امور داخلہ کی وزارت

سرحدپاربروقت رقم کی منتقلی

Posted On: 28 MAR 2023 5:12PM by PIB Delhi

داخلی امور کے وزیرمملکت جناب نتیہ نند رائے نے لوک سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں بتایا کہ  این آئی پی ایل (این پی سی آئی انٹرنیشنل پیمنٹس لمیٹڈ)، جو کہ نیشنل پیمنٹس کارپوریشن آف انڈیا (این پی سی آئی) کی ایک مکمل ملکیتی ذیلی کمپنی ہے، نے تجارتی اداروں میں بھیم یو پی آئی کیو آر کی سرحد پار قبولیت کو قابل  عمل بنانے کے لیے مختلف اقدامات کیے ہیں۔ یہ شراکت داریاں  ہندوستانی مسافروں کو بین الاقوامی تجارتی اداروں میں اپنی تمام خوردہ خریداریوں کے لیے بھیم یو پی آئی کیو آر کا استعمال کرتے ہوئے ادائیگی کرنے میں سہولت فراہم کرتی ہیں۔ فی الحال، بھیم یو پی آئی کیو آر نے سنگاپور، متحدہ عرب امارات ، ماریشس، نیپال اور بھوٹان میں قبولیت حاصل کر لی ہے۔

    ہندوستان اور سنگاپور نے اپنے متعلقہ تیزی سے ادائیگی کے نظام کا استعمال کرتے ہوئے سرحد پار رابطہ شروع کیا ہے، یعنی۔ یونیفائیڈ پیمنٹس انٹرفیس(یو پی آئی) اور پے ناؤ۔ یوپی آئی۔ پے ناؤ رابطہ لنکیج کسی بھی ملک میں تیزی سے ادائیگی کے دو نظام کے صارفین کو آسان، محفوظ، فوری، اور سرمایہ کاری مؤثر سرحد پار رقوم کی منتقلی کا اہل بناتا ہے۔ صرف یو پی آئی۔ آئی ڈی ، موبائل نمبر، یا ورچوئل پیمنٹ ایڈریس (وی پی اے) کا استعمال کرتے ہوئے فنڈز ہندوستان میں / سے منتقل کیے جا سکتے ہیں۔ یہ باہمی ربط  جی20 کی مالیاتی شمولیت کی ترجیحات کے ساتھ مطابقت رکھتا ہے جو کہ تیز، سستی اور زیادہ شفاف سرحد پار ادائیگیوں کو چلاتا ہے اور ہندوستان اور سنگاپور کے درمیان سرحد پار ادائیگیوں کے بنیادی ڈھانچے کی ترقی میں ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگا۔

    ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) ، سرکلر نمبر RBI/2022-23/176 CO.DPSS کے ذریعے،POLC.No.S-1907/02.14.006/2022-23 مورخہ 10.02.2023، نے ہندوستان آنے والے غیر ملکی شہریوں اور این آر آئیز کو یونیفائیڈ پیمنٹس انٹرفیس (یوپی آئی) تک رسائی کی اجازت دی ہے تاکہ وہ ہندوستان میں رہتے ہوئے یو پی آئی کا استعمال کرکے ادائیگی کرسکیں۔ . اس سہولت کا تصور غیر ملکی شہریوں اور این آر آئیز کو ہندوستان میں قیام کے دوران زیادہ آسان اور آسان طریقے سے لین دین کرنے /خرچ کرنے میں مدد فراہم کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔ جیسا کہ لین دین کا تصفیہ آئی این آر میں ہوتا ہے، اس سےتاجروں کے درمیان قبولیت میں اضافہ ہوگا۔

 

 

***

ش ح۔  ح ا۔ ف ر

U. No. 4740



(Release ID: 1921341) Visitor Counter : 96


Read this release in: English