خلا ء کا محکمہ

بھوون ’’یوکت دھارا‘‘کے تحت نیا پورٹل ریموٹ سینسنگ اور جی آئی ایس پر مبنی معلومات کا استعمال کرتے ہوئے نئے منریگا اثاثوں کی منصوبہ بندی میں سہولت فراہم کرے گا: مرکزی وزیر ڈاکٹر جتیندر سنگھ

’’یہ پلیٹ فارم مختلف قومی دیہی ترقیاتی پروگراموں مثلاً ایم جی نریگا، انٹیگریٹڈ واٹرشیڈ مینجمنٹ پروگرام، فی بوند زیادہ فصل اور راشٹریہ کرشی وکاس یوجنا کے تحت بنائے گئے اثاثوں (جیوٹیگ) کے ذخیرے کے طور پر کام کرے گا، جس میں فیلڈ فوٹو گرافی بھی شامل ہے‘‘

Posted On: 23 AUG 2021 5:36PM by PIB Delhi

سائنس و ٹیکنالوجی کے مرکزی وزیر مملکت (آزادانہ چارج)، ارضیاتی سائنسز کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج)،  وزیر اعظم کے دفتر، عملہ، عوامی شکایات، پنشن، جوہری توانائی اور خلا کے وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے کہا کہ بھوون "یوکت دھارا" کے تحت جاری کئے گئے نئے لانچ شدہ پورٹل سے ریموٹ سینسنگ اور جی آئی ایس پر مبنی جانکاریوں کا استعمال کرتے ہوئے نئے منریگا اثاثوں کی منصوبہ بندی میں سہولت فراہم ہوگی۔ وزیر موصوف نے کہا کہ یہ پلیٹ فارم مختلف قومی دیہی ترقیاتی پروگراموں مثلا ایم جی نریگا، انٹیگریٹڈ واٹرشیڈ مینجمنٹ پروگرام، فی بوند زیادہ فصل اور راشٹریہ کرشی وکاس یوجنا وغیرہ کے تحت بنائے گئے اثاثوں کے ذخیرے کے طور پر کام کرے گا، جس میں فیلڈ فوٹو گرافی بھی شامل ہے۔

 مرکزی وزیر برائے دیہی ترقیات اور پنچایتی راج جناب گری راج سنگھ نے ’’یوکت دھارا‘‘ جیو اسپیشل پلاننگ پورٹل کو لانچ کیا، اس موقع پر ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ اس کا نام بہت صحیح رکھا گیا ہے کیونکہ لفظ ’یوکٹ‘یوجنام سے لیا گیا ہے۔ اور ’دھارا‘مسلسل بہاؤ کو ظاہر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ یقینی طور پر غیر سنجیدہ فیصلہ سازی کی حمایت میں دیہی اسکیموں کے لیے جی 2 جی سروس کو عملی جامہ پہنانے کے لیے اسرو اور وزارت دیہی ترقی کی مشترکہ کوششوں کا نتیجہ ہے۔

 

001.jpg

 

ڈاکٹر سنگھ نے اسرو کے جیو پورٹل ’بھوون‘ کی صلاحیتوں اور خدمات پر اعتماد کا اظہار کیا اور کہا کہ اس کی بھرپور معلوماتی بنیاد، سیٹلائٹ امیجری اور تجزیاتی صلاحیتوں کی وجہ سے بھوون ملک کی کئی ترقیاتی منصوبہ بندی کی سرگرمیوں کے لیے عملی طور پر ایک ورچوئل پلیٹ فارم بن گیا ہے۔

وزیر موصوف نے کہا کہ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ یہ پورٹل مختلف قسم کی موضوعاتی تہوں، کثیر وقتی ہائی ریزولوشن، ارتھ آبزرویشن ڈیٹا، تجزیہ کے ٹولز کے ساتھ مربوط ہے۔ مختلف اسکیموں کے تحت ماضی کے اثاثوں کا منصوبہ سازوں کے ذریعے تجزیہ کیا جائے گا اور وہ آن لائن ٹولز کے ذریعے نئے کاموں کی شناخت میں سہولت فراہم کریں گے۔ ریاست کے محکموں کے تحت مناسب حکام کے تیار کردہ منصوبوں کا جائزہ لیا جائے گا۔ اس طرح یوکت اسٹریم پر مبنی منصوبے نچلے درجے کے افسران تیار کریں گے اور متعلقہ حکام کے ذریعہ مطابقت اور وسائل کی تقسیم کے لیے تصدیق کریں گے۔ اس کے ذریعے اسکیم کے معیار کو یقینی بنایا جائے گا اور برسوں میں بنائے گئے اثاثوں کی طویل مدتی نگرانی ممکن ہو سکے گی۔

ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ وزارت دیہی ترقی کی پروسیس شدہ ضروریات کے مطابق بھون پر ان کی موافقت، ریاستی ملازمین کا مسلسل ہاتھ تھامنا اور ریاستی محکموں کے ملازمین کی جانب سے جیو-منریگا ڈیٹا بیس کی تیاری کی ٹیکنالوجی کو اپنانے میں دکھایا گیا جوش قابل ذکر ہے اور یہ اپنی نوعیت کی پہلی مشق ہے جو پوری دنیا میں وسیع پیمانے پر کی جاتی ہے۔

 

************

ش ح۔م ع۔ ع ن

 (U: 8081)



(Release ID: 1748430) Visitor Counter : 53