بہت چھوٹی، چھوٹی اور درمیانی صنعتوں کی وزارت

ادیم  اور یو اے پی پر رجسٹرڈ انٹرپرائزز کی کل تعداد 4 کروڑ سے تجاوز کر گئی، جو وزارت کے ذریعے شروع کی گئی رسمی پہل کے لیے ایک اہم سنگ میل ہے

Posted On: 15 MAR 2024 2:40PM by PIB Delhi

پندرہ  مارچ، 2024 کو، ادیم   اور یو اے پی  پر رجسٹرڈ انٹرپرائزز کی کل تعداد 4 کروڑ سے تجاوز کر گئی، جو کہ بہت چھوٹی، چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں  کی وزارت کے ذریعے شروع کی گئی رسمی پہل کے لیے ایک اہم سنگ میل ہے۔ بہت چھوٹی، چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں   کے فروغ اور ترقی میں سہولت فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

وزارت نے 26 جون 2020 کو ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے پلانٹ اور مشینری اور ٹرن اوور میں سرمایہ کاری کی ایک جامع تعریف کو اپنایا، جسے بہت چھوٹی، چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں  کی درجہ بندی کے لیے متعارف کرایا گیا ہے۔ یکم جولائی 2020 کو ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے، ایک سادہ، آن لائن اور مفت ادیم  رجسٹریشن پورٹل یعنی ادیم  کو پی اے این  رکھنے والے اداروں کی رسمی اور باقاعدہ شکل دینے کے لیے شروع کیا گیا تھا۔ ادیم  رجسٹریشن پلانٹ اور مشینری میں سرمایہ کاری اور کاروبار دونوں کو مدنظر رکھتی ہے۔ پلانٹ اور مشینری میں سرمایہ کاری اور کاروبار کی تفصیلات سی بی ڈی ٹی اور جی ایس ٹی این کے ڈیٹا بیس سے حاصل کی گئی ہیں۔

اس کے بعد، وزارت نے 11 جنوری 2023 کو ان کاروباری اداروں کے لیے ادیم اسسٹ پلیٹ فارم (یو اے پی ) کا آغاز کیا جن کے پاس جی ایس ٹی این نہیں ہے۔ حکومت ہند، گزٹ نوٹیفکیشن کے ذریعے ایس او  1296 (ای)  مورخہ 20 مارچ، 2023، نے وضاحت کی ہے کہ یو اے پی  پر غیر رسمی بہت چھوٹی صنعتوں  (آئی ایم ایز) کو جاری کردہ سرٹیفکیٹ کو ترجیحی شعبے کے قرضے (پی ایس ایل) کے فوائد حاصل کرنے کے مقصد کے لیے ادیم   رجسٹریشن سرٹیفکیٹ کے برابر سمجھا جائے گا۔ اسی مناسبت سے، آئی بی آئی  نے 9 مئی 2023 کو اپنے سرکلر کے ذریعے یہ بھی درجہ بندی کی ہے کہ ادیم   اسسٹ سرٹیفکیٹ کے ساتھ آئی ایم ایز کو پی ایس ایل کی درجہ بندی کے مقاصد کے لیے ایم ایس ایم ای کے تحت بہت چھوٹی صنعت سمجھا جائے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ش ح۔  ش ت۔ن ا۔

U- 6149



(Release ID: 2014952) Visitor Counter : 44


Read this release in: Tamil , English , Hindi