امور داخلہ کی وزارت

 داخلی امور اور  امداد باہمی  کے مرکزی وزیر جناب امیت شاہ نے آج نئی دہلی میں ترنگا ڈیزائن کرنے والے پنگلی وینکیا کے یوم پیدائش پر منعقد کئے گئے‘ترنگا اتسو’ پروگرام سے خطاب کیا

Posted On: 02 AUG 2022 10:15PM by PIB Delhi

جناب امیت شاہ نے جناب  پنگلی وینکیا کے کنبہ کے افراد کو خراج  اعزاز  پیش کیا اور ان کی یاد میں ایک ڈاک ٹکٹ جاری کیا، ترنگا تھیم گانا بھی لانچ کیا

 

آج عظیم مجاہد آزادی،  جناب  پنگلی وینکیا کا 146 واں یوم پیدائش ہے، جنہوں نے ہمارے قومی پرچم کو ہمارے اعزاز کا نشان بنایا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپیل کی ہے کہ 2 اگست سے ہر کوئی اپنے سوشل میڈیا پروفائلز پر ترنگا رکھیں اور 13 سے 15 اگست تک گھروں میں ترنگا لہرا کر دنیا کو بتائیں کہ ہندوستان ان کی قیادت میں ایک بار پھر عظیم  مقام حاصل کرنے کے لیے آگے بڑھ رہا ہے

 

ہر گھر ترنگا ابھیان دنیا کے لیے ایک پیغام ہے کہ ہندوستان کا ہر شہری ملک کی خوشحالی، سلامتی اور ثقافت کو ہمارے آئین کے بنانے والوں کے تصور اور خواہشات کے مطابق آگے بڑھانے کے لیے متحد ہو کر کام کر رہا ہے

 

ترنگے کے ساتھ حلف لے کر، ہمارے سپاہی سرحدوں پر اپنا سب کچھ  اپنے وطن کوسونپ دیتے ہیں، اس ترنگے کو دیکھ کر  اور اسے جوش وجذبہ حاصل کرکے ملک بھر کے کروڑوں کسان دنیا کا پیٹ پالنے کے لیے محنت کر رہے ہیں

 

ہمارے ترنگے کو ڈیزائن کرنے والے پنگلی وینکیا نے اپنی  بے لوث اور گاندھی جی لوک مانیہ تلک کے اصولوں پر مبنی زندگی ایک خاموش خادم کے طور پر ہمارے قومی مفادات کے لیے وقف کر دی

 

جناب  پنگالی وینکیا نے امیدوں، جوش اور عوام کی عقیدت کو تین رنگوں  کی شکل میں  پیش کرکے ، ایک  احسان مند  قوم کی جانب سے  ہندوستان کو اتحاد کی مالا میں  پیرو دیا ۔جناب امیت شاہ نے کہا کہ وہ جناب  پنگالی وینکیا کو  سلام عقیدت پیش کرتے  ہیں

 

مرکزی وزیر داخلہ اور تعاون نے نوجوانوں سے کہا کہ ہر ہر گھر ترنگا آپ کی مہم ہے، یہ ایک بار پھر سے ایک عظیم ہندوستان کو تعمیر کرنے کی  مہم ہے۔ اس مہم میں شامل ہوں اور اپنے گھر پر ترنگا لہرائیں اور اس کے ساتھ سیلفی لیں۔ اسے www.harghartiranga.com پر اپ لوڈ کریں

 

وزیر اعظم کا عہدہ سنبھالنے کے بعد جناب مودی نے ترنگے کے لیے عالمی احترام میں اضافہ کیا ہے

 

مودی کی قیادت میں ایک ایسا ہندوستان تعمیر کیا جا رہا ہے جو نہ صرف مستقبل کے بارے میں پراعتماد ہو ،  بلکہ خود انحصار بھی  ہو، جو اپنے ماضی پر فخر کرتا ہو ۔درحقیقت ملک کے نوجوانوں  کے دل و دماغ میں مستقبل کا خاکہ بالکل  واضح ہے

 

نوجوانوں میں حب الوطنی کا جذبہ بیدار ہو تو اس سے قوم کو بڑی طاقت ملتی ہے جسکے ذریعہ  ملک  کی  ترقی  نئی توانائی اور رفتار سے ہمکنار ہوتی ہے

 

آزادی کا امرت مہوتسو کا یہ سال ہندوستان کو ہر میدان میں بہترین بنانے کا عہد کرنے کا وقت ہے اور اگر 2047 تک کروڑوں ہندوستانی متحد ہو کر ان قراردادوں کو پورا کرتے ہیں، تو مادر  ایک دن یقیناً عالمی قائد کی حیثیت حاصل ہوگی
 

داخلی امور  اور امداد باہمی کے مرکزی وزیر جناب امیت شاہ نے ترنگا ڈیزائن کرنے والی شخصیت  جناب  پنگلی وینکیا کے یوم پیدائش کے موقع پر آج نئی دہلی میں منعقد کئے جانے والے ‘ترنگا اتسو’پروگرام سے خطاب کیا۔ اس موقع پر جناب امیت شاہ نے جناب  پنگلی وینکیا کے خاندان کے افراد کو اعزاز سے نوازا اور ان کی یاد میں ایک ڈاک ٹکٹ بھی جاری کیا۔ مرکزی وزیر داخلہ نے تھیم سانگ‘ہر گھر ترنگا’ بھی لانچ کیا۔

5.jpg

شمال مشرقی خطہ کے ثقافت، سیاحت اور ترقی کے وزیر جناب جی کشن ریڈی، مواصلات، الیکٹرانکس اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے وزیر اور ریلوے کے وزیر جناب اشونی ویشنو، پارلیمانی امور اور ثقافت کے وزیر مملکت جناب ارجن رام میگھوال، وزیر مملکت برائے خارجہ امور اور ثقافت محترمہ میناکشی لیکھی اور مواصلات کے وزیر مملکت جناب دیوسنہ چوہان، ان  بہت سے دیگر افراد  میں شامل تھے جنہوں نے اس  پروگرام میں شرکت کی۔

6.jpg

اپنے خطاب میں مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ آج عظیم آزادی پسند  مجاہد  جناب  پنگلی وینکیا کا 146 واں یوم پیدائش ہے، جنہوں نے ترنگا ڈیزائن کیا تھا جو ہماری قوم کا فخر، اعزاز اور علامت  ہے۔جناب  شاہ نے ترنگے کے ساتھ حلف لیتے ہوئے کہا کہ ہمارے سپاہیوں نے سرحدوں پر اپنا سب کچھ مادر وطن کے سپرد کر دیا۔ اس ترنگے کو دیکھ کر اور اس سے  جوش و جذبہ حاصل کرتے ہوئے ، ملک بھر کے کروڑوں کسان دنیا کا پیٹ پالنے کے لیے محنت کرتے ہیں اور ہماری قوم کی علامت کے طور پر یہ ترنگا ہر شہری کے دل میں جگہ بنائے ہوئے ہے۔

7.jpg

جناب امت شاہ نے کہا کہ یہ سال آزادی کا امرت مہوتسو کا سال ہے اور وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے اس سال 13 سے 15 اگست تک ہر گھر ترنگا کا پروگرام شروع کیا ہے۔ انہوں نے لوگوں سے کہا کہ وہ اس دن کا تصور کریں جب ملک بھر میں 200 ملین سے زیادہ گھروں میں ترنگا فخر سے لہرائے گا، تب ہی آزادی کا امرت مہوتسو کی اہمیت صحیح معنی میں ہماری آنکھوں کے سامنے زندہ ہو  پائے گی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپیل کی ہے کہ 2 اگست سے ہر کوئی اپنے سوشل میڈیا پروفائلز پر ترنگا رکھیں اور 13 سے 15 اگست تک گھروں میں ترنگا لہرا کر دنیا کو بتائیں کہ ہندوستان ان کی قیادت میں ایک بار پھر ایک  عظیم ملک  بننے کے لیے آگے بڑھ رہا ہے۔

8.jpg

مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ آزادی کا امرت مہوتسو منانے کے وزیر اعظم نریندر مودی کے فیصلے کے پیچھے تین مقاصد ہیں۔ سب سے پہلے ‘آزادی کا امرت مہوتسو کے ذریعے، ان ہزاروں بہادر آزادی پسندوں کی کہانیاں نوجوانوں کے سامنے پیش کرنا جیسے کہ جناب  وینکیا ، جنہوں نے آزادی کے لیے جان بوجھ کر یا  غیر ارادی طور پر ، اپنی جانیں قربان کیں۔ 1857 سے 1947 تک کی جدوجہد آزادی کے 90 سالوں میں لاکھوں لوگوں نے ملک کو انگریزوں کے چنگل سے آزاد کرانے کے لیے اپنا سب کچھ قربان کیا اور یہی وہ سال ہے جو ان شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کا ذریعہ بن گیا ہے۔ دوسرا، آزادی کے بعد 75 سالوں میں، ہندوستان نے مختلف شعبوں میں بہت کچھ حاصل کیا ہے، اور یہ موقع ہے کہ ملک کے اندر اور  بیرون ملک  مقیم  اس  کے شہریوں کو اس کے بارے میں آگاہ کیا جائے۔ تیسرا مقصد یہ ہے کہ آزادی کے امرت مہوتسو سے لے کر آزادی کی صد سالہ تقریب تک 25 سال کا عرصہ عہد کرنے کا عرصہ ہے۔ یہ سال ہر شہری کے لیے یہ عہد لینے کا ہے کہ 2047 میں ہندوستان ہر میدان میں کیسا اور کہاں ہوگا اور  یہ سال ہندوستان کو بہترین بنانے کے عزم  کا بھی ہے۔ اگر ہر کوئی اس سال کے دوران لیا گیا عہد پورا کرتا ہے تو  مادر ہند  یقینی طور پر ‘وشوگرو’ بن جائے گی۔

9.jpg

مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ ہمیں  اس  بات  کو کبھی نہیں بھولنا چاہئے کہ ترنگا  کی تخلیق  میں  کن کن منازل  سے  گزرنا پڑا  تھا۔ اگر ہم ترنگے کی تشکیل کے سفر کو سمجھتے ہیں جس کے بعد دستور ساز اسمبلی کی طرف سے اس کی منظوری  دی گئی تھی ، تو ہم  جناب   پنگلی وینکیا کو نہیں بھول سکتے۔ قوم کے اس عظیم تلگو خدمت گار اور مجاہد آزادی  نے کروڑوں ہندوستانیوں کی امیدوں اور عقیدت کو تین رنگوں میں یکجا کرکے ہندوستان کو اتحاد کی  ایک مالا میں پیرو دیا۔ مرکزی وزیر داخلہ نے قوم کی طرف سے اظہار تشکر کیا اور  جناب   پنگلی وینکیا کے احترام میں سر جھکا کر انہیں سلام عقیدت پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ ترنگے کو ڈیزائن کرنے والے  جناب  پنگلی وینکیا نے گاندھی جی اور لوک مانیہ تلک کے اصولوں پر عمل کرتے ہوئے خاموشی سے اپنی زندگی بغیر کسی مفاد کے قوم کے لیے وقف کر دی۔ جب ملک نے اس ترنگے کو اپنایا  تو یہ  ترنگا ہماری قوم کا فخر اور اعزاز بن گیا۔

جناب امت شاہ نے کہا کہ قومی پرچم کا سفر 7 اگست 1906 کو شروع ہوا تھا۔ 1921 میں مہاتما گاندھی نے ایک نئے قومی پرچم کو ڈیزائن کرنے کا کام  جناب پنگلی وینکیا کو دیا تھا۔ 29 دسمبر 1943 کو عظیم آزادی پسند رہنما نیتا جی سبھاش چندر بوس نے پورٹ بلیئر میں ترنگا لہرایا۔ انہوں نے کہا کہ پرچم کا زعفرانی رنگ قربانی اور بہادری کی علامت ہے، سبز رنگ خوشحالی کی  اور سفید رنگ امن اور اتحاد کی علامت ہے۔ درمیان میں، دھرم چکر کے 24 حصے ہندوستان کے اتحاد کی علامت ہیں۔ آج دنیا ہندوستان اور ہمارے قومی پرچم کو عزت کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔

10.jpg

مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ 2014 سے آج تک وزیر اعظم نریندر مودی نے عالمی سطح پر ہندوستان کی عزت میں اضافہ کیا ہے۔ دنیا میں جب بھی کوئی مسئلہ ہو  تا ہے تو  اس کے لئے وزیر اعظم کی آراء طلب کی جاتی ہیں۔ اس دن کو دیکھنے کے لیے لاکھوں لوگوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ ایک ایسے ہندوستان کی تشکیل جو خود انحصار ہو، جو اپنے ماضی پر فخر کرتا ہو، جو نہ صرف اپنے مستقبل پر بھروسہ رکھتا ہو، بلکہ جس کے نوجوانوں کو مستقبل کے بارے میں واضح ہو، اس نئے ہندوستان کی تشکیل جناب نریندر مودی کے لیے اولین حیثیت رکھتی ہے، اور ان کی قیادت میں معاملات ان کے وژن کے مطابق ہو رہے ہیں۔ جناب امت شاہ نے کہا کہ ایک بار  جب نوجوانوں میں حب الوطنی کا آدرش جاگ جاتا ہے، تب یہ قوم کے لیے ایک عظیم طاقت بن جاتا ہے اور ملک کو عظیم بنانے کے لیے توانائی فراہم کرتا ہے۔

*************

 

ش ح۔ س ب۔ رض

 

U. No.9505



(Release ID: 1854274) Visitor Counter : 124


Read this release in: English , Marathi , Hindi , Telugu