ارضیاتی سائنس کی وزارت

شمالی بحر ہند پر حارّاتی سمندری طوفانوں کے ناموں کی نئی فہرست

Posted On: 28 APR 2020 7:33PM by PIB Delhi

نئی دہلی، 28اپریل2020،دنیا بھر میں ایسے 6 علاقائی مخصوص موسمیاتی مراکز (آر ایس ایم سی)اور 5 علاقائی حاراتی سمندری طوفان کی پیشگی خبر دینے والے مراکز (ٹی سی ڈبلیو سی)، مصروف عمل ہیں، جو حاراتی سمندری طوفانوں کو نام دینے اور اُن سے متعلق مشاورت نامے جاری کرنے کےلئے مجاز ہیں۔ بھارت کا محکمہ موسمیات مذکورہ 6آر ایس ایم سی کے زمرے میں آتا ہے، جو بنگلہ دیش، بھارت، ایران، مالدیپ ، میانمار، عمان، پاکستان، قطر، سعودی عرب، سری لنکا، تھائی لینڈ، متحدہ عرب امارات اور یمن سمیت 13 رکن ممالک کو ڈبلیو ایم او ؍ای ایس سی اے پی پینل کے تحت حاراتی سمندری طوفان اور طوفانوں سے متعلق مشاورت نامے جاری کرتا ہے۔ آر ایم ایس سی واقع نئی دلی بھی ایک ادارہ ہے، جسے خلیج بنگال (بی او بی) اور بحر عرب (اے ایس) سمیت شمالی بحر ہند (این آئی او) کے سلسلے میں حاراتی سمندری طوفانوں کو  نام دینے کا اختیار حاصل ہے۔

 

حاراتی سمندری طوفانوں کو نام دینے سے سائنٹفک برادری، تباہ کاری سے نمٹنے کے منتظمین، میڈیا اور عوام الناس کو درج ذیل امداد حاصل ہوتی ہے:

*ہر ایک سمندری طوفان کی شناخت

*اس کی ترقی اور پھیلاؤ کے تئیں بیداری

*اگر کسی خطے پر ایک سے زیادہ اور شانہ بہ شانہ طوفان آتا ہے، تو اس سے متعلق شبہات کا ازالہ

*کسی ٹی سی کو آسانی سے یاد رکھا جاسکتا ہے

*بڑی تعداد میں متعلقہ افراد تک تیزی اور اثرانگیزی کے ساتھ پیشگی خبرکی ترویج ممکن ہوتی ہے

 

لہذا مختلف سمندروں کے طاسوں پر پیداہونے والے حاراتی سمندری طوفانوں کے سلسلے میں انہیں متعلقہ آر ایس ایم سی اور ٹی سی ڈبلیو سی کے ذریعے معنون کیا جاتا ہے۔ خلیج بنگال اور سعودی عرب سمیت شمالی بحر ہند کے لئے آر ایس ایم سی واقع نئی دلی  معیاراتی ضوابط اپنا کر حاراتی سمندری طوفانوں کو اپنا کر نام دیتا ہے۔ ڈبلیو ایم او ؍ای ایس سی اے پی پینل،  جس کا تعلق حاراتی سمندری طوفانوں سے ہے، نے سلطنت عمان میں  2000 میں مسقط میں منعقدہ اپنے 27ویں اجلاس میں اس امر پر اصولی طور پر اتفاق کیا تھا کہ خلیج بنگال اور بحرعرب میں آنے والے حاراتی طوفانوں کو وہ نام دے گا۔ رکن ممالک کے مابین گفت و شنید کے بعد شمالی بحر ہند پر چھانے والے حاراتی طوفانوں کو نام دینے کا کام ستمبر 2004سے شروع ہوا۔ اس فہرست میں 8 ڈبلیو ایم او؍ای ایس سی اے پی پی ٹی سی رکن ممالک یعنی بنگلہ دیش، بھارت، مالدیپ، میانمار، عمان، پاکستان، سری لنکا اور تھائی لینڈ میں مجوزہ نام شامل ہیں۔اس فہرست میں شامل تقریباً تمام تر نام،  سوا آخری نام (امپھان)،تا حال استعمال میں آ چکے ہیں۔

ڈبلیو ایم او ؍ای ایس سی اے پی  پی ٹی سی کے 45ویں اجلاس کے دوران جو ستمبر 2018 میں مسقط، عمان میں منعقد ہوا تھا، یہ فیصلہ کیا گیا تھا کہ 5 نئے رکن ممالک یعنی ایران، قطر، سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور یمن (مجموعی طور پر 13رکن ممالک)، کی نمائندگی سمیت  حاراتی سمندری طوفانوں کی ایک نئی فہرست تیار کی جائے۔ ڈبلیو ایم او ؍ ای ایس سی اے پی پی ٹی سی نے اپنے اجلاس کے دوران بھارتی محکمہ موسمیات کے ڈاکٹرمرتیونجے کو پینل رکن ممالک کے مابین تال میل پیدا کرنے کے لئے رابطہ کار کے طور پر نامزد کیاتھا اور انہیں یہ ذمہ داری بھی سونپی گئی تھی کہ وہ معیاری ضوابط پر عمل کرتے ہوئے لسٹ کو حتمی شکل دیں گے اور نفاذ کے منصوبے کے سلسلے میں بھی تجویز پیش کریں  گے۔ رابطہ کار کی رپورٹ ابتدائی طور پر بھارت کی جانب سے 9سے13ستمبر 2019 کے دوران میانمار کے نے پائیتا میں منعقدہ 46ویں ڈبلیو ایم او ؍ ای ایس سی اے پی، پی ٹی سی  اجلاس میں پیش کی گئی تھی۔ گفت و شنید کے بعد اس رپورٹ کو ڈبلیو ایم او ؍ ای ایس سی اے پی، پی ٹی سی نے اپریل 2020 میں اتفاق رائے اختیار کر لیا تھا۔

پی ٹی سی رکن ممالک کےذریعے ناموں کے انتخاب کےلئے درج ذیل کسوٹی اپنائی گئی تھی:

1.مجوزہ نام اپنی نوعیت کے لحاظ سے سیاست اور سیاسی شخصیات کے ناموں قطعی علیحدہ ہونا چاہئے، اس میں مذہبی اعتقادات، ثقافت، صنف وغیرہ کا دخل بھی نہیں ہونا چاہئے۔

2.نام اس انداز سے منتخب کیا جانا چاہئے کہ یہ دنیا کی آبادی کے کسی بھی گروپ کے جذبات کو ٹھیس نہ پہنچائے۔

3.اسے اپنی نوعیت کے لحاظ سے از حد سخت اور سفاک نہیں ہونا چاہئے۔

4.یہ مختصر تلفظ میں آسان ہونا چاہئے اور کسی رکن کے لئے باعث اشتعال نہ ہونا چاہئے۔

5.نام کی زیادہ سے زیادہ طوالت 8حروف پر مشتمل ہو سکتی ہے۔

6.مجوزہ نام کو اس کے تلفظ اور صوتی تلفظ کے ساتھ فراہم کیا جانا چاہئے۔

7.پینل کے پاس یہ حقوق محفوظ ہوں گے کہ وہ کسی بھی نام کو اُس صورت میں رد کرسکتا ہے، جب اس کےانتخاب کے لئے مجوزہ کسوٹی نہ اپنائی گئی ہو۔

8.جن ناموں کو حتمی شکل دی گئی ہے، اُن پر وقوت گزرنے کے ساتھ یعنی نفاذ کے وقت کے دوران نظرثانی کی جا سکتی ہے اور اس کے لئے سالانہ اجلاس میں پی ٹی سی سے منظوری لی جا سکتی ہے۔ یہ عمل اُسی صورت میں ہوگا، جب کسی رُکن کی جانب سے کوئی واجب اعتراض داخل کیاجائے۔

9.شمالی بحر ہند پر چھانے والے حاراتی طوفانوں کے نام دوہرائے نہیں جائیں گے۔ ایک مرتبہ استعمال کے بعد اس کا دوبارہ استعمال نہیں ہوگا۔ لہذا نام نئے ہونا چاہئے۔آر ایس ایم سی واقع نئی دلی سمیت دنیا بھر میں واقع آر ایس ایم سی کی موجودہ فہرست یا پہلےسے موجود کسی فہرست میں اس طرح کےنام کا تذکرہ نہیں ہونا چاہئے۔

لہذا ڈبلیو ایم او ؍ ای ایس سی اے پی ، پی ٹی سی کے ذریعے جن ناموں کو حتمی شکل دی گئی ہے، ان کی نئی فہرست ضمیمہ-1 میں دی گئی ہے۔اس سے قبل 2004 میں  شامل کئے گئے ناموں کی فہرست ضمیمہ -2 میں شامل ہے۔ موجودہ فہرست میں  مجموعی طور پر 169نام شامل ہیں، جن میں 13 نام 13ڈبلیو ایم او، ای ایس سی اے پی، رکن ممالک کی جانب سے فراہم کئے گئے ہیں۔ وقتاً فوقتاً عوام الناس کی جانب سےبھارت میں جو نام تجویز کئے جاتے ہیں، اُن پر آئی ایم ڈی کی جانب سے تشکیل کردہ کمیٹی نے انہیں حتمی شکل دینے کے لئے غوروفکر کیا اور معقول ناموں کوبھارت کی جانب سے پیش کی جانے والی ناموں کی مجوزہ فہرست میں شامل کیا گیا تھا۔ (ضمیمہ-1)۔

 

ڈبلیو ایم او؍ ای ایس سی اے پی، رکن ممالک کی جانب سے اپریل 2020 میں اختیار کئے گئے حاراتی سمندری طوفانوں کے ناموں کی نئی فہرست

ان کا استعمال سابقہ فہرست میں دیئے گئے امپھان نام کے استعمال کے بعد کیاجائے گا

 

ڈبلیو ایم او؍ ای ایس سی اے پی، رکن ممالک

کالم-1

کالم-2

کالم-3

کالم-4

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

بنگلہ دیش

Nisarga

Nisarga

Biparjoy

Biporjoy

Arnab

Ornab

Upakul

Upokul

بھارت

Gati

Gati

Tej

Tej

Murasu

Murasu

Aag

Aag

ایران

Nivar

Nivar

Hamoon

Hamoon

Akvan

Akvan

Sepand

Sepand

مالدیپ

Burevi

Burevi

Midhili

Midhili

Kaani

Kaani

Odi

Odi

میانمار

Tauktae

Tau’Te

Michaung

Migjaum

Ngamann

Ngaman

Kyarthit

Kjathi

عمان

Yaas

Yass

Remal

Re-Mal

Sail

Sail

Naseem

Naseem

پاکستان

Gulab

Gul-Aab

Asna

As-Na

Sahab

Sa-Hab

Afshan

Af-Shan

قطر

Shaheen

Shaheen

Dana

Dana

Lulu

Lulu

Mouj

Mouj

سعودی عرب

Jawad

Jowad

Fengal

Feinjal

Ghazeer

Razeer

Asif

Aasif

سری لنکا

Asani

Asani

Shakhti

Shakhti

Gigum

Gigum

Gagana

Gagana

تھائی لینڈ

Sitrang

Si-Trang

Montha

Mon-Tha

Thianyot

Thian-Yot

Bulan

Bu-Lan

یونائیٹیڈ عرب امارات

Mandous

Man-Dous

Senyar

Sen-Yaar

Afoor

Aa-Foor

Nahhaam

Nah-Haam

یمن

Mocha

Mokha

Ditwah

Ditwah

Diksam

Diksam

Sira

Sira

 

 

ڈبلیو ایم او؍ ای ایس سی اے پی، پینل

کالم-5

کالم-6

کالم-7

کالم-8

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

بنگلہ دیش

Barshon

Borshon

Rajani

Rojoni

Nishith

Nishith

Urmi

Urmi

بھارت

Vyom

Vyom

Jhar

Jhor

Probaho

Probaho

Neer

Neer

ایران

Booran

Booran

Anahita

Anahita

Azar

Azar

Pooyan

Pooyan

مالدیپ

Kenau

Kenau

Endheri

Endheri

Riyau

Riyau

Guruva

Guruva

میانمار

Sapakyee

Zabagji

Wetwun

We’wum

Mwaihout

Mwei’hau

Kywe

Kjwe

عمان

Muzn

Muzn

Sadeem

Sadeem

Dima

Dima

Manjour

Manjour

پاکستان

Manahil

Ma-Na-Hil

Shujana

Shu-Ja-Na

Parwaz

Par-Waaz

Zannata

Zan Naa Ta

قطر

Suhail

Es’hail

Sadaf

Sadaf

Reem

Reem

Rayhan

Rayhan

سعودی عرب

Sidrah

Sadrah

Hareed

Haareed

Faid

Faid

Kaseer

Kusaer

سری لنکا

Verambha

Ve-Ram-Bha

Garjana

Garjana

Neeba

Neeba

Ninnada

Nin-Na-Da

تھائی لینڈ

Phutala

Phu-Ta-La

Aiyara

Ai-Ya-Ra

Saming

Sa-Ming

Kraison

Krai-Son

متحدہ عرب امارات

Quffal

Quf-Faal

Daaman

Daa-Man

Deem

Deem

Gargoor

Gar-Goor

یمن

Bakhur

Bakhoor

Ghwyzi

Ghwayzi

Hawf

Hawf

Balhaf

Balhaf

 

 

ڈبلیو ایم او؍ ای ایس سی اے پی، پینل، رکن ممالک

کالم-9

کالم-10

کالم-11

کالم-12

کالم-13

 

 

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

Name

Pron’

بنگلہ دیش

Meghala

Meghla

Samiron

Somiron

Pratikul

Protikul

Sarobor

Sorobor

Mahanisha

Mohanisha

بھارت

Prabhanjan

Prabhanjan

Ghurni

Ghurni

Ambud

Ambud

Jaladhi

Jaladhi

Vega

Vega

ایران

Arsham

Arsham

Hengame

Hengame

Savas

Savas

Tahamtan

Tahamtan

Toofan

Toofan

مالدیپ

Kurangi

Kurangi

Kuredhi

Kuredhi

Horangu

Horangu

Thundi

Thundi

Faana

Faana

میانمار

Pinku

Pinnku

Yinkaung

JinGaun

Linyone

Lin Joun

Kyeekan

Kji Gan

Bautphat

Bau’hpa

عمان

Rukam

Roukaam

Watad

Wa Tad

Al-jarz

Al-Jarouz

Rabab

Ra Bab

Raad

Raad

پاکستان

Sarsar

Sar-Sar

Badban

Baad-Baan

Sarrab

Sarrab

Gulnar

Gul-Nar

Waseq

Waa-Seq

قطر

Anbar

Anbar

Oud

Oud

Bahar

Bahar

Seef

Seef

Fanar

Fanaar

سعودی عرب

Nakheel

Nakheel

Haboob

Haboob

Bareq

Bariq

Alreem

Areem

Wabil

Wobil

سری لنکا

Viduli

Viduli

Ogha

Ogha

Salitha

Salitha

Rivi

Rivi

Rudu

Rudu

تھائی لینڈ

Matcha

Mat-Cha

Mahingsa

Ma-Hing-Sa

Phraewa

Phrae-Wa

Asuri

A-Su-Ri

Thara

Tha-Ra

متحدہ عرب امارات

Khubb

Khubb

Degl

Degl

Athmad

Ath-Md

Boom

Boom

Saffar

Saf-Faar

یمن

Brom

Brom

Shuqra

Shuqrah

Fartak

Fartak

Darsah

Darsah

Samhah

Samhah

                                   

نوٹ:

1.پینل اراکین کے نام ملک کے لحاظ سے حروف تہجی کا لحاظ رکھتے ہوئے فہرست بند کئے گئے ہیں

2.ناموں کا استعمال کام میں دی ترتیب کے لحاظ سے ہوگا

3.پہلا نام کالم کی پہلی قطار سے شروع ہوگا اور ترتیب وار آخری قطار تک کالم 13 تک جائے گا

4.جدول کا استعمال صرف ایک مرتبہ کیا جائے گا

 

ضمیمہ -2

 

ماہ ستمبر 2004 میں ڈبلیو ایم او ؍ ای ایس سی اے پی پینل رکن ممالک نے جن حاراتی سمندری طوفان کے نام استعمال کئے تھے، ان کی فہرست

ڈبلیو ایم او؍ ای ایس سی اے پی، پینل، رکن ممالک

Column one

Column two

Column three

Column four

Names

Pron’

Names

Pron’

Names

Pron’

Names

Pron’

بنگلہ دیش

Onil

Onil

Ogni

Og-ni

Nisha

Ni-sha

Giri

Gi-ri

بھارت

Agni

Ag’ni

Akash

Aakaa’sh

Bijli

Bij’li

Jal

Jal

مالدیپ

Hibaru

--

Gonu

--

Aila

--

Keila

--

میانمار

Pyarr

Pyarr

Yemyin

Ye-myin

Phyan

Phyan

Thane

Thane

عمان

Baaz

Ba-az

Sidr

Sidr’

Ward

War’d

Murjan

Mur’jaan

پاکستان

Fanoos

Fanoos

Nargis

Nar gis

Laila

Lai la

Nilam

Ni lam

سری لنکا

Mala

--

Rashmi

Rash’mi

Bandu

--

Viyaru

--

تھائی لینڈ

Mukda

Muuk-dar

KhaiMuk

Ki-muuk

Phet

Pet

Phailin

Pi-lin

ڈبلیو ایم او؍ ای ایس سی اے پی، پینل، رکن ممالک

Column five

Column six

Column seven

Column eight

Names

Pron’

Names

Pron’

Names

Pron’

Names

Pron’

بنگلہ دیش

Helen

Helen

Chapala

Cho-po-la

Ockhi

Ok-khi

Fani

Foni

بھارت

Lehar

Le’har

Megh

Me’gh

Sagar

Saa’gar

Vayu

Vaa’yu

مالدیپ

Madi

--

Roanu

--

Mekunu

--

Hikaa

--

میانمار

Nanauk

Na-nauk

Kyant

Kyant

Daye

Da-ye

Kyarr

Kyarr

عمان

Hudhud

Hud’hud

Nada

N’nada

Luban

L’luban

Maha

M’maha

پاکستان

Nilofar

Ni lofar

Vardah

Var dah

Titli

Titli

Bulbul

Bulbul

سری لنکا

Ashobaa

Ashobaa

Maarutha

Maarutha

Gaja

Gaja

Pawan

Pavan

تھائی لینڈ

Komen

Goh-men

Mora

Moh-rar

Phethai

Pay-ti

Amphan

Um-pun

 

دسمبر 2019 تک استعمال شدہ ناموں کو سُرخ رنگ سے لکھایا گیا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

م ن۔ک ا۔

U-2109

                      



(Release ID: 1619153) Visitor Counter : 127