کامرس اور صنعت کی وزارتہ

او این ڈی سی پروجیکٹ

Posted On: 06 APR 2022 5:18PM by PIB Delhi

تجارت و صنعت کے وزیر مملکت جناب سوم پرکاش نے آج لوک سبھا میں ایک تحریری جواب میں بتایا کہ اوپن نیٹ ورک فار ڈیجیٹل کامرس (او این ڈی سی) ایک پہل ہے جس کا مقصد ڈیجیٹل یا الیکٹرانک نیٹ ورکس پر اشیاء اور خدمات کے تبادلے کے تمام پہلوؤں کے لیے اوپن نیٹ ورکس کو فروغ دینا ہے۔  او این ڈی سی کسی بھی مخصوص پلیٹ فارم سے آزاد کھلی وضاحتیں اور اوپن نیٹ ورک پروٹوکول کا استعمال کرتے ہوئے اوپن سورس طریقہ کار پر مبنی ہونا ہے۔

او این ڈی سی کی بنیادیں اشیا اور خدمات کے تبادلے کی سرگرمیوں کے تمام پہلوؤں کے لیے کھلے پروٹوکول ہیں، جیسا کہ انٹرنیٹ پر معلومات کے تبادلے کے لیے ہائپر ٹیکسٹ ٹرانسفر پروٹوکول، ای میلز کے تبادلے کے لیے سادہ میل ٹرانسفر پروٹوکول اور ادائیگیوں کے لیے متحد ادائیگی انٹرفیس۔

یہ اوپن پروٹوکول کھلی رجسٹریوں اور اوپن نیٹ ورک گیٹ ویز کی شکل میں عوامی ڈیجیٹل انفراسٹرکچر کے قیام کے لیے استعمال کیے جائیں گے تاکہ فراہم کنندگان اور صارفین کے درمیان معلومات کے تبادلے کو ممکن بنایا جا سکے۔ فراہم کنندگان اور صارفین معلومات کے تبادلے اور او این ڈی سی پر لین دین کے لیے اپنی پسند کی کوئی بھی مطابقت پذیر ایپلی کیشن استعمال کر سکیں گے۔

اس طرح، او این ڈی سی موجودہ پلیٹ فارم پر مرکوز ڈیجیٹل کامرس ماڈل سے آگے بڑھتا ہے جہاں خریدار اور بیچنے والے کو ڈیجیٹل طور پر نظر آنے اور کاروباری لین دین کرنے کے لیے ایک ہی پلیٹ فارم یا ایپلی کیشن کا استعمال کرنا پڑتا ہے۔

او این ڈی سی پروٹوکول کیٹلاگنگ، انوینٹری مینجمنٹ، آرڈر مینجمنٹ اور آرڈر کی تکمیل جیسے کاموں کو معیاری بنائیں گے۔ اس طرح، چھوٹے کاروبار کسی بھی او این ڈی سی سے مطابقت رکھنے والی ایپلی کیشنز کو استعمال کرنے کے قابل ہو جائیں گے بجائے اس کے کہ وہ مخصوص پلیٹ فارم پر مرکوز پالیسیوں کے زیر انتظام ہوں۔ یہ چھوٹے کاروباروں کو نیٹ ورک پر قابل دریافت ہونے اور کاروبار چلانے کے لیے متعدد اختیارات فراہم کرے گا۔ یہ ان لوگوں کے ذریعہ ڈیجیٹل ذرائع کو آسانی سے اپنانے کی بھی حوصلہ افزائی کرے گا جو فی الحال ڈیجیٹل کامرس نیٹ ورک پر نہیں ہیں۔

او این ڈی سی سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ ای کامرس کو صارفین کے لیے مزید جامع اور قابل رسائی بنائے گا۔ صارفین ممکنہ طور پر کسی بھی مطابقت پذیر ایپلی کیشن یا پلیٹ فارم کا استعمال کرکے کسی بھی بیچنے والے، پروڈکٹ یا سروس کو دریافت کرسکتے ہیں، اس طرح صارفین کے لیے انتخاب کی آزادی میں اضافہ ہوتا ہے۔ یہ صارفین کو قریب ترین دستیاب سپلائی کے ساتھ مانگ کا مقابلہ کرنے کے قابل بنائے گا۔ اس سے صارفین کو اپنی پسند کے مقامی کاروبار کا انتخاب کرنے کی آزادی بھی ملے گی۔ اس طرح، او این ڈی سی آپریشنز کو معیاری بنائے گا، مقامی سپلائرز کی شمولیت کو فروغ دے گا، لاجسٹکس میں افادیت بڑھائے گا اور صارفین کے لیے قدر میں اضافے کا باعث بنے گا۔

 

 

۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

(ش ح۔ا ک۔ ر ب  (

 

U. No. : 3966



(Release ID: 1814372) Visitor Counter : 269


Read this release in: English