امور صارفین، خوراک اور عوامی تقسیم کی وزارت

رواں ربیع مارکیٹنگ سیزن کےدوران سرکاری ایجنسیوں نے گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران کی حصولیابی کے مقابلے میں تقریباََ 70فیصد زیادہ گیہوں کی حصولیابی کی

سینٹرل پول میں 2 مئی 2021 تک تقریباََ 292.52 ایل ایم ٹی گیہوں کی حصولیابی کی گئی

رواں ربیع مارکیٹنگ سیزن کی حصولیابی کی کارروائی سے تقریباََ 28.80 لاکھ گیہوں کسانوں کو فائدہ ہوا ہے

پنجاب کے کسانوں کو اب بلاکسی تاخیر کے، اُن کی گیہوں کی فصل کی فروخت پر ادائیگی براہ راست اُن کے بینک کھاتوں میں موصول ہورہی ہے; پنجاب کے کسانوں کے کھاتوں میں پہلے ہی 17495 کروڑروپے منتقل کئے جاچکے ہیں

ربیع مارکیٹنگ سیزن 22-2021 کے دوران ایم ایس پی آپریشن زورشورسے جاری ہے

مشن ’’ ایک ملک ،ایک ایم ایس پی ، ایک ڈی بی ٹی ‘‘ مستحکم شکل اختیار کررہا ہے

Posted On: 03 MAY 2021 1:38PM by PIB Delhi

 

نئی دہلی،  03: مئی 2021: رواں  ربیع مارکیٹنگ سیزن  ( آر ایم ایس  ) 22-2021  میں  حکومت ہند  حکومت کے ذریعہ موجودہ  امدادی قیمت کی اسکیم  کے مطابق ایم ایس پی پرکسانوں سے  ربیع کی فصل کی حصولیابی کا کام جاری ہے۔رواں  آر ایم  ایس حصولیابی کارروائیوں سے  تقریباََ  28.80 لاکھ گیہوں کسانوں کو  فائدہ  پہنچ چکاہے۔

رواں  آر ایم ایس  22-2021  کے دوران  تقریباََ 17495 کروڑروپے  پہلے ہی پنجاب کے کسانوں کے کھاتوںمیں منتقل کئے جاچکے ہیں۔پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ پنجاب کےکسانوں کو اپنی گیہوں کی فصل کی فروخت پرادائیگی براہ راست  اپنے بینک کھاتوں میں  موصول ہوئی ہے۔

پنجاب ، ہریانہ ،اترپردیش  ، چنڈی گڑھ ، مدھیہ پردیش ،راجستھان کی ریاستوں  / مرکز کے زیر انتظام خطوں اوردیگرریاستوں میں  گیہوں کی حصولیابی کا کام  تیزرفتار سے جاری ہے۔ 2  مئی  2021 تک 292.52  ایل ایم ٹی سے زیادہ خریداری کی جاچکی ہے۔ گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران  171.53  ایل ایم ٹی  کی خریداری کے مقابلے میں  اس سال کی خریداری تقریباََ  70فیصد زیادہ ہے۔

2مئی 2021 تک کی مجموعی  292.52 ایل ایم ٹی گیہوں کی خریداری میں پنجاب سے  114.76 ایل ایم ٹی (39.23فیصد ) ، ہریانہ سے 80.55 ایل ایم ٹی  (27.53فیصد ) اور مدھیہ پردیش سے  73.76 ایل ایم ٹی  (25.21فیصد) گیہوں کی حصولیابی کی گئی ہے۔

پنجاب میں  تقریباََ  17495 کروڑروپے اورہریانہ میں   تقریباََ  9268.24 کروڑروپے  30 اپریل  2021تک کی  حصولیابی پر براہ راست کسانوں کے کھاتے میں منتقل کئے گئے ہیں۔

اس سال سرکاری حصولیابی کی تاریخ میں  ایک نئے باب کا اضافہ اس وقت  ہوا جب ہریانہ اور پنجاب  میں بھی  ایم ایس  پی کی ادائیگی کی  بالواسطہ ادائیگی سے  حکومت ہند کی ہدایات کے مطابق  حصولیابی کرنے والی تمام ایجنسیوں  نے  خریداری کی رقم کو سیدھے  کسانوں کے بینک کھاتوں میں  آن لائن منتقل کیا۔پنجاب اور ہریانہ کےکسانوں  کو اس کارروائی سے بہت خوشی ملی ہے کیونکہ پہلی بار انہیں   بغیر کسی تاخیر کے اپنی  محنت سے تیار کی گئی فصل کی فروخت پر فائدہ  براہ راست اپنے کھاتوں  میں  ملا ہے اور وہ  ’’ ایک ملک، ایک ایم ایس پی ، ایک ڈی بی ٹی ‘‘ کے تحت آئے ہیں۔

*************

ش ح۔ا گ ۔رم

(03-05-2021)

U- 4154



(Release ID: 1715669) Visitor Counter : 1