سائنس اور ٹیکنالوجی کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav

ہندوستان اور امریکہ کے مختلف حصوں کے طلبا اور سائنس دانوں نے خلائی تابکاری کے ماحول کی خصوصیات پر تبادلہ خیال کیا

Posted On: 28 JAN 2022 3:32PM by PIB Delhi

 

ہندوستان اور امریکہ کے ڈومین ماہرین اور طلبا نے 24 سے 28 جنوری 2022 تک منعقد ہونے والے ”خلائی تابکاری ورکشاپ: سورج سے زمین تک تابکاری کی خصوصیت“ کے موضوع پر ہند-امریکی ورکشاپ میں خلائی تابکاری کے ماحول کی خصوصیات سے لے کر فلکیات اور اس میں مصنوعی ذہانت اور مشین لرننگ ٹولز کے استعمال تک کے مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔

اسرو کے سابق چیئرمین جناب کرن کمار نے 26 جنوری 2022 کو اپنے کلیدی خطاب میں ہندوستان کے پچھلے خلائی مشنوں کا ایک جائزہ پیش کیا اور 2025 تک کے نئے مشنوں کا روڈ میپ تیار کیا۔

انھوں نے کہا کہ چندریان 1 اسرو کے لیے ایک اہم مشن تھا، اور اس نے ہمارے لیے چاند کے بارے میں تصور کو بدل دیا، جس میں چاند پر OH اور پانی کے سالموں کی دریافت بھی شامل ہے۔ Mars Orbiter Mission نے مریخ کا مطالعہ کرتے ہوئے 7 سال مکمل کر لیے ہیں۔ AstroSat مشن پہلی وقف فلکیاتی آبزرویٹری ہے جسے ہندوستان نے مدار میں رکھا ہے۔ یہ بہت سے قومی اداروں کے درمیان ایک بڑا تعاون ہے اور اس نے فلکیاتی تحقیق میں بڑی تعداد میں اہم مطالعات کے لیے ڈیٹا فراہم کیا ہے۔ چندریان 2 کا مدار صحت مند ہے، اور تمام پے لوڈز کام کر رہے ہیں۔ خلائی جہاز مزید کئی سالوں تک کام کر سکتا ہے۔ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ آدتیہ-L1 مشن کے لیے سیٹلائٹ کی تیاری، تکمیل کے قریب ہے جو سورج کا مطالعہ کرے گی، اور اس سال اسے لانچ کیا جائے گا۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ مستقبل میں اسرو اور جاپان ایرو اسپیس ایکسپلوریشن ایجنسی (JAXA) چاند کی تلاش کے مشن پر تعاون کریں گے۔

5 روزہ ورکشاپ میں ہر دن کے لیے ایک موضوع تھا – زمین، ہوا، اور خلائی جہاز، ایکسپلوریشن، اسپیس ریڈی ایشن اینڈ بائیولوجی، اسپیس سیچوشنل آگاہی اور مواقع۔ اس میں کائناتی شعاعوں، شمسی نگرانی، خلائی تحقیق، خلائی موسم اور مصنوعی سیاروں اور خلابازوں پر اس کے اثرات، فلکیات، متعلقہ شعبوں میں کام کرنے والے ماہرین کی طرف سے غبارے پر مبنی مطالعات جیسے مختلف موضوعات پر بات چیت کی گئی۔ ان شعبوں میں مصنوعی ذہانت اور مشین لرننگ ٹولز کے استعمال کے حوالے سے ہینڈ آن سیشنز بھی منعقد کیے گئے جو کہ جدید ڈیٹا کے تجزیوں اور ماڈلنگ تکنیکوں میں کارآمد ہیں۔ ورکشاپ میں یو ایس انڈیا خلائی ریسرچ ڈائیلاگ سیشن بھی شامل تھا جس میں ہندوستان اور امریکہ کے نامور سائنسدان شامل تھے۔

 

انڈین اسپیس ریسرچ آرگنائزیشن (ISRO) کے سابق چیئرمین جناب A.S. کرن کمار کلیدی خطبہ دیتے ہوئے

 

ورکشاپ میں ہندوستانی شرکا کی تقسیم

جناب اے ایس کرن کمار کے کلیدی خطاب کے دوران گروپ فوٹو

                                               **************

ش ح۔ ف ش ع- ع ا  

U: 827



(Release ID: 1793435) Visitor Counter : 59