وزارتِ تعلیم

طلباء کی اندرونی  صلاحیتوں کو یکجا کرنے کی بنیادی ذمہ داری اساتذہ پر عائد ہوتی ہے؛   ایک اچھا استاد شخصیت ساز ، معاشرہ اور قوم معمار ہوتا ہے: صدرجمہوریہ  کووند

صدرجمہوریہ  کووند نے اساتذہ کو قومی اعزازات سے نوازا

اساتذہ اکیسویں صدی کے ہندوستان کی تقدیرسنواریں گے – جناب دھرمیندر پردھان


Posted On: 05 SEP 2021 1:48PM by PIB Delhi

نئی دہلی۔ 05  ستمبر         طلباء کی اندرونی  صلاحیتوں کو یکجا کرنے کی بنیادی ذمہ داری اساتذہ پر عائد ہوتی ہے۔ صدر جمہوریہ ہند  جناب رامناتھ کووند نے کہا کہ ایک اچھا استاد شخصیت ساز ، معاشرہ اور قوم کا معمار ہوتا  ہے۔ وہ آج یوم اساتذہ  (5 ستمبر 2021)کے موقع پر ایک ورچوئل ایوارڈ تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ تقریب میں ملک بھر سے 44 اساتذہ کو قومی ایوارڈ سے نوازا گیا۔

مرکزی وزیر تعلیم ، دھرمیندر پردھان اور وزیر مملکت برائے تعلیم جناب سبھاش سرکار؛وزیر مملکت جناب راج کمار رنجن سنگھ اور محترمہ اناپورنا دیوی نے بھی اس موقع پر شرکت کی۔ محکمہ اسکولی تعلیم اور خواندگی میں سکریٹری محترمہ انیتا کروال،  اور محکمہ اعلی تعلیم میں سکریٹری جناب امیت کھرے اور دیگر اعلیٰ حکام بھی  اس موقع پر موجود تھے۔

صدر جمہوریہ ہند نے ایوارڈ حاصل کرنے والے تمام اساتذہ کو مبارکباد دی ۔ انہوں نے کہا کہ ایسے اساتذہ اس یقین کو مضبوط کرتے ہیں کہ آنے والی نسل کا مستقبل  ہمارے قابل اساتذہ کے ہاتھوں میں محفوظ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اساتذہ کا ہر کسی کی زندگی میں بہت اہم مقام ہے۔ لوگ اپنے اساتذہ کو زندگی بھر یاد رکھتے ہیں۔ جواساتذہ اپنے طلباء کو پیار اور عقیدت سے پروان چڑھاتے ہیں وہ ہمیشہ اپنے طلباء سے عزت حاصل کرتے ہیں۔

صدر جمہوریہ نے اساتذہ پر زور دیا کہ وہ اپنے طلباء کو ایک سنہری مستقبل کا تصور کرنے اور ان کی خواہشات کی تکمیل کے لیے ضروری اہلیت حاصل کرنے کی ترغیب دیں۔ انہوں نے کہا کہ اساتذہ کا فرض ہے کہ وہ اپنے طلبہ میں مطالعہ کے تئیں دلچسپی پیدا کریں۔ حساس اساتذہ اپنے طرز عمل ، اخلاق اور تدریس سے طلباء کا مستقبل سنوار سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اساتذہ کو اس بات پر خصوصی توجہ دینی چاہیے کہ ہر طالب علم کی صلاحیت، قابلیت ، نفسیات ، سماجی پس منظر اور ماحول مختلف ہوتا ہے۔ اس لیے ہر بچے کی ہمہ جہت ترقی کے لیے ان کی خصوصی ضروریات ، دلچسپیوں اور صلاحیتوں پر زور دیا جانا چاہیے۔

صدر جمہوریہ نے کہا کہ گزشتہ سال نافذ کی گئی  قومی تعلیمی پالیسی  کے تحت ہندوستان کو عالمی نالج سپر پاور کے طور پرثابت کرنے کا ایک اہم  مقصد مقرر کیا گیا ہے۔ ہمیں طالب علموں کو ایسی تعلیم فراہم کرنی ہے جو علم پر مبنی انصاف پسند معاشرے کی تعمیر میں مددگار ثابت ہو۔ ہمارا تعلیمی نظام ایسا ہونا چاہیے کہ طلبہ آئینی اقدار اور بنیادی فرائض سے وابستگی پیدا کریں ، حب الوطنی کے جذبہ  کو تقویت دیں  اور انہیں بدلتے ہوئے عالمی منظر نامے میں اپنے کردار سے آگاہ کریں۔

صدر جمہوریہ نے کہا کہ مرکزی وزارت تعلیم نے اساتذہ کواہل بنانے کے لیے کچھ اہم اقدامات کیے ہیں۔ وزارت نے'نشٹھا' کے نام سے اساتذہ کا مربوط تربیتی پروگرام شروع کیا ہے ،جس کے تحت اساتذہ کے لیے 'آن لائن صلاحیت سازی ' کے لیے کوششیں کی جا رہی ہیں۔ اس کے علاوہ ، 'پراگیتا'( یعنی ڈیجیٹل تعلیم سے متعلق گزشتہ سال جاری کی گئیں ہدایات) کووڈ وبائی مرض کے دوران بھی تعلیم کی رفتار کو برقرار رکھنے کے لیے ایک قابل تحسین قدم ہے۔ انہوں نے مشکل حالات میں بھی نئی راہیں تلاش کرنے پر مرکزی وزارت تعلیم کی پوری ٹیم کی  ستائش کی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے جناب دھرمیندرپردھان نے کہا کہ ایک استاد جو کردار ادا کرتا ہے وہ قوم کی مضبوط ترقی کے لیے اہم ہوتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اساتذہ ہماری نئی نسل کی سوچ اور ذہنوں کی تشکیل میں اہم کردار ادا کر تے ہیں۔ جناب پردھان نے ان تمام اساتذہ کا شکریہ ادا کیا جو اکیسویں صدی کے ہندوستان کی تقدیر  سنوارنے کے لیے انتھک محنت کر رہے ہیں۔

مرکزی وزیر نے 28 ریاستوں/مرکز کے زیر انتظام علاقوں کے تمام 44 اساتذہ کو مبارکباد دی جنہوں نے مثالی کام کیا ہے اور انہیں قومی ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔ انہوں نے اوڈیشہ کے پدم شری آنجہانی شری پرکاش راؤ اور ان جیسے ان گنت دیگر لوگوں کو بھی یاد کیا جنہوں نے تعلیم کے ذریعہ بچوں کو بااختیار بنایا۔

جناب پردھان نے کہا کہ ہندوستان کے بہترین اساتذہ کی کوششوں کو پہچاننے کے لیے تقریب میں شامل ہونے کا آج انہیں اعزاز حاصل ہوا ہے۔ وزیر تعلیم نے مزید کہا کہ اساتذہ نے کووڈ 19 کے دوران تعلیم کے تسلسل کو یقینی بنانے میں کلیدی کردار ادا کیا ہے۔

وزیر مملکت برائے تعلیم ، محترمہ انا پورنا دیوی نے شکریہ کی تجویز پیش کی ۔  

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 (ش ح ۔ رض  ۔ ج ا  (

 (05.09.2021)

U-8656

 



(Release ID: 1752372) Visitor Counter : 31