وزارت دفاع
azadi ka amrit mahotsav

وزارت دفاع ‘آزادی کا امرت مہوتسو’ منانے کے لیے کوانٹم کمیونیکیشن ٹیکنالوجی میں زبردست اضافہ کرنے کے لیے تیار ہے


بنگلورو میں قائم اسٹارٹ اپ، آئی ڈیکس کے تحت کوانٹم تقسیم کاری نظام کے ذریعے جدید ترین محفوظ مواصلات کو اختراع کرتا ہے

بھارتی فوج کامیاب آزمائشوں کے بعد تجارتی آر ایف پی جاری کرتی ہے

Posted On: 14 AUG 2022 1:28PM by PIB Delhi

جب ملک آزادی کے 75 سال مکمل ہونے پر ’آزادی کا امرت مہوتسو‘ منا رہا ہے، بھارت اپنی مسلح افواج کو اعلیٰ قسم کے دفاع سے لیس کرنے کے لیے مقامی اور زیادہ جدید کوانٹم مواصلاتی ٹیکنالوجی کے ساتھ عالمی قائد ملکوں کی فہرست میں شامل ہونے کے لیے پوری طرح تیار ہے۔ دفاعی مہارت کیلئے اختراع (آئی ڈیکس) – دفاعی اختراعی ادارہ (ڈی آئی او) کے زیراہتمام بنگلور میں قائم ایک ڈیپ ٹیک اسٹارٹ اپ کیو این یو لیبز نے کوانٹم کی تقسیم کاری (کیو کے ڈی) نظام کے ذریعے جدید ترین محفوظ مواصلات کو اختراع کرکے فاصلے کی رکاوٹوں کو ختم دیا ہے۔ یہ پروجیکٹ دفاعی مہارت کیلئے اختراع (آئی ڈیکس) – دفاعی اختراعی ادارہ (ڈی آئی او) نے بھارتی فوج کے ساتھ مل کر تیار کیا تھا۔ کامیاب آزمائشوں کے بعد اب بھارتی فوج نے کیو این یو لیبز کے ذریعے تیار کردہ کیو کے ڈی سسٹمز کی خریداری کا عمل شروع کر دیا ہے جس کے ذریعے تجارتی درخواست برائے تجویز (آر ایف پی) اور اس کی تعیناتی جاری کی گئی ہے۔

 کوانٹم ٹیکنالوجی میں فوجی استعمال کی بہت بڑی صلاحیت ہے اور جدید دور کی جنگ پر ایک خلل ڈالنے والا اثر ہے۔ ایک کیو کے ڈی نظام زمینی آپٹیکل فائبر انفراسٹرکچر میں مخصوص فاصلے (اس صورت میں 150 کلومیٹر سے زیادہ) سے الگ ہونے والے دو اختتامی نقطوں کے درمیان ہم آہنگی کی ایک کوانٹم محفوظ خفیہ جوڑی بنانے کی اجازت دیتا ہے۔ کیو کے ڈی غیر ہیک ایبل انکرپشن کیز بنانے کے لیے ایک نان ہیک ایبل کوانٹم چینل بنانے میں مدد کرتا ہے جو کہ اہم ڈیٹا/وائس/ویڈیو کو انکرپٹ کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

 اسٹارٹ اپ کی کامیابی سے خوش ہوکر دفاع کے سکریٹری ڈاکٹر اجے کمار نے مقامی طور پر کیو کے ڈی ٹیکنالوجی کی ترقی کو ‘آزادی کا امرت کال’ میں ایک اہم سنگ میل اور ‘آتم نربھر بھارت’ کی کامیابی کی ایک بہترین کہانی قرار دیا۔ انہوں نے گہری ٹیک میں کام کرنے والے آئی ڈی ای ایکس اسٹارٹ اپس کی کوششوں کو سراہا کیونکہ وہ مسلح افواج کو جدید اور مستقبل کی جنگ کے جدید حل سے آراستہ کر رہے ہیں۔ سکریٹری دفاع نے دفاعی پیداوار کے محکمے، وزارت دفاع،آئی ڈی ای کیس- ڈی آئی او، آرمی ڈیزائن بیورو اور انڈین آرمی سگنلز ڈائریکٹوریٹ کی کوششوں کی بھی تعریف کی، جنہوں نے پہلی بار ملک میں اعلیٰ درجے کی کوانٹم ٹیکنالوجی کی ترقی میں تعاون کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آئی ڈی ای ایکس دفاعی اختراع میں انقلاب لاتا ہے اور لاگت اور وقت کے ایک حصے پر نئے ٹیکنالوجی حل کو فروغ دینے میں مدد کرتا ہے۔

کیو این یو لیبز کے شریک بانی اور سی ای او شری سنیل گپتا نے کہا کہ کوانٹم ٹیکنالوجی کے استعمال کے ذریعے ڈیٹا سیکورٹی کے میدان میں گہری ٹیکنالوجیز میں ہندوستان کو سب سے آگے رکھنے کے وژن نے آخر کار نتیجہ اخذ کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آئی ڈی ای ایکس  کا اوپن چیلنج-2 جیتنے سے کیو این یو لیبز کو یہ شاندار کامیابی حاصل کرنے کے لیے ایک لانچنگ پیڈ فراہم کیا گیا ہے۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔ م ع۔ع ن

 (U: 9137)



(Release ID: 1851840) Visitor Counter : 70


Read this release in: Telugu , English , Hindi , Marathi