وزارات ثقافت

ہندوستان میں فی الحال 38عالمی ثقافتی ورثے کے حامل مقامات ہیں

Posted On: 16 MAR 2020 5:52PM by PIB Delhi

نئی دہلی،16مارچ  : ثقافت اور سیاحت کے وزیرمملکت ( آزادانہ چارج ) جناب پرہلاد سنگھ نے آج لوک سبھامیں ایک سوال کے تحریری جواب میں اطلاع فراہم کی کہ ہندوستان میں فی الحال 38عالمی ثقافتی ورثے  کے حامل مقامات ہیں ۔ عالمی ثقافتی ورثے کے حامل مقامات کی تفصیلات درج ذیل ہیں :َ

ہندوستان میں عالمی ثقافتی ورثے کے حامل مقامات (38)

ثقافتی مقامات:

آرکیالوجیکل سروےآف انڈیا کے زیرتحفظ مقامات  ( 22)

نمبر شمار

 

مقامات کے نام

ریاست

 

  1.  

آگرہ کاقلعہ (1983)

اترپردیش

  1.  

اجنتاکی گپھائیں ( 1983)

مہاراشٹر

  1.  

ایلوراکی گپھائیں ( 1983)

مہاراشٹر

  1.  

تاج محل ( 1983)

اترپردیش

  1.  

مہابلی پورم میں تاریخی عمارتو ں کا گروپ ( 1984)

تمل ناڈو

  1.  

سوریہ مندر ، کونارک ( 1984)

اڈیشہ

  1.  

گواکی چرچیں اورپادریوں کی خانقاہیں

گوا

  1.  

فتح پورسیکری ( 1986)

اترپردیش

  1.  

ہمپی میں تاریخی عمارتوں کا گروپ ( 1986)

کرناٹک

  1.  

کھجوراہوکے مندروں کا گروپ (1986)

مدھیہ پردیش

  1.  

ہاتھیوں کی گپھائیں (1987)

مہاراشٹر

  1.  

تھنجاور،گنگائی کونڈا چولاپورم اور داراسورم میں واقع گریٹ لیوونگ چولاٹیمپل  1987اور 2004

تمل ناڈو

  1.  

پٹاداکل کی تاریخی عمارتوں کا گروپ ( 1987)

کرناٹک

  1.  

سانچی میں واقع بدھسٹ یادگاری عمارتیں ( 1989)

مدھیہ پردیش

  1.  

ہمایوں کا مقبرہ ۔ دہلی (1993)

دہلی

  1.  

قطب مینار اور اس کے آس پاس کی تاریخی عمارتیں ، دہلی ( 1993)

دہلی

  1.  

بھیم بیٹکا کے چٹان (2003)

مدھیہ پردیش

  1.  

چمپانیر ۔ پاواگڑھ آرکیولوجیکل پارک (2004)

گجرات

  1.  

لال قلعہ کمپلکس ، دہلی (2007)

دہلی

  1.  

 

راجستھان کے پہاڑی قلعے ( چتورگڑھ ، کمبھل گڑھ ، جیسلمیر ،اوررنتھم بھور ، امبیراورگگرون قلعے )(2013)

(امبیر اورگگرون کے قلعے راجستھان کے ریاستی محکمہ برائے آثار قدیمہ اور میوزیم کے زیرتحفظ ہیں ۔

راجستھان

  1.  

رانی کی واو(ملکہ کا غسل خانہ  )، پاٹن (2014)

گجرات

  1.  

نالندہ کی آثارقدیمہ مہاویہارا ( نالندہ یونیورسٹی ) نالندہ (2016)

بہار

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

ریلویز کی وزارت کے زیرتحفظ مقامات ( 2)

23.

ماؤنٹین ریلویزآف انڈیا ( دارجلنگ 1999) ، نیل گری (2005) ، کالکا۔ شملہ ( 2008)

مغربی بنگال ، تمل ناڈو ، ہماچل پردیش

24.

چھترپتی شیواٹرمنس ( سابقہ وکٹوریہ ٹرمنس )( 2004)

مہاراشٹر

 

بودھ گیا ٹیمپل منیجمنٹ کمیٹی کے زیرتحفظ مقامات (1)

25

مہابودھی ٹیمپل کمپلیکس ، بودھ گیا ( 2002)

بہار

 

راجستھان  ریاستی محکمہ برائے آثارقدیمہ اورمیوزیم کے زیرتحفظ مقامات ( 1)

26.

جنترمنتر، جے پور( 2010)

راجستھان

 

چنڈی گڑھ کی انتظامیہ کے زیرتحفظ مقامات (1)

27.

لی کوربیوزیرکے فن تعمیر کی عمارتیں جو کہ جدید تحریک میں ایک بیش بہا تعاون ہیں ( 2016)

چنڈی گڑھ

 

 

 

احمدآباد میونسپل کارپویشن کے زیرتحفظ مقامات ( 1)

28.

تاریخی شہراحمدآباد ( 2017)

گجرات

 

 

 

بامبے میونسپل کارپوریشن کے زیرتحفظ مقامات ( 1)

29.

وکٹورین اینڈآرٹ ڈیکو اینسیمبل آف ممبئی (2018)

حکومت مہاراشٹر

 

 

جے پورمیونسپل کارپوریشن کے زیرتحفظ مقامات ( 1)

30.

جے پورشہر، راجستھان ( 2019)

حکومت راجستھان

 

 

قدرتی مقامات ( 7) :

 

ماحولیات ، جنگلات اور آب وہواکی تبدیلی کی وزارت کے زیرتحفظ مقامات

31.

قاضی رنگا نیشنل پارک ( 1985)

آسام

32.

کیولاڈیونیشنل پارک ( 1985)

راجستھان

33.

مانس وائلڈ لائف سنکچیوری ( 1985)

آسام

34.

سندربن نیشنل پارک (1987)

مغربی بنگال

35.

نندہ دیوی اینڈ ویلی آف فلاور نیشنل پارکس ( 1988،2005)

اتراکھنڈ

36.

مغربی گھاٹ( 2012)

کرناٹک ، کیرالا، مہاراشٹر، تمل ناڈو

37

گریٹ ہمالین نیشنل پارک (2014)

ہماچل پردیش

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

ملے جلے مقامات :( 1)

 

ماحولیات ، جنگلات اور آب وہوا کی تبدیلی کی وزارت کے زیرتحفظ مقامات

38.

کنچن جنگانیشنل پارک (2016)

سکم

 

 

 

 

 

 

***************

 

 ( م ن  ۔م ع ۔  ع آ)

U-1259

 

 

 

 

 

 

 

 

 



(Release ID: 1606647) Visitor Counter : 400


Read this release in: English