کامرس اور صنعت کی وزارتہ

جناب پیوش گوئل نے نیشنل اسٹارٹ اپ ایڈوائزی کونسل کی میٹنگ کی صدارت کی

ملک میں اسٹارٹ اپس، خود کفیل بھارت کے نئے فاتح ہیں: جناب گوئل

جناب گوئل نے کامیاب کاروباری افراد سے اپیل کی کہ وہ اپنے علم ، تجربے اور نظریات کو مشترک کریں اور دوسرے لوگوں کے لئے ترغیب کا باعث بنیں

Posted On: 15 APR 2021 7:02PM by PIB Delhi

 ریلوے ، کامرس اور صنعت ، اُمور صارفین  اور خوراک اور عوامی تقسیم کے مرکزی وزیر پیوش گوئل نے آج قومی اسٹارٹ اپ ایڈوائزری  کونسل (این ایس اے سی) کے پہلے اجلاس کی صدارت کی۔ انڈسٹری پروموشن اور داخلی تجارت کے محکمہ (ڈی پی آئی آئی ٹی ) نے نیشنل اسٹارٹ اپ ایڈوائزری کونسل تشکیل دی ہے جس سے حکومت کو ملک میں اختراع اور اسٹارٹ اپس کے فروغ کے لئے ایک مضبوط ایکو سسٹم بنانے کے لئے ضروری اقدامات پر صلاح دی جا سکے۔ یہ کونسل ملک میں پائیدار معاشی نمو کو فروغ دینے اور بڑے پیمانے پر روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے حکومتی مقصد کے حصول میں مشیر کے کردار میں ہے۔اس کونسل کے سابق ​​ممبران کے علاوہ ، بہت سارے غیر سرکاری ممبران جیسے بہت سے اسٹارٹ اپ کے بانی ، ایسے افراد جو اپنے کاروبار کو بڑی کمپنیوں کی شکل میں قائم کر چکے ہیں ، اسٹارٹ اپ میں سرمایہ کاروں کے مفادات کی نمائندگی کرنے کے اہل شخص، انکیوبیٹر اور ایکسیلیٹر کے مفادات کی نمائندگی کرنے والے افراد اور صنعتی انجمنوں کے نمائندے ممبر کی حیثیت سے شامل ہیں۔

اپنے افتتاحی خطاب میں ، جناب گوئل نے کہا کہ یہ کونسل ہندوستان میں بہت سارے اُبھرتے سٹارٹ اپ کاروباری افراد کے لئے رہنما کے طور پر کام کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے جب نجی شعبے اور حکومت کے لوگوں کی ایسی اعلی سطحی ٹیم ' ایک ساتھ آئی ہے تاکہ آپ اپنے پالیسی فیصلے خود لیں۔

جناب گوئل نے مختلف مسائل کے جدید حل تلاش کرنے کے لئے تمام شعبوں میں اسٹارٹ اپس کے ذریعہ کئے گئے کاموں کی تعریف کی اور کہا کہ  بھارت  جدت طرازی اور لیک سے ہٹ کر سوچنے کا مرکز ہے۔ انہوں نے کہا کہ سٹارٹ اپ تحریک نے گذشتہ 5 سالوں میں ایک کاروباری جذبے کو جنم دیا ہے۔ "ہم نے وزیر اعظم کے 'اسٹارٹ اپ انڈیا' کے وژن کے حصول کے لئے قومی سطح سے لے کر بلاک سطح تک  شراکت داروں کی زبردست کوششیں دیکھی ہیں۔"

اسٹارٹپس کو خود کفیل بھارت کا نیا فاتح قرار دیتے ہوئے جناب  گوئل نے کہا کہ ہمارے پاس دنیا کا سب سے بڑا اور جدید اسٹارٹ اپ ایکو سسٹم بننے کی صلاحیت ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ہمیشہ ہی ہندوستانی اسٹارٹ اپ ایکو سسٹم کی ترقی کو فروغ دینے میں مددگار شراکت دار کے رول میں رہی  ہے اور آگے بھی رہے گی۔

قومی شراکت اور قومی شعور کی علامت "اسٹارٹ اپ انڈیا" بنانے کی اپیل کرتے ہوئے ، وزیر موصوف نے طلبا کو جدت طرازی کی ترغیب دینے کے لئے اسکول کی سطح پر انٹرپرینیورشپ کی بیج بونے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کامیاب کاروباری افراد سے اپیل کی کہ وہ اپنے علم ، تجربے ،خیالات کو بانٹنے کے ساتھ ساتھ طلباء اور نوجوانوں کی رہنمائی کریں۔ انہوں نے کہا کہ دیہی بھارت ، ٹیر II اور ٹیئر III شہروں میں لوگوں کے بہت سے انوکھے خیالات ہیں جن پر کام کرکے انہیں کامیاب بنانے کی ضرورت ہے۔

 

وزیر صنعت نے یہ بھی کہا کہ 'اسٹارٹ اپ انڈیا: دا  وے اہیڈ' کے اہداف کا ادراک کرنا ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے۔ اس مہم کا آغاز وزیر اعظم نے رواں سال جنوری میں کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ہندوستان  کو اس فورم تک پہنچنے میں مدد ملے گی جہاں دنیا بھر کے ممالک ہندوستان کی کامیابیوں کی بنیاد پر اپنا اسٹارٹ اپ ایکو سسٹم تیار کرنا چاہیں گے ۔ اس سے 'اسٹارٹ اپ انڈیا' کو ایک عالمی پلیٹ فارم ملے گا۔

جناب گوئل نے کہا کہ حکومت ریگولیٹر کے بجائے معاون کی حیثیت سے کام کرنے کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ اجتماعی طور پر ہمیں اپنے مسائل  کو کم سے کم کرنے کیلئے زیادہ سے زیادہ زیادہ سے زیادہ کوشش کرنی ہوگی اور اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ غریبوں کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے ہندوستان میں  کفایتی حل دستیاب ہو۔

میٹنگ کے دوران ، شرکاء نے اسٹارٹ اپ ایکوسسٹم  کے بارے میں متعدد معنی خیز تجاویز پیش کیں اور مختلف اقدامات کے ذریعہ اس کو مزید مستحکم بنانے کے طریقوں پر اپنے خیالات مشترک کیے۔

 

*****

 

ش ح۔ع ح۔ ن ع

(16.04.2021)

(U: 3751)

 



(Release ID: 1712221) Visitor Counter : 59


Read this release in: English , Marathi , Hindi , Punjabi