الیکٹرانکس اور اطلاعات تکنالوجی کی وزارت

یو آئی ڈی اے آئی آدھار میں آن لائن دستاویز کو مفت میں اپ ڈیٹ کرتی ہے، تاکہ لاکھوں باشندوں کو فائدہ پہنچایا جاسکے

Posted On: 15 MAR 2023 7:09PM by PIB Delhi

یونیک آئیڈینٹی فکیشن اتھارٹی آف انڈیا (یو آئی ڈی اے آئی) نے رہائشیوں کو اپنے آدھار میں دستاویزات کو مفت میں آن لائن اپ ڈیٹ کرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے، یہ ایک عوام دوست اقدام ہے جس سے لاکھوں باشندوں کو فائدہ ہوگا۔

ڈیجیٹل انڈیا پہل کے ایک حصے کے طور پر، یو آئی ڈی اے آئی نے یہ فیصلہ لیا اور رہائشیوں پر زور دے رہی ہے کہ وہ مائی آدھار  myAadhaar  پورٹل پر مفت دستاویز اپ ڈیٹ کرنے کی سہولت کا فائدہ اٹھائیں۔ یہ مفت سروس اگلے تین مہینوں کے لیے دستیاب ہے، یعنی 15 مارچ سے 14 جون، 2023 تک۔ یہ نوٹ کرنا ضروری ہے کہ یہ سروس صرف myAadhaar پورٹل پر مفت ہے اور شخصی آدھار مراکز پر 50 روپے کی فیس لی جاتی رہے گی، جیسا کہ پہلے لی جاتی تھی۔

یو آئی ڈی اے آئی رہائشیوں کو شناخت کا ثبوت اور پتہ کا ثبوت (PoI/PoA) دستاویزات اپ لوڈ کرنے کی ترغیب دے رہا ہے تاکہ ان کی آبادیاتی تفصیلات کو دوبارہ درست کیا جا سکے، خاص طور پر اگر آدھار 10 سال پہلے جاری کیا گیا تھا اور اسے کبھی اپ ڈیٹ نہیں کیا گیا ہے۔ اس سے زندگی گزارنے میں آسانی، بہتر خدمات کی فراہمی اور تصدیق کی کامیابی کی شرح کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔

اگر آبادیاتی تفصیلات (نام، تاریخ پیدائش، پتہ، وغیرہ) کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہو تو، رہائشی باقاعدگی سے آن لائن اپ ڈیٹ سروس استعمال کر سکتے ہیں، یا قریبی آدھار سنٹر پر جا سکتے ہیں۔ ایسے معاملات میں نارمل چارجز لاگو ہوں گے۔

رہائشی اپنے آدھار نمبر کا استعمال کرتے ہوئے https://myaadhaar.uidai.gov.in/ پر لاگ اِن کر سکتے ہیں۔ ون ٹائم پاس ورڈ (او ٹی پی) رجسٹرڈ موبائل نمبر پر بھیجا جائے گا، متعلقہ شخص کو صرف ’ڈاکیومنٹ اپ ڈیٹ‘ پر کلک کرنا ہوگا اور رہائشی کی موجودہ تفصیلات سامنے آجائیں گی۔ آدھار ہولڈر کو تفصیلات کی تصدیق کرنے کی ضرورت ہوگی، اگر وہ درست ہوں۔ اگر وہ درست ہوں تو اگلے ہائپر لنک پر کلک کریں۔ اگلی اسکرین میں، رہائشی کو ڈراپ ڈاؤن لسٹ سے شناخت کے ثبوت اور ایڈریس کے ثبوت کے دستاویز کا انتخاب کرنا ہوگا اور اپنے دستاویزات کو اپ ڈیٹ کرنے کے لیے اس کی کاپیاں اپ لوڈ کرنی ہوں گی۔ تازہ ترین اور قابل قبول پی او اے اور پی او آئی دستاویزات کی فہرست یو آئی ڈی اے آئی کی سرکاری ویب سائٹ پر دستیاب ہے۔

پچھلی دہائی کے دوران، آدھار نمبر ہندوستان کے باشندوں کے لیے شناخت کے عالمی طور پر تسلیم شدہ ثبوت کے طور پر ابھرا ہے۔ تقریباً 1,200 سرکاری اسکیمیں اور پروگرام، جو مرکزی اور ریاستی حکومتوں کے ذریعہ چلائے جاتے ہیں، خدمات کی فراہمی کے لیے آدھار پر مبنی شناخت کا استعمال کر رہے ہیں۔ اس کے علاوہ، سروس فراہم کنندگان کی طرف سے کئی دیگر خدمات، جن میں بینک، این بی ایف سی وغیرہ جیسے مالیاتی ادارے بھی شامل ہیں، بغیر کسی رکاوٹ کے صارفین کی تصدیق اور آن بورڈ کرنے کے لیے آدھار کا استعمال کر رہے ہیں۔

آدھار اندراج اور اپ ڈیٹ کے ضوابط، 2016 کے مطابق؛ آدھار نمبر رکھنے والے، آدھار کے لیے اندراج کی تاریخ سے ہر 10 سال مکمل ہونے پر، کم از کم ایک بار، پی او آئی اور پی او اے دستاویزات جمع کر کے آدھار میں اپنے معاون دستاویزات کو اپ ڈیٹ کر سکتے ہیں، تاکہ ان کی معلومات کی مسلسل درستگی کو یقینی بنایا جا سکے۔

 

******

ش ح۔ م م۔ م ر

U-NO.2769

15.03.2023



(Release ID: 1907407) Visitor Counter : 203