ریلوے کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav

بنارس ریل انجن کارخانہ (بی ایل ڈبلیو) نے مالی سال 2021-22 کے دوران اب تک کی سب سے زیادہ  ریل انجنوں  کی پیداوار کی

رواں مالی سال کل 367 ریل انجن تیار کیے گئے جن میں 04 انجن موزمبیق کو برآمد کیے گئے

بی ایل ڈبلیو  نے مالی سال 2021-22 میں برآمد شدہ لوکوز سے 60.68 کروڑ کی آمدنی حاصل کی

Posted On: 01 APR 2022 10:45AM by PIB Delhi

بنارس ریل انجن کارخانہ  نے مالی سال 2021-22 کے دوران اب تک کی سب سے زیادہ تعداد میں انجن تیار کرکے ایک نیا ریکارڈ قائم کرکے تاریخ رقم کی۔ رواں مالی سال مجموعی طور پر 367 ریل کے انجن  تیار کیے گئے جن میں 04 انجن موزمبیق کو برآمد کیے گئے جو کہ اپنے آپ میں ایک بہت بڑی کامیابی ہے۔ ان 367 ریل انجنوں میں مسافر ریل انجن ڈبلیو اے پی 7 کل 31، مال بردار انجن  ڈبلیو اے جی 9  کل 332 اور موزمبیق کو بھیجے گئے چار ریل کے انجن  شامل ہیں۔

 

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002C3YS.jpg

 

اس کے ساتھ ہی، بی ایل ڈبلیو  نے مالی سال 2021-22 میں برآمد شدہ لوکوز سے 60.68 کروڑ اور 2011 سے کل 704 کروڑ اور 2011 سے اب تک غیر ریلوے صارفین سے 1837 کروڑ حاصل  کیے ہیں۔ سال 2021-22 میں، بی ایل ڈبلیو  نے برآمدہ شدہ  ریل کے انجن کے پرزوں سے 6.09 کروڑ کی آمدنی حاصل کی جو پچھلے سال 2020-21 میں 1.08 کروڑ تھی اور یہ  پچھلے سال کے مقابلے میں 464 فیصد کا اضافہ  ہے۔ اسی طرح غیر ریلوے صارفین سے ریل انجنوں کے پرزوں کی فراہمی سے حاصل ہونے والی آمدنی 16.4 کروڑ تھی جو پچھلے سال 2020-21 میں 8.29 کروڑ تھی اور  اس کے مقابلے میں 98.6 فیصد زیادہ ہے۔

زمبابوے کی قومی ریلوے کے اعلیٰ سطحی وفد کا بنارس ریل انجن کارخانہ کا دورہ:

 

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image003O387.jpg

 

بی ایل ڈبلیو  میں تیار کردہ ڈیزل انجن افریقہ میں اپنی موجودگی کا احساس دلا رہے ہیں۔ خود کفیل ہندوستان کے وژن کو محسوس کرتے ہوئے، یہ کیپ گیج ڈیزل لوکوموٹیوز ہندوستان نے برآمد کے لیے ڈیزائن کیے ہیں۔

• ہندوستان میں بنایا گیا اور

• بھارت کی طرف سے مالی امداد

• برآمدات کیلئے

موزمبیق کو برآمد کیا گیا۔

کرینک کیس اسمبلی، جو کہ ریل انجن  کی سب سے اہم چیز ہے، بی ایل ڈبلیو میں اندرون خانہ تیار کی جاتی ہے۔ یہ انجن فی الحال کوئلے کی کانوں سے کوئلے کی نقل و حمل کے لیے مختلف یونٹوں میں کامیابی سے چلائے جا رہے ہیں۔

ان انجنوں کا باضابطہ افتتاح، موزمبیق کے صدر محترم نے 11 فروری 2022 کو بیرا، موزمبیق میں زمبابوے کے صدر مملکت اور ہندوستان کے ہائی کمشنر کی موجودگی میں کیا۔ اس طرح بنارس لوکوموٹیو فیکٹری عالمی سطح پر ایک قابل اعتماد پارٹنر اور لوکوموٹیو مینوفیکچرنگ برانڈ کے طور پر سامنے آئی۔ نتیجے کے طور پر، زمبابوے کی نیشنل ریلویز کا ایک پانچ رکنی اعلیٰ سطحی وفد، میسرز آرآئی ٹی ای ایس کے عہدیداروں کے ہمراہ، ہندوستان آیا۔

بی ایل ڈبلیو کی جنرل منیجر انجلی گوئل نے زمبابوے کے بورڈ کے چیئرمین این آر زیڈ ایڈووکیٹ مارٹن تفارا دنہا، بورڈ کے رکن جناب  الیش کمار پٹیل، جنرل منیجر محترمہ  ریسپینا زبانڈکو، جناب لاومور کٹونہا اور علاقائی انجینئر جناب تسیتسی اینڈلوو کو آر ٹی ای ایس کی  میٹنگ کے دوران  مبارکباد پیش کی اور انہیں برآمدی آرڈرز کی تکمیل میں مکمل تعاون اور مستعدی کی یقین دہانی کرائی۔ بی ایل ڈبلیو کی  جنرل منیجر نے زمبابوے کی ٹیم کو بھی یقین دلایا کہ بی ایل ڈبلیو  زمبابوے کی قومی ریلوے کی اقتصادی ترقی اور جدید کاری میں حصہ لینے کے لیے بہت خواہش مند ہے۔ زمبابوے نیشنل ریلوے کی ٹیم نے 29.03.2022 کو بی ایل ڈبلیو  میں دستیاب تعمیراتی سہولیات کو دیکھنے کے لیے بنارس ریل انجن کارخانہ  کا دورہ کیا۔

اس موقع پر بی ایل ڈبلیو کے اعلیٰ حکام کی ٹیم کے ساتھ نمائندگان کی میٹنگ ہوئی۔  میٹنگ کے دوران  بی ایل ڈبلیو کی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا گیا اور زمبابوے کے وفد کو برآمد شدہ لوکوز کی تفصیلات سے آگاہ کیا گیا۔

اس کے بعد اعلیٰ سطحی وفد نے بی ایل ڈبلیو  ورکشاپ کی مختلف دکانوں جیسے نیو بلاک شاپ، انجن ٹیسٹ شاپ، لوکو اسمبلی شاپ وغیرہ کا دورہ کیا۔ دکان کے دورے کے دوران وفد کو انجن کی تیاری میں شامل تعمیر کے مختلف مراحل سے آگاہ کیا گیا اور انہیں بی ایل ڈبلیو  میں دستیاب جدید ترین مینوفیکچرنگ سہولیات بھی دکھائی گئیں۔ وفد کو براڈ گیج لوکوموٹیو سے تبدیل شدہ معیاری گیج انجن بھی دکھایا گیا۔ وفد، بی ایل ڈبلیو میں دستیاب ڈیزائن کی صلاحیتوں اور مینوفیکچرنگ سہولیات سے بہت متاثر ہوا۔

۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

 

(ش ح۔ع ح  (

U. No. : 3617



(Release ID: 1812221) Visitor Counter : 53


Read this release in: English , Hindi , Punjabi , Tamil