کووڈ – 19 کی معمولی علامات والے مریضوں کا طبی  بندوبست   ۔ مذکورہ  دوا کا وائرل  کو ختم کرنے  سے متعلق  اثرات   ۔
  2. آیا مذکورہ   مونو ہربل   اور پولی ہربل دوا  کووڈ – 19 بیماری   کے لئے ادویات بنانے والوں کے پروفائل کو متاثر کر سکتی ہے ۔

 

واسا اور گڈوچی   بھارت کی طبی روایات میں    تجربہ  والی دوائیں ہیں  ، جو مختلف بیماریوں میں استعمال کی جاتی ہیں ۔    یہی وجہ ہے کہ اِس  مطالعے  کے نتائج   آیوش کے پورے سیکٹر کے لئے   دلچسپی کا باعث ہوں گے ۔ 

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

( م ن ۔ و ا ۔ ع ا )

U. No.  5848



(Release ID: 1659135) Visitor Counter : 6