کانکنی کی وزارت
azadi ka amrit mahotsav g20-india-2023

تیئیس ریاستوں کے 626 ضلعوں  میں  معدنیات کی ضلع  فاؤنڈیشن

Posted On: 03 APR 2023 3:43PM by PIB Delhi

ایم ایم ڈی آر 1957 کی شق  9 بی کے تحت ریاستی سرکار کو اختیار دیا گیا ہے کہ وہ عوام کے فائدے   کے لئے ، کانکنی سے متاثرہ سبھی ضلعوں اور کانکنی سے متعلق سرگرمیوں سے متاثرہ علاقوںمیں   معدنیات  کی ضلع فاؤنڈیشن  ڈی ایم ایف کا ٹرسٹ قائم کریں ۔   اس کے مطابق متعلقہ ریاستی حکومتوں نے ملک میں  23 ریاستوں کے  626  ضلعوں میں  ڈی ایم ایف قائم کئے ہیں۔

کانوں کی وزارت  نے بمطابق حکم مورخہ 16 ستمبر  2015 ، پردھان  منتری کھنج( کشیتر  کلیان یوجنا  پی ایم کے کے کے وائی  کے لئے رہنما خطوط جاری کئے ہیں جن پر کانکنی سے متاثرہ علاقوںمیں   ترقی اور بہبودکے کام شروع کرنے  کے لئے  ڈی  ایم ایف کی طرف سے عمل درآمد کیا جانا ہے۔ پی ایم کے کے کے وائی کے رہنما خطوط  کے مطابق   متاثرہ علاقوں کی نشاندہی کے تحت اور  پی ایم کے کے کے وائی اسکیم کے تحت شامل کئے جانے والے لوگوں  اور (1) پینے کے پانی کی سپلائی (2) ماحولیاتی تحفظ اور آلودگی  پر قابو پانے  کے اقدامات (3) حفظان  صحت (4) تعلیم (5) خواتین اوربچوں کی بہبود  (6) معمر اور معذور افراد کی بہبود (7) ہنر مندی کا فروغ  اور صفائی ستھرائی نیز دیگر ترجیحی میدانوں میں  40فیصدتک  (1)بنیادی ڈھانچہ (2)سنچائی (3) توانائی اور مکمل ترقی اور (4) کانکنی والے ضلع میں ماحولیاتی معیار میں اضافے کے لئے دیگر معیارات  جیسے اعلیٰ ترجیحی میدانوں کے لئے کم سے کم  60 فیصد فنڈز  خرچ کریں ۔

اس کے علاوہ ضابطہ 12 میں مدھیہ پردیش  ضلع معدنیاتی فاؤنڈیشن   ضابطہ  2016  کے  ذیلی  اصول  (1) (5) میں   مدھیہ پردیش ریاست کے پورے علاقے کو  کانکنی سے متاثرہ علاقہ مانا گیا ہے۔

 

Name of District

 

Area

Collection in Rs. Cr. (as on Jan 2023)

No. of Projects Sanctioned

Amount Sanctioned (in Rs. Cr.)

Amount Spent (in Rs. Cr.)

Singrauli

High Priority

 

3620.97

530

599.20

525.65

Other Priority

428

456.89

347.94

Sidhi

High Priority

 

31.41

35

6.48

3.63

Other Priority

11

4.38

3.56

Shahdol

High Priority

 

181.66

560

53.86

32.19

Other Priority

243

36.81

26.85

 

*************

ش ح۔اس۔ رم

U-3738



(Release ID: 1913823) Visitor Counter : 70


Read this release in: English