کامرس اور صنعت کی وزارتہ

اپیڈا نے باسمتی ایکسپورٹ ڈیولپمنٹ فاؤنڈیشن کے ساتھ باسمتی پیدا کرنے والے کسانوں کے لیے بیداری پروگرام کا انعقاد کیا

Posted On: 19 JUL 2021 5:39PM by PIB Delhi

نئی دہلی،19؍جولائی: برامدات کو فروغ دینے کی خاطر، زراعت اور ڈبہ بند خوراک کی پیداواری برامدات کی ترقیاتی اتھارٹی (اپیڈا)کے باسمتی کی برامدات کے فروغ سے متعلق فاؤنڈیشن (بی ای ڈی ایف) نے باسمتی کی کھیتی میں شامل کسانوں میں بیدار پیدا کرنے کی خاطر اختراعی اقدامات کیے ہیں۔

اس پہل کے ایک حصے کے طور پر بی ای ڈی ایف نے اترپردیش کی چاول کے برامد کاروں کی انجمن کے ساتھ مل کر کسانوں کو اعلی معیار کے باسمتی چاول پیدا کرنے کی ہمت افزائی کی خاطر بیداری پروگرام کا آغاز کیا ہے۔ یہ پروگرام اترپردیش کے گوتم بدھ نگر ضلع کے تحت جہانگیر پور میں منعقد کیا گیا۔

بھارت کی آزادی کے 75سالہ جشن کے ایک حصے کے طور پر یا 'آزادی کا امرت مہوتسو'کے ایک حصے کے طور پر بی ای ڈی ایف نے باسمتی کے دھان کی کھیتی میں کیمیائی کھاد کے موثر استعمال سے کسانوں کو آگاہ کرنے کے لیے ایک بیدار پروگرام کا آغاز کیا ہے۔

بیداری  پروگرام کے ذریعہ کسانوں کو مطلع کیا گیا کہ باسمتی چاول کی کھیتی بھارتی روایت کا حصہ ہے اور اس روایت کو برقرار رکھنے کی ایک مشترکہ ذمہ داری ہے کیوں کہ عالمی مارکٹ میں باسمتی چاول کی بہت بڑی مانگ ہے۔ کسانوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ خود کو basmati.netپر ریاستی محکمہ زراعت کے ذریعہ خود کو رجسٹرڈ کرائیں۔

اس بیداری مہم میں مغربی اترپردیش کے 125سے زیادہ کسانون نے شرکت کی جہاں انہیں بتایا گیا کہ اعلی معیار کا باسمتی چاول پیدا کرنے کے لیے کیمیائی کھاد کا درست مقدار میں استعمال ضروری ہے۔اس کے ساتھ ہی دنیا میں باسمتی چاول کی مانگ میں اضافے سے ان کو مدد ملے گی اور کسانوں کی آمدنی میں اضافہ ہوگا۔

اپیڈا ، ڈی ای ڈی ایف کے ذریعہ باسمتی چاول کی کھیتی کو فروغ دینے کی خاطر ریاستی حکومت کی مدد کر رہی ہے۔

اپیڈا نے معیاری باسمتی چاول کی پیداوار کو یقینی بنانے خاطر کسانوں کو مشورہ دیا کہ وہ معیار کر برقرار رکھنے کے لیے مستند بیجوں کا ہی استعمال کریں اور اس کے ساتھ کیمیائی کھاد کا سائنسی طور پر استعمال کریں   جس سے ملک سے باسمتی چاول کی برامدات میں مزید اضافہ ہوگا۔

اپیڈا کے ذریعہ تیار کردہ basmati.net کا مقصد باسمتی ویلیو چین کے ایک حصے کے طور پر کی جانے والی سرگرمیوں کی تفصیلات کے بارے میں تمام فریقوں کو معلومات فراہم کرنا اور انہیں ایک مشترکہ پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے۔

سال 2020-21 میں بھارت نے 29849کروڑ روپے (4019 ملین امریکی ڈالر)کی قیمت کے 4.63ملین ٹن باسمتی چاول برامد کیے گئے۔

اپیڈا ویلیو چین کے مختلف فریقوں کے ساتھ اشتراک کے ذریعہ چاولوں کی برامدات کو فروغ دیتی ہے۔ حکومت نے اپیڈا کی سرپرستی میں چاولوں کی برامدات کے فروغ سے متعلق فورم (آر ای پی ایف) قائم کیا تھا۔ آر ای پی ایف میں چاول کی صنعت ، برامد کاروں ، اپیڈ اکے عہدیداروں کے علاوہ کامرس کی وزارت کے نمائندے اور مغربی بنگال ، اترپردیش، پنجاب، ہریانہ ، تلنگانہ،آندھرا پردیش، آسام، چھتیس گڑھ اور اڑیسہ سمیت چاول پیدا کرنے والی بڑی ریاستوں کے نمائندے شامل ہیں۔

****************

 

ش ح – و ا – س ک

U. NO. 6738



(Release ID: 1737097) Visitor Counter : 25


Read this release in: English , Hindi , Punjabi