شمال مشرقی ریاستوں کی ترقی کی وزارت

شمال مشرقی کونسل (این ای سی) شمال مشرقی خطے کی سماجی و اقتصادی ترقی میں اہم شراکت کرتی ہے


شمال مشرقی کونسل (این ای سی) کی گولڈن جوبلی تقریب، 18 دسمبر 2022 کو شیلانگ میں منائی جا رہی ہے، عزت مآب وزیر اعظم اس تقریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کریں گے

وزیراعظم گولڈن جوبلی تقریبات کے دوران تقریباً 2500 کروڑ کی لاگت والے بنیادی ڈھانچے اور ترقیاتی پروجیکٹوں کا افتتاح کریں گے

اس اہم موقع پر وزیر اعظم گزشتہ 50 سالوں میں شمال مشرقی خطے کی ترقی میں شمال مشرقی کونسل کے تعاون کو بیان کرنے والی ایک یادگاری اشاعت کا اجراء کریں گے

شمال مشرقی کونسل (این ای سی) نے کنیکٹیویٹی انفراسٹرکچر - 5 بڑے ہوائی اڈے ائیرپورٹ اتھارٹی آف انڈیا (اے اے آئی) کے تعاون سے اور 11 بین ریاستی بس ٹرمینس (آئی ایس بی ٹی) پروجیکٹس اور 4 بین ریاستی ٹرک ٹرمینس (آئی ایس ٹی ٹی) پروجیکٹس کی بہتری کا کام لیا ہے

شمال مشرقی کونسل (این ای سی) نے تعلیم، صحت، کھیل، آبی وسائل، زراعت، سیاحت اور صنعت وغیرہ میں قیمتی سرمایہ اور سماجی انفراسٹرکچر بنایا ہے

شمال مشرقی کونسل (این ای سی) نے ہندی کے فروغ کے لیے ریاست کی مدد کے لیے پہل کی ہے

Posted On: 17 DEC 2022 8:59PM by PIB Delhi

 

شمال مشرقی کونسل (این ای سی)، شمال مشرقی ریاستوں کی ترقی کی وزارت (ایم او ڈی او این ای آر) کے انتظامی دائرہ کار کے تحت ہے۔ 1971 میں پارلیمنٹ کے ایک ایکٹ (1971 کا ایکٹ نمبر 84) کے ذریعے اس کو قائم کیا گیا۔ شمال مشرقی کونسل کا باضابطہ افتتاح 7 نومبر 1972 کو شیلانگ، میگھالیہ میں کیا گیا، جس نے حکومت کی جانب سے مشترکہ اور منصوبہ بند کوششوں کے ایک نئے باب کا آغاز کیا۔ شمال مشرقی خطہ بنیادی طور پر ہندوستان کے اروناچل پردیش، آسام، منی پور، میگھالیہ، میزورم، ناگالینڈ اور تریپورہ کی سات ریاستوں پر مشتمل ہے۔ سکم کو شمال مشرقی کونسل (ترمیمی) ایکٹ، 2002 (2002 کا 68) کے ذریعے آٹھویں رکن ریاست کے طور پر شامل کیا گیا تھا۔

شمال مشرقی کونسل نے ایک مشاورتی ادارے اور منصوبہ بندی کے ادارے کے طور پر شمال مشرقی خطے کی سماجی و اقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ شمال مشرقی خطے کے کچھ مشہور ادارے جیسے ریجنل انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (آر آئی ایم ایس) ، امپھال؛ نارتھ ایسٹ پولیس اکیڈمی (این ای پی اے)، شیلانگ؛ نارتھ ایسٹ ریجن انسٹی ٹیوٹ آف واٹر اینڈ لینڈ مینجمنٹ (این ای آر آئی ڈبلیو اے ایل ایم )، تیز پور؛ نارتھ ایسٹرن اسپیس ایپلیکیشن سینٹر (این ای ایس اے سی)، شیلانگ؛ ڈاکٹر بھونیشور بوروہ کینسر انسٹی ٹیوٹ (بی بی سی آئی) گوہاٹی وغیرہ شمال مشرقی کونسل کے تعاون سے قائم کیے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ شمال مشرقی کونسل نے اہم سرمایہ اور بنیادی ڈھانچے کی ترقی کی سرمایہ کاری کی حمایت کی ہے - 11,500 کلومیٹر سے زیادہ سڑکیں تعمیر کی گئی ہیں، 694 میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت نصب کی گئی ہے، تقریباً 9,000سی کے ٹی-کلیو میٹر ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن لائنیں کھڑی کی گئی ہیں۔ این ای سی نے کنیکٹیویٹی انفراسٹرکچر – 5 بڑے ہوائی اڈے ایئرپورٹ اتھارٹی آف انڈیا (اے اے آئی) کے تعاون سے اور 11 بین ریاستی بس ٹرمینس (آئی ایس بی ٹی) پروجیکٹس اور چار بین ریاستی ٹرک ٹرمینس (آئی ایس ٹی ٹی) پروجیکٹس – مختلف علاقوں میں شمال مشرقی خطہ کی ریاستوں میں بین ریاستی تجارت اور لوگوں کی نقل و حرکت کو آسان بنانے اور بنیادی ڈھانچے کی بہتری کا کام بھی اٹھایا ہے۔

شمال مشرقی کونسل نے خطہ کی تمام ریاستوں میں، خاص طور پر تعلیم، صحت، کھیل، آبی وسائل، زراعت، سیاحت اور صنعت وغیرہ کے شعبوں میں قابل قدر سرمایہ اور سماجی بنیادی ڈھانچہ تشکیل دیا ہے۔ اس سے شمال مشرقی علاقے کو بہت فائدہ ہوا ہے اور مقامی آبادی میں کونسل کے لیے بے پناہ خیر سگالی پیدا ہوئی ہے۔ 20-2019 میں شمال مشرقی کونسل کی سکیموں کے تیسرے فریق کے جائزے نے اس بات کا اشارہ کیا کہ جس جگہ پر عمل کیا جانا ہے وہاں کی ضروریات اور تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے تمام پروجیکٹس کی منصوبہ بندی اور تصور اچھی طرح سے کیا گیا ہے اور اس کی اکثریت جاری ہے۔ منصوبے مطلوبہ اور منصوبہ بند نتائج/ مقاصد فراہم کر رہے ہیں یا فراہم کریں گے۔

شمال مشرقی کونسل میں پالیسی پر بحث کونسل کے مکمل اجلاسوں میں کی جاتی ہے۔ 1972 کے بعد سے، شمال مشرقی کونسل کا مکمل اجلاس شمال مشرقی ریاستوں اور قومی راجدھانی میں ستر مواقع پر منعقد ہوا ہے۔ پلینریز کی بحث، جس میں شمال مشرقی ریاستوں کے گورنروں اور وزرائے اعلیٰ کے مشورے اور سفارشات شامل ہیں، نے مرکزی اور ریاستی حکومتوں کی پالیسیوں اور مداخلتوں کو مطلع اور متاثر کیا ہے۔ 2016 میں شیلانگ میں ہونے والے 65 ویں شمال مشرقی کونسل کے مکمل اجلاس کے غور و خوض کے بعد، شمال مشرقی کونسل نے ریاستوں اور ریاستوں کی کوششوں کو بڑھانے کے لیے ضروری وسائل، علم اور مہارتوں سے لیس ایک جدید ترین ریسورس سینٹر قائم کرنے کے لیے اقدامات کیے ہیں۔ عملدرآمد کرنے والی ایجنسیاں منصوبوں کی منصوبہ بندی اور ان پر عمل درآمد، تحقیق اور اختراعات کو فروغ دینے اور خطے کے لیے سٹریٹجک پالیسی ویژن فراہم کرنے کے لیے۔ اے پی جے عبدالکلام سینٹر فار پالیسی ریسرچ اینڈ اینالیسس اکتوبر 2016 میں آئی آئی ایم- شیلانگ کے تحت اور شمال مشرقی کونسل میں نارتھ ایسٹ ریسورس سینٹر دسمبر 2021 میں قائم کیا گیا تھا۔

اکتوبر 2022 میں گوہاٹی میں منعقدہ 70ویں مکمل اجلاس کے فیصلے کے مطابق شمال مشرقی کونسل کی گولڈن جوبلی اب 18 دسمبر 2022 کو شیلانگ میں ایک مناسب طریقے سے منائی جا رہی ہے - جہاں شمال مشرقی کونسل کا ایک سرکاری اجلاس اور ایک اور عوامی اجلاس منعقد کیا جا رہا ہے. کونسل کی باضابطہ داخلی میٹنگ اور منتخب مدعوین کے اجلاس اسٹیٹ کنونشن سنٹر آڈیٹوریم، شیلانگ میں منعقد ہوں گے، مہمانِ خصوصی کے طور پر عزت مآب وزیر اعظم شرکت کریں گے۔ بعد ازاں اسی دن، تقریباً 10,000 لوگ، جن میں نمایاں افراد، کامیابی حاصل کرنے والے، سیلف ہیلپ گروپس اور کسانوں کے گروپوں کے نمائندے اور تمام آٹھ شمال مشرقی ریاستوں کے عام شہری شامل ہیں، پولو گراؤنڈ، شیلانگ میں منعقد ہونے والے جلسہ عام میں شامل ہوں گے۔

اس اہم موقع پر پچھلے پچاس سالوں میں شمال مشرقی خطے کی ترقی میں شمال مشرقی کونسل کے تعاون کو بیان کرنے والی ایک یادگاری اشاعت کا اجراء معزز مہمان خصوصی کے ہاتھوں عمل میں آئے گا۔ یہ شمال مشرقی کونسل کے سفر اور خطے کی ترقی میں اس کے کردار کو 12 ابواب میں دستاویز کی شکل میں پیش کرے گا، اس کے جاری اقدامات کا احاطہ کرے گا۔ مزید برآں اس میں شمال مشرقی کونسل کے وژن پر ایک باب بھی شامل ہے۔

ہندی کے فروغ کے لیے شمال مشرقی کونسل نے شمال مشرقی ریاستوں میں ریاستی یونیورسٹیوں اور سرکاری کالجوں کی مدد کرنے کے لیے پہل کی ہے تاکہ ان کے اپنے کیمپس میں لائبریریوں میں ہندی سیکشنز کے قیام اور اسے مضبوط کیا جا سکے۔ پہلے مرحلے میں 5 ریاستوں میں جن 21 ہندی لائبریریوں کی مدد کی جا رہی ہے ان کا گولڈن جوبلی تقریبات کے دوران افتتاح کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ مندرجہ بالا امور کے علاوہ تقریباً 2500 کروڑ کی لاگت والے بنیادی ڈھانچے اور ترقیاتی پروجیکٹوں کا یا تو افتتاح کیا جا رہا ہے یا گولڈن جوبلی تقریبات کے دوران عزت مآب وزیر اعظم کے ذریعہ اس کا سنگ بنیاد رکھا جا رہا ہے۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

ش ح۔ م ع۔ع ن

 (U: 13978)



(Release ID: 1884521) Visitor Counter : 111


Read this release in: English , Manipuri