نوجوانوں کے امور اور کھیل کود کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav

دریائے سرسوتی نے ہندوستان کے تہذیبی وجود میں اہم کردار ادا کیا: جناب سنجیو سانیال

صحت نہ صرف کھلاڑیوں کے لیے بلکہ نوجوانوں کے لیے بھی بہت ضروری ہے: محترمہ رانی رام پال

ہندوستانی صنعت کاری دنیا کو امید پروری اور کفایت شعاری کے بارے میں بہت کچھ سکھا سکتی ہے: جناب وجے شیکھر شرما

نیشنل یوتھ فیسٹیول 2022 میں زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی معروف شخصیات  نے خطاب کیا

Posted On: 12 JAN 2022 8:38PM by PIB Delhi


آج نیشنل یوتھ فیسٹیول 2022 کے پہلے دن زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی نامور شخصیات نے خطاب کیا اور اپنی مہارت کے شعبوں  سے قیمتی معلومات  پیش کی۔
جغرافیہ اور تہذیب کے درمیان قریبی تعلق کو سمجھتے ہوئے، معروف ماہر اقتصادیات، مصنف اور تاریخ دان سنجیو سانیال نے آج ہمارے تہذیبی وجود میں دریائے سرسوتی کے اہم کردار پر روشنی ڈالی۔ ہمارے جغرافیہ اور ہماری تہذیب کے درمیان گہرا تعلق ہے۔ اس سے ہمیں اپنی قدیم تہذیب کے بنیادی اصولوں کو سمجھنے میں مدد ملتی ہے۔ حکومت ہند کے پرنسپل اکنامک ایڈوائزرجناب سنجیو سانیال نے نیشنل یوتھ فیسٹیول 2022 میں "سرسوتی- دریا جس نے ہندوستانی تہذیب کو جنم دیا" کے عنوان پر بات کرتے ہوئے یہ بات کہی۔
دریائے سرسوتی کی بھولی ہوئی اور کم معلوم تاریخ اور ہمارے تہذیبی وجود میں اس نے ادا کیے ایک اہم کردار کے بارے میں بات کرتے ہوئے، انہوں نے ہندوستان کے بارے میں کچھ مستقل خرافات تردید کی۔ انہوں نے "دریائے سرسوتی کے اصل ثبوت کے بارے میں بات کی جیسا کہ قدیم ہندو متون میں حوالہ دیا گیا ہے۔" انہوں نے اپنے نقطہ نظر کو مضبوط کرنے کے لیے حقیقی نقشے اور سیٹلائٹ کی تصاویر بھی دکھائیں۔ انہوں نے "سپت سندھو" اور ہندی تہذیب کے عروج کے بارے میں بھی بات کی۔
ایک اور سیشن کے دوران، ہندوستانی خواتین کی ہاکی ٹیم کی کپتان رانی رامفال نے ہندوستان کے نوجوانوں کو ایک مشورہ دیا - فٹنس کے لیے کوشش کریں کیونکہ اچھی صحت صرف کھلاڑیوں کے لیے ہی نہیں، سب کے لیے بہت ضروری ہے۔ پدم شری یافتہ ہاکی کھلاڑی کو مزید کہا "صحت ہم سب کے لیے خاص اہمیت کی حامل ہے۔ نہ صرف کھلاڑیوں کے لیے، بلکہ ہم سب کے لیے
نوجوانوں کے لیے،"۔ رانی رامپال، جنہوں نے ہندوستانی خواتین کی ہاکی ٹیم کے آئندہ اولمپک کھیلوں میں آگے بڑھنے کے وژن کا اشتراک کیا اور ایک کھلاڑی کے طور پر اپنے سفر کے بارے میں تفصیل سے بات کی۔ ساتھ ہی انہوں نے ہر ممکن  سپورٹ اور بہتر انفراسٹرکچرفراہم کرکے ملک کے لیے عالمی معیار کے کھلاڑیوں جیسی تربیت فراہم کرنے کے لیے وزارت کھیل کا شکریہ ادا کیا  ۔ رانی نے کہا، ’’ہم خوش قسمت ہیں کہ ہم ایسے ماحول میں رہتے ہیں جہاں ملک میں کھیلوں کی صلاحیتوں کو پروان چڑھایا جا رہا ہے۔ ہندوستانی دستے کی بہترین کارکردگی اور اولمپکس میں ملک کے لیے مزید تمغے جیتنے کا سارا کریڈٹ ہمارے وزیر اعظم جناب نریندر مودی اور وزارت کھیل کو جاتا ہے۔
مالیاتی ٹیکنالوجی کمپنی پے ٹی ایم کے بانی اور سی ای او، جناب وجے شیکھر شرما نے زور دے کر کہا کہ ہندوستان دنیا کو یہ پیشکش کر سکتا ہے کہ کس طرح "بہتری اور کفایت شعاری" کے ساتھ کاروباری اداروں کو کامیاب بنایا جائے۔ جناب وجے شیکھر شرما نے اس پر بات کرتے ہوئے کہا،
’’ہندوستانی کاروباری صلاحیت دنیا کو اصلاح اور کفایت شعاری کے بارے میں بہت کچھ سکھا سکتا ہے کیونکہ ہم سب محدود وسائل اور اختیارات کے ساتھ کام کرتے ہیں یہ ایک بہت بڑا سبق ہے جسے ہم (ہندوستانی کاروباری) دنیا کو پیش کر سکتے ہیں۔ جناب وجے شرما نیشنل یوتھ فیسٹیول 2022 میں  "بھارت دنیا کو گلوبل انٹرپرینیورشپ کے بارے میں کیا سکھا سکتا ہے" کے موضوع پر خطاب کررہے تھے۔
عاجزانہ پس منظر سے پروان چڑھنے کے اپنے تجربات کے بارے میں بات کرتے ہوئے جناب وجے شیکھر نے کہا، "میں خوش قسمت ہوں کہ اس فیسٹول نے مجھ جیسے کاروباریوں کو نوجوانوں سے براہ راست بات کرنے کا پلیٹ فارم فراہم کیا ہے۔ میں وزیر اعظم جناب نریندر مودی اور مرکزی وزیر جناب انوراگ ٹھاکر کا شکرگزار ہوں کہ انہوں نے نوجوانوں کے لیے اتنا شاندار ایونٹ پیش کیا۔
ورچوئل نیشنل یوتھ فیسٹیول 2022 کا افتتاح وزیر اعظم جناب نریندر مودی اور مرکزی وزیر جناب انوراگ ٹھاکر نے  پڈوچیری حکومت کے تعاون سے 12 جنوری 2022 کو کیا تھا۔ کووڈ-19 وبائی امراض کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ فیسٹول  نوجوان سامعین کے لیے ایک تاریخی ایونٹ رہا ہے- دو روزہ فیسٹیول کا انعقاد وزیر اعظم کے وژن کے تحت کیا جا رہا ہے تاکہ ایک نئے ہندوستان کی تشکیل اور نوجوانوں کی طاقت کو بروئے کار لایا جا سکے۔ اس سمٹ میں عصری موضوعات جیسے ماحولیات اور موسمیاتی تبدیلی کی قیادت، ٹیک، انوویشن اور انٹرپرینیورشپ، مقامی اور قدیم حکمت اور قومی کردار، ملک کی تعمیر اور گھریلو دانشور شامل ہیں۔
اس سمٹ میں کنزرویشنسٹ جیسی شخصیات - ہنس دلال، رندیپ ہڈا، سنجیو سانیال اور ہندول سینگپتا جیسے مورخین کو دیکھا گیا جنہوں نے سوامی وویکانند، منوج کمار پر سوانح عمری لکھی ہے -پے ٹی ایم کے بانی وجے شیکھر شرما اور جناب دشینت شری دھر نے نوجوان سامعین سے خطاب کیا اور اپنے قیمتی مشوروں سے نوازا۔

****

U.No:361

ش ح۔ع ح



(Release ID: 1789647) Visitor Counter : 85


Read this release in: English , Hindi , Punjabi