سائنس اور ٹیکنالوجی کی وزارت

وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی قیادت میں ہندوستان کی ترقی کو جاری رکھنے کے لیے پہلے 100 دنوں کا ایکشن پلان، سائنس اور ٹیکنالوجی کے مرکزی وزیر کے طور پر چارج سنبھالتے ہوئے ڈاکٹر جتیندر سنگھ  (آزادانہ چارج)  کا بیان


ڈاکٹر جتیندر سنگھ کا کہنا ہے کہ سائنس اور ٹیکنالوجی کے میدان میں دنیا کو  رہنمائی فراہم کرنے کے لیے وزیراعظم  مودی کی قیادت میں ہندوستان  پیش پیش رہنے والا  ملک ہے

وزیر اعظم نریندر مودی شہریوں کی گزر بسر  میں آسانی کے لیے سائنس اور ٹیکنالوجی کو عملی طور پر ہر گھر تک پہنچانے میں کامیاب ہوئے: ڈاکٹر سنگھ

 حیاتیاتی  معیشت،  نیلگوں معیشت ، خلائی معیشت میں  اخترا ع کاری کو  ترجیح  حاصل رہے گی

Posted On: 11 JUN 2024 7:29PM by PIB Delhi

ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے آج نئی دہلی میں کونسل سائنفک اینڈ انڈسٹریل ریسرچ (سی ایس آئی آر) کے ہیڈکوارٹر میں سائنس اور ٹیکنالوجی کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج) کا چارج سنبھال لیا۔

مرکزی وزیر کا عہدہ سنبھالنے کے فوراً بعد ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے سائنس کی چھ وزارتوں/محکموں اور ان کے سیکریٹریوں کی ایک مشترکہ میٹنگ بلائی جس میں انہوں نے وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی قیادت میں پہلے 100 دنوں کے ایکشن پلان پر تبادلہ خیال کیا۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/WhatsAppImage2024-06-11at7.24.08PMO5NR.jpeg

ڈاکٹر جتیندر سنگھ کہتے ہیں ‘‘پہلے 100 دنوں کے ایکشن پلان کا مقصد پی ایم  جناب  نریندر مودی  کی قیادت میں ہندوستان کی ترقی کو جاری رکھنا ہے’’۔ 

چارج سنبھالنے کے بعد میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے، مرکزی وزیر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے کہا کہ ‘‘بھارت سائنس اور ٹیکنالوجی کے میدان میں دنیا کو قیادت پیش کرنے کے لیے پی ایم مودی کی قیادت میں ایک  صف اول کا  ملک ہے’’۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/WhatsAppImage2024-06-11at7.24.11PMA3OL.jpeg

ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے کہا کہ ‘‘خصوصی ترجیح پی ایم مودی کے تحت پچھلے 10 سالوں میں اسٹارٹ اپ تھے جو کہ 2014 میں 350 اسٹارٹ اپس سے لے کر 1.5 لاکھ 2024 تک 110 سے زیادہ  یونیکارن کے ساتھ اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے’’۔

 حیاتیاتی معیشت میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے اور اس مدت میں ترقی جاری رہے گی۔

ڈاکٹر سنگھ نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ وزیراعظم  نریندر مودی کی سرپرستی نے نئی ٹیکنالوجیز کو متعارف کرانے میں فعال کردار ادا کیا ہے جس سے سڑک کی تعمیر کی ٹیکنالوجی،  مصنوعی ذہانت (اے آئی) سے چلنے والی صحت کی دیکھ بھال، ملک کے شہریوں کے لیے گزر بسر  میں آسانی پیدا ہوئی ہے۔

انہوں نے اگلے  20 برسوں   تک اس مشن کو آگے بڑھانے کے لیے اپنے اعتماد کا اظہار کیا جب ہندوستان 2047 میں  داخل ہوگا۔

جب ہندوستان اپنی آزادی کا صد سالہ جشن  منائے گا، اس وقت ہندوستان میں جدت طرازی بنیادی ڈھانچے کی ترقی کا حصہ بن چکی ہوگی۔

مرکزی وزیر نے واضح طور پر ذکر کیا کہ حکومت اپنی دوسری میعاد کے اختتام کے قریب انسودھن نیشنل ریسرچ فاؤنڈیشن (این آر ایف) قانون سازی لائی ہے جو سائنس اور ٹکنالوجی میں ہندوستان کو اگلے محاذ پر کام کرنے والا  ملک بناتی ہے۔

خلائی شعبے میں ہندوستان کی پیشرفت پر روشنی ڈالتے ہوئے ڈاکٹر سنگھ نے کہا ‘‘چاند کے جنوبی قطب پر چندریان -3 کی کامیاب لینڈنگ اور ہندوستان کے پہلے انسانی خلائی پرواز مشن ‘‘گگنیان مشن’’ کی طرف مسلسل پیشرفت کے ساتھ خلاء میں اس کی کامیابیوں کی وجہ سے ہندوستان کا وقار بلند ہوا ہے۔

ہمارے پاس ملک میں سائنسی ذہانت کی کوئی کمی نہیں ہے، صرف پالیسی سازی کی جانب سے حکومت کی توجہ پر زور دینے کے عزم کی کمی تھی۔

ڈاکٹر سنگھ نے بتایا کہ حیاتیاتی معیشت ، نیلگو ں معیشت ، خلائی  معیشت  میں جدت ترجیح رہے گی۔

مرکزی وزیر نے سائنس اور ٹیکنالوجی کی وزارت کے تمام سکریٹریوں کی موجودگی میں ایک جائزہ میٹنگ کی۔ ڈاکٹر اجے کمار سود، پی ایس اے حکومت ہند کے ساتھ پروفیسر ابھے کرندیکر، سکریٹری، ڈی ایس ٹی؛ ڈاکٹر راجیش گوکھلے، سکریٹری، ڈی بی ٹی کے ساتھ اسرو اور سی ایس آئی آر کے سینئر سائنسدان بھی موجود تھے۔

ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے سینئر حکام کو وزیر اعظم کے 100 دنوں کے منصوبے کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے ملک کی ترقی میں اس کی کارکردگی اور شراکت کو بڑھانے کے لیے  سی ایس آئی آر  کو بہتر بنانے کے منصوبوں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

*******

ش ح۔س ب ۔ رض

U:7359

 



(Release ID: 2024535) Visitor Counter : 29