صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت

کووڈ ٹیکہ کاری  میں نجی سیکٹر کی شراکت داری  کو  بڑھا یا گیا

ریاستوں کے ذریعے، آیوشمان بھارت  - پی ایم جے ای وائی کے تحت  تقریبا 10 ہزار اسپتالوں اور  سی جی ایچ ایس کے تحت ، 687 اسپتالوں

کو، کووڈ ٹیکہ کاری مرکز (سی وی سی) کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے

ریاستوں کو سی وی سی کے طور پر ریاستی سرکار  ہیلتھ انشورنس اسکیم  کے تحت  تمام نجی اسپتالوں کا  استعمال کرنے کی منظوری دی گئی

ریاستیں  نجی  سیکٹر کے تمام اداروں اور  سرکاری  صحت  سہولیات کا سی وی سی کی  شکل میں استعمال کر سکتی ہیں

سی وی سی  کی شکل میں کام کرنے والے نجی اسپتال فی خوراک  کے لئے ایک شخص  سے 250  روپے  تک کی  زیادہ سے زیادہ  قیمت لے سکتے ہیں

Posted On: 27 FEB 2021 7:04PM by PIB Delhi

نئی دہلی،27؍فروری  :  مرکزی صحت سکریٹری  جناب راجیش بھوشن نے  آج  ویڈیو کانفرنس کے توسط سے  مناسب عمر  کے  زمروں  کی ٹیکہ کاری پر  ریاستوں اور  مرکز  کے زیر انتظام  ریاستوں  کے  صحت  سکریٹریوں اور  ایم ڈی (این ایچ ایم) کے ساتھ  بات چیت کی۔

ملک گیر سطح پر  کووڈ  -19  ٹیکہ کاری  مہم کا آغاز  16  جون  2021  کو کیا گیا تھا۔ اس تاریخ سے  صحت کی دیکھ بھال  کرنے والے کارکنان  (ایچ سی ڈبلیو)  کو  کووڈ ویکسین کی  پہلی خوراک دی گئی تھی، جب کہ  فرنٹ لائن  ورکرس  (ایف ایل ڈبلیو)  کو  اس  ٹیکہ کاری مہم میں  2  فروری 2021  سے  شامل کیا  گیا تھا۔ اب تک 1.5  کروڑ  سے زیادہ  لوگوں کی  ٹیکہ کاری  کی جا چکی ہے۔

اس ملک  گیر  ٹیکہ کاری پروگرام کو  اب  یکم مارچ  2021  سے  درج ذیل عمر – زمروں میں  تیزی کے ساتھ  وسعت  دی  جائے گی۔

1-      60 سال سے  زیادہ عمر کے  تمام شہری  اور ،

2-      مقرر شدہ  ضوابط  کے ساتھ  45  سے  59  سال کی  عمر  زمرے کے  اندر کے  تمام شہری ۔

کووڈ  ٹیکہ کاری  صلاحیت کو  کئی گنا  بڑھانے کے لئے  بڑی تعداد میں  نجی  صحت  سہولیات کو  اس میں شامل کیا جا رہا ہے۔ آیوشمان بھارت  پی ایم جے اے وائی  کے تحت تقریبا 10  ہزار  نجی اسپتالوں  اور  سی جی ایس سی  کے تحت  600  سے زیادہ اسپتالوں کے  ساتھ ساتھ  ریاستی سرکار کے  ماتحت  دوسرے نجی اسپتالوں کو  فہرست بند کیا گیا ہے۔ ہیلتھ انشورنس  منصوبے بھی  کووڈ  ٹیکہ کاری  مرکز  ( سی وی سی)  کے طور پر  شراکت داری  کر سکتے ہیں۔ ریاستی  سرکاروں  کے  محکمہ  صحت نے  پہلے سے ہی  ان نجی اسپتالوں کے ساتھ بات چیت  کا آغاز کردیا ہے تاکہ انہیں  سی وی سی کی شکل میں  اس مہم میں  حصہ لینے کے لئے  متحرک کیا جاسکے۔ ان تمام نجی اسپتالوں کی  ایک فہرست  صحت اور  خاندانی بہبود  کی وزارت اور  نیشنل ہیلتھ  اتھارٹی  کی  ویب سائٹ پر  اپ لوڈ کی گئی ہے، انہیں درج ذیل  ویب سائٹ پر  دیکھا جاسکتا ہے۔

a) https://www.mohfw.gov.in/pdf/CGHSEmphospitals.xlsx          

b) https://www.mohfw.gov.in/pdf/PMJAYPRIVATEHOSPITALSCONSOLIDATED.xlsx

اس کے علاوہ سرکاری صحت سہولیات  جیسے  میڈیکل  کالج  ، اسپتالوں، ضلع اسپتالوں، ذیلی شعبہ  اسپتالوں ، سی ایچ سی  اور پرائمری صحت مراکز  ، ذیلی  صحت مراکز  اور  صحت و  دیکھ بھال کے  مراکز کو  سی وی سی کے طور  پر استعمال کیا جائے گا۔ ان تمام  صحت سہولیات کے جی پی ایس  ہدایات کے ساتھ  سی وی سی  کے طور پر کام کرنے والے تمام مراکز  کے جی او حوالہ جاتی  نقشے  تیار کئے گئے ہیں اور  یہ نقشے  تمام ریاستوں کے ساتھ  ساجھا بھی کئے جارہے ہیں۔

تمام سرکاری  کووڈ  ٹیکہ کاری  مراکز پر  یہ  مفت کیا جائے گا  اور اس  ٹیکہ کاری کا تمام خرچ  مرکزی سرکار  برداشت کرے گی۔

سرکاری کووڈ  ٹیکہ کاری  مراکز  کے طور پر  کام کرنے والی تمام  نجی  صحت  سہولیات کو  قومی  کو-  وِن  تکنیکی پلیٹ فارم کے  ساتھ  یکجا  کرتے ہوئے  مسلسل عمل  ،معیار  اور  حفاظت  کے  سخت  معیارات پر عمل کیا جانا چاہئے۔ تمام  نجی صحت سہولیات  میں  مناسب جگہ ،  کولڈ چین کی  مناسب دستیابی، ٹیکہ لگانے والے  اور  معاون  ملازمین کی  مناسب تعداد  اور  ٹیکہ کاری کے  بعد ہونے والے کسی  منفی  صورت حال  (اے ای ایف آئی)  کو  سنبھالنے کے لئے  مناسب  انتظام ہونا چاہئے۔

 ریاستوں کو  اندراج کے  تین  طریقوں  یعنی  پیشگی، خود  اندراج،  آن سائٹ  اندراج  اور  سہولیت کے  تال میل کے ساتھ اندراج کی بھی  معلومات دی گئی۔

ریاستوں کو  معلوم دی گئی  کہ  سی وی سی کے طور پر  کام کرنے والے  نجی اسپتال  اس سلسلے میں  الیکٹرانک اور  مالی  نظم  میکنزم کے ساتھ  فی شخص کے لئے  فی خوراک، زیادہ سے زیادہ  250  روپے  کی فیس لے سکتے ہیں۔ میٹنگ کے دوران  کووِن 2.0  کے  مناسب  استعمال کی  سہولت کے لئے  نجی  صحت  سہولیات کو  صارفین کے نام  اور  پاس ورڈ بھی  مہیا کئے جانے پر  بات چیت کی گئی۔

اس کے علاوہ قریب ترین  کولڈ چین  مقامات کے ساتھ  نجی  سہولیات کی میپنگ کے توسط سے  ریاستوں کو  ٹیکوں کی بلا رکاوٹ  دستیابی کو  یقینی  بنانے   سے متعلق بھی  اطلاعات  فراہم کی گئیں۔

45- 59 سال کی عمر کے زمرے کے  اندر  20 معاون  نشانات  والے  افراد کی  نشان دہی کرنے کی آسان  ترکیب  کے سلسلے میں بھی  ریاستوں کو  معلومات فراہم کی گئیں۔ ایک صفحہ کے آسان سرٹیفکٹ کو  کسی بھی  رجسٹرڈ  صحت پیشہ ور  کے ذریعے  دستخط  کئے جانے والا فارم  ضمیمہ-1  میں ہے۔ سرٹیفکٹ کو  یا تو  مستفیدین کے  از خود  اندراج  کے ذریعے  کو وِن 2.0  پر  اپ لوڈ کیا جاسکتا ہے یا  مستفیدین کے ذریعے  ایک ہارڈ کاپی  سی وی سی کو دی جاسکتی ہے۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

(ش ح-ج ق- ق ر)

U-326



(Release ID: 1705059) Visitor Counter : 47