وزیراعظم کا دفتر

کوویڈ سے متاثرہ بچوں کی مدد اور انھیں بااختیار بنانے کے لیے پی ایم کیئرز

حکومت ان بچوں کے ساتھ ہے جن کے ماں باپ اس وبا سے ہلاک ہوگئے ہیں

پی ایم کیئرز فنڈ سے ایسے بچوں کو 18 سال کے ہونے پر ماہانہ وظیفہ ملے گا نیز 23 سال کے ہونے پر 10 لاکھ روپے کی امداد کی جائے گی

جن بچوں کے والدین کوویڈ سے ہلاک ہوئے ہیں ان کے لیے مفت تعلیم کو یقینی بنایا جائے گا

بچوں کو اعلی تعلیم کے لیے قرض دیا جائے گا اور پی ایم کیئرز سے اس قرض کا سود ادا کیا جائے گا

آیوشمان بھارت جے تحت 18 سال کے لیے ان بچوں کا 5 لاکھ کا مفت ہیلتھ انشورنس کرایا جائے گا اور اس کے پریمیم کی ادائیگی پی ایم کیئرز سے کی جائے گی

بچے ملک کے مستقبل کی نمائندگی کرتے ہیں اور ہم ان کی مدد اور تحفظ کے لیے سب کچھ کریں گے: وزیراعظم

سماج ہونے کے ناتے یہ ہمارا فرض ہے کہ ہم اپنے بچوں کا خیال رکھیں اور ان میں ایک روشن مستقبل کی امید پیدا کریں: وزیر اعظم

Posted On: 29 MAY 2021 5:56PM by PIB Delhi

29 مئی، نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کوویڈ-19 کی بنا پر اپنے والدین کو کھونے والے بچوں کی مدد کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے ایک اہم اجلاس کی صدارت کی۔ مذکورہ اجلاس میں وزیراعظم نے کوویڈ کی موجودہ وبا سے متاثرہ بچوں کے لیے متعدد اعلانات کیے۔ ان اقدامات کا اعلان کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ بچے ملک کے مستقبل کی نمائندگی کرتے ہیں اور ملک بچوں کی مدد اور تحفظ کے لیے ہر ممکن کوشش کرے گا تاکہ وہ مضبوط شہری کے طور پر آگے بڑھ سکیں اور ان کے مستقبل کو روشن کیا جا سکے۔ وزیراعظم نے کہا کہ اس آزمائشی دور میں ایک سماج ہونے کے ناتے یہ یہ ہمارا فرض ہے کہ ہم اپنے بچوں کا خِال رکھیں اور انھیں روشن مستقبل کی امید سے ثروت مند کریں ۔ وہ تمام بچے جنھوں نےکوویڈ-19کی وجہ سے اپنے والدین یا یا قانونی سرپرست/ گود لینے والے ماں باپ میں سے کسی ایک یا دونوں کو کھویا ہے ان کی مدد پی ایم کیئرز فار چلڈرن اسکیم کے تحت کی جائے گی۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ جن اقدامات کا اعلان کیا جارہا ہے وہ صرف پی ایم کیئرز فنڈ میں دیے جانے والے فیاضانہ عطیات کی وجہ ہی سے ممکن ہوئے ہیں اور اس فنڈ سے بھارت کی کوویڈ-19 کے خلاف لڑائی میں مدد ملے گی۔

 بچے کےنام پر فکسڈ ڈپازٹ:

پی ایم کیئرز خصوصی طور پر تیار کردہ اسکیم کے ذریعے بچے کے 18 سال کی عمر کے ہونے پر 10 لاکھ روپے کا کارپس فنڈ فراہم کرے گا۔ اس فنڈ کو:

  • اس کے 18 سال کی عمر کے ہونے پر اگلے پانچ برسوں کے لیے ماہانہ مالی امداد/الاؤنس فراہم کرنے کے لیے استعمال کیا جائے گا، تاکہ اعلی تعلیم کے دوران اس کی ذاتی ضروریات پوری کی جاسکیں اور

· 23 سال کی عمر ہونے پر، اسےاپنے ذاتی اور پیشہ ورانہ استعمال کے لیے فنڈ کی ایک یکمشت رقم ملےگی۔

 اسکولی تعلیم: 10 سال سے کم عمر کے بچوں کے لیے:

  • بچے کو نزدیکی کیندریہ ودیالیہ یا نجی اسکول میں 'ڈے اسکالر' کے طور پر داخل کرایا جائے گا۔
  • اگر بچے کو نجی اسکول میں داخل کرایا جاتا ہے تواس کی فیس آر ٹی ای (آر ٹی ای) قوانین کے مطابق پی ایم کیئرز سے ادا کی جائے گی۔
  • پی ایم کیئرز انھیں یونیفارم، نصابی کتابوں اورکاپیوں کی قیمت بھی ادا کرے گا۔

اسکولی تعلیم: 11–18 سال کے بچوں کے لیے:

  • بچے کو مرکزی حکومت کے رہائشی اسکول میں داخل کرایا جائے گا، جیسے سینک اسکول، نوودیہ ودیالیہ وغیرہ۔
  • اگر بچہ مسلسل سرپرست/ددھیال یا ننھیال/ خاندان کے دیگر افراد کی دیکھ بھال میں رہتا ہے تو اسے نزدیکی کیندریہ ودیالیہ یا نجی اسکول میں ڈے اسکالر کے طور پر داخل کرایا جائے گا۔

· اگر بچے کو نجی اسکول میں داخل کرایا جاتا ہے تواس کی فیس آر ٹی ای (آر ٹی ای) قوانین کے مطابق پی ایم کیئرز سے ادا کی جائے گی۔

 پی ایم کیئرز انھیں یونیفارم، نصابی کتابوں اورکاپیوں کی قیمت بھی ادا کرے گا۔

 اعلیٰ تعلیم کے لیے مدد:

  • بھارت میں پیشہ ورانہ کورسز/اعلی تعلیم کے لیے تعلیمی قرض کے موجودہ ضوابط کے مطابق تعلیمی قرضےحاصل کرنے میں بچے کی مدد کی جائے گی۔ اس قرض پر سود پی ایم کیئرز ادا کرے گا۔

· ایسے بچوں کو مرکزی یا ریاستی حکومت کی اسکیموں کے تحت ایک متبادل کے طور پر انڈر گریجویٹ/ ووکیشنل کورسز کے لیے سرکاری ضوابط کے مطابق ٹیوشن فیس/کورس فیس کی طرح وظائف فراہم کیے جائیں گے۔ جو بچے موجودہ اسکالرشپ اسکیموں کے تحت اہل نہیں ہیں ،پی ایم کیئرز انھیں مساوی اسکالرشپ فراہم کرے گا۔

 ہیلتھ انشورنس:

  • تمام بچوں کوآیوشمان بھارت یوجنا (پی ایم جے ای) میں مستفید ہونے والوں کے طور پر شامل کیا جائے گا جس کا ہیلتھ انشورنس کور 5 لاکھ روپے ہے۔

· ان بچوں کی پریمیم رقم پی ایم کیئرزکے ذریعے 18 سال کی عمر تک ادا کی جائے گی۔

*****

U. No. 4960

(ش ح - ع ا - ر ا)



(Release ID: 1722783) Visitor Counter : 47