وزارت ماہی پروری، مویشی پروری و ڈیری

ایف اے ایچ ڈی کے وزیر جناب پرشوتم روپالا نے جانوروں کی وبائی امراض کی تیاری کے اقدامات اور عالمی بینک کی مالی اعانت سے چلنے والے ایک صحت کے لیے جانوروں کی صحت کے نظام کی معاونت کا آغاز کیا


یہ ایک صحت کے نقطہ نظر کے مطابق، جانوروں کی ممکنہ وبائی امراض کے لیے ہندوستان کی تیاری اور ردعمل کو بڑھا دے گا

جانوروں کے وبائی امراض کی تیاری کی پہل قدمی اور ورلڈ بینک کی مالی اعانت سے چلنے والا "ایک صحت کے لیے جانوروں کی صحت کے نظام کی معاونت" جانوروں کی وبائی امراض سے نمٹنے کے لیے جامع کوششیں ہیں:ایف اے ایچ ڈی وزیر

Posted On: 14 APR 2023 2:28PM by PIB Delhi

ماہی پروری، مویشی پروری  اور ڈیری کے مرکزیاینیمل ہیلتھ سسٹم سپورٹ فار ون ہیلتھ  وزیر جناب پرشوتم روپالا نے آج جانوروں کی وبائی امراض کی تیاری کے اقدام اور عالمی بینک کی مالی اعانت سے چلنے والے ایک صحت کے لیے جانوروں کی صحت کے نظام کی معاونت کا آغاز کیا  تاکہ ایک صحت کے نقطہ نظر کے مطابق ممکنہ جانوروں کی وبائی امراض کے خلاف ہندوستان کی تیاری  اور ردعمل کو بڑھایا جا سکے۔ اس اقدام کا مقصد جانوروں اور انسانی صحت دونوں کے لیے خطرہ بننے والی زونوٹک بیماریوں پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے جانوروں کی وبائی امراض کے لیے ہندوستان کی تیاری اور ردعمل کو بڑھانا ہے۔ اس اقدام سے ویٹرنری خدمات اور انفرااسٹرکچر کو بہتر بنانے، بیماریوں کی نگرانی کی صلاحیتوں، جلد پتہ لگانے اور جواب دینے، جانوروں کی صحت کے پیشہ ور افراد کی صلاحیت کو بڑھانے اور کمیونٹی کے ذریعے کسانوں میں بیداری پیدا کرنے میں مدد ملے گی۔

https://ci4.googleusercontent.com/proxy/onzJy2lNk4nuVhxzpqCNixFktN04yrtEUJcoBNBC9lO8V79kR-jxO-R0cTXuADJVtK9JZxmRRGXvofDEuDJswN-aRBxVt5B1o2aweZjGqlCdCvf3_4okU40Rsg=s0-d-e1-ft#https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image001X4YV.jpg

اس تقریب میں "اینیمل ہیلتھ سسٹم سپورٹ فار ون ہیلتھ ( اے ایچ ایس ایس او ایچ)" پر عالمی بینک کی مالی اعانت سے چلنے والے منصوبے کا آغاز بھی ہوا،جس کا مقصد بھارت میں پانچ  ریاستوں پر محیط ون ہیلتھ اپروچ کا استعمال کرتے ہوئے جانوروں کی صحت کے بہتر انتظام کے نظام کے لیے ایک ماحولیاتی نظام بنانا ہے۔

https://ci4.googleusercontent.com/proxy/bsnA4gpb8QcvOj0F5gH_6IvKQwB8Em0ZRCgAn2zB3WfNJmxqyU-NCB4Iwn7YK_PTf5EnBLgm0wdPHCi5eBOV6zI4oYqjkPBjSAFiJVwEofAOcnFcXjA74xxG2w=s0-d-e1-ft#https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002PQBO.jpg

اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے، ماہی پروری، مویشی پروری  اور ڈیری کے مرکزی کابینہ کے وزیر جناب پرشوتم روپالا نے کہا کہ ہندوستان جانوروں کی متنوع انواع کا گھر ہے اور مویشیوں کا شعبہ ملک کی معیشت اور غذائی تحفظ میں ایک اہم کردار ادا کرتا ہے۔ تاہم، ہم ابھرتی ہوئی اور زونوٹک بیماریوں سے لاحق خطرات کا بھی شکار ہیں۔ اینیمل پینڈیمک پریپریڈنس انیشیٹو ہمارے جانوروں کے وسائل کی حفاظت اور اپنے لوگوں کی حفاظت اور صحت کو یقینی بنانے کے لیے ایک فعال قدم ہے۔ اینیمل پینڈیمک پریپریڈنس انیشیٹو اور ورلڈ بینک کی مالی اعانت سے چلنے والی "ایک صحت کے لیے جانوروں کی صحت کے نظام کی حمایت" جانوروں کی وبائی امراض سے ایک جامع انداز میں نمٹنے کے لیے جامع کوششیں ہیں۔ اپنے جانوروں کی صحت کے نظام کو مضبوط بنا کر اور ون ہیلتھ اپروچ کو نافذ کرنے سے، ہم زونوٹک بیماریوں کو بہتر طریقے سے روک سکتے ہیں اور ان پر قابو پا سکتے ہیں، جو نہ صرف ہمارے جانوروں کی صحت اور فلاح و بہبود پر اثر انداز ہوتے ہیں بلکہ اہم معاشی اثرات اور انسانی صحت کے خدشات بھی رکھتے ہیں۔

https://ci6.googleusercontent.com/proxy/mh_L2zu7XblDeBBEP1VKZXjMdcm8aovhb7ap2QRu0mbcrLF3DV-sgGUtFXbxhUCLcqqfAs7u4Ye5EXjux_p1f1ihCAMhL5eHNNVgRqqGt0oGaPcmCwLEcShj3Q=s0-d-e1-ft#https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0031GHU.jpg

مجمع سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ایل مروگن، عزت مآب وزیر مملکت ماہی پروری، مویشی پروری  اور ڈیری پروری نے کہا کہ " اینیمل پینڈیمک پریپریڈنس انیشیٹو ( اے پی پی آئی) اور اینیمل ہیلتھ سسٹم سپورٹ فار ون ہیلتھ ( اے ایچ ایس ایس او ایچ) پروجیکٹ کا آغاز جانوروں کی وبائی بیماری سے نمٹنے اور مستقبل میں کسی بھی نامعلوم انفیکشن سے نمٹنے کے لیے تیاری کا  قریب تر  قدم ہے۔ ایک صحت کے اقدامات کو نافذ کرنے کے لیے مل کر کام کرنے سے، ہم پائیدار اور صحت مند ماہی پروری کو فروغ دے سکتے ہیں جو لوگوں اور ماحول دونوں کے لئے مفید ہے۔

اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے، جناب راجیش کمار سنگھ، سکریٹری، محکمہ مویشی پروری  اور ڈیری نے کہا کہ "کسی بھی وبائی امراض  جیسے ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لیے نظام کی تیاری کی طرف بڑھنے کے لیے، بیماری کی نگرانی کو مضبوط بنانے، ماڈلز بنانے سمیت مختلف کاموں ، بیماری کی پیشگوئی، ڈی اینڈ آر ماحولیاتی نظام اور تشخیصی صلاحیتوں کو بہتر بنانے، ریگولیٹری ماحولیاتی نظام کو ہموار کرنے، میدان میں بہتر ردعمل فراہم کرنے اور وسائل کو متحرک کرنے کے لیےمربوط کرنا ہے۔ڈی اے ایچ ڈی نے ملک میں مویشیوں کے نظام اور پروگراموں کو بہتر بنانے کے لیے اہم تبدیلیاں شروع کی ہیں۔ اینیمل پینڈیمک پریپریڈنس انیشیٹو یا اے پی پی آئی ایک ایسا ہی اقدام ہے جس میں بیماریوں سے بچاؤ، کنٹرول اور وبائی امراض کی تیاری کے تمام پہلوؤں کا جامع طور پر احاطہ کیا گیا ہے۔ کلیدی عناصر میں بیماریوں کی مربوط نگرانی ، ابتدائی انتباہ اور ردعمل، ویکسین/تشخیص، تحقیق و ترقی اور پیداوار، اور فنڈنگ ​​اور ریگولیٹری فریم ورک کے اہل کاروں کے ساتھ ایکو سسٹم کوآرڈینیشن شامل ہیں۔

https://ci5.googleusercontent.com/proxy/sKkwKue6P81ihjVaug61zJiCBy8DZkaNOd5m1JFVqPxjSNai-mvXVIU0ozVtHWeuB_Aejb8tTcLaVD9fMPkFm_Y5Q9BCVRod6kzX8kmTnD3COm4mUvMi8uRjVQ=s0-d-e1-ft#https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image004Y5QI.jpg

تقریب میں ون ہیلتھ سپورٹ یونٹ کا بلیٹن/پبلیکیشن جاری کیا گیا اور اے پی پی آئی اور اے ایچ ایس ایس او ایچ ویڈیوز کا اجراء کیا گیا۔

پروفیسر اجے کمار سود، حکومت ہند کے پرنسپل سائنسی مشیر، پروفیسر (ڈاکٹر)۔ اتل گوئل، ڈائرکٹر جنرل ہیلتھ سروسز، ایم او ایچ اینڈ ایف ڈبلیو، مسٹر اولیور بریڈٹ، ہیڈ، ایگریکلچر اینڈ فوڈ گلوبل پریکٹس، ورلڈ بینک، ڈاکٹر ابھیجیت مترا، اینیمل ہسبنڈری کمشنر، ڈی اے ایچ ڈی بھی اس موقع پر موجود تھے۔ بین الاقوامی تنظیموں  (ڈبلیو ایچ او، ڈبلیو بی، ایف اے او، ڈبلیو او اے ایچ، یو این ای پی)، متعلقہ وزارتوں،  آئی سی اے آر اور آئی سی اے آر کے تحقیقی اداروں کے جانوروں کی صحت کے ماہرین اور دیگر سرکاری اسٹیک ہولڈرز سمیت مختلف کراس سیکٹرز کے تقریباً 200 اہم اسٹیک ہولڈرز نے شرکت کی۔

حکومت ہند کے محکمہ مویشی پروری  اور ڈیری(ڈی اے ایچ ڈی)،  جانوروں کی وبائی تیاری کے اقدام اور عالمی بینک کی مالی اعانت سے چلنے والے اینیمل ہیلتھ سسٹم سپورٹ فار ون ہیلتھ کے کامیاب نفاذ کے لیے پرعزم ہے اور اس کے لیے تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ اس اہم مقصد کے لئے  مل کر کام کرنے کا منتظر ہے۔

***********

 

ش ح ۔ا ک۔ع ر

U. No.4188



(Release ID: 1917269) Visitor Counter : 166