ٹیکسٹائلز کی وزارت

ٹیکسٹائل انڈسٹری کے ہینڈلوم سیکٹر میں25,46,285 خواتین کام کر رہی ہیں

Posted On: 16 MAR 2022 3:25PM by PIB Delhi

ہینڈلوم کی مردم شماری 2019-20 کے مطابق، ملک بھر میں تقریباً 35,22,512 ہینڈ لوم کے شعبےمیں ملازمین کی تعداد کام کر رہی تھی ، جن میں سے 25,46,285 خواتین ورکرزبھی  تھیں جن کا حصہ کل ہینڈلوم ورکرز کا 72.29 فیصد تھا۔ اس کے علاوہ، تقریباً 16,87,534 خواتین دستکاری  کی کاریگر ہیں جو دفتر ترقیاتی کمشنر (ہینڈی کرافٹ) میں رجسٹرڈ ہیں۔ اعداد و شمار غیر منظم شعبے میں کام کرنے والی خواتین کی تعداد کو ظاہر کرتے ہیں۔ ٹیکسٹائل انڈسٹری کے ہینڈلوم اور دستکاری کے شعبے، ریاست کے لحاظ سے بالترتیب ضمیمہ I اور II میں پیش کیے جا رہے  ہیں۔

سرمایہ کاروں کو راغب کرنے،سرمایہ کاری کو فروغ دینے، روزگار پیدا کرنے اور عالمی ٹیکسٹائل مارکیٹ میں مضبوط پوزیشن حاصل کرنے کے مقصد سے، حکومت نے حال ہی میں ٹیکسٹائل کے لیے پروڈکشن لنکڈ انسینٹیو (پی ایل آئی) اسکیم اور پردھان منتری میگا انٹیگریٹڈ ٹیکسٹائل ریجن اینڈ اپیرل (پی ایم-مترا) اسکیم کو منظوری دی ہے۔ اس شعبے میں بڑے پیمانے پر روزگار پیدا کرنے کی صلاحیت ہے۔ اس کے علاوہ، حکومت مختلف اسکیموں کو نافذ کر رہی ہے جیسے ترمیم شدہ ٹیکنالوجی اپ گریڈیشن فنڈ اسکیم (A-TUFS)، پاورلوم سیکٹر کی ترقی کے لیے اسکیم (Power-Tex)، اسکیم فار انٹیگریٹڈ ٹیکسٹائل پارکس (SITP)، SAMARTH- اسکیم۔ ٹیکسٹائل سیکٹر، جوٹ (ICARE- بہتر کاشت اور ایڈوانسڈ ریٹنگ ایکسرسائز)، انٹیگریٹڈ پروسیسنگ ڈیولپمنٹ اسکیم (IPDS)، سلک سمگرا، نیشنل ہینڈلوم ڈویلپمنٹ پروگرام، نیشنل ہینڈی کرافٹ ڈیولپمنٹ پروگرام، انٹیگریٹڈ وول ڈیولپمنٹ پروگرام (IWDP)، نیشنل ٹیکنیکل ٹیکنالوجی سمیت دیگر اسکیمیں پورے ہندوستان  بھر میں (ملک گیر بنیادوں پر) ٹیکسٹائل سیکٹر کے فروغ اور ترقی کے لیے مشن کی سمت میں کام جاری ہے۔

 

ضمیمہ- I

چوتھی آل انڈیا ہینڈلوم مردم شماری 2019-20 کے مطابق خواتین ہینڈ لوم ورکرز کی ریاستی گیر سطح پر تعداد درج ذیل ہے:

نمبرشمار

ریاستیں/مرکز کے زیرانتظام علاقے

خواتین ہینڈلوم ملازمین کی تعداد

1

آندھراپردیش

86,398

2

اروناچل پردیش

73,871

3

آسام

11,79,507

4

بہار

6,444

5

چھتیس گڑھ

9,730

6

دہلی

2,219

7

گوا

25

8

گجرات

4,725

9

ہریانہ

14,078

10

ہماچل پردیش

10,059

11

جموں و کشمیر بشمول لداخ

13,973

12

جھارکھنڈ

11,614

13

کرناٹک

28,192

14

کیرالہ

14,175

15

مدھیہ پردیش

9,269

16

مہاراشٹر

1,266

17

منی پور

2,11,327

18

میگھالیہ

30,320

19

میزورم

22,083

20

ناگالینڈ

37,142

21

اڈیشہ

57,640

22

پڈوچیری

1,083

23

پنجاب

332

24

راجستھان

6,244

25

سکم

673

26

تمل ناڈو

1,26,549

27

تلنگانہ

23,245

28

تریپورہ

93,589

29

اترپردیش

93,054

30

اتراکھنڈ

8,595

31

مغربی بنگال

3,68,864

 

آل انڈیا

25,46,285

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

ضمیمہ- II

دفتر برائے ترقیاتی کمشنر (ہینڈی کرافٹس)کے ساتھ ریاست کے لحاظ سے خواتین دستکار کاریگروں کی رجسٹریشن کی گنتی

نمبرشمار

ریاست

خواتین ملازمین کی کل تعداد

1

انڈمان ونیکوبار

1,963

2

آندھرا پردیش

40,439

3

اروناچل پردیش

6,876

4

آسام

58,114

5

بہار

78,046

6

چھتیس گڑھ

8,721

7

دہلی

11,820

8

گوا

7,465

9

گجرات

98,683

10

ہریانہ

23,112

11

ہماچل پردیش

13,713

12

جموں و کشمیر

60,458

13

جھارکھنڈ

51,694

14

کرناٹک

16,493

15

کیرالہ

33,181

16

لداخ

245

17

مدھیہ پردیش

57,209

18

مہاراشٹر

35,149

19

منی پور

55,609

20

میگھالیہ

2,364

21

میزورم

1,187

22

ناگالینڈ

5,051

23

اڈیشہ

78,890

24

پڈوچیری

4,925

25

پنجاب

25,775

26

راجستھان

79,884

27

سکم

1,285

28

تمل ناڈو

46,995

29

تلنگانہ

19,721

30

تریپورہ

9,902

31

اترپردیش

5,53,895

32

اتراکھنڈ

30,326

33

مغربی بنگال

1,68,344

 

میزان

16,87,534

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

ضمیمہ ۔ III

گزشتہ تین برسوں اور موجودہ سال کے لیے انسانی ساختہ فائبر، فلیمینٹ یارن، اسپن یارن کی تخمینی پیداوار: (اعداد و شمار ملین میں)

میعاد

انسانی ساختہ فائبر(کلو گرام)

انسانی ساختہ فیلامنٹ یارن(کلو گرام )

کاٹن یارن(کلو گرام )

بلینڈیڈاور 100 فیصدغیر کاٹن یارن(کلو گرام )

مجموعی اسپن یارن(کلو گرام )

2018-19

1,442

1,160

4,208

1,682

5,890

2019-20

1,898

1,688

3,962

1,702

5,664

2020-21 (Apr-Jan)

1,299

1,226

2,950

1,225

4,175

2021-22 (Apr-Jan)

(Provisional)

1,803

1,676

3,410

1,462

4,872

 

 

*************

 

 

ش ح- س ک– ف ر

 

U. No.2767



(Release ID: 1806929) Visitor Counter : 174


Read this release in: English , Bengali , Tamil