وزارت دفاع
azadi ka amrit mahotsav g20-india-2023

امریکی بحریہ کے بحری کارروائیوں سے متعلق سربراہ ایڈمیرل مائیکل گلڈے کابھارت کادورہ

Posted On: 12 OCT 2021 9:51AM by PIB Delhi

نئی دہلی ،12؍اکتوبر:امریکی بحریہ کے بحری  کارروائیوں سے متعلق سربراہ ایڈمیرل مائیکل گلڈے 11سے 15اکتوبر ، 2021تک بھارت کے پانچ روزہ دورے ہیں ۔ اپنے اس دورے کے دوران  ایڈمیرل گلڈے بحری اسٹاف  کے سربراہ ایڈمیرل کرم بیرسنگھ اور اعلیٰ درجے کے جی اوآئی عہدیداروں کے ساتھ بات چیت بھی کریں گے ۔ ایڈمیرل گلڈے بھارتی بحریہ کی مغربی بحری کمان (ممبئی ) اور مشرقی بحری کمان (وشاکھاپٹنم)  کادورہ کریں گے ۔ جہاں وہ متعلقہ کمانڈر ان چیف کے ساتھ بات چیت کریں گے ۔ ایڈمیرل گلڈے بھارتی وفد کے ساتھ ساتھ بھارت کے مشرقی ساحل پریوایس این کیریئر اسٹرائک گروپ کے لئے بھی روانہ ہوں گے ۔

بھارت اورامریکہ کے روایتی قریبی دوستانہ تعلقات ہیں ۔ دونوں ملکوں کے درمیان آپسی بھروسے اوراعتماد کے دفاعی تعلقات رہے ہیں، جو 16 جون کو بھارت کو ‘‘ دفاعی شراکت دارکا درجہ ’’ دیئے جانے کے بعد یکسر تبدیل ہوگئے ہیں ۔

 دونوں ملکوں نے مخصوص بنیادی سمجھوتے کئے ہیں ، جن سمجھوتوں میں 2015 میں دستخط کیاگیا،  دفاعی خاکے سے متعلق سمجھوتہ بھی شامل ہے ۔ جو 2016میں ضروری سازوسامان کے تبادلے سے متعلق کئے گئے مفاہمت نامے کے ایک سمجھوتے کے لئے دفاعی اداروں کے درمیان اشتراک کاایک تفصیلی خاکہ فراہم کرتاہے ۔ یہ معاہدہ دونوں ملکوں کی مسلح فورسیز کے درمیان باہمی لوجسٹک سپورٹ میں سہولت کے سمجھوتے کی ایک بنیادہے ۔

6ستمبر 2018 کو سیکیورٹی سے متعلق  کمیونیکیشن  کامپبلیٹی  سمجھوتہ (کوم کاسا) کیاگیا جو دونوں ملکوں کی مسلح فورسیز کے درمیان

اطلاعات  کے تبادلے میں سہولت فراہم کرتاہے جب کہ بیسک ایکسچینج  کو آپریشن سمجھوتہ (بی ای سی اے )دفاع اورامریکہ کی  جغرافیائی محل وقوع  کی قومی ایجنسی (این جی اے ) کے درمیان جغرافیائی محل وقوع  کی معلومات فراہم کرتاہے ۔

بھارتی بحریہ امریکی  بحریہ کے ساتھ متعدد امورپر بہت قریبی تعاون کررہی ہے ۔بات چیت کی ان کارروائیوں میں  سلسلے وارمالابار اور رمپیک مشقیں، تربیت کے تبادلے، متعدد شعبوں میں وہائٹ شپنگ معلومات اورموضوع  سے متعلق ماہرین کے تبادلے شامل ہیں ، جو سالانہ منعقدہونے والی  سبھی قائمہ گروپ کی میٹنگوں  (ای ایس  جی ) کے وسیلے سے مربوط ہیں ۔

مزید یہ کہ دونوں  ملکوں کی بحریہ سے جنگی جہازوں پر ایک دوسرے کی بحری بندرگاہوں سے مسلسل پورٹ کالس کے ذریعہ رابطہ قائم کیاجاتاہے ۔دونوں  ہی ملکوں کی بحریہ ایک آزاد کھلے اورسب کی شمولیت والے بھارت بحرالکاہل کے مقصد کے ساتھ اشتراک کے لئے نئے راستے تلاش کرنے کے تئیں تعاون بھی کررہی ہیں ۔

****************

 

ش ح۔ش ر۔ ع آ  

U. NO. 9972

 



(Release ID: 1763208) Visitor Counter : 159