کامرس اور صنعت کی وزارتہ

اکتوبر 2021 کے انڈیکس کے مقابلے میں آٹھ بنیادی صنعتوں کے مشترکہ اشاریہ میں اکتوبر 2022 میں 0.1 فیصد (عارضی) اضافہ ہوا


جولائی 2022 کے لئے آٹھ بنیادی صنعتوں کے انڈیکس کی حتمی شرح نمو اس کی عارضی سطح 4.5 فیصد سے بہتر ہوکر 4.8 فیصد پر پہنچ گئی

اپریل-اکتوبر 2023-2022  کے دوران آئی سی آئی کی مجموعی ترقی کی شرح گزشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے 8.2فیصد (عارضی) پر ہے

Posted On: 30 NOV 2022 5:07PM by PIB Delhi

اکتوبر، 2022 کے لیے آٹھ بنیادی صنعتوں کا اشاریہ (بنیاد: 2011-12=100)

آٹھ بنیادی صنعتوں کے مشترکہ انڈیکس میں اکتوبر 2021 کے انڈیکس کے مقابلے اکتوبر 2022 میں 0.1 فیصد (عارضی) اضافہ ہوا۔ کھاد، اسٹیل، کوئلہ اور بجلی کی پیداوار میں اکتوبر 2022 میں پچھلے سال کے اسی مہینے کے مقابلے میں اضافہ ہوا۔ آئی سی آئی منتخب آٹھ بنیادی صنعتوں میں پیداوار کی مشترکہ اور انفرادی کارکردگی کی پیمائش کرتا ہے۔ ان میں  کوئلہ، خام تیل، قدرتی گیس، ریفائنری مصنوعات، کھاد، اسٹیل، سیمنٹ اور بجلی شامل ہے۔ آٹھ بنیادی صنعتیں صنعتی پیداوار کے اشاریے (آئی آئی پی) میں شامل اشیاء کے وزن کے 40.27 فیصد پر مشتمل ہیں۔ سالانہ اور ماہانہ اشاریہ جات کی تفصیلات اور شرح نمو بالترتیب ضمیمہ I اور II میں فراہم کی گئی ہے۔

2. جولائی 2022 کے لیے آٹھ بنیادی صنعتوں کے انڈیکس کی حتمی شرح نمو اس کی عارضی سطح 4.5فیصد سے بہتر ہو کر  4.8فیصدپر پہنچ گئی ہے۔ اپریل تا اکتوبر 2023-2022 کے دوران آئی سی آئی کی مجموعی ترقی کی شرح گزشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 8.2فیصد(عارضی) تھی۔

3. آٹھ بنیادی صنعتوں کے انڈیکس کا خلاصہ ذیل میں دیا گیا ہے:

کوئلہ- کوئلے کی پیداوار (وزن: 10.33 فیصد) اکتوبر، 2022 میں اکتوبر، 2021 کے مقابلے میں 3.6 فیصد بڑھی۔ اس کے مجموعی اشاریہ میں اپریل سے اکتوبر، 2022-23 کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 18.1 فیصد اضافہ ہوا۔

خام تیل – خام تیل کی پیداوار (وزن: 8.98 فیصد) اکتوبر، 2022 میں اکتوبر، 2021 کے مقابلے میں 2.2 فیصد کم ہوئی۔ اس کا مجموعی اشاریہ اپریل سے اکتوبر 2023-2022  کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 1.4 فیصد کم ہوا۔ .

قدرتی گیس - قدرتی گیس کی پیداوار (وزن: 6.88 فیصد) اکتوبر 2021 کے مقابلے اکتوبر 2022 میں 4.2 فیصد کم ہوئی۔ اس کے مجموعی انڈیکس میں اپریل سے اکتوبر2023-2022  کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 0.9 فیصد اضافہ ہوا۔ .

پیٹرولیم ریفائنری پروڈکٹس– پیٹرولیم ریفائنری کی پیداوار (وزن: 28.04 فیصد) اکتوبر 2022 میں اکتوبر 2021 کے مقابلے میں 3.1 فیصد کم ہوئی۔ اس کے مجموعی اشاریہ میں اپریل تا اکتوبر 2023-2022   کے دوران گزشتہ سال  کی  اسی مدت کے مقابلے میں 8.1 فیصد اضافہ ہوا۔

کھاد - کھاد کی پیداوار (وزن: 2.63 فیصد) اکتوبر 2021 کے مقابلے اکتوبر 2022 میں 5.4 فیصد بڑھی۔ اس کے مجموعی اشاریہ میں اپریل سے اکتوبر 2023-2022   کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 10.5 فیصد اضافہ ہوا۔

اسٹیل – اسٹیل کی پیداوار (وزن: 17.92 فیصد) اکتوبر، 2022 میں اکتوبر، 2021 کے مقابلے میں 4.0 فیصد بڑھی۔ اس کے مجموعی اشاریہ میں اپریل سے اکتوبر، 2023-2022  کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 6.1 فیصد اضافہ ہوا۔

سیمنٹ – سیمنٹ کی پیداوار (وزن: 5.37 فیصد) اکتوبر، 2022 میں اکتوبر، 2021 کے مقابلے میں 4.3 فیصد کم ہوئی۔ اس کے مجموعی اشاریہ میں اپریل سے اکتوبر، 2022-23 کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 8.6 فیصد اضافہ ہوا۔

بجلی -بجلی کی پیداوار (وزن: 19.85 فیصد) اکتوبر 2021 کے مقابلے اکتوبر 2022 میں 0.4 فیصد بڑھی۔ اس کے مجموعی اشاریہ میں اپریل سے اکتوبر 2023-2022  کے دوران پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 9.3 فیصد اضافہ ہوا۔

نوٹ 1: اگست، 2022، ستمبر، 2022 اور اکتوبر، 2022 کا ڈیٹا عارضی ہے۔ بنیادی صنعتوں کے عدد اشاریوں میں  ماخذ ایجنسیوں کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق نظر ثانی کی گئی  / انہیں حتمی شکل دی گئی ہے۔

نوٹ 2: اپریل 2014 سے، قابل تجدید ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کا ڈیٹا بھی شامل ہے۔

نوٹ 3: صنعت کے لحاظ سے اوپر اشارہ کیا گیا انفرادی صنعتی وزن ہے جو آئی آئی پی  سے اخذ کیا گیا ہے اور تناسب کی بنیاد پر آئی سی آئی کے مشترکہ وزن میں 100 کے برابر ہے۔

نوٹ 4: مارچ 2019 سے، تیار اسٹیل کی پیداوار کے اندر آئٹم ’کولڈ رولڈ(سی آر) کوائلز‘ کے تحت ہاٹ رولڈ پکلڈ اینڈ آئلڈ(ایچ اار پی او) نامی ایک نئی اسٹیل پروڈکٹ کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

نوٹ 5: نومبر 2022 کے لیے انڈیکس کا اجراء جمعہ 30 دسمبر 2022 کو ہوگا۔

ضمیمہ- I

آٹھ بنیادی صنعتوں کی کارکردگی

سالانہ اشاریہ اور شرح نمو

بنیادی سال: 2011-12=100

اشاریہ

شعبہ

کوئلہ

خام تیل

قدرتی گیس

ریفائنری مصنوعات

کھاد

اسٹیل

سمینٹ

بجلی

مجموعی اشاریہ

وزن

10.33

8.98

6.88

28.04

2.63

17.92

5.37

19.85

100.00

2012-13

103.2

99.4

85.6

107.2

96.7

107.9

107.5

104.0

103.8

2013-14

104.2

99.2

74.5

108.6

98.1

115.8

111.5

110.3

106.5

2014-15

112.6

98.4

70.5

108.8

99.4

121.7

118.1

126.6

111.7

2015-16

118.0

97.0

67.2

114.1

106.4

120.2

123.5

133.8

115.1

2016-17

121.8

94.5

66.5

119.7

106.6

133.1

122.0

141.6

120.5

2017-18

124.9

93.7

68.4

125.2

106.6

140.5

129.7

149.2

125.7

2018-19

134.1

89.8

69.0

129.1

107.0

147.7

147.0

156.9

131.2

2019-20

133.6

84.5

65.1

129.4

109.8

152.6

145.7

158.4

131.6

2020-21

131.1

80.1

59.8

114.9

111.6

139.4

130.0

157.6

123.2

2021-22

142.3

77.9

71.3

125.1

112.4

163.0

156.9

170.1

136.1

Apr-Oct 2021*

119.2

78.5

71.6

118.9

111.6

158.2

149.2

173.4

131.3

Apr-Oct 2022*

140.7

77.4

72.3

128.5

123.4

167.8

162.0

189.6

142.1

* عارضی

شرح نمو (فی صد میں سال بہ سال کی بنیاد پر)

شعبہ

کوئلہ

خام تیل

قدرتی گیس

ریفائنری مصنوعات

کھاد

اسٹیل

سمینٹ

بجلی

مجموعی اشاریہ

وزن

10.3

9.0

6.9

28.0

2.6

17.9

5.4

19.9

100.0

2012-13

3.2

-0.6

-14.4

7.2

-3.3

7.9

7.5

4.0

3.8

2013-14

1.0

-0.2

-12.9

1.4

1.5

7.3

3.7

6.1

2.6

2014-15

8.0

-0.9

-5.3

0.2

1.3

5.1

5.9

14.8

4.9

2015-16

4.8

-1.4

-4.7

4.9

7.0

-1.3

4.6

5.7

3.0

2016-17

3.2

-2.5

-1.0

4.9

0.2

10.7

-1.2

5.8

4.8

2017-18

2.6

-0.9

2.9

4.6

0.03

5.6

6.3

5.3

4.3

2018-19

7.4

-4.1

0.8

3.1

0.3

5.1

13.3

5.2

4.4

2019-20

-0.4

-5.9

-5.6

0.2

2.7

3.4

-0.9

0.9

0.4

2020-21

-1.9

-5.2

-8.2

-11.2

1.7

-8.7

-10.8

-0.5

-6.4

2021-22

8.5

-2.6

19.2

8.9

0.7

16.9

20.8

8.0

10.4

Apr-Oct 2021*

12.2

-2.8

22.6

11.7

-1.1

30.8

33.6

11.3

15.6

Apr-Oct 2022*

18.1

-1.4

0.9

8.1

10.5

6.1

8.6

9.3

8.2

*عارضی، سال بہ سال کا حساب پچھلے سال کے اسی مالی سال سے لگایا جاتا ہے۔

ضمیمہ II

آٹھ بنیادی صنعتوں کی کارکردگی

ماہانہ اشاریہ اور شرح نمو

بنیادی سال: 2011-12=100

 اشاریہ

شعبہ

کوئلہ

خام تیل

قدرتی گیس

ریفائنری مصنوعات

کھاد

اسٹیل

سمینٹ

بجلی

مجموعی اشاریہ

وزن

10.33

8.98

6.88

28.04

2.63

17.92

5.37

19.85

100.00

Oct-21

140.4

79.2

76.3

127.5

122.9

167.6

161.9

167.3

137.8

Nov-21

149.2

76.6

72.2

131.9

121.4

157.4

127.3

147.9

131.8

Dec-21

164.3

79.1

72.7

134.4

121.1

169.9

168.8

162.5

141.7

Jan-22

174.8

79.1

71.4

135.8

115.2

174.5

176.4

165.6

144.8

Feb-22

174.4

71.6

64.9

124.9

102.4

165.0

167.7

160.8

137.1

Mar-22

210.8

79.6

72.6

142.5

107.7

182.4

198.8

191.0

158.0

Apr-22

147.7

77.8

70.9

134.7

96.1

164.0

170.9

194.5

144.6

May-22

156.3

80.3

73.5

137.3

126.0

172.0

165.4

199.9

149.6

Jun-22

148.0

76.9

70.9

130.3

126.4

158.2

177.4

196.9

143.9

Jul-22

132.7

77.3

72.6

129.8

127.6

166.8

155.4

188.9

141.1

Aug-22*

127.5

76.7

73.0

123.6

130.9

169.6

151.5

191.3

139.7

Sep-22*

127.5

75.2

72.1

120.2

127.0

169.7

158.7

187.4

138.0

Oct-22*

145.5

77.4

73.0

123.5

129.5

174.4

154.9

168.0

138.0

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

* عارضی

شرح نمو (فی صد میں  سال بہ سال کی بنیاد پر)

شعبہ

کوئلہ

خام تیل

قدرتی گیس

ریفائنری مصنوعات

کھاد

اسٹیل

سمینٹ

بجلی

مجموعی اشاریہ

وزن

10.33

8.98

6.88

28.04

2.63

17.92

5.37

19.85

100.00

Oct-21

14.7

-2.2

25.8

14.4

0.04

5.9

14.6

3.2

8.7

Nov-21

8.2

-2.2

23.7

4.3

2.5

0.9

-3.6

2.1

3.2

Dec-21

5.2

-1.8

19.5

5.9

3.5

-0.6

14.2

2.9

4.1

Jan-22

8.2

-2.4

11.7

3.7

-2.0

3.8

14.1

0.9

4.0

Feb-22

6.6

-2.2

12.5

8.8

-1.4

5.6

4.2

4.5

5.9

Mar-22

0.3

-3.4

7.6

6.1

15.3

4.1

9.0

6.1

4.8

Apr-22

30.1

-0.9

6.4

9.2

8.8

2.5

7.4

11.8

9.5

May-22

33.5

4.6

7.0

16.7

22.9

15.1

26.2

23.5

19.3

Jun-22

32.1

-1.7

1.2

15.1

8.2

3.3

19.7

16.5

13.1

Jul-22

11.4

-3.8

-0.3

6.2

6.2

7.5

0.7

2.3

4.8

Aug-22*

7.7

-3.3

-0.9

7.0

11.9

5.2

1.8

1.4

4.1

Sep-22*

12.0

-2.3

-1.7

6.6

11.8

5.7

12.4

11.6

7.8

Oct-22*

3.6

-2.2

-4.2

-3.1

5.4

4.0

-4.3

0.4

0.1

*عارضی، سال بہ سال  کا حساب پچھلے سال کے اسی مہینے سے کیا جاتا ہے۔

*************

ش ح۔ س ب ۔ رض

U. No.13159



(Release ID: 1880186) Visitor Counter : 113


Read this release in: English , Hindi , Tamil