وزیراعظم کا دفتر

عالمی تیل اور گیس سیکٹر کے چیف ا یگزیکٹو افسران اور ماہرین کے ساتھ وزیراعظم کا تبادلہ ٔخیال

ہمارا ہدف بھارت کو تیل اور گیس سیکٹر میں خود کفیل بنانا ہے:وزیراعظم

وزیراعظم نے بھارت میں تیل اور گیس  کی تلاش اوراس سیکٹر کے فروغ کے لئے چیف ایگزیکٹو افسران کو مدعو کیا

صنعتی حلقے کے اہم لیڈروں نے توانائی تک رسائی، سستی توانائی اور توانائی کے تحفظ میں  بہتری کے لئے حکومت کے ذریعہ اٹھائے گئے اقدامات کی تعریف کی

Posted On: 20 OCT 2021 9:14PM by PIB Delhi

 

وزیراعظم جناب نریندر مودی نے دنیاکے تیل اور گیس سیکٹر کے چیف ایگزیکٹو افسران اور ماہرین کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے توسط سے  بات چیت کی۔

وزیراعظم نے پچھلے سات برسوں کے دوران تیل اور گیس سیکٹر میں بہتری لانے کی کوششوں کے بارے میں تفصیلی تبادلہ  خیال کیا، جس میں تیل ا ور گیس کی تلاش  اور لائسنس پالیسی ، گیس مارکیٹنگ ، کوئلے کی کانوں سے ملنے و الی قدرتی گیس ، کوئلے کو گیس میں تبدیل کرنے  اور حال میں انڈین گیس   ایکسچینج میں کی گئی ا  صلاحات شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ‘  بھارت کو تیل اور گیس سیکٹر میں خود کفیل بنانے کے لئے ’ اس طرح کی اصلاحات جاری رہیں گی۔

تیل سیکٹر کے موضوع پر اظہارخیال کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ  ‘ریوینیو’ بڑھانے کے بجائے  ‘ پروڈکشن’ بڑھانے پر توجہ دی جارہی ہے۔ انہو ں نے اس بات  کا بھی ذکر کیا ہے کہ خام تیل کو ذخیرہ کرنے کی سہولت بڑھانے کی بھی ضرورت ہے۔ انہوں نے آگے کہاکہ ملک میں  قدرتی گیس کی مانگ تیزی سے بڑھ رہی ہے ۔ انہوں نے موجودہ گیس  انفراسٹرکچر اور اس کے امکانات کا بھی ذکر کیا، جس میں پائپ لائن، شہری گیس کی تقسیم اور ایل این جی کو دوبارہ گیس میں تبدیل کرنے والے ٹرمنل جیسے موضوعات شامل تھے۔

وزیراعظم نے ذکر کیا کہ 2016 سے  ایسی میٹنگوں میں جو تجاویز پیش کی جاتی رہی ہیں وہ تیل اور گیس سیکٹر کے سامنے آنے والے چیلنجوں کو سمجھنے میں  کافی مدد گاررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت  کشادگی، امید پروری او رمواقع کی سرزمین ہے، اور یہاں نئے خیالات، امکانات اور اختراعات کی فراوانی ہے۔ انہوں نے  چیف ایگزیکٹو افسران اور ماہرین کو دعوت دی کہ وہ بھارت میں تیل اور گیس کی تلاش اوراس سیکٹر کے فروغ کے لئے بھارت کے ساتھ شراکت داری کریں۔

اس تبادلہ خیال میں  دنیا بھر سے صنعتی حلقے کی سرکردہ شخصیات نے حصہ لیا، ان میں روز نیفٹ کے صدر اور سی ای او  ڈاکٹر ای گورسیچن، سعودی ارامکو کے چیئرمین او ر سی ای او جناب امین ناصر، برٹش پٹرولیم کے سی ای او جناب برنارڈ لونی، آئی ایچ ایس  مارکیٹ کے نائب چیئرمین ڈاکٹر ڈینیل ایئرگن،سلوم برجر لمیٹڈ کے سی ای او جناب اولیویئر لی پیوش، ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کے چیئرمین اور منیجنگ ڈائریکٹر  جناب مکیش انبانی، ودانتا لمیٹڈ کے چیئرمین جناب انل اگروال اور دیگر شامل تھے۔

سبھی چیف ایگزیکٹو افسران اور ماہرین نے توانائی تک رسائی ، سستی توانائی اور توانائی کے تحفظ میں بہتری کے لئے حکومت کے ذریعہ اٹھائے گئے اقدامات کی تعریف کی ۔ انہوں نے وزیراعظم کی قیادت کی تعریف کی کہ ان کے ذریعہ  ویژنری اور حوصلہ مندانہ مقصد کے ذریعہ بھارت میں  صاف ستھری توانائی کی طرف قدم بڑھائیں۔ صنعتی حلقے کی سرکردہ شخصیات نے کہاکہ بھارت صاف ستھری توانائی ٹکنالوجی کو تیزی سے اپنا رہا ہے اور وہ عالمی توانائی سپلائی چین کو شکل دینے میں اہم رول اد ا کرسکتا ہے۔ ان سبھی نے کہا کہ توانائی میں تبدیلی کو  پائیدار اور مساوات پر مبنی بنانے کو یقینی کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے صاف ستھری ترقی اور پائیداریت کو مزید فروغ دینے کے لئے اپنی تجاویز اور خیالات بھی پیش کئے۔

 

****************

(ش ح۔ف ا۔ف ر)

U No. 12051



(Release ID: 1765363) Visitor Counter : 43