وزارت دفاع
azadi ka amrit mahotsav

ڈی آر ڈی او نے پانچ بھارتی کمپنیوں کو بہت زیادہ سرد موسم کا لباس نظام (ای سی ڈبلیو سی ایس) کی ٹیکنالوجی سونپی


تین سطحوں والا یہ ای سی ڈبلیو سی ایس نظام کو° +15 سے °-50 سلسیس درجہ حرارت کے درمیان تھرمل انسولیشن فراہم کرنے کیلئے ڈیزائن کیا گیا ہے

Posted On: 28 DEC 2021 3:55PM by PIB Delhi

نئی دہلی:28 دسمبر،2021۔دفاعی تحقیق وترقی کے محکمے کے سکریٹری اور دفاعی تحقیق وترقی کے ادارے  (ڈی آر ڈی او) کے چیئرمین ڈاکٹر جی ستیش ریڈی نے 27 دسمبر 2021 کو نئی دہلی میں 5 بھارتی کمپنیوں کو انتہائی ٹھنڈے کے موسم کا لباس نظام(ای سی ڈبلیو سی ایس)کی تکنیک سونپی۔

اس ای سی ڈبلیو سی ایس سسٹم کی ضرورت گلیشئر اور ہمالیہ کی چوٹیوں میں لگاتار آپریشن کیلئے بھارتی فوج کو پڑتی ہے۔ ابھی حالیہ دنوں تک فوج ای سی ڈبلیو سی ایس  لباس سسٹم اور متعدد خصوصی کپڑوں اور کوہ پیمائی آلات (ایس سی ایم ای) پوشاکوں کا اونچائی والے علاقوں میں تعینات فوجی اہلکاروں کیلئے درآمد کرتی رہی ہیں۔

ڈی آر ڈی اوکے ذریعے ڈیزائن کیا گیا ای سی ڈبلیو سی ایس سسٹم  جسمانی سرگرمی کی مختلف سطحوں کے دوران ہمالیہ کے علاقوں میں مختلف موسمی حالات کے تحت درکار انسولیشن کی بنیاد پر بہتر تھرمل انسولیشن جسمانی آرام کے ساتھ ایک ایرگونومیکل طور پر ڈیزائن کیا گیا ماڈیولر تکنیکی لباس نظام ہے۔

 ای سی ڈبلیو سی ایس اونچائی کے آپریشنز کے لیے واٹر پروف اور ہیٹ پروف خصوصیات پیش کرتا ہے اور ساتھ ہی سانس لینے کے قابل اور بہتر انسولیشن  کے ساتھ سانس لینے کے قابل حرارت اور پانی کی کمی سے متعلق جسمانی تصورات، حرکت کی بلاتعطل حد اور تیزی سے پسینہ جذب کرنے کے تصورات شامل ہیں۔ تین سطحوں والے ای سی ڈبلیو سی ایس سسٹم کو مختلف مجموعوں اور جسمانی کام کی شدت کے ساتھ °+15 سے °-50 سلسیس درجہ حرارت کی حد میں مناسب طریقے سے تھرمل انسولیشن  فراہم کرنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

ہمالیہ کی چوٹیوں میں موسمی حالات کے وسیع اتار چڑھاو کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ لباس سسٹم موجودہ موسمی حالات کے لیے مطلوبہ  انسولیشن یا آئی آر ای کیو کو پورا کرنے کے لیے مخصوص امتزاج کا فائدہ پیش کرتا ہے جس سے یہ بھارتی فوج کے لیے ایک قابل عمل درآمد اختیار دستیاب ہوتا ہے۔ اس موقع پر ڈاکٹر جی۔ ستیش ریڈی نے فوج کی موجودہ ضروریات کو پورا کرنے کے لیے نہ صرف ایس سی ایم ای  اشیاء کے لیے دیسی صنعتی بنیاد تیار کرنے کی ضرورت پر زور دیا بلکہ برآمدات کے لیے اس کی صلاحیت سے فائدہ اٹھانے پر بھی زور دیا۔

 

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image001GU97.jpg

-----------------------

 

ش ح۔م ع۔ ع ن

U NO: 14906



(Release ID: 1785911) Visitor Counter : 108