الیکٹرانکس اور اطلاعات تکنالوجی کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav g20-india-2023

اِن ٹرانسی – II پروگرام  کے تحت  ، ہندوستانی ٹریفک کے  پس منظر کے لئے  ،  اندرون ملک  تیار انٹیلیجنٹ  نقل وحمل  نظاموں   (آئی ٹی ایس ) کے حل  کا آغاز 

Posted On: 11 APR 2022 12:36PM by PIB Delhi

الیکٹرانکس  او ر  معلوماتی  ٹکنالوجی    کی وزارت  ( ایم  ای آئی ٹی وائی )  کے  اقدام  ،ہندوستانی شہروں  کے لئے   انٹیلیجنٹ   نقل حمل کے نظام    کی کوشش   مرحلہ – II کے تحت  ، ایک  اندرون ملک تیار آن بورڈ  ڈرائیور  اسسٹنس  اور وارننگ  نظام  - او ڈی اے ڈبلیو ایس   ،  بس  سگنل ترجیحی نظام اور  کامن   ایس  مارٹ  آئی او ٹی  کنکٹو  (سی او ایس  ایم  آئی سی ) سافٹ وئیر  کا آغاز کیا۔اس  کا افتتاح  گزشتہ ہفتے   الیکرانکس اور معلومات  ٹکنالوجی کی وزارت   ( ایم ای آئی ٹی وائی ) کے  ایڈیشنل سکریٹری   ڈاکٹر راجندر کمارنے  کیا۔ اس موقع پر  ایم ای آئی ٹی وائی ، کے  (الیکٹرانکس نے تحقیق وترقی  ) جی سی جناب اروند کمار   امریکہ کی  پروڈیو  یونیورسٹی   کے ڈاکٹر ستیس  وی  اُکو سوری    ان ٹرانسی  پروگرام  کے چئیر مین  پروفیسر  ایس پی  کنچا    ،  ایم ای آئی ٹی وائی نے  سائنسٹسٹ  -جی  اور  ایچ  او ڈی     ای ڈی ایس اے  محترمہ سنیتا  ور ما  اور  ایم ای آئی ٹی وائی  کے  سائنٹسٹ   ڈی  جناب کملیش کمار  بھی موجود تھے۔ اس مصنوعات کو ایک مشترکہ  پہل کے طورپر ایڈوانس  کمپیوٹنگ کی  فروخت کے مرکز (سی ڈی اے سی ) اور  مدراس کے   انڈین انسٹی ٹیوٹ آف  ٹکنالوجی  (آئی آئی ٹی- ایم  )  کے ذریعہ  تیار کیا گیا ہے۔ا س  پروجیکٹ کے  لئے مہندرا اینڈ مہندرا صنعتی   شراکتدار   ہے۔

  1. آن بورڈ  ڈرائیور اسسٹنس  اور وارننگ نظام – او ڈی اے ڈبلیو ایس  : شاہراہوں کے  بہتر ہوئے بنیادی ڈھانچے  اور   گاڑیوں  کی تعداد  میں  اضافے کے ساتھ  ،  سڑکوں  پر رفتار میں اضافہ ہوگیا ہے ،جس سے  حفاظتی  تشویش میں مزید  اضافہ  ہوگیا ہے۔ ہندوستان  کی سڑ ک نقل وحمل  اور شاہراہوں کی  وزارت  (ایم اوآر ٹی ایچ )کے مطابق   ،  تقریباََ  84  فیصد معاملات میں  ‘‘ ڈرائیور کی غلطی’’   سامنے آئی ، جو کہ  حادثے کا باعث بنے ۔ یہ  ،ڈرائیونگ کی خامیوں کو کم کرنے میں  ڈرائیوروں  کو  مدد فراہم کرنے اور وارننگ دینے کے لئے ٹکنالوجی کے وسیع  استعمال کے تناظر میں  ،  اہمیت کا حامل ہے۔

او ڈ ی اے ڈبلیو ایس ، ڈرائیور کی  مہارت کی نگرانی   اور  گاڑی کے اطراف   کی  نگرانی کے لئے گاڑی  میں  نصب سینسروں   سے کام لیتا ہے اور ڈرائیور کی مدد کے لئے  علامتی  اور  نظریاتی   الٹر ٹ فراہم کرتا ہے۔اس  پروجیکٹ میں  ذیلی موڈیولز کی تیاری  بھی شامل ہے ،جس میں نیوی گیشن کے  یونٹ  ،  ڈرائیور کی امداد   کے کونسیول  اور  ایم ایم  ویو  راڈار  سینسر  شامل ہیں۔گاڑیوں  کے آس  پاس کی  پوزیشن  جاتی اور  جامع  تفصیلی  خصوصیات کا پتہ  ایم ایم ویو  راڈارسینسروں   کو استعمال کرتے ہوئے لگایا جاتاہے۔نیوی گیشن  کے سینسر  گاڑی کے  ایک  بالکل درست   حیاتیاتی آبادیاتی  گردوپیش کےساتھ ساتھ  ڈرائیونگ کرنے کے برتاؤ  میں رجحانات   کی تفصیلات  بھی فراہم کرتا ہے۔او ڈی اے  ڈبلیو ایس   ، ایلگورتھم  سینسر کے اعداد وشمار کو  پڑھنے   اور ڈرائیور کو حقیقی وقتی   نوٹی فکیشن    فراہم کرنے  نیز  سڑک  پر تحفظ کوفروغ دینے   کے لئے  استعمال کیا جاتا ہے۔

  1. بس  سگنل ترجیحی نظام : ً سرکاری نقل وحمل کے نظام   پر  کم انحصار کرنا  ،لوگوں کے لئے ذاتی گاڑیوں  کا اختیار حاصل کرنے  کی ایک وجہ ہے۔زیادہ مسافروں  کو  سرکاری نقل وحمل کی جانب راغب  کرنے کے لئے اس امر کو بہتر  بنانا لازمی ہے تاکہ   ایک مزید  پائیدار  ٹریفک  کے لئے  حل تلاش کیا جاسکے ۔شہری  علاقوں  میں سرکاری نقل وحمل کی بسوں  کی  تاخیر  کے لئے  بڑی وجوہات   میں  سگنل لگے ہوئے چوراہوں  پر  تاخیر ہونا ہے۔

بس سگنل ترجیحی نظام ایک آپریشن جاتی  حکمت عملی  ہے ،جسے  ٹریفک  کی  معمول کی سگنل کی کارروائیوں کو   سگنل سے کنٹرول ہونے والے چوراہوں  پر  خدمت میں دستیاب  سرکاری بسوں میں  بہتر طورپر  استعمال کیاجاسکتا ہے۔ایک اندھی  ترجیح کے بجائے  ،  جو کہ  ہنگامی گاڑیوں  کے لئےدی جاتی ہے،  یہاں اس میں ایک مشروط ترجیح ہے  ،  جو  صرف اس وقت دی جاتی ہے ، جب تمام  گاڑیوں کے  لئے تاخیر میں مجموعی  طورپر کمی آئے۔بہترکردہ  یہ نظام    پبلک ٹرانسپورٹ کی بسوں کو  ترجیح فراہم کرکے،  افراد کے لئے تاخیر میں  تخفیف کرسکے گا ، جو یا تو  گرین ایکسٹینشن  یا  ریڈ  ٹرنکیشن    کے ذریعہ   کی جاسکتی ہے،  جس میں  اس بات  پر غور کرنا ہوگا کہ تمام گاڑیاں   سگنل سے چلنے والے چوراہے کی جانب رسائی  کررہی ہیں۔

  1. کامن   ایس  مارٹ  آئی او ٹی  کنکٹو  (سی او ایس  ایم  آئی سی) : یہ ایک مڈل وئیر  سافٹ وئیر  ہے ،جو   عالمی معیارات  پر مبنی   ،   ون  ایم 2 ایم  کے مطابق  آئی او ٹی کے  تنصیب  پر مبنی  معیارات فراہم کرتا ہے۔ یہ  مختلف عمودی  ڈومنس  میں استعمال کنندگان   اور ایپلی کیشن  سروس فراہم کرنے والوں  کو،   ایپلی کیشنز  کے مخصوص اوپن معیارات  اور اوپن انٹرفیسز کو   ،  پورے  طورپر    تفصیل  فراہم کردہ   ان عام  خدمت کے کام کاجوں  کو  ہینڈ ٹو ہینڈ مواصلات کے لئے، استعمال کرنے کی اجازت  دیتا ہے ، جو   ون ایم 2 ایم  کے  مطابق ہم آہنگ   ہے۔اس  تناظر میں  ،  سی او ایس ایم آئی سی  کامن سروس   کی  اس  خدمت کو  کاروباری  مخصوص  کسی  طرح کے معیارات     کے انٹرفیس  اور  اسمارٹ سٹی ڈیش بورڈ   کے ساتھ  بڑھتی ہوئی  بین کارروائی جاتی کاموں  کے لئے   استعمال کیا جاتا ہے۔ یہ افقی  سیلو  آر سی  ٹیکچربین  کارروائی  جاتی کاموں   اور مختلف  آئی اوٹی   ڈوائسز اور ایپلی  کیشنز  کے درمیان   اعدادوشمار کے تبادلے کو  یقینی بناتا ہے،  اور  وینڈر کی   لاک -ان   کو درگز ر کرتا ہے۔سی او ایس ایم آئی سی   12 عام خدمات کے کاموں کے ساتھ مطابقت رکھتا ہے، جن میں اندراج  ،دریافت  ،سلامتی  ، گروپ انتظامیہ  ،اعدادوشمار کا انتظامیہ اور ذخیرہ کرنا  ،سبز کرپشن اور نوٹی فکیشن   ،  ڈوائس  انتظامیہ ،  اپیلی کیشن اور   خدمات  کا انتظامیہ  ،  مواصلاتی انتظامیہ اور فراہمی  کی دیکھ ریکھ  ،  نیٹ ورک سروس ایکسپوزر  ،  مقام  ،  سروس چارجنگ اور  اکاؤنٹنگ شامل ہیں۔

سی او ایس ایم آئی سی  پلیٹ فارم   غیر  ون ایم 2 ایم  (این  او ڈی ایم ) ڈوائسز  یا تھرڈ  پارٹی  ایپلی کیشنز کو  کنکٹ کرنے کے لئے  انٹرورکنگ   پروکسی این ٹی ٹی  ( آئی  پی ای  ) اے  پی آئز  بھی فراہم کرتا ہے تاکہ  سی او ایس  ایم آئی سی  پلیٹ فارم سے کنکٹ ہوا  جاسکے ۔سی او ایس ایم آئی سی  ایک ڈیش  بورڈ  پیج   فراہم کرتا ہے،جس میں آئی او ٹی  یونٹس   ،  مصنوعات  ،  ایپلی  کیشنز   اور  ایک  جغرافیائی معلوماتی نظام  ( جی آئی ایس )  نقشے میں  اس کا  لائیو  اعداد وشمار  ظاہر ہوتا ہے۔ تاریخی چارٹو ں اور رپورٹوں  کے لئے اعداد شمار کا ایک ثانوی ذخیرہ بھی دستیاب ہے۔ سی او ایس ایم آئی سی،  آئی او ٹی ڈواسز اور ایپلی کیشنز کے  بلاروک ٹوک   کنکشن کے لئے ایک  اینڈ ٹو اینڈ  حل فراہم کرتا ہے۔

*********

ش ح۔اع  ۔رم

U-41 31

 



(Release ID: 1815618) Visitor Counter : 171