زراعت اور کاشتکاروں کی فلاح و بہبود کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav

مرکزی وزیر زراعت کی موجودگی میں گجرات میں ورلڈ بی ڈے منایا گیا

پانچ ریاستوں میں شہد کی جانچ کی سات لیباریٹریوں اور پروسیسنگ یونٹوں کا افتتاح

وزیر زراعت نے شہد کی مکھیاں پالنے والوں سے کہا کہ وزیر اعظم کا مقصد چھوٹے کسانوں کو بااختیار بنانا ہے

دیہی آبادی کی ترقی کے ساتھ ہی ملک ترقی کرے گا:جناب تومر

Posted On: 20 MAY 2022 7:18PM by PIB Delhi

 

1.jpeg

’’ورلڈ بی ڈے‘‘ یعنی شہد کی مکھیوں کا عالمی دن آج پورے جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا جبکہ مرکزی وزیر زراعت نے کہا کہ وزیر اعظم کی قیادت میں حکومت ملک میں ’’سویٹ ریوولوشن‘‘ لانے کے لئے بہت  سنجیدگی سے کام کررہی ہے۔ اس موقع پر ٹینٹ سٹی2، ایکتا نگر، نرمدا، گجرات میں قومی سطح کی ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا جہاں زراعت اور کسانوں کی بہبود کے مرکزی وزیر جناب نریندر سنگھ تومر موجود تھے۔ جناب تومر نے پروگرام کے مقام پر ایک نمائش کا افتتاح کیا اور جموں وکشمیر میں پلوامہ، باندی پورہ اور جموں ، کرناٹک میں تمکر ، اترپردیش میں سہارنپور، مہاراشٹر میں پُنے اور اتراکھنڈ میں شہد  کی جانچ کرنے والی لیباریٹریوں اور پروسیسنگ یونٹوں کا گجرات سے ورچوئل طریقے سے افتتاح کیا۔ جناب تومر نے کہا کہ چھوٹے کسانوں کو بااختیار بنانا محترم وزیر اعظم جناب نریندر مودی جی کا مقصد ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہندوستان کی تقریبا 55 فی صد آبادی دیہی ہے اور ملک اسی صورت میں ترقی کرسکتا ہے جب دیہی آباد ی کی  ترقی ہو۔

مرکزی حکومت کی فنڈنگ والی اسکیم ’’شہد کی مکھی پالن اور شہد مشن‘‘ کا مقصد پانچ بڑی علاقائی اور سو چھوٹی شہد اور ذیلی مصنوعات کی جانچ لیباریٹریز قائم کرنا ہے جن میں سے تین جدید ترین لیباریٹریز قائم کی جاچکی ہیں جبکہ 25 چھوٹی لیباریٹریز قیام کے مرحلوں میں ہیں۔ حکومت ہند اور ریاستی حکومتیں مشترکہ طور کوشش کررہی ہیں اور شہد کی مکھیاں پالنے والوں کی صلاحیت سازی پر توجہ مرکوز کی جارہی ہے تاکہ وہ سائنٹفک تکنیک اپنا کر شہد کی پیداوار بڑھاسکیں۔

222.jpg

جناب تومر نے یاد کہ جب وزیر اعظم گجرات کے وزیر اعلیٰ تھے انھوں نے گجرات کی ترقی کی نئی سمتیں متعین کی تھیں، ان کی حکومت گجرات میں غریب اور چھوٹے کسانوں کی بہبود اور فروغ کے لئے انتہائی فکر مند تھی۔ گجرات ترقی کے لئے ایک نظیر بن گیا ہے۔ پروگرام کے دوران مختلف ریاستوں سے آئے کسانوں نے مرکزی وزیر زراعت  سے بات چیت کی اور اپنے تجربات سے انھیں آگاہ کیا کہ کس طرح شہد کی مکھی پالنے سے ان کی آمدنی میں اضافہ ہوا ہے۔

زراعت اور کسانوں کی بہبود کے مرکزی وزیر مملکت جناب کیلاش چودھری نے کہا کہ حکومت نے شہد کی مکھیاں پالنے والوں کے لئے مختلف اسکیموں کے ذریعے مطلوبہ وسائل اور نئی ٹیکنالوجی دستیاب کرائی ہے۔ جناب چودھری نے کہا کہ وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے کسانوں کی بہبود کے لئے لگاتار کام کیا ہے۔ حتی کہ کووڈ عالمی وباء کے دوران بھی۔

گجرات کے وزیر زراعت جناب راگھو جی پٹیل نے زراعت اور کسانوں کی بہبود کی وزارت کی جانب سے گجرات کو اس تقریب کے لئے منتخب کرنے پر خوشی ظاہر کی۔

ریپبلک آف سلووینیا کے بغیر ایف اے او کے ہندوستان میں نمائندے، زراعت اور کسانوں کی بہبود کے سکریٹری اور بڑی تعداد میں شہد کی مکھیاں پالنے والوں نے اس تقریب میں شرکت کی۔

*****

U.No:5594

ش ح۔رف۔س ا



(Release ID: 1827102) Visitor Counter : 47