خواتین اور بچوں کی ترقیات کی وزارت

کووڈ-19 کی وجہ سے یتیم ہوئے بچےّ

Posted On: 05 AUG 2021 5:36PM by PIB Delhi

نئی دہلی60؍اگست-2021 :ریاستوں /مرکز کے زیر انتظام علاقوں کی جانب سے اپریل 2021 میں 28.052021 تک یتیم بچے  ، جنہوں نے اپنے والدین کو کھودیا ہے، فراہم کی گئی جانکاری   کو منسلک کیا گیا ہے۔

جوینائل جسٹس  (بچوں کی دیکھ بھال اور تحفظ) ایکٹ 2015 کی  دفعات کے تحت  پریشان کن حالات میں مبتلا بچے دیکھ بھال اور حفاظت کے اہل ہیں۔ان بچوں کی ادارہ جاتی اور غیر ادارہ جاتی دیکھ بھال کے لئے  خدمات کی فراہمی کے ڈھانچے  کے لازمی تحفظاتی نیٹ ورک کے تحت  ایکٹ اور ضابطے بنائے گئے ہیں۔ وزارت جے جے ایکٹ کے تحت ادارہ جاتی اور غیرادارہ جاتی دیکھ بھال کی فراہمی کے لئے ریاستی سرکاروں  نیز مرکز کےزیر انتظام علاقوں کی انتظامیہ کے ساتھ مل کر مرکز کی اعانت یافتہ اسکیم  بچوں کے تحفظ کی خدمات  (سی پی ایس ) پر عمل درآمد کررہی ہے۔ اسکیم کے رہنما اصولوں کے مطابق  غیر ادارہ جاتی دیکھ بھال کے لئے ہر بچے کو فی ماہ دو ہزار روپے اس کی دیکھ بھال کے لئے دینے کا انتظام کیا گیا ہے۔ ساتھ ہی 2160 روپے  رکھ رکھاؤ گرانٹ کے طورپر  دیکھ بھال اور حفاظت کے لئے فی ماہ ان پیسوں کا انتظام  کیا گیا ہے ، جو بچوں کی دیکھ بھال ادارے میں رہ رہے ہیں۔

عزت مآب وزیراعظم نے اُن بچوں کی مدد کے لئے بچوں کی اسکیم کی خاطر پی ایم کئیرز کا اعلان کیا ہے، جنہوں نے کووڈ -19 وبا کی وجہ سے  اپنے والدین یا دونوںمیں سے ایک  یا قانونی سرپرست یا گود لئے ہوئے والدین کو  کھودیا ہے۔

یہ اسکیم  تعلیم اور صحت میں مدد فراہم کرنے کے لئے ہے  اور جب لڑکا یا لڑکی 18 سال کی عمر کو پہنچ جائے گاتو یہ رقم ہربچے کے لئے دس لاکھ تک ہوجائے گی۔ یہ رقم   اعلیٰ تعلیم کی مدت کے دوران لڑکی یا لڑکے کی ذاتی ضروریات کے لئے اگلے پانچ سال تک 18 سال کی عمر میں   ماہانہ مالی مدد  اور وظیفے کی شکل میں استعمال کے لئے دی جائے گی۔23سال کی عمر تک پہنچنے پر لڑکی یا لڑکے کو ذاتی اور پیشہ ورانہ استعما ل کے لئے یک مشت  طور پر کارپس رقم ملے گی۔یہ اسکیم ایک آن لائن پورٹل  pmcaresforchildren.in.پردستیاب ہے۔ اس پورٹل کو 15.07.21 کو تمام ریاستوں / مرکز کے زیر انتظام علاقوں کو متعارف  کرایا گیا تھا۔ کوئی بھی شہری  پورٹل کے ذریعہ اس اسکیم کے تحت مدد کے لئے  اہل بچوں  کے تعلق سے انتظامیہ کو مطلع کرسکتا ہے۔

وزارت نے ریاستوں اور مرکز کے زیر انظام علاقوں کو جے جے ایکٹ 2015 او ر  ضابطے کی دفعات کے مطابق   کووڈ -19سے متاثرہ بچوں کی دیکھ بھال او ر حفاظت کے لئے فوری کارروائی کے لئے کہا ہے۔ساتھ ہی بچوں کے تحفظ کی خدمات  اسکیم کے تحت   فنڈ کی سہولیات  کا  فائدہ اٹھاتے ہوئے بچوں کی امداد کے لئے کہا ہے ۔ وزارت نے  بچو ں  کی دیکھ بھال کرنے والے اداروں کی نگرانی   اور کووڈ-19  کے مناسب طورطریقوں کی حوصلہ افزائی کرنے کے لئے ایڈوائزری او ر  رہنما ہدایات  بھی جاری کی ہیں۔ساتھ ہی بچوں کی  ذہنی نشوونما  او ر ان کی دیکھ بھال کرنے والوں  کے لئے کووڈ اوقات  کے دوران حکمت عملی سے کام لینے کو کہا ہے۔ایک رہنما اصول  ریاستوں  /  مرکز کے زیر انتظام علاقوں کو  بھی جاری کیا گیا ہے ، جن میں  پرائمری ڈیوٹی ہولڈرس  کے کردار   کی وضاحت کرنے والے، ذمہ داری   میٹرکس  فراہم کئے گئے ہیں ۔

خواتین اور بچوں کی ترقی کی مرکز  ی وزیر محترمہ اسمرتی زوبن ایرانی نے آج راجیہ سبھا میں  ایک تحریری جواب میں  یہ معلومات فراہم کی ہیں۔

ضمیمہ :

ریاستوں / مرکزکے زیر انتظام علاقوں کی جانب سے اپنے والدین کو کھوچکے یتیم بچوں  کے اعدادوشمار  اپریل 2021 سے  28 مئی 2021 تک درج ذیل ہے:

 

نمبرشمار

ریاستیں / مرکزکے زیرانتظام علاقے

یتیم بچوں کی تعداد

1

انڈمان نکوبار جزائر

0

2

آندھراپردیش

119

3

اروناچل پردیش

0

4

آسام

3

5

بہار

0

6

چنڈی گڑھ

0

7

چھتیس گڑھ

16

8

داردرناگر حویلی-دمن اور دیو

2

9

دہلی

1

10

گوا

0

11

گجرات

45

12

ہریانہ

0

13

ہماچل پردیش

13

14

جموں و کشمیر

8

15

جھارکھنڈ

11

16

کرناٹک

09

17

کیرالہ

09

18

لداخ

0

19

لکشدیپ

0

20

مدھیہ پردیش

73

21

مہاراشٹر

83

22

منی پور

1

23

میگھالیہ

1

24

میزورم

0

25

ناگالینڈ

0

26

اوڈیشہ

10

27

پوڈیچری

2

28

پنجاب

20

29

راجستھان

19

30

سکم

0

31

تمل ناڈو

8

32

تلنگانہ

23

33

تریپورا

0

34

اترپردیش

158

35

اتراکھنڈ

8

36

مغربی بنگال

3

 

میزإن

645

 

 

****************

 

ش ح۔ع ح۔ رم

U NO. 7523



(Release ID: 1743102) Visitor Counter : 182


Read this release in: English , Telugu