وزارت خزانہ
azadi ka amrit mahotsav g20-india-2023

مالی سال 23-2022 کے لیے 15.67 لاکھ کروڑ روپے   براہ راست ٹیکس وصولیاں - 10.02.2023 تک گزشتہ سال کی اسی مدت کے مجموعی وصولیوں سے 24.09 فیصد زیادہ


براہ راست ٹیکس کی وصولی، ریفنڈز کا  رقم ،  12.98 لاکھ کروڑ روپے ہے - جو پچھلے سال کی اسی مدت کی وصولیوں سے 18.40 فیصد زیادہ ہے

Posted On: 11 FEB 2023 12:34PM by PIB Delhi

10 فروری 2023 تک براہ راست ٹیکس کی وصولیوں کے عارضی اعداد و شمار میں مسلسل اضافہ جاری ہے۔ 10 فروری 2023 تک براہ راست ٹیکس کی وصولیوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ مجموعی وصولی روپے ہے۔ 15.67 لاکھ کروڑ جو کہ گزشتہ سال کی اسی مدت کے مجموعی رقم سے 24.09 فیصد زیادہ ہے۔ براہ راست ٹیکس کی وصولی، ریفنڈز 12.98 لاکھ کروڑ روپے ہے جو گزشتہ سال کی اسی مدت کے وصولی سے 18.40 فیصد زیادہ ہے۔  جو کہ گزشتہ سال کی اسی مدت کی  مجموعہ رقم سے 18.40 فیصد زیادہ ہے۔  یہ مجموعی رقم مالی سال کے لیے براہ راست ٹیکسوں کے کل بجٹ تخمینوں کا 91.39 فیصد ہے۔ یہ مجموعہ مالی سال 23-2022 کے براہ راست ٹیکسوں کے کل بجٹ تخمینوں کا 91.39 فیصد اور مالی سال 23-2022 کے براہ راست ٹیکسوں کے نظرثانی شدہ تخمینوں کا 78.65 فیصد ہے۔

جہاں تک کارپوریٹ انکم ٹیکس (سی آئی ٹی) اور پرسنل انکم ٹیکس (پی آئی ٹی) کی مجموعی آمدنی کے لحاظ سے شرح نمو کا تعلق ہے، سی آئی ٹی کی شرح نمو 19.33 فیصد ہے جبکہ پی آئی ٹی (بشمول ایس ٹی ٹی) کی شرح نمو 29.63 فیصد ہے۔ ریفنڈ کی ایڈجسٹمنٹ کے بعد، سی آئی ٹی وصولی میں نمو 15.84 فیصد اور پی آئی ٹی وصولی میں 21.93فیصد  (صرف پی آئی ٹی)/ 21.23 (پی آئی ٹی بشمول سی ٹی ٹی ) ہے۔

روپے کی رقم کی واپسی 1 اپریل 2022 سے 10 فروری 2023 کے دوران 2.69 لاکھ کروڑ روپے جاری کیے گئے ہیں، جو پچھلے سال کی اسی مدت کے دوران جاری کیے گئے ریفنڈز سے 61.58 فیصد زیادہ ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔ ا س۔ ت ح۔

U -1524



(Release ID: 1898329) Visitor Counter : 88