امور داخلہ کی وزارت

کابینہ نے 4800 کروڑ روپئے کے بقدر کی مالی تخصیص کے ساتھ مالی برس 2022-23 سے 2025-26 کے لیے مرکز کے ذریعہ اسپانسر شدہ اسکیم -’’فعال مواضعات پروگرام‘‘  کو منظوری دی

Posted On: 15 FEB 2023 3:52PM by PIB Delhi

محترم وزیر اعظم جناب نریندر مودی کے زیر صدارت مرکزی کابینہ نے 4800 کروڑ روپئے کی مالی تخصیص کے ساتھ مالی برس 2022-23 سے 2025-26 کے لیے مرکز کے ذریعہ اسپانسر شدہ اسکیم ’’فعال مواضعات پروگرام‘‘ (وی وی پی) کو منظوری  دے دی ہے۔

اس اسکیم کا مقصد شمالی سرحد پر واقع مواضعات کے بلاکوں کی جامع ترقی  کے ذریعہ شناخت شدہ سرحدی مواضعات میں سکونت پذیر افراد کے معیار زندگی کو بہتر بنانا ہے ۔ اس سے لوگوں کو سرحدی علاقوں کے ان کے آبائی مقامات پر بسے رہنے کے لیے حوصلہ افزائی ہوگی۔ اس کے علاوہ ان مواضعات سے نقل مکانی کے معاملات کو روکنے میں مدد ملے گی اور سرحدوں پر سلامتی کا نظام بہتر ہوگا۔

یہ اسکیم ملک کے شمالی سرحدی علاقے کی چار ریاستوں اور ایک مرکز کے زیر انتظام علاقے  کے 19 اضلاع اور 46 سرحدی بلاکوں میں لازمی بنیادی ڈھانچہ کی ترقی اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے لیے سرمایہ فراہم کرائے گی، جس سے مبنی بر شمولیت نمو کی حصولیابی اور سرحدی علاقوں میں آبادی برقرار رکھنے میں مدد ملے گی۔ اس پروگرام میں پہلے مرحلے کے تحت 663 مواضعات کو شامل کیا جائے گا۔

اس اسکیم کا مقصد شمالی سرحد کے سرحدی مواضعات کے مقامی قدرتی انسانی اور دیگر وسائل پر مبنی معاشی محرکات کی شناخت اور انہیں ترقی دینا ہے۔  اس کے علاوہ ہنرمندی ترقیات اور صنعت کاری کے توسط سے نوجوانوں اور خواتین کی اختیارکاری ، سماجی صنعت کاری کے توسط سے  ’’ہب اینڈ اسپوک ماڈل‘‘ پر نمو کے مراکز کی ترقی، مقامی ثقافت ، روایتی علم اور ورثے کے فروغ کے ذریعہ سیاحت کے مضمرات کو بروئے کار لانا،  اور کمیونٹی پر مبنی تنظیموں، کوآپریٹیوز، سیلف ہیلپ گروپوں، این جی اوز، وغیرہ کے توسط سے ’’ایک گاؤں- ایک پروڈکٹ‘‘ کے تصور پر پائیدار ماحولیاتی زرعی کاروبار کی ترقی بھی اس اسکیم کے مقاصد میں شامل ہیں۔

فعال گاؤں عملی منصوبے گرام پنچایتوں کی مدد سے ضلع انتظامیہ کے ذریعہ وضع کیے جائیں گے۔ مرکزی اور ریاستی اسکیموں کے 100 فیصد استعمال کو یقینی بنایا جائے گا۔

اہم نتائج جنہیں حاصل کرنے کی کوشش کی گئی، ان میں بارہ ماسی چلنے والی سڑکوں کے ساتھ کنکٹیویٹی، پینے کا پانی، چوبیسو گھنٹے ساتوں دن بجلی – شمسی اور ہوائی توانائی پر توجہ مرکوز کی جائے گی، موبائل اور انٹرنیٹ کنکٹیویٹی۔ سیاحتی مراکز، کثیر المقاصد مراکز اور صحت  چاق و چوبند رہنے کے مراکز شامل ہیں۔

سرحدی علاقہ کے ترقیاتی پروگرام کے ساتھ اوورلیپ کی صورت پیدا نہیں ہوگی۔ 4800 کروڑ روپئے کے بقدر کی مالی تخصیص میں سے 2500 کروڑ روپئے سڑکوں کے لیے استعمال کیے جائیں گے۔

******

ش ح۔م ن ۔ ا ب ن

U-NO.1690



(Release ID: 1899528) Visitor Counter : 143