جدید اور قابل تجدید توانائی کی وزارت

امریکہ – بھارت اسٹریٹجک صاف توانائی ساجھیداری کے تحت قابل تجدید توانائی ٹیکنالوجی ایکشن پلیٹ فارم

Posted On: 30 AUG 2023 6:21PM by PIB Delhi

اسٹریٹجک  صاف توانائی  ساجھیداری  کے تحت  ایک نیا امریکہ – بھارت  قابل تجدید  توانائی  ٹیکنالوجی  ایکشن پلیٹ فارم (ری ٹیپ)  کو لانچ کرنے کی خاطر امریکہ کے محکمہ توانائی  (ڈی او ای)  اور  حکومت ہند کی نئی  اور قابل تجدید توانائی کی وزارت (ایم این آر ای)  کے درمیان ایک میٹنگ 29  اگست 2023  کو منعقد کی گئی۔ اسٹریٹجک کلین انرجی پارٹنرشپ،  ری ٹیپ  کا اعلان 22 جون، 2023 کو واشنگٹن ڈی سی میں امریکہ کے صدر جوزف آر بائیڈن اور وزیر اعظم جناب نریندر مودی کے درمیان  ہونے والی میٹنگ کے دوران کیا گیا تھا، جس میں  جب دونوں رہنماؤں نے صاف توانائی کی منتقلی کو تیز کرنے کے لیے ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز اور نئے تعاون کو بڑھانے کا اعلان کیا تھا۔ یہ لانچ لیڈروں کے ویژن کو حقیقت میں تیزی سے بدلنے  کی ترجمانی کرتا ہے۔

ڈی او ای کے ڈپٹی سکریٹری ڈیوڈ ترک اور ایم این آر ای  کے سکریٹری بھوپندر سنگھ بھلا کی قیادت میں، ری ٹیپ کا قیام نتیجہ پر مبنی، وقت کے پابند ٹیکنالوجی پر توجہ کے ساتھ دو طرفہ تعاون کو مزید آگے بڑھانے کے لیے کیا گیا تھا۔ اس کا مقصد نئی اور ابھرتی ہوئی قابل تجدید توانائی کی  ٹیکنالوجیوں کو تعیناتی اور فروغ  کی جانب پیش رفت کرنا ہے۔ ری ٹیپ کی ابتدائی توجہ سبز/ کلین ہائیڈروجن، ونڈ انرجی، طویل دورانیے کی توانائی ذخیرہ کرنے، اور مستقبل میں باہمی طور پر طے شدہ جیوتھرمل توانائی، سمندری/ سمندری توانائی اور دیگر ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز کو تلاش کرنا ہے۔

ڈی او ای اور  ایم این آر ای  نے ری ٹیپ  تعاون کے حوالے سے کام کا ایک ابتدائی  خاکہ  پیش کیا ہے۔  یہ کام پانچ موضوعات  کے تحت کیا جائے گا:

  • تحقیق و ترقی
  • اختراعی ٹیکنالوجیز کا تجربہ  اور  آزمائش
  • اعلی درجے کی تربیت اور مہارت کا فروغ
  • آر ای ٹی  اور ٹیکنالوجیز کو فعال بنانے  کے لیے پالیسی اور منصوبہ بندی
  • سرمایہ کاری، تعاون اور آؤٹ ریچ پروگرام

میٹنگ کے دوران، وفود نے ہر ملک میں ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجی کی ترقی کے بارے میں معلومات کا اشتراک کیا، جس میں  ہائیڈروجن، توانائی ذخیرہ کرنے، ہوا، جیوتھرمل توانائی، اور سمندری قابل تجدید توانائی کی ٹیکنالوجیز، اور صاف توانائی کی تعیناتی کے پروگرام شامل ہیں۔

آگے بڑھتے ہوئے، ڈی او ای  اور ایم این آر ای  نے  ری ٹیپ  اسٹیئرنگ کمیٹی ، مشترکہ  ورکنگ گروپوں کی تشکیل کے ذریعہ  امکانات سمیت  ری ٹیپ  کے اشتر اک کو بڑھانے اور   موضوعات  کے ماہرین کے درمیان  تعاون  کو بڑھانے  پر زور دیا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

(ش ح- وا - ق ر)

U-9006



(Release ID: 1953575) Visitor Counter : 113


Read this release in: English , Hindi , Punjabi , Telugu