امور صارفین، خوراک اور عوامی تقسیم کی وزارت

جناب پیوش گوئل آئی ایس او سی او پی او ایل سی او کی 44ویں مکمل میٹنگ کا افتتاح کریں گے


مکمل کلیدی نوٹ: صارفین کے تعلقات کے چیلنجز اور اچھے طرز عمل ایک پائیدار مستقبل کے صارفین کے تحفظ اور قانونی فریم ورک کے لیے صارفین کو بااختیار بناتے ہیں

آئی ایس او کوپولکو کی مکمل میٹنگز کا عالمی معیشت اور لوگوں کی زندگیوں پر اہم اثر پڑتا ہے

Posted On: 22 MAY 2023 1:30PM by PIB Delhi

بھارت 23 سے 26 مئی 2023 کو نئی دلی میں باوقار آئی ایس او کوپولکو سالانہ مکمل اجلاس کے 44ویں ایڈیشن کی میزبانی کر رہا ہے۔ اس تقریب کا افتتاح کامرس اور صنعت، صارفین کے امور اور خوراک اور عوامی تقسیم اور ٹیکسٹائل کے مرکزی وزیر جناب پیوش گوئل کریں گے۔ کوپلکو کی صدر محترمہ سیڈی ڈینٹون ، آئی ایس او کے سیکرٹری جنرل مسٹر سرجیو موجیکا اور آئی ایس او کے دیگر اعلیٰ حکام بھی اس تقریب میں شرکت کریں گے۔

آئی ایس او کوپلکو، یا کمیٹی آن کنزیومر پالیسی، بین الاقوامی تنظیم برائے معیاری کاری (آئی ایس او) کی ایک کمیٹی ہے جو معیاری کاری کے عمل میں صارفین کے مفادات کو فروغ دینے اور اس بات کو یقینی بنانے کے لیے ذمہ دار ہے کہ معیارات صارفین کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے تیار کیے جائیں۔ بیورو آف انڈین اسٹینڈرڈز (بی آئی ایس) کے زیر اہتمام ہونے والے اس میگا ایونٹ میں دیگر مخصوص سرگرمیوں کے علاوہ بھارت  کے قومی معیارات کے ادارے سے متعلقہ موضوعات پر انٹرایکٹو سیشنز اور ورکشاپس بھی ہوں گی جن کا مقصد معیاری کاری کے عمل میں صارفین کی بات چیت ہے۔

چار روزہ ایونٹ میں حکومتی اور کاروباری شعبوں کے سربراہان اور نامور عالمی اسٹیک ہولڈرز کے بین الاقوامی وفود کی نمایاں موجودگی نظر آئے گی۔ اس سال کی مکمل میٹنگ میں عوام پر مبنی نقطہ نظر اور 'صارفین کے تعلقات کے لیے چیلنجز اور اچھے طرز عمل'، 'ایک پائیدار مستقبل کے لیے صارفین کو بااختیار بنانا' اور 'صارفین کا تحفظ اور قانونی ڈھانچہ' جیسے موضوعات پر بات چیت ہوگی جو بھارت  کے لیے بہت دلچسپی کے حامل ہیں۔ اور بین الاقوامی برادری کے لیے خاص طور پر اہم ہے۔

کنکلیو میں مختلف موضوعات پر ورکشاپس کا اہتمام کیا جائے گا اور اس کے علاوہ اجلاس سے مختلف اعلیٰ سطحی مقررین اور وزراء خطاب کریں گے۔ 26 مئی کو ختم ہونے والے اس پروگرام میں صارفین کی بات چیت سے متعلق موضوعات پر پینل ڈسکشن بھی ہوں گے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ آئی ایس او کوپولکو پلینری میٹنگ کا عالمی معیشت کے ساتھ ساتھ لوگوں کی زندگیوں پر بھی نمایاں اثر پڑتا ہے۔

بین الاقوامی معیار کی تنظیم (آئی ایس او) ایک بین الاقوامی ادارہ ہے اور دنیا کے 168 ممالک اس کے رکن ہیں۔ یہ تنظیم وسیع پیمانے پر کاروباری اور سماجی شعبوں کو متاثر کرنے والے عالمی معیارات تیار کرتی ہے۔ ان کی کنزیومر کمیٹی آن اسٹینڈرڈز ڈیولپمنٹ (کوپلکو) کے ذریعے، آئی ایس او معیاری بنانے کے عمل میں وسیع تر عوام کو شامل کرتا ہے۔ لہذا، آئی ایس او کوپلکو کے مکمل اجلاس کو ایک بڑا بین الاقوامی ایونٹ سمجھا جاتا ہے جس میں آئی ایس او کے رکن ممالک کے نمائندوں کو دنیا میں معیارات کی ترقی کو تیز کرنے کے لیے بات چیت اور حکمت عملی تیار کرنے کا موقع ملتا ہے۔

بھارت  ایک طویل عرصے سے بین الاقوامی معیار سازی کے معاملات میں سرگرم عمل ہے اور بین الاقوامی تنظیم برائے معیاری کاری (آئی ایس او) کے بانی اراکین میں سے ایک ہے۔

بھارت  کے قومی معیار کے ادارے کے طور پر، بی آئی ایس بین الاقوامی اور علاقائی معیار سازی کے معاملات میں سرگرم عمل ہے۔ بی آئی ایس انٹرنیشنل آرگنائزیشن فار اسٹینڈرڈائزیشن (آئی ایس او) کا رکن ہے اور انڈین نیشنل کمیٹی (آئی این سی) کے ذریعے بین الاقوامی الیکٹرو ٹیکنیکل کمیشن (آئی ای سی) کا بھی رکن ہے۔ بی آئی ایس علاقائی معیار کے اداروں کا رکن بھی ہے جیسے کہ پیسیفک ایریا سٹینڈرڈز کانگریس (پی اے ایس سی) اور آئی بی ایس اے (انڈیا، برازیل اور جنوبی افریقہ) کے فریم ورک کے تحت جنوبی ایشیائی علاقائی معیارات کی تنظیم (ایس اے آر ایس او)۔

۔۔۔۔

 

 

ش ح۔ا س۔  ت ح ۔                                              

U5382



(Release ID: 1926519) Visitor Counter : 94