سٹرک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav g20-india-2023

این ایچ اے آئی، قومی شاہراہ کی تعمیر میں فاسفور-جپسم کے استعمال کی تلاش کرے گا

Posted On: 22 FEB 2023 5:04PM by PIB Delhi

ماحولیاتی لحاظ سے پائیدار قومی شاہراہوں کے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر کے لیے کچرے کے استعمال کی حوصلہ افزائی کے لیے اپنے عزم کو برقرار رکھتے ہوئے، نیشنل ہائی ویز اتھارٹی آف انڈیا (این ایچ اے آئی) نے کیمیکل اور فرٹیلائزر کی وزارت کے ساتھ کھاد کے محکمے کے ساتھ مل کر ایک سرکلر اکانومی حاصل کی ہے۔ جپسم این ایچ اے آئی قومی شاہراہوں کی تعمیر میں فاسفور جپسم کے استعمال کے منصوبوں پر فیلڈ میں جانچ کرنے والا ہے۔

فاسفورس جپسم کھاد کی پیداوار کی ضمنی پیداوار ہے۔ ایک بھارتی فرٹیلائزر کمپنی نے فاسفر جپسم کا استعمال کرتے ہوئے ایک سڑک بنائی ہے۔ سڑک کا جائزہ سینٹرل روڈ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (سی آر آر آئی) نے کیا تھا اور اس کی رپورٹ کی بنیاد پر، انڈین روڈس کانگریس (آئی آر سی) نے تین سال کی مدت کے لیے سڑک کی تعمیر کے مقصد سے غیر جانبدار فاسفر-جپسم ویسٹ میٹریل کی منظوری دی ہے۔

کھاد بنانے والی کمپنی اور سی آر آر آئی سے کہا گیا ہے کہ وہ این ایچ اے آئی پروجیکٹ پر فیلڈ ٹرائلز کریں تاکہ قومی شاہراہوں پر فاسفر-جپسم کی کارکردگی کا جائزہ لیا جا سکے اور ہائی وے کی تعمیر میں فاسفر-جپسم کے کچرے کے استعمال پر مختلف متعلقہ فریقوں کے درمیان اعتماد پیدا کیا جا سکے۔

این ایچ اے آئی سڑک کی تعمیر میں پلاسٹک کچرے کے استعمال کو بھی فروغ دے رہا ہے، جس کا پہلے ہی بہت کامیابی سے تجربہ کیا جا چکا ہے۔ مطالعات سے  ثابت ہوا ہے کہ پلاسٹک  کچرے سے بنی سڑکیں پائیدار ہوتی ہیں اور بٹومین کے استعمال کی مدت میں اضافہ کرتی ہے ۔ چار لین ہائی وے کے ایک کلومیٹر کی تعمیر سے تقریباً سات ٹن پلاسٹک کچرے کو ٹھکانے لگانے میں مدد ملتی ہے۔

اسی طرح،  این ایچ اے آئی نے ہائی ویز اور فلائی اوور کے پشتوں کی تعمیر کے لیے تھرمل پاور پلانٹس (ٹی پی پیز ) میں کوئلہ دہن کی عمدہ باقیات ’فلائی ایش‘ کا استعمال کیا ہے۔ 135 کلومیٹر طویل، چھ لین والے ’ایسٹرن پیریفرل ایکسپریس وے‘ کی تعمیر میں 12 ملین کیوبک میٹر فلائی ایش استعمال کی گئی ہے۔

این ایچ اے آئی نئے مواد کے اختراعی استعمال کی حوصلہ افزائی کر رہی ہے اور کاربن کے اخراج کو کم کرنے،  پائیداری میں اضافہ کرنے اور تعمیر پر آنے والی لاگت میں کمی کرنے پر توجہ دے رہی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔ ا س۔ ت ح۔

U -1972



(Release ID: 1901580) Visitor Counter : 121