وزارت آیوش
azadi ka amrit mahotsav

آیوش  کی وزارت  اور  حیاتیاتی ٹکنالوجی کے محکمے کے درمیان مفاہمت نامے پر دستخط


مفاہمت نامے سے آیوش کے شعبے میں  شہادت پر مبنی حیاتیاتی ٹکنالوجی والے اقدامات کے لئے بین وزارتی تعاون میں سہولت حاصل ہوگی

Posted On: 25 MAY 2022 8:19PM by PIB Delhi

آیوش کی وزارت اورمحکمہ حیاتیاتی ٹکنالوجی ، حکومت ہند کے درمیان ایک مفاہمت نامے (ایم او یو) پر دستخط کئے گئے، جس کا مقصد تعاون، ارتکاز اورہم آہنگی کے امکانات کی تلاش کرنے کے لئے باہمی اتحاد قائم کرنا ہے  تاکہ آیوش کے شعبے میں  شہادت پر مبنی  حیاتیاتی ٹکنالوجی والے اقدامات کی سمت میں  کام کرنے کے لئے ماہرین کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کیا جاسکے ۔  اس موقع پر آیوش کی وزارت کے سکریٹری ویدیہ راجیش کوٹیچا اور   حیاتیاتی ٹکنالوجی کے محکمہ کے سکریٹری  ڈاکٹر راجیش ایس گوکھلے کے علاوہ دونوں وزارتوں سے وابستہ دیگر افسران بھی موجود تھے ۔

اس اشتراک کے ذریعہ اس بات کی توقع کی جاتی ہے کہ روایتی حفظان صحت کے طور طریقوں اور حیاتیاتی ٹکنالوجی کے اشتراک سے اختراعی اور غیر معمولی تحقیق کے  کام کی شروعات کےلئے بہترین امکانات کی فراہمی میں مدد ملے گی  جس کو آیوش نظام کے مختلف بنیادی اصولوں کی کھوج بین کے لئے استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ اس بات کی ضرورت محسو س کی جاتی ہے کہ عوامی حفظان صحت کی دنیا میں  طبی نگہداشت کے اس قدیم سائنسی نظام کی دریافت اور استعمال کے لئے  کثیر مرحلہ جاتی اور ٹکنالوجی پر مبنی راستے تلاش کئے جائیں ۔

 

 

حیاتیاتی ٹکنالوجی پر مبنی  تحقیق و ترقی اور آیوش کے اقدامات کے ذریعہ زندگی کے معیار   اور عرصہ ٔ حیات (ویاستھاپنا رساین) میں بہتری لانے اور پرانی بیماریوں جیسے ذیابیطس، موٹاپا، قلبی امراض، ہڈیوں کا ورم،  نقاہت، درد اور متعدی امراض مثلا ٹی بی وغیرہ کے ساتھ جڑی ذیلی  بیماریوں کو کم سے کم کرنے میں مدد ملے گی ۔

اس موقع پر وزارت آیوش کے سکریٹری جناب ویدیہ راجیش کوٹیچا نے کہا کہ  آیوش کی وزارت اور حیاتیاتی ٹکنالوجی کے محکمے کے درمیان مفاہمت نامے کے طے پا نے سے  توقع ہے کہ  آیوش کے شعبے میں  متحدہ طور پر تحقیقات کے لئے راہ ہموار کرنے میں مددملے گی  اور آیوش حفظان  صحت کے نظام  کی اب تک برو ئے کار نہ لائی گئی صلاحیت  سے عوام کے فائدے کے لئے  استفادہ کیا جاسکے گا ۔

اس اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر راجیش ایس گوکھلے نے کہا کہ آیوش کی وزارت اور حیاتیاتی ٹکنالوجی کے محکمے کے درمیان  اس بین وزارتی تعاون سے  انتہائی سنگین قسم کے امراض کے سلسلے میں اقدامات کی حکمت عملی  کی معلومات اور نئے وسائل پیدا کئے جانےکی توقع ہے ۔

تحقیق و ترقی میں مشترکہ کوششوں ،  جن میں بنیادی سائنس سے لے کر تصدیقی عمل تک شامل ہیں  اوراس کے بعد  مصنوعات کی تیاری ، سے اس اہم ترین شعبے میں  ہندوستانی خدمات کی ترقی میں بڑے پیمانے پر مدد ملے گی  اور یہ نہ صرف قومی سطح تک محدود رہے گی بلکہ  بین الاقوامی سطح پر بھی ہوگی ۔  آیور وید کے ورزشی علاج معالجوں کے میکانیکی مطالعات پر خاص طورپر زور دیا جائے گا  اور اس کے لئے اعداد وشمار کے تجزیاتی وسائل کےساتھ ساتھ  جانوروں کی  بیماریوں کے نمونے اوردیگر ترقی یافتہ تجزیاتی طور طریقوں کا استعمال کیا جائے گا ۔

 

*************

 

 

ش ح ۔ س ب۔ ف ر

U. No.5757



(Release ID: 1828418) Visitor Counter : 37


Read this release in: English , Telugu