مواصلات اور اطلاعاتی ٹیکنالوجی کی وزارت

ہندوستان ایشین پیسفک پوسٹل یونین کی قیادت سنبھالے گا

Posted On: 03 JAN 2023 5:24PM by PIB Delhi

ہندوستان اس ماہ سے ایشین پیسفک پوسٹل یونین (اے پی پی یو) کی قیادت سنبھالے گا جس کا ہیڈ کوارٹر بنکاک، تھائی لینڈ میں ہے۔ اگست-ستمبر 2022 کے دوران بنکاک میں منعقدہ 13ویں اے پی پی یو کانگریس کے کامیاب انتخابات کے بعدپوسٹل سروسز بورڈ کے سابق ممبر (پرسنل) ، ڈاکٹر ونے پرکاش سنگھ    سال 4 کی مدت  کارکے لیے یونین کے سیکرٹری جنرل کا چارج سنبھالیں گے۔

ایشین پیسفک پوسٹل یونین (اے پی پی یو) ایشیائی پیسفک خطے کے 32 رکن ممالک کی ایک بین الحکومتی تنظیم ہے۔ اے پی پی یو  خطے میں یونیورسل پوسٹل یونین (یو پی یو) کی واحد ریسٹکٹڈ  یونین ہے، جو اقوام متحدہ کی خصوصی ایجنسی ہے۔ اے پی پی یو کا مقصد رکن ممالک کے درمیان پوسٹل تعلقات کو بڑھانا، سہولت فراہم کرنا اور بہتر بنانا اور پوسٹل سروسز کے شعبے میں تعاون کو فروغ دینا ہے۔ یو پی یو کے مختلف پراجیکٹو کے  لئےعلاقائی مرکز کے طور پر، اے پی پی یو اس بات کو یقینی بنانے میں بھی پیش پیش ہے کہ یو پی یو کے تمام تکنیکی اور آپریشنل پروجیکٹوں کو خطے میں مکمل کیا جائے تاکہ یہ خطہ بہترین ممکنہ طریقے سے عالمی پوسٹل نیٹ ورک کے ساتھ مربوط  ہو جائے۔ سیکرٹری جنرل یونین کی سرگرمیوں کی قیادت کرتے ہیں اور  وہ ایشین پیسفک پوسٹل کالج (اے پی پی سی) کے ڈائریکٹر بھی ہیں جو خطے میں سب سے بڑا بین سرکاری پوسٹل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ ہے۔

یونین کے لیے اپنے وژن کے بارے میں ڈاکٹر وی پی سنگھ نے بتایا کہ  ’’میرا مقصد پوسٹل نیٹ ورک کے ذریعے کاروبار کی ترقی کو بہتر بنانے ، یونین کی پائیداری کو یقینی بنایا نے، اور اے پی پی سی میں پیش کیے جانے والے تربیتی کورسز کو بہتر بنانے کے لئے ایشیا پیسیفک خطے میں پوسٹل پلیئرز کے ساتھ علاقائی رابطہ کو بہتر بنانا ہے ۔‘‘  ایشیا بحر الکاہل  خطہ  میں مجموعی  عالمی میل کاتقریباً آدھا جنریٹ کی اجاتا ہے اور اس کے پاس عالمی ڈاک  کے انسانی وسائل کا تقریباً ایک تہائی حصہ ہے۔

ڈپارٹمنٹ آف پوسٹس کے سکریٹری  جناب ونیت پانڈےنے کہا ’’یہ پہلا موقع ہے جب کوئی ہندوستانی ڈاک کے شعبے میں کسی بین الاقوامی تنظیم کی قیادت کر رہا ہے۔ اس شعبے کے لیے اس اہم موڑ پر، خصوصی طور پر اس سال  ہندوستان کی  جی 20 صدارت  شروع ہونے پر محکمہ کے لیے یہ اعزاز کی بات ہے کہ اس کا افسر یونین کی سرگرمیوں کی قیادت کرے۔‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ ’’ہندوستان اے پی پی یو کو اپنی مکمل حمایت جاری رکھے گا اور اے پی پی یو کی رکنیت کے اجتماعی وژن کو موثر انداز میں عملی جامہ پہنانے کے لیے اپنے تعاون کو مزید مضبوط کرے گا۔‘‘

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔ا گ۔ن ا۔

U-78   



(Release ID: 1888392) Visitor Counter : 152